مزید خبریں

متعدد وفود مشیر فاروق خان سے ملاقی

جموں//مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد کے متعدد وفود نے مشیر فاروق خان سے سول سیکرٹریٹ میں ملاقات کی اور اپنے مطالبات ان کے سامنے پیش کئے ۔ مشیر فاروق خان سے جن وفود نے ملاقات کی ان میں رول بال ایسوسی ایشن کا ایک وفد ، شاہ پور کنڈی کٹھوعہ سے  سید چودھری کی قیادت میں گُجر برادری کا وفد ،کرن واتل کی قیادت میں جموں و کشمیر جمناسٹک ایسوسی ایشن کا وفد شامل ہے ۔ گُجر وفد نے مشیر کو آگاہ کیا کہ ان کے گھر شاہ پور کنڈی بیراج کی تعمیر کے پیش نظر گر رہے ہیں اور انہیں سائیٹ سے ہٹایا جا رہا ہے انہوں نے درخواست کی کہ ان کا کوئی معقول حل نکالا جائے تا کہ انہیں کسی قسم کی دشواری پیش نہ آئے ۔ 27 سے 31 اکتوبر 2021 تک جاپان میں منعقد ہونے والی 38 ویں عالمی ریتھمک جمناسٹک چیمپین شپ کیلئے منتخب ہونے والی جے اینڈ کے کی جمناسٹ  بوولین کور سے ملتے ہوئے مشیر نے ان کے انتخاب پر خوشی کا اظہار کیا اور کھیل میں بہترین کارکردگی دکھانے پر ان کی تعریف کی ۔ اس موقع پر مشیر نے ڈسٹرکٹ چیمپین شپ میں پاور لفٹنگ کے ماسٹر 1 زمرے کے گولڈ میڈلسٹ مسٹر خوشوندر سنگھ کو بھی نوازا انہیں سرٹیفکیٹ اور گولڈ میڈل سے نوازا گیا ۔ فاروق خان نے خوشوندر سنگھ کو ان کی کامیابی پر مبارکباد دی اور ان پر زور دیا کہ وہ اس طرح کے مزید اہداف کے حصول کیلئے اپنی کوششوں کو جاری رکھیں ۔ دیگر وفود نے بھی مشیر کو اپنے مسائل سے آگاہ کیا اور جلد از جلد ان کو حل کرنے کی درخواست کی ۔ مشیر نے تمام وفود کو غور سے سُنا اور انہیں یقین دلایا کہ ان کے جائیز مسائل کو مرحلہ وار طریقوں پر حل کیا جائے گا ۔ 
 
 

نابینا لڑکیوںکے سکول کیلئے اراضی کامعاملہ

چیف سیکریٹری کی سربراہی میں5رکنی کمیٹی تشکیل

بلال فرقانی
جموں// حکومت نے عدالتی احکامات پر نابینا لڑکیوں کے ایک مخصوص سکول کو انتظامیہ کی جانب سے اراضی تفویض کرنے میں اعتراض کے معاملے میں چیف سیکریٹری کی صدارت میں5رکنی کمیٹی کی تشکیل کو ہری جھنڈی دکھائی۔ جموں کے روپ نگر میں واقع بنیائی سے محروم لڑکیوں کے ایک اسکول’ لوئس بریل ممیموریل اسکول فار سائٹ لس گرلز‘ نے مدرسے کی توسیع کیلئے سرکار سے اراضی کی درخواست کی تھی،جس پر انتظامیہ نے یہ کہکر اراضی فراہم نہیں کی،کہ یہ علاقہ گرین ائریا ہے اور یہاں پر تعمیرات کھڑی کرنے کی اجازت نہیں جبکہ اسکول کے اپر سے ہائی ٹینشن ترسیلی لائن بھی گزرتی ہے۔ اسکول نے بعد میں ہائی کورٹ کا دورازہ کھٹکھٹایا اور عدالت نے اس سلسلے میں ایک اعلیٰ سطحی کمیٹی کو تشکیل دینے کی ہدایت دی۔اس حوالے سے حکومت نے منگل کو ایک کمیٹی تشکیل دی جس کی کمان جموں کشمیر کے چیف سیکریٹری کو سونپی گئی۔ سرکاری حکم نامہ میں کہا گیا کہ اس5رکنی کمیٹی میں فائنانشل کمشنر(ایدیشنل چیف سیکریٹری) محکمہ خزانہ محکمہ تعلیم کے پرنسپل سیکریتری، محکمہ سماجی بہبود کے انتطامی سیکریٹری اور وائس چیئرمین جموں ڈیولپمنٹ اتھارٹی کو ممبران تعینات کیا گیا۔
 
