مزید خبریں

چیئرپرسن ڈی ڈی سی کپواڑہ ، ممبران ڈی ڈی سرینگروسابق وزیر لیفٹیننٹ گورنر سے ملاقی

سری نگر//چیئرپرسن ڈسٹرکٹ ڈیولپمنٹ کونسل کپواڑہ عرفان پنڈت پوری ،ڈی ڈی سی سری نگر کے ارکان  اعجاز حسین کی قیادت میں اور سابق وزیرنے لیفٹیننٹ گورنر منوج سِنہا سے راج بھون میں ملاقات کی۔ڈی ڈی سی چیئرپرسن نے لیفٹیننٹ گورنر کو ایک یاد داشت پیش کی اور انہیں ضلع کپواڑہ کے مسائل اور مطالبات سے آگاہ کیا ۔مطالبات میں ہر ڈی ڈی سی حلقہ کے لئے اِضافی میکڈیمائزیشن ، آبپاشی شعبے کے لئے اِضافی فنڈنگ ، ضلع میں ایک ڈی ۔ایڈکشن سینٹر کا قیام اوراِس کے علاوہ اضلاع میں مختلف سرکاری محکموں میں اَفسران کی خالی اَسامیوں کو پُر کرنا شامل ہیں ۔ اِس موقعہ پر وائس چیئرمین ڈی ڈی سی کپواڑہ حاجی فاروق احمد میر بھی موجود تھے۔لیفٹیننٹ گورنر نے چیئرپرسن اور وائس چیئرپرسن کے ساتھ تبادلہ خیال کرتے ہوئے کہا کہ جموںوکشمیر یوٹی حکومت اَپنے دُور دراز علاقوں پر خصوصی توجہ مرکوز کی ہوئی ہے اور تمام علاقوں کی یکساں ترقی کے ایجنڈے پر کام کر رہی ہے۔اُنہوں نے ترجیحی بنیادوں پر ان کے تمام مطالبات کے ازالے کی یقین دہانی کرائی۔دریں اثنأ اعجاز حسین کی قیادت میں سری نگر کے ڈی ڈی سی اراکین کے ایک وفد نے لیفٹیننٹ گورنر سے ملاقات کی اور اَپنے مطالبات اور مسائل گوش گزار کئے۔ لیفٹیننٹ گورنر نے وفد کو بغور سنا اور اور یقین دِلایا کہ ان کی جانب سے پیش کئے تمام جائز مطالبات پر غور کیا جائے گا اور ان کے ازالے کے لئے متعلقہ محکموں کو بھیج دیا جائے گا۔ادھرسابق وزیر جموںوکشمیر عمران رَضا اَنصاری نے لیفٹیننٹ گورنر منوج سِنہا سے راج بھون میں ملاقات کی۔سابق وزیر نے لیفٹیننٹ گورنر کے ساتھ جموںوکشمیر یوٹی کے موجودہ ترقیاتی منظر نامے پر اَپنے خیالات کا شیئر کئے۔اُنہوں نے لیفٹیننٹ گورنر کا شکریہ اَدا کیا کہ اُنہوں نے نوجوانوں کی شمولیت اور خواتین کی اَنٹرپرینیور شپ بشمول مشن یوتھ ، حوصلہ ، تیجسوینی ، اُمید ساتھ اور دیگر مختلف منفرد پروگرام اور سکیمیں شروع کیں۔سابق وزیر نے شروع کئے گئے متعدد ترقیاتی اور عوامی فلاحی پروگراموں پر بھی اَپنے خیالات پیش کئے۔لیفٹیننٹ گورنر نے سابق وزیر کی جانب سے پیش کی گئی قیمتی تجاویز کو سراہا اور کہاکہ ان کو جموںوکشمیر یوٹی کے جاری ترقیاتی عمل میں شامل کیا جائے گا۔
 
 
 
 