 
 

فوج کا وی ڈی سی ممبروں کیلئے ہتھیاروں کی دیکھ ریکھ کا ورکشاپ

جموں//فوج نے جموں کے مضافاتی علاقہ اکھنور کے چوکی چورا بلٹ میں ولیج ڈیفنس کمیٹی (وی ڈی سی) ممبروں کو ہتھیاروں کی دیکھ ریکھ کے بارے میں تربیت دی اور ان کے ساتھ بات چیت بھی کی۔ایک دفاعی ترجمان نے کہا کہ وائٹ نائٹ کور کے تحت کراسڈ سورڈس ڈویژن نے اکھنور کے چوکی چورا بلٹ میں وی ڈی سی ممبروں کے لئے ایک ورک شاپ کا انعقاد کیا ہے ۔انہوں نے کہا:’ورک شاپ کا مقصد وی ڈی سی ممبروں کے ساتھ بات چیت کرنے کے علاوہ انہیں ان کی تحویل میں ہتھیاروں کی دیکھ ریکھ کے بارے میں ضروری تربیت فراہم کرنا تھا‘۔ان کا کہنا تھا کہ جموں کی موجودہ صورتحال کے پیش نظر وی ڈی سی ممبروں کے ساتھ یہ بات چیت انتہائی اہمیت کی حامل ہے کیونکہ یہی ممبران کسی بھی ناخوشگوار واقعے یا دور دراز علاقوں جہاں فوج موجود نہیں ہوتی ہے ،میں مشکوک افراد کی نقل وحمل کے پہلے جواب دہندگان ہوتے ہیں۔موصوف ترجمان نے کہا کہ وی ڈی سی ممبران کی طرف سے بر قت انٹلی جنس کی فراہمی اور بکر والوں کی نق و حمل پرکڑی نگرانی خطے میں امن قائم ہونے میں کافی مدد گار ثابت ہوئی ہے ۔
 
 
 

ڈوڈہ کے قصبہ ٹھاٹھری میں آتشزدگی کی پراسرار واردات 

دوکان سمیت 3 منزلہ رہائشی مکان خاکستر، لاکھوں روپے مالیت کا سامان بھی تباہ 

اشتیاق ملک
ڈوڈہ //ڈوڈہ ضلع کے قصبہ ٹھاٹھری میں آتشزدگی کی پراسرار واردات میں تین منزلہ رہائشی مکان خاکستر ہوا ہے جس میں لاکھوں کی مالیت کا سامان بھی تباہ ہوا ہے۔اطلاعات کے مطابق منگل کی شام ساڑھے چھ بجے کے قریب پوسٹ آفس کے نزدیک منموہن سنگھ ولد گوری لال ساکنہ ٹھاٹھری کے تین منزلہ رہائشی مکان سے آگ نمودار ہوئی جو کچھ ہی لمحوں میں پوری عمارت میں پھیل گئی جس کے نتیجے میں عمارت مکمل طور پر خاکستر ہوئی۔اس دوران اگر چہ کوئی جانی نقصان نہیں ہوا ہے تاہم لاکھوں کی مالیت کا سامان جل کر راکھ ہوا ہے۔بتایا جاتا ہے کہ عمارت کے نچلے حصہ میں ایک چکن شاپ بھی تھی۔اس واقعہ کے فوراً بعد مقامی لوگ، پولیس ،سیکورٹی فورسز و فائر سروس کے اہلکار موقع پر پہنچے اور بچاؤ کاروائی شروع کی۔ ایک گھنٹہ کی طویل کارروائی کے بعد آگ پر قابو پایا گیا اور اس طرح سے نزدیک کے مکانوں کو بچایا گیا۔اس سلسلہ میں پولیس تھانہ ٹھاٹھری میں معاملہ درج کر کے مزید تحقیقات شروع کی ہے۔
 