مشیر بصیر خان کا نوبُگ بڈگام میں 100 ایم وی گرڈ سٹیشن کی تکمیل کے عمل کا معائینہ 

 بڈگام//تحصیل چاڈورہ کے علاقوں سے تعلق رکھنے والے25,000 نفوس اَب نوبُگ، بوگام بڈگام میں 100 ایم وی اے گرڈ کے استعمال سے مستفید ہوں گے۔متعلقہ رہائشیوں کی دیرینہ مانگ پور ی ہوگی ۔اِن باتوں کا اِظہار لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر بصیر احمد خان نے گرڈ سٹیشن کا معائینہ کرنے کے دوران کیا۔اِس موقعہ پر مشیر موصورف کے ہمراہ اے ڈی ڈی سی بڈگام اکرم اللہ ٹاک ،چیف اِنجینئر کے پی ڈی سی ایل مینٹی ننس حشمت قاضی ، چیف اِنجینئر کے پی ڈی سی ایل ڈسٹری بیوشن اعجاز احمد ڈار ، ایس ڈی ایم چاڈورہ ، ایگزن ایف اے تیلی، ایگزن گرڈ سٹیشن اور دیگر متعلقہ اَفراد بھی تھے۔معائینے کے د وران لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر بصیر احمد خان نے کہا کہ 100 ایم وی اے ، 132/33 کے وی گرڈ سٹیشن بشمول 132کے وی ٹرانسمیشن لائنیں 33.86 کروڑ روپے کی لاگت سے تعمیر کی گئی ہیں۔ یہ بھی بتایا گیا کہ 100 ایم وی اے گرڈ تحصیل چاڈورہ کے دیہات کو قابل اعتماد اور معیاری بجلی فراہمی کی صلاحیت رکھتا ہے۔اُنہوں نے مزید کہا کہ منصوبے پر کام 2010-2011ء میں شروع ہوا اور ابتدائی سکیم کے تحت فنڈس کی واگزاری نہ ہونے کی وجہ سے کام رُک گیاتھا اور دیگر حالات بھی پروجیکٹ کی تکمیل میں تاخیر کا ذمہ دار ہے ۔تاہم مالی سال2019-2020ء کے بعد سے اِس سکیم کو جے کے آئی ڈی ایف سی لمٹیڈلینگویشنگ پروگرام کے تحت مالی اعانت ملی۔اِس موقعہ پر مشیر بصیر خان نے اِس منصوبے کی تکمیل کو یقینی بنانے میں سکیم سے وابستہ تمام اَفرادکی اَنتھک کوششوں اور لگن کو سراہا۔اُنہوں نے متعلقہ عمل در آمد ایجنسی اور دیگر وابستہ ایجنسیوں کو ہدایت دی کہ وہ منصوبے کو مقررہ وقت میں شروع کرنے کے لئے اَپنی کوششیں دوگنا کریں۔واپسی پر مشیر بصیر احمد خان نے کیبلوں اور برقی کھمبوں کی تنصیب اور تعمیر کے کام کا بذات خودمشاہدہ کیا۔مشیر موصوف کو جانکاری دی گئی کہ آنے والے موسم سرما کے مد نظر رکھتے ہوئے سات اِنتہائی اعلیٰ درجے کی کرینوں کو جاری کام میں شامل کیا گیا ہے۔
 
 
 

 بڈگام سے کشمیری اخروٹ کی پہلی کھیپ روانہ

نئی دہلی//کشمیری اخروٹ کی پہلی کھیپ حال ہی میںبڈگام سے روانہ ہوئی۔ دو ہزار کلو وزنی ٹرک کو بنگلو ر اورکرناٹک  وَن ڈسٹرکٹ وَن پروڈکٹ وزارتِ صنعت و حرفت کی پہل کے تحت روانہ کیا گیا۔کشمیر میں بھارت کی اخروٹ کی پیداوار کا 90 فیصد حصہ ہے۔کشمیری اخروٹ غذائی اجزأ، اعلیٰ معیار اور ذائقہ دارہے اور اِسی وجہ سے پوری دنیا میں اس کی بہت زیادہ مانگ ہے۔اس پروڈکٹ کی مقامی اور عالمی منڈیوں میں اپنی جگہ بنانے کے بے پناہ امکانات ہیں۔تجارتی کامیاب سہولیت کو مرکزی ایڈیشنل سیکرٹری سمیتا داورا ڈی پی آئی آئی ٹی نے 26؍ ستمبر 2021ء کو جھنڈا دِکھا کر نشان زد کیا جس کا اہتمام جموںوکشمیر ٹریڈ پروموشن آرگنائزیشن ( جے کے ٹی پی او ) کے اِشتراک سے کیا گیا ہے۔اِس موقعہ پر پرنسپل سیکرٹری صنعت و حرفت رنجن پرکاش ٹھاکر ، ڈائریکٹر صنعت و حرفت کشمیر تزائین مختار ، ایم ڈی جے کے ٹی پی او انکیتا کار ،ڈپٹی ڈائریکٹر ہارٹیکلچر کشمیر خالدہ اور انویسٹ اِنڈیا ٹیم موجود تھے۔اِس بات کو تسلیم کرتے ہوئے کہ کشمیرسے بڑے پیمانے پر اخروٹ بھارت میں درآمد کئے جارہے ہیں ۔’ او ڈی او پی ‘ ٹیم نے کشمیر میں مارکیٹ کا گہرائی سے تجزیہ اور شراکت دار مشاورت شروع کیاہے۔مزید یہ کہ بھارت میں اخروٹ کے درآمد کنند گان سے رابطہ کیا گیا اوراِس سلسلے میں او ڈی او پی ٹیم خریداری میں سہولیت فراہم کرنے میں کامیاب رہی۔اس طرح کی کوششوں سے تما نربھر بھارت مہم کو بھی تقویت ملتی ہے۔اِس موقعہ پر بڈگام میں ایک گول میز کانفرنس کا اہتمام کیا گیا جس میں صنعتی نمائندوں سے معلومات طلب کی گئیں۔ کشمیر میں تجارت اور برآمدی ماحولیاتی نظام کے حوالے سے ریجنل ڈائریکٹر پی ایچ ڈی سی سی آئی اقبال فیاض جان، بلدیو سنگھ، ہمایوں وانی ،بلال احمد کاووسہ ، صدر کے سی سی آئی شیخ عاشق ، فاروق امین اور ایف سی آئی کے کے صدر شاہل کاملی نے اَپنی تجربات شیئر کئے۔  
 
 
 
 