 
 

ڈوڈہ میں کئی دنوں بعد کورونا معاملات میں کمی 

منگل کو صرف 1 مثبت کیس، 10 مریض صحتیاب 

اشتیاق ملک
ڈوڈہ //ڈوڈہ ضلع کئی دنوں بعد کورونا معاملات میں کمی آئی ہے۔منگل کے روز ڈوڈہ، بھدرواہ، ٹھاٹھری ،گندوہ و عسر میں ہوئی کووڈ جانچ کے دوران صرف 1 مثبت کیس سامنے آیا ہے، 10 مریض صحتیاب ہوئے ہیں۔ اس طرح سے ضلع میں فعال کیسوں کی تعداد سمٹ کر 58 و شفایاب ہوئے مریضوں کی مجموعی تعداد 7610 پہنچ گئی ہے۔ضلع میں اب تک کوؤڈ 19 سے 133 افراد فوت ہوئے ہیں اور 398000 ٹیکے لگائے گئے ہیں۔
 
 
 

کووڈ ایس او پیز کی خلاف ورزی پر40ہزار کاجرمانہ

 1581 ٹیکے لگائے گئے ، 1654 نمونے جمع کئے گئے 

رام بن//ضلع رام بن میں کووڈ پروٹوکول کو نافذ کرنے کیلئے نافذ کرنے کی مہم کو جاری رکھتے ہوئے انفورسمنٹ ٹیموں نے چہرے کے ماسک نہ پہننے اور جسمانی فاصلہ برقرار نہ رکھنے پرکئی خلاف ورزی کرنے والوں پر جرمانہ عائد کیا۔نافذ کرنے والی ٹیموں نے اپنے متعلقہ دائرہ کار میں معائنہ کے دوران 40ہزار100 روپے جرمانہ وصول کیا۔انفورسمنٹ افسران نے لوگوں پر زور دیا کہ وہ چہرے کے ماسک پہنیں اور جسمانی فاصلہ برقرار رکھیں اس کے علاوہ اپنے قریبی سی وی سی پر کوویڈ ویکسی نیشن کی خوراکیں لیں۔ڈسٹرکٹ امیونائزیشن آفیسر ڈاکٹر سریش نے بتایا کہ ضلع رام بن میں آج 1581 افراد کو پہلی اور دوسری کوویڈ ویکسین کی خوراک دی گئی۔چیف میڈیکل آفیس ڈاکٹر محمد فرید بھٹ کی طرف سے جاری کردہ روزانہ بلیٹن کے مطابق محکمہ صحت نے 1654 نمونے جمع کیے ہیں جن میں 345 RT-PCR اور 1309 RAT نمونے شامل ہیں جبکہ اس کے علاوہ ضلع کے مخصوص ویکسی نیشن سینٹرز میں 1581 افراد کو کوویڈ ویکسین فراہم کی گئی ہے۔
 
 
 

سوچھتا پکھواڑہ کے پانچو یں دن ضلع کشتواڑ میں مختلف سرگر میاں

کشتواڑ //سوچھتا پکھواڑہ کا 5 واں دن ضلع کشتواڑ میں مختلف سرگرمیوں سے منایا گیا۔ضلع کے ساتھ ساتھ ضلع بھر کی مقامی انتظامیہ نے ڈپٹی کمشنر اشوک شرما کی مجموعی نگرانی میں مختلف قسم کی سرگرمیاں انجام دیں۔صفائی مہم ، "آزادی کا امرت مہااتسو" کے زیر اہتمام بلاک پلمار میں اسسٹنٹ کمشنر پنچایت (اے سی پی) ذاکر حسین کی قریبی نگرانی میں بی ڈی سی چیئرپرسن پلمار للیتا دیوی کی موجودگی میں منعقد کی گئی۔ ڈی ڈی سی ممبر ڈول پلمار طاہر مسعود ، اور بی ڈی او پلمار صائمہ رمضان، مقامی لوگوں اور پی آر آئی ممبران نے بلاک آفس پلمار اور دیگر دفاتر کے ارد گرد پلاسٹک کا کچرا جمع کیا اور مناسب طریقے سے ٹھکانے لگایا۔اس کے علاوہ مقامی لوگوں کو صاف بھارت مہم کے بارے میں بھی آگاہ کیا گیا۔ بعد میں اے سی پی نے بی ڈی سی چیئرپرسن ، ڈی ڈی سی ممبر اور پی آر آئی کے ساتھ پنچایت گھر لوئر پلمار بی کا دورہ کیا اور وہاں پر وافر کام کی تعمیر کے دیرینہ مسئلے کو خوش اسلوبی سے حل کیا۔دریں اثنا اسی طرح کی صفائی کی سرگرمیاں بھی تمام محکموں نے اپنے دفتر کے احاطے میں کی۔میونسپل کونسل نے کشتواڑ ٹاؤن شپ کے مختلف مقامات پر صفائی اور حساسیت مہم چلائی اور راہگیروں کو رہائشی علاقوں کے قریب صفائی کو برقرار رکھنے کی اہمیت سے آگاہ کیا اور انہیں گھر کے فضلے کو ٹھکانے لگانے کے مناسب طریقے کے بارے میں بھی سکھایا۔
ڈسٹرکٹ ہسپتال نے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر پرویز اقبال وانی کی رہنمائی میں ہسپتال کے احاطے میں صفائی اور صفائی مہم چلائی جس میں تمام سٹاف ممبران کی فعال شرکت تھی۔ہائی سکول میں پوچھل کے طلباء کو ہاتھ دھونے کے بارے میں سکھایا گیا۔ جبکہ ہائی سکول چیرہار اور گرلز مڈل سکول ویسر پلمارمیں سکول مینجمنٹ کی طرف سے صفائی اور پلاسٹک کے کچرے کو اکٹھا کرنے کی مہم چلائی گئی۔ڈسٹرکٹ یوتھ سروسز اینڈ اسپورٹس ڈیپارٹمنٹ کی جانب سے بلاک بونجواہ کے بنون علاقے کے مختلف چشموں اور قدرتی آبی ذخائر میں آبی اداروں کے لیے صفائی مہم بھی شروع کی گئی۔
 
 
 