تمام اضلاع میںغیر قانونی کان کنی کی ہرگز اجازت نہ دی جائے

دویدی نے ای نیلام شدہ معمولی معدنی بلاکس کے حوالے سے پیش رفت کا جائزہ لیا 

جموں//کمشنر سیکرٹری مائیننگ اینڈ جنرل ایڈمنسٹریشن ڈیپارٹمنٹ منوج کمار دویدی نے ایک اجلاس کی صدارت کی جس میں ای نیلام شدہ معمولی معدنی بلاکس کے حوالے سے پیش رفت کا جائیزہ لیا گیا جہاں پروجیکٹ کے حامیوں نے لیٹر آف انٹینٹ ( ایل او آئی ) کی توسیع کی مدت میں توسیع کیلئے درخواست دی ہے ان کے حق میں جاری کیا گیا ۔ دویدی نے پروجیکٹ کے حامیوں اور کنسلٹنٹس کے ساتھ بات چیت کی اور کان کنی کی لیز دینے کیلئے ان کے مقدمات کو تیز کرنے میں درپیش مشکلات کے بارے میں دریافت کیا ۔ انہوں نے ان پر زور دیا کہ وہ چھوٹے معدنی بلاکس کے مقدمات کو اپ لوڈ کرنے میں تیزی لائیں جہاں عوامی سماعت کی گئی ہو تا کہ ان کے حق میں ماحولیات کلیرنس جاری کرنے کے مقدمات کو جے کے ای آئی اے اے وقت پر غور کرے ۔ پروجیکٹ کے حامیوں نے حقیقی خدشات کا اظہار کیا جن پر میٹنگ کے دوران غور کیا گیا اور متعلقہ افراد کو موقع پر ضروری ہدایات جاری کی گئیں تا کہ تمام مسائل کا وقتی طور پر ازالہ کیا جا سکے ۔ دویدی نے جوائنٹ ڈائریکٹر جموں و کشمیر سے کہا کہ وہ ضروری دستاویزات اپ لوڈ کرنے کے حوالے سے حاصل ہونے والی پیش رفت کی روزانہ کی بنیاد پر ذاتی طور پر نگرانی کریں ۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ای سی /سی ٹی او کے اجراء کیلئے جے کے ای آئی اے اے کے زیر غور مقدمات میں تیزی لانے کیلئے رکاوٹیں دور کریں ۔ انہوں نے تمام ڈی ایم اوز کو سخت ہدایات جاری کیں کہ وہ اپنے متعلقہ اضلاع میں کسی بھی غیر قانونی کان کنی کو چیک کریں ۔ انہوں نے کہا کہ گذشتہ 4 سے 5 ماہ کے دوران طلب اور رسد میں فرق کافی حد تک ختم ہو چکا ہے اور محکمہ باقی مائیننگ لیز کی گرانٹ کیلئے اپنی کوششیں جاری رکھے گا تا کہ عوام کو معدنیات معقول اور مطلوبہ نرخوں پر مل سکیں ۔ انہوں نے کان کنی کے بلاکس کو آپریشنل کرنے میں اب تک حاصل ہونے والی پیش رفت کو سراہا جس نے جے اینڈ کے یو ٹی میں عمل میں آنے والے میگا پراجیکٹس کیلئے مناسب مجموعی کی دستیابی کو یقینی بنایا ہے ۔ انہوں نے متعلقہ محکموں کو ہدایت دی کہ وہ ماحولیاتی کلیرنس ، سی ٹی او اور کان کنی کی لیز سے متعلق مسائل کے حل کیلئے مربوط نقطہ نظر پر عمل کریں ۔ 
 
 
 

مرکزی وزیرکا ا دھم پور دورہ 6اکتوبر سے

 ادھم پور //ضلعی انتظامیہ ادھم پور نے دلچسپی رکھنے والے لوگوں سے اپیل کی ہے کہ وہ مرکزی وزیر ماہی گیری ، جانوروں کی پرورش اور ڈائرینگ سے ملاقات کے لیے مقرر کردہ نمبروں پر رابطہ کریں ، جو 6  اور 7 اکتوبر 2021 پبلک آؤٹ ریچ پروگرام کے تحت ضلع ادھم پور کا دورہ کر رہے ہیں۔6 اکتوبر 2021 کو مرکزی وزیر عوامی وفود کے ساتھ تارا نیواس ادھم پور (1430 بجے سے 1530 بجے تک) اور 7 اکتوبر 2021 کو تارا نیواس ادھم پور میں 0900 بجے سے 1000 بجے تک ملاقات کریں گے۔دلچسپی رکھنے والے افراد جو وزیر سے ملنا چاہتے ہیں وہ اے سی آر اودھم پور کے دفتر (موبائل نمبر 9469659991) اور ٹیلی فون پر رابطہ کر سکتے ہیں۔
 
 
 

رام بن میںبالغوں کی کووڈ ٹیکہ کاری کی پہلی خورک |  صد فیصد ہدف حاصل، 45 فیصد نے دونوں خوراکیں لی ہیں