ادھم پور میں نیشنل تمباکو کنٹرول پروگرام پر ورکشاپ کا انعقاد

ڈی سی نے COTPA کے سخت نفاذ پر زور دیا 

ادھم پور//ڈائریکٹوریٹ آف ہیلتھ سروسز جموں نے ڈسٹرکٹ ہیلتھ سوسائٹی ادھم پور کے اشتراک سے نیشنل تمباکو کنٹرول پروگرام (این ٹی سی پی) پر ایک دن کی ورکشاپ کا اہتمام کیا ۔ڈپٹی کمشنر اندو کنول چب ، جو ڈسٹرکٹ ہیلتھ سوسائٹی ادھم پور کی چیئرمین بھی ہیں ، نے کانفرنس ہال ڈی سی آفس کمپلیکس میں منعقدہ تقریب کا بطور مہمان خصوصی افتتاح کیا۔شروع میں ڈاکٹر کے سی ڈوگرہ چیف میڈیکل آفیسر نے پاورپوائنٹ پریزنٹیشن کے ذریعے ورکشاپ اور ڈی ایل سی سی میٹنگ کے مقصد کا ایک مختصر جائزہ پیش کیا۔ سی ایم او نے تمباکو کنٹرول پر نامزد کمیٹی ممبروں کے کردار اور ذمہ داریوں پر روشنی ڈالی۔ڈویژنل کوآرڈینیٹر جموں شویتا رائنا نے بھی اس موقع پر خطاب کیا اور شرکاء کو جموں و کشمیر سمیت بھارت میں تمباکو کے استعمال کے بوجھ سے آگاہ کیا۔ انہوں نے شرکاء کو این ٹی سی پی اور سگریٹ اور دیگر تمباکو مصنوعات ایکٹ 2003 کے بارے میں بھی آگاہ کیا ۔تربیتی پروگرام کے دوران ضلع ادھم پور میں تمباکو کے کنٹرول کو آگے بڑھانے کے بارے میں کلیدی نوٹس ایڈریس ماہرین نے ورچوئل موڈ کے ذریعے دیا ، جبکہ وبائی امراض اور بوجھ پر تکنیکی سیشن  بھارت اورجموںوکشمیرمیں تمباکو کے استعمال کو ڈاکٹر شیوم کپور نے آن لائن کیا۔ٹریننگ پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے ، ڈی سی نے COTPA کے نفاذ پر زور دیا۔ انہوں نے کم سے کم وقت میں انفورسمنٹ سکواڈ تشکیل دینے کا بھی مطالبہ کیا۔ ضلع میں انٹر سیکٹرل کنورجنس کے ساتھ پروگرام کے بہتر نفاذ کے لیے ضروری ہدایات جاری کی گئیں تاکہ ضلع ادھم پور میں پروگرام کو بڑی کامیابی حاصل ہو۔ایس ڈی ایمز اور تحصیلداروں سے کہا گیا کہ وہ تمام تعلیمی اداروں کو COTPA-2003 کی روشنی میں معائنہ کریں اور تعلیمی اداروں کے ارد گرد زرد لکیر کھینچنے کے بعد تعمیل رپورٹ پیش کریں۔ڈی سی نے افسران کو ہدایت کی کہ تمباکو سے پاک سرکاری عمارتیں ، دفاتر ، تعلیمی ادارے ، عوامی مقامات۔ ضلعی افسران کو مزید ہدایت دی گئی کہ وہ اپنے متعلقہ دفاتر میں سگریٹ نوشی کے نشانات نہ لگائیں۔ڈی سی نے ڈویژنل نوڈل آفیسر سے کہا کہ وہ تمام مجاز افسران کو COTPA-2003 کے تحت خلاف ورزی کرنے والوں کو سزا دینے کے لیے چالان کی کتابیں دے۔
 
 
 

ڈی ڈی سی کٹھوعہ نے ڈی ایل آر سی میٹنگ میں بینکوں کی کارکردگی کا جائزہ لیا 

بینکوں کو قرض کا تناسب بڑھانے اور خودروزگار سکیموں کے منصوبوں کی فوری منظوری کی ہدایت

کٹھوعہ//بینکوں کے کریڈٹ کے بہاؤ اور کارکردگی کا جائزہ لینے کیلئے ڈسٹرکٹ ڈیولپمنٹ کمشنر کٹھوعہ راہل یادو نے ڈی سی کمپلیکس کے کانفرنس ہال میں ڈسٹرکٹ لیول ریویو کمیٹی میٹنگ کی صدارت کی۔میٹنگ میں ڈپازٹس ، ترجیحی شعبے کے تحت پیش رفت ، حکومت کے زیر اہتمام سکیموں ، 30 جون 2021 کو ختم ہونے والے سہ ماہیوں کے لیے قرضے اور RSETI کٹھوعہ کی کارکردگی سے متعلق اہم شعبوں پر تفصیلی غور و خوض کیا گیا۔ڈی ڈی سی کٹھوعہ ، جو ڈی ایل آر سی چیئرمین بھی ہیں ، نے سی ڈی تناسب اہداف کے حصول کا جائزہ لیا ، کے سی سی ، نیو کے سی سی (ڈیری ، پولٹری ، فشریز اور بھیڑ پالنے) ، پی ایم ای جی پی – کے وی آئی بی / کے وی آئی سی / ڈی آئی سی / این ایل ایم ، این آر ایل ایم ہینڈلوم / ہینڈی کرافٹ ، PMAY ان سکیموں کے تحت فائدہ اٹھانے والوں کے کریڈٹ ربط پر خصوصی زور دیا گیا ہے۔انہوں نے بینکوں پر زور دیا کہ وہ نظام اور طریقہ کار کو آسان بنائیں تاکہ زیادہ سے زیادہ استفادہ کنندگان روزگار کے حصول کے لیے مختلف سکیموں کے تحت کریڈٹ سے منسلک ہوں۔ انہوں نے بینکوں اور سرکاری محکموں کے افسران کو مشورہ دیا کہ وہ غربت سے متاثرہ لوگوں کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کریں تاکہ مقررہ اہداف کے حصول کو یقینی بنایا جا سکے۔چیئرمین نے تمام محکموں اور بینکوں کو مشورہ دیا کہ وہ عام لوگوں/کسانوں/ہنر مند افراد میں معلومات کی ترسیل کے لیے آگاہی پروگراموں پر توجہ مرکوز کریں تاکہ وہ معاشی سرگرمیوں کے نئے یونٹ قائم کرنے کی ترغیب دیں۔ انہوں نے بینکوں اور لائن ڈیپارٹمنٹس پر زور دیا کہ وہ اپنے کام میں موثر رابطہ کو یقینی بنائیں۔چیئرمین نے بینکوں پر زور دیا کہ وہ اپنے اختیار میں تمام وسائل استعمال کریں اور 2021-22 کی اگلی سہ ماہی کے اختتام تک 44.22 فیصد کے موجودہ سی ڈی تناسب کو کم سے کم 60 فیصد تک بڑھانے کے لیے ٹھوس ایکشن پلان کے ساتھ سامنے آئیں۔ڈی ڈی سی نے تمام بینکوں کو مشورہ دیا کہ وہ 100 فیصد تک رسائی کے حامل افراد کو سماجی تحفظ کی سکیموں جیسے جن دھن یوجنا ، تحفظ بیما یوجنا ، زندگی جیوتی یوجنا ، اٹل پنشن یوجنا اور تمام اہل اے سی ہولڈرز کو روپے ڈیبٹ کارڈ جاری کریں۔ڈی ڈی سی نے بینکوں اور محکموں کی فعال شرکت کے ساتھ سماجی فلاح و بہبود کی اسکیموں کے لیے خصوصی آگاہی کیمپ لگانے کا مشورہ بھی دیا۔ انہوں نے بینکوں کو یہ بھی مشورہ دیا کہ وہ درخواست دہندگان سے ضمانت کی سیکورٹی/گارنٹی حاصل نہ کریں جہاں یہ حاصل کرنا ضروری نہیں ہے۔میٹنگ کے دوران ایل ڈی او آر بی آئی ، نیرج کمار اروڑا کے ریمارکس بھی پڑھ کر سنائے گئے۔بعد میں ڈی ڈی سی نے جون 2021 کو ختم ہونے والی سہ ماہی کے لیے RSETI کی لوکل ایڈوائزری کمیٹی کی میٹنگ کی صدارت کی۔
 
 
 