رام بن//کووڈ 19 کی تیسری لہر کے خدشات کے درمیان رام بن سے ایک اچھی خبر آرہی ہے جہاں بالغوں کی 100 فیصد پہلی کوویڈ ویکسی نیشن خوراک کی کوریج حاصل کی گئی ہے جبکہ ان میں سے 45 فیصد نے دونوں خوراکیں لی ہیں۔چیف میڈیکل آفیسر رام بن ڈاکٹر محمد فرید بٹ نے بتایا کہ کل 311883 کووڈ 19 ویکسی نیشن خوراکیں بشمول 2لاکھ15 ہزار 180 پہلی خوراک 18+ عمر کے لوگوں کو دی گئی ہیں جبکہ تقریباً 97000 بالغ افراد نے دونوں خوراکیں لی ہیں۔انہوں نے مزید بتایا کہ وہ 45+ کے زمرے ، فرنٹ لائن ورکرز اور ہیلتھ کیئر ورکرز میں دوسری ویکسی نیشن خوراک کی 100 فیصد کوریج کے قریب ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ انتظامیہ نے انفیکشن کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے کووڈ کے مریضوں کا سراغ لگانے اور ان کے علاج کے لیے کووڈ ٹیسٹنگ کو بھی تیز کر دیا ہے۔ویکسی نیشن ٹیموں کو مبارکباد دیتے ہوئے جن میں ہیلتھ ورکرز اور دیگر عہدیدار شامل ہیں ،ڈی سی نے کہا کہ "رام بن نے مختلف چیلنجوں کا سامنا کرنے کے باوجود 18 سال سے زائد عمر کے گروپ کی 100 فیصد ویکسی نیشن حاصل کی ہے۔ اس سے کووڈ 19 کی تیسری لہر کو روکنے میں مدد ملے گی اور اس وبائی مرض میں قیمتی انسانی جانوں کو بچانے میں مدد ملے گی۔ڈی سی نے کہا کہ انتظامیہ نے لوگوں کو دوسری خوراک کے ساتھ ساتھ ان کی مکمل حفاظت کے لیے ویکسین کرنے کے لیے تمام ضروری اقدامات کیے ہیں۔
 
 
 

ڈوڈہ میں کووڈ 19 کے 4 نئے مثبت معاملات  | 6 مریض صحتیاب ،394159 ٹیکے لگائے گئے 

اشتیاق ملک
ڈوڈہ //ڈوڈہ ضلع میںکورونا وائرس کے 4 نئے مثبت معاملات سامنے آئے ہیں 6 مریض صحتیاب ہوئے ہیں۔اطلاعات کے مطابق پیر کے روز ڈوڈہ، بھدرواہ، ٹھاٹھری ،گندوہ و عسر میں ہوئی کوؤڈ جانچ کے دوران چار افراد کی ٹیسٹ رپورٹ مثبت آئی ہے جنہیں ہوم قرنطینہ میں رکھا گیا ہے اور چھ مریض صحتیاب ہوئے ہیں۔اس طرح سے ضلع میں فعال کیسوں کی تعداد 67 و شفایاب ہوئے مریضوں کی مجموعی تعداد 7600 پہنچ گئی ہے وہیں ضلع میں اب تک کوؤڈ 19 سے 133 افراد فوت ہوئے ہیں اور 394159 افراد کو ٹیکے لگائے گئے ہیں۔
 

 کووڈ ایس او پیزکی خلاف ورزی پر 54 ہزار روپے کا جرمانہ | 1872 ٹیکے لگائے گئے ، 1374 نمونے جمع کئے گئے 

رام بن//ضلع رام بن میں کووڈ پروٹوکول کے نفاذ کے لیے نفاذ مہم کو جاری رکھتے ہوئے انفورسمنٹ ٹیموں نے چہرے کے ماسک نہ پہننے اور جسمانی فاصلہ برقرار نہ رکھنے پر کئی خلاف ورزی کرنے والوں پر جرمانہ عائد کیا۔نافذ کرنے والی ٹیموں نے اپنے متعلقہ دائرہ کار میں معائنہ کے دوران 54ہزار500 روپے جرمانہ وصول کیا۔انفورسمنٹ افسران نے لوگوں پر زور دیا کہ وہ چہرے کے ماسک پہنیں اور جسمانی فاصلہ برقرار رکھیں اس کے علاوہ اپنے قریبی سی وی سی پر کوویڈ ویکسی نیشن کی خوراکیں لیں۔ ضلع امیونائزیشن آفیسرڈاکٹر سریش نے بتایا کہ ضلع رام بن میں آج 1872 افراد کو پہلی اور دوسری کوویڈ ویکسین کی خوراک دی گئی۔چیف میڈیکل آفیسرڈاکٹر محمد فرید بھٹ کی طرف سے جاری کردہ روزانہ بلیٹن کے مطابق محکمہ صحت نے 1374 نمونے جمع کیے ہیں جن میں 356 RT-PCR اور 1018 RAT نمونے شامل ہیںجبکہ اس کے علاوہ ضلع کے مخصوص ویکسی نیشن سینٹرز میں 1872 افراد کو کووڈ ویکسین دی گئی ہے۔
 
 
 

ڈوڈہ ضلع کے دیہی علاقوں میں رابطہ سڑکیں خستہ حال:غلام مصطفی | آزاد دور میں شروع کئے گئے منصوبوں کو پورا کرنے و بنیادی سہولیات کی فراہمی کا مطالبہ 

اشتیاق ملک
ڈوڈہ //کانگریس کے سینئر رہنما و چیئرمین بھلیسہ ڈیولپمنٹ کمیٹی غلام مصطفی بٹ نے ڈوڈہ ضلع کے دیہی علاقوں میں رابطہ سڑکوں کی خستہ حالی، ٹروما ہسپتال گندوہ سمیت طبی مراکز میں ڈاکٹروں، نیم طبی عملہ و بنیادی ڈھانچے کی عدم دستیابی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہزاروں نفوس پر مشتمل آبادی کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔بھلیسہ کے دورے کے دوران انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جہاں 35 کلومیٹر ٹھاٹھری کلہوتران شاہراہ کی باقاعدہ طور پر مرمت نہیں کی گئی ہے وہیں بھٹیاس چالر، جکیاس گونڈو ،چنگا کالجگاسر ،چنگا بال پدری، گندوہ جائی، کاہرہ جائی، ملکپورہ چلی، منو و ہڈل سڑکوں پر کام کئی برسوں سے چل رہا ہے لیکن ابھی تک مکمل نہیں کیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ جو سڑکیں تعمیر کی گئی ہیں ان کی پر سفر کرنا انتہائی مشکل بن گیا ہے۔ بٹ نے ٹروما ہسپتال گندوہ میں ڈاکٹروں کی کمی پر حکام کو ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا کہ 2013 میں اسوقت کے مرکزی وزیر صحت غلام نبی آزاد نے اس کی بنیاد رکھی تھی اور 8 برسوں کے بعد اس کی تعمیر مکمل ہوئی لیکن ڈاکٹروں کی 14 اسامیاں خالی پڑی ہیں جس کے نتیجے میں مقامی آبادی کو اپنا معمولی علاج کے لئے شہروں کا رخ کرنا پڑتا ہے۔انہوں نے ڈگری کالج کلہوتران میں میڈیکل و نان میڈیکل مضامین شروع کرنے و طبی مراکز و تعلیمی اداروں میں عملہ کی کمی کو پورا کرنے و بنیادی سہولیات کی فراہمی کا ایل جی انتظامیہ سے مطالبہ کیا ہے۔کانگریس لیڈر نے کہا کہ بھدرواہ و بھلیسہ میں سابق وزیر اعلیٰ غلام نبی آزاد کے دور میں شروع کئے گئے کئی ترقیاتی منصوبے ادھورے پڑے ہیں۔انہوں نے بھلیسہ، ٹھاٹھری و بونجواہ کے خوبصورت مقامات کو سیاحتی نقشہ پر لانے و علیحدہ بھلیسہ ٹورازم ڈیولپمنٹ اتھارٹی قائم کرنے کی بھی مانگ کی۔ بٹ نے مختلف محکموں میں کام کر رہے عارضی ملازمین کو باقاعدہ طور پر مستقل بنانے و ان کی بقایاجات کو ادا کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔بھلیسہ ڈیولپمنٹ کمیٹی چیئرمین نے پینے کے صاف پانی و بہتر بجلی بنانے و خستہ حال سڑکوں کی مرمت کرنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ بیشتر علاقوں میں مستحق افراد کو مرکزی معاونت والی سکیموں سے محروم رکھا جاتا ہے۔انہوں نے ان سکیموں کی زمینی سطح پر عمل آوری کو یقینی بنانے و غریب لوگوں کو فائدہ پہنچانے کا مطالبہ کیا ہے۔
 
 
 

ڈاکٹر الکندی کے بھانجے کی نماز جنازہ صدر جمعیت کی پیشوائی میں ادا |  میر واعظ اور ناظم جمعیت بر طانیہ کا سوگوار کنبے کیساتھ یکجہتی کا اظہار

بانہال//جمعیت اہلحدیث جموں و کشمیر کے نا ئب صدر ڈاکٹر عبداللطیف الکندی کے جواں سال بھانجے شیخ محمد امین، جن کا اتوار کو اکھڑال رام بن کے نزدیک ایک ٹریفک حادثے میں انتقال ہوا تھا، کی نماز جنازہ پیرکی صبح صدر جمعیت اہلحدیث جموں و کشمیر پروفیسر غلام محمد بٹ المدنی کی پیشوا ئی میںہزاروں لوگوں نے ادا کی۔ اس موقع پر انہوں نے سوگواران  کے ساتھ پوری جماعت و جمعیت کی جانب سے یک جہتی کا اظہار کیا اور بہ رقت قلب فقید کی جنت نشینی کی دعائیں کیں۔ دریں اثنا مختلف جماعتوں کے سربراہان اور ذمہ داراں کے ساتھ ساتھ میر واعظ کشمیر ڈاکٹر مولانا محمد عمر فاروق نے ڈاکٹر الکندی اور سبھی غمزدہ گاں سے قلبی تسلیت و تشفیت کا اظہار کرتے ہوئے انہیں صبر و قرار اور استقامت سے اس سانحہ عظیم کو سہنے کی تلقین کرتے ہوئے فقید کی مغفرت اور بلندی درجات کی دعائیں کیں۔ ادھر جمعیت اہلحدیث برطانیہ کے ناظم اعلیٰ شیر خان جمیل اور دنیا کے مختلف خطوں سے جید علماء فضلاء دانشور اور زندگی کے مختلف شعبوں سے متعلق لوگوں صحافتی، دینی اور سماجی شخصیات نے ڈاکٹرالکندی کے ساتھ تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے دعا کی ہے کہ رب جلیل فقید کو کروٹ کروٹ جنت نصیب کرے ضلعی جمعیت رام بن کے بین بین ضلعی جمعیت ڈوڈہ، کشتواڑ، اودھم پور، جموں، پونچھ اور راجوری نے بھی نوجواں کی حادثاتی موت پر رنج و الم ظاہر کرتے ہوئے اس کی بلندی درجات کی اور لواحقین کے لیے صبر جمیل کی عطا ئیگی کی دعائیں کی ہیں۔
 
 
 