بجلی کھمبوں اور دیگر اثاثوں کا غیر قانونی استعمال 

محکمہ بجلی نے ایئر ٹیل ، بسنل اور دیگران کے فائبر وکیبل نیٹ ورک کاٹ دئے

جموںح//مختلف ٹیلی کام اور کیبل نیٹ ورک کمپنیوں کے ذریعہ کھمبوں اور پی ڈی ڈی کے دیگر منسلک نیٹ ورک کے غیر قانونی استعمال کے خلاف ایک بڑی مہم میں جے پی ڈی سی ایل نے جموں کے مختلف مقامات پر آپٹیکل فائبر کیبل اور لوکل ٹی وی نیٹ ورک کیبلز کو منقطع کر دیا۔ یہ مہم ایگزیکٹو انجینئر ED-II ، گاندھی نگر ش کی ہدایت پر کی گئی اور منقطع مختلف جگہوں جن میں گریٹر کیلاش ، کنجوانی ، ستواری ، اپنا وہار ، شانتی نگر ، ڈگیانہ نا شامل ہیں،میں لائنوں کومنقطع کیاگیا۔حکومتی حکم کے مطابق محکمہ بجلی ٹیلی کام سروس فراہم کرنے والوں اور دیگر کیبل نیٹ ورکس کو موجودہ کھمبوںکو او ایف سی اور دیگر کیبلز کو سپورٹ کرنے کے لیے رینٹل کی بنیاد پر استعمال کرنے کی اجازت دے گا۔ پول انفراسٹرکچر مختلف ٹیلی کام سروس فراہم کنندگان اور کیبل نیٹ ورکس کوپانچ سو روپے فی پول سالانہ کے کرایہ پر فراہم کیا جائے گا۔ٹیلی کام سروس فراہم کرنے والے اور مقامی کیبل ٹی وی نیٹ ورکس سے بار بار کہا گیا ہے کہ وہ پی ڈی ڈی اتھارٹیز سے مطلوبہ کرایہ جمع کرائے ، تاہم جواب کی کمی نے جے پی ڈی سی ایل کو او ایف سی اور لوکل ٹی وی نیٹ ورک کیبلز کو منقطع کرنے کا انتہائی قدم اٹھانے پر مجبور کیا۔ جے پی ڈی سی ایل کے عہدیداروں کے مطابق جو لوگ فوری طور پر کرایہ جمع نہیں کرتے انہیں آنے والے دنوں میں نقصان کا سامنا کرنا پڑے گا کیونکہ پی ڈی ڈی اثاثوں کے غیر قانونی استعمال کے خلاف رابطہ منقطع کرنے کی مہم تیز کی جائے گی۔
 
 
 

ضلع ترقیاتی کونسل چیئرپرسن کشتواڑ کا دچھن دورہ ختم

متعدد وفودملاقی، علاقہ میں محکمہ جات و ترقیاتی سرگرمیوں کا لیا جائزہ 

عاصف بٹ
کشتواڑ// ضلع ترقیاتی کونسل کی چیئرپرسن پوجا ٹھا کا ایک ہفتہ طویل دچھن دورہ اختتام پذیر ہوا۔ دورے کے دوران چیئرپرسن نے علاقے کے پی آر آئی ممبران کے ساتھ ساتھ عام لوگوں کے ساتھ بھی بات چیت کی اور مختلف مسائل پر تبادلہ خیال کیا ، ان کی شکایات سنیں اور سرکاری دفاتر اور سکولوں کے کام کاج کا جائزہ لیا۔ انھوں نے دچھن کی تمام نو پنچایتوں کا دورہ کیا جہاں علاقے کی عوام کے مسائل سنے اور ترجیحی بنیادوں پر حل کی یقین دہانی کرائی۔پی آر آئی ممبران کے وفد کے ساتھ بات چیت کے دوران انہوں نے ان پر زور دیا کہ وہ  غریبوں کی آنکھوں اور کان کی طرح کام کریں اور سرکاری افسران اور عہدیداروں کے ساتھ مل کر کام کریں تاکہ غریب عوام کو فائدہ پہنچایا جاسکے۔ انہوں نے ان پر زور دیا کہ وہ مقامی انتظامیہ کے ساتھ مل کر ترقیاتی سکیموں/منصوبوں کے موثر نفاذ کیلئے کام کریں۔انہوں نے ترقیاتی سرگرمیوں پر نظر رکھنے اور نگرانی کرنے کے لیے کہا۔ انہوں نے عام اہل افراد سے کہا کہ وہ دیہی غریبوں کی سماجی معاشی ترقی کے لیے فلاحی سکیموں کے فوائد حاصل کریں۔انہوں نے سب کو صحت کارڈ کے لئے اپنا اندراج کروانے کو کہا اور اہل افراد سے درخواست کی کہ اگر کسی شخص نے ابھی تک ویکسین نہیں لی تو وہ ویکسین لگائیں اور اپنے آپ کو کرونا سے محفوظ کریں۔بعد میں ڈی ڈی سی کی چیئرپرسن پوجا ٹھاکر نے عام لوگوں کے مسائل کو صبر سے سنا اور ان کی شکایات کے جلد از جلد ازالے کی یقین دہانی کرائی اور یقین دلایا کہ وہ ان کے حقیقی مسائل متعلقہ اعلی حکام کے ساتھ اٹھائیں گی۔اس سے قبل ڈی ڈی سی چیئرپرسن نے ایگزیکٹو ایجنسیوں پر زور دیا کہ وہ مقررہ وقت کے اندر دچھن کے تمام جاری کاموں کو جلد مکمل کریں کیونکہ کام کرنے کا موسم بہت محدود ہے،وہ زمینی سطح پر ٹھوس نتائج لانے کے لیے اپنی کوششوں کو دوگنا کریں تاکہ تمام تر کاموں کو جلدازجلد مکمل کیا جائے۔
 