 سپروائزروں ، آنگن واڑی وکروں و ہیلپروںکیلئے 6 صلاحیت سازی پروگرام کا افتتاح

رام بن// ڈپٹی کمشنر رام بن مسرت الاسلام نے ریاستی ای سی سی ای نصاب پر چھ روزہ ہنر مندی کی تربیت کے پروگرام کا افتتاح کیا جو بیک وقت تین مقامات پر شروع ہوا جن میں جے کے ٹی ڈی سی کیفے ٹیریا رام بن ، ڈاک بنگلو رام بن اور ملک ریزاٹس ہوٹل ناشری شامل ہیں۔پروگرام میں5 سپروائزر ، 50 آنگن واڑی ورکراور 50 آنگن واڑی ہیلپروں کو تربیت دی جارہی ہے۔اس موقع پر کووڈ کے اوقات میں ا آنگن واڑی ورکروں اور سپروائزروں کے کردار کو سراہنے کے علاوہ ڈی سی نے کہا کہ یہ فرنٹ لائن آنگن واڑی ورکروں اور دیگر وابستہ عملے کی مجموعی ترقی کے لیے قابل تعریف قدم ہے۔ ڈی سی کو پروجیکٹ منیجر سی آئی آئی فاؤنڈیشن نے بتایا کہ اس پروگرام کا انعقاد آنگن واڑی ورکروں ، ہیلپروں اور سپروائزروںکی تکنیکی صلاحیت کو بڑھانے کے لیے کیا گیا ہے ۔
 
 
 

ضلع رام بن میں صفائی مہم کا انعقاد

رام بن//کلین انڈیا صفائی مہم -ایک مہینے کی صفائی مہم ضلع بھر میں ’’ سوچھتا ہی سیوا ‘‘ کے نعرے کو فروغ دینے کے لیے تیز کی گئی۔ محکمہ صحت ، تعلیم اور پنچایتی راج نے کلین انڈیا کے ہدف کے حصول کے لیے مختلف سرگرمیاں منعقد کیں۔گورنمنٹ ہائر سیکنڈری سکول بٹوت،گرلز گورنمنٹ ہائی سکول رام بن ، گورنمنٹ ہائی سکول ڈلواس ،ہائر سکینڈری سکول بانہال اور دیگر تعلیمی اور صحت کے اداروں میںمیں بڑے پیمانے پر صفائی مہم کا انعقاد کیا گیا جس میں طلباء کے علاوہ افسران اور اہلکاروں نے شرکت کی۔اسی طرح مختلف سکولوں کی دسویں سے بارہویں جماعت کے طلباء نے اپنے اپنے علاقوں میں اس مہم میں حصہ لیا۔ انہوں نے صابن مہم شروع کرکے لوگوں کو ہاتھ دھونے اور ذاتی حفظان صحت کی اہمیت کے بارے میں بھی آگاہ کیا۔
 
 
 

کشتواڑ میں سوچھتا سرگرمیوں کے ایکشن پلان پر تبادلہ خیال 

کشتواڑ//کلین انڈیا مہم کے تحت سوچھتا سرگرمیوں کے ایکشن پلان پر ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر کشوری لال شرما کی صدارت میں متعلقہ محکموں کے اجلاس میں تبادلہ خیال کیا گیا۔اجلاس میں صفائی کی سرگرمیوں کے انعقاد کے لیے ایکشن پلان پر موثر عملدرآمد کے لیے کئی فیصلے لیے گئے اور سوچھتا پکھواڑہ کے تحت آگاہی کے طریقوں پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ضلع بھر میں یکم اکتوبر سے 15 اکتوبر تک سوچھتا پکھواڑہ سرگرمیاں کی جا رہی ہیں۔اجلاس میں یہ فیصلہ کیا گیا کہ تمام ضلعی دفاتر اپنے متعلقہ دفتر کے احاطے میں اور اس کے ارد گرد صفائی اور صفائی کی سرگرمیوں کو یقینی بنائیں تاکہ اپنے عملے میں صفائی کو برقرار رکھنے کی عادت پیدا ہو۔اے ڈی سی نے اجلاس کو بتایا کہ بہترین کارکردگی دکھانے والے محکمے اور افسران کو نوازا جائے گا۔کلین انڈیا مہم کے زیراہتمام منعقد ہونے والے سوچھتا پکھواڑہ کے مقاصد کو اجاگر کرتے ہوئے اے ڈی سی نے ضلعی افسران پر زور دیا کہ وہ سوچھتا شپتھ دن ، سوچھتا آگاہی دن منانے کے علاوہ کمیونٹی آؤٹ ریچ گرین سکول مہم ، سوچھتا شراکت دن ، ہاتھ دھونے کا دن ، ذاتی حفظان صحت دن ، سوچھتا سکول نمائش دن ، سوچھتا ایکشن ڈے اور انعامات کی تقسیم کا دن منائیں۔آگاہی پروگراموں کے انعقاد کے لیے ، اے ڈی سی نے چیف ایجوکیشن آفیسر اور ڈسٹرکٹ یوتھ سروسز اور سپورٹس آفیسر کو ہدایت کی کہ وہ اسکول کے طلباء، این ایس ایس رضاکاروں ، عملے کے ارکان ، آشا ، اے ڈبلیو ڈبلیو ، پی آر آئی ، شہریوں کو آئی ای سی کی سرگرمیوں کے لیے متحرک کرنے کے لیے کام کریں۔
 
 
 

یوپی میں کسانوںکی ہلاکت پر یوتھ کا نگریس کا موم بتی مارچ

 جموں// صدر پردیش یوتھ کانگریس ادھے بھانو چب نے پیر کو یوپی کے لکھیم پور کھیڑا گاؤں میں کسانوں کی ہلاکت کی مذمت کرتے ہوئے اس کو وحشیانہ عمل قرار دیا۔ادھے چب نے یہ بات یوتھ کانگریس کے کارکنوں کی طرف سے کنجوانی چوک جموں میں ایک موم بتی مارچ کی قیادت کرتے ہوئے کہی۔مارچ کے دوران یوتھ کانگریس نے بی جے پی کے خلاف نعرے لگائے اور ان ہلاکتوںکی شدید الفاظ میں مذمت کی ۔
 

 مہو اور منگت میں اصلاح معاشرہ کی مجالس منعقد  

بانہال//علما کرام وائمہ مساجد کے متحدہ فورم انجمن علما وائمہ مساجدجموں وکشمیر کی طرف سے مہو اور منگت کے علاقوں میں اصلاح معاشرہ کے عنوان سے مجالس کا انعقاد کیا گیا جس میں مقامی علما کرام وائمہ مساجد کے علاوہ  تنظیم کے ایک اعلی سطحی وفد نے امیر انجمن حافظ عبد الرحمن اشرفی خادم دارالعلوم سید المرسلین چوگام قاضی گنڈ کی قیادت میں شرکت کرکے عوام الناس کے سامنے اصلاح معاشرہ کی اہمیت کو اجاگر کیا۔علماء نے اصلاح معاشرہ کی ضرورت اور سوسائٹی میں پھلی برائیوں سے  اپنے اردگرد کے ماحول کو بچانے کی ضرورت پر زور دیا۔ علما کرام نے منشیات جیسی دوسری مہلک اور نشہ آور چیزوں سے نوجوان نسل کو دور رہنے کی تلقین کی۔ اس موقع پر وفد نے علاقہ منگت میں مولانا غلام قادر  مہتمم جامعہ محمودیہ کو انجمنِ علما وائمہ مساجد کی طرف سے علاقہ منگت کا صدر اور مولانا فیاض احمد مہتمم مدرسہ مسیح العلوم کوعلاقہ مہو کا صدر منتخب کیا ۔
 

بھیم سنگھ روبہ صحت،ہسپتال سے رخصت

جموں//تین دن پہلے ہسپتال میں داخل ہوئے جموں وکشمیر نیشنل پنتھرس پارٹی کے صدر پروفیسر بھیم کو جموں کے سپرسپیشلٹی ہسپتال سے چھٹی دے دی گئی۔ سینے میں معمولی درد کی شکایت کے بعد انہیں شروع میں جی ایم سی، جموں کے ایمرجنسی وارڈ میں داخل کرایا گیا تھا۔ بعد میں انہیں سپر سپیشلٹی ہسپتال، جموں کے کریٹیکل کیئر یونٹ میں منتقل کردیا گیا ہے، جہاں کارڈیا لوجی محکمہ کے صدر ڈاکٹر سشیل شرما کی قیادت میں ڈاکٹروں کی ایک ٹیم ان کا علاج کررہی تھی۔پروفیسر بھیم سنگھ کو آرام محسوس ہونے پرہسپتال سے چھٹی دے دی گئی۔
 

سرکردہ صحافی قاسم سجاد کا انتقال | چناب خطہ کی صحافتی برادری کا اظہار تعزیت

بانہال//جرنلسٹ ایسوسی ایشن رام بن نے ایڈیٹر انچیف ہفتہ روز شہاب اننت ناگ اور ادیب اور دانشور قاسم سجاد اور ساتھی رپورٹر انیس احمد شیخ کے برادر اکبر محمد امین شیخ کی سڑک حادثے میں ہوئی موت پر اپنے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے سوگوار کنبوں سے اپنی تعزیت کی ۔ چناب ویلی جرنلسٹ ایسوسی ایشن ڈوڈہ ، جرنلسٹ ایسوسی ایشن بھدررواہ، ٹھاٹھری، گندو بھلیسہ ، کشتواڑ ، رام بن ، بانہال اور گول رام بن اور بانہال اور انڈین جرنلسٹ ایسوسی ایشن ضلع رام بن کے عہدیداروں اور ممبران نے بزرگ اور نامور اردو صحافی قاسم کی موت پر اپنے رنج کا اظہار کیا ہے اور اپنے اپنے تعزیتی پیغامات میں قدآور صحافی قاسم سجاد کی موت پر صدمے کا اظہار کرتے ہوئے سوگوران سے اپنی تعزیت اور ہمدردی کا اظہار کیاہے ۔ اس دوران مقامی رپورٹر انیس شیخ کے بڑے بھائی محمد امین شیخ ولد عبدالعزیز شیخ ساکنہ کنڈہ پوگل بانہال کی اتوار کے روزاکڑال پوگل رابطہ سڑک پر موٹر سائیکل حادثے میں وفات پرجرنلسٹ ایسوسی ایشن رام بن نے رنج و الم کا اظہار کرتے ہوئے ساتھی صحافی محمد انیس شیخ اور شیخ خاندان سے اپنی تعزیت کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے مرحوم کی جنت نشینی اور مغفرت کیلئے اللہ رب العزت سے دعا کی ہے۔
 

جموں میونسپل کارپوریشن کا چنندہ اپروچ قابل ِ مذمت :وکرم ملہوترہ

جموں//اپنی پارٹی جنرل سیکریٹری وکرم ملہوترہ نے جموں میونسپل کارپوریشن کی طرف سے چنندہ ترقیاتی نظریہ اختیار کرنے پر گہری تشویش ظاہر کی ہے جس سے شہر کے اندر کماور طبقہ جات کونظر انداز کیاجارہاہے۔ مسیحی برادری کے ساتھ ایک میٹنگ کے دوران وکرم ملہوترہ نے کہاکہ جموں میونسپل کارپوریشن کا چنندہ اپروچ انتہائی قابل ِ مذمت ہے اور اپنی پارٹی اُن لوگوں کے ساتھ اِس امتیاز کو بردداشت نہیںکرے گی جن کی کوئی سیاسی آواز نہیں۔ میٹنگیں جموں مشرق کے وارڈ نمبر7اور جموں مغرب کے وارڈ نمبر8اولڈ ریہاڑی میں منعقد کی گئی تھیں جس میں بڑی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی۔ اس دوران لوگوں نے اپنے علاقہ کی اپنی مشکلات وترقیاتی مسائل کو اُجاگر کیا۔ وکرم ملہوترہ نے اُنہیں بغور سننے کے بعد یقین دلایاکہ وہ متعلقہ حکام کی نوٹس میں لائیں گے۔ انہوں نے کہاکہ بی جے پی دعویٰ کر رہی ہے کہ سمارٹ سٹی پروجیکٹ اُن کی بڑی کامیابی ہے لیکن یہ ترقی صرف چند لوگوں تک پہنچ رہی ہے۔ انہوں نے کہاکہ اپنی پارٹی سماج کے کمزور طبقہ جات کے ساتھ کھڑی ہے اور اُن کی مشکلات کو حل کرنے کے لئے ہرممکن کوشش کی جائے گی۔
 

 جے ایم سی پر مسائل حل کرنے میں ناکامی کا الزام

 جموں//اپنی پارٹی صوبائی سیکریٹری ڈاکٹر روہت گپتا نے نیوپلاٹ میں لوگوں کی مشکلات حل کرنے میں لاپرواہی برتنے پر جموں میونسپل کارپوریشن کو تنقید کا نشانہ بنایاہے۔ وارڈ نمبر16نیوپلاٹ میں ڈاکٹر روہت کمار ایک میٹنگ کی صدار ت کر رہے تھے جس میں محلہ ویلفیئر کمیٹی اور علاقہ کے دیگر معززین نے شرکت کی۔ مقامی لوگوں نے الزام لگایاکہ جموں میونسپل کارپوریشن اُن کے مسائل پر توجہ نہیں دے رہی اور نالہ پر ناجائز تجاوزات اور سڑک کی تعمیر میں توسیع کے مسئلہ کو حل نہیں کیاجارہا۔ مقامی لوگ تعمیر کی مخالفت کر رہے ہیں لیکن جموں میونسپل کارپوریشن حکام سن کر راضی نہیں۔ انہوں نے سٹیٹ موٹر گیریج کے نزدیک پارک تعمیر کرنے کی بھی مانگ کی۔ ڈاکٹر روہت گپتا نے لوگوں کے مسائل سننے کے بعد اُن کی حمایت کی اور مطالبہ کیاکہ جموں میونسپل کارپوریشن کو چہائے کہ مقامی لوگوں کے لئے پارک تعمیر کی جائے۔ انہوں نے وارڈ نمبر16مین لین پر بلیک ٹاپنگ کی بھی مانگ کی ہے۔
 

مغل میدان میں قومی ایکتا میٹنگ کا اہتمام

 جموں// خطے میں امن اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی کے جذبے کو تقویت دینے کے مقصد سے فوج نے ضلع کشتواڑ کے مغل میدان میں قومی ایکتا میٹنگ کا اہتمام کیا۔ اس تقریب نے مختلف مذاہب اور مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے لوگوں کو ایک پلیٹ فارم مہیا کیا تاکہ مشترکہ مسائل پر ایک دوسرے کے ساتھ بات چیت کی جاسکے اور اتحاد اور بھائی چارے کا پیغام عام کیا جاسکے۔ گاؤں کی آبادی اور کمیونٹی کے رہنماؤں نے امید ظاہر کی کہ اس طرح کے واقعات خطے میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی کو فروغ دیں گے۔
 

کشتواڑ میںفوج کے ذریعے کووڈ ویکسین پر آگاہی مہم

 جموں//فوج تمام عمر کے گروپوں کے لئے کووڈ ٹیکہ کاری بیداری مہم کیلئے مسلسل کام کر رہی ہے۔ کشتواڑکے علاقے میں کئی طبی گشت شروع کیے گئے۔ اس مہم کا مقصد کووڈ ٹیکہ کاری کے بارے میں آگاہی بڑھانا اور کشتواڑ میں لوگوں تک پہنچنا تھا۔ ایونٹ کے دوران عوامی مقامات پر اعلانات کیے گئے اور کوویڈ 19 سے بچاؤ کے اقدامات پر پوسٹر لگائے گئے اور ویکسی نیشن رجسٹریشن کشتواڑ کے نمایاں مقامات پر تقسیم اور چسپاں کی گئی۔  فوج نے خطے میں کووڈ کٹس بھی تقسیم کیں ۔