 
 
 

منتخب نمائندگان کٹھوعہ کی پسماندگی کیلئے ذمہ دار:منجیت سنگھ 

 کٹھوعہ//اپنی پارٹی صوبائی صدر جموں منجیت سنگھ نے ضلع کٹھوعہ میں سرحدی اور دور افتادہ علاقوں کی پسماندگی کے لئے منتخب نمائندگان کو ذمہ دارٹھہرایا ہے جن کی وجہ سے لوگ یہاں پر بنیادی سہولیات سے بھی محروم ہیں۔ اپنی پارٹی لیڈر خشبوبھگت کی طرف سے جکھ باد کٹھوعہ میں منعقدہ ایک عوامی میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے منجیت سنگھ نے کہاکہ ضلع کٹھوعہ کے گاؤں اور بین الاقوامی سرحد کے نزدیک رہنے والے لوگوں کے لئے ترقی ابھی بھی ایک دیرینہ خواب ہے۔ لوگ بجلی، صاف پانی، سڑک رابطہ، نالیاں، گلی کوچے  جیسے بنیادی سہولیات سے متاثر ہیں لیکن ضلع کے منتخب نمائندے اِن مشکلات سے آنکھیں چرا رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ انتخابات سے قبل بھارتیہ جنتا پارٹی کے ترقی کے کھوکھلے اور جھوٹے نعرؤں کی وجہ سے لوگ مشکلات سے دوچار ہیں۔ منجیت سنگھ نے جموں وکشمیر میں جلد اسمبلی انتخابات کرانے کا پرزور مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ کہیں بھی ترقی نہیں ہورہی ، منتخب حکومت کی عدم موجودگی میں لوگ مایوسی وبے بسی کا شکار ہیں اور اُن میں غم وغصہ بڑھتا جارہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ اپنی پارٹی ضلع میں بلا امتیاز اتحاد، یکسانیت اور ترقی کے لئے کام کرے گی۔ انہوں نے کہا’’ہم دیگر سیاسی جماعتوں کی طرح نہیں ہیں جوکہ اقتدار میں آنے کے بعد لوگوں کو قیادت کے بغیر چھوڑ دیتے ہیں، ہم یکساں ترقی اور لوگوں کی بہتری کے لئے کام کریں گے‘‘۔اس میٹنگ میں سابقہ ایم ایل اے اور پارٹی ضلع صدر کٹھوعہ پریم لال اور سابقہ ایم ایل اے فقیر ناتھ، اقبال کرشن، کنو کھجوریہ اور ضلع کمیٹی کے دیگر لیڈران بھی موجود تھے۔ 
 
 
 

اپنی پارٹی ضلع کمیٹی اربن جموں کا اجلاس 

جموں//اپنی پارٹی ضلع کمیٹی اربن جموں نے ایک میٹنگ کا اہتمام کیا جس میں تنظیمی امور پر غوروخوض کیاگیا۔ میٹنگ کا اہتمام نائب صدر وائی بہو مٹوکی قیادت میں ہوئی ۔میٹنگ میں جموں شہر کے مسائل کے علاوہ تنظیمی امور پر غوروخوض کیاگیا جس میں ممبرشپ مہم بھی شامل تھی۔ ضلع جموں شہری علاقوں میں پارٹی کو زمینی سطح پر مضبوط بنانے کا بھی فیصلہ لیاگیا۔
 
 
 

گذشتوں حکومتوں نے پسماندہ علاقوں کو نظر انداز کیا ہے:دلیپ سنگھ 

فلاحی سکیموں کی عمل آوری میں پنچائتی اراکین مثبت کردار ادا کریں :ڈی ڈی سی کونسل چیئرمین 

اشتیاق ملک
ڈوڈہ //گذشتہ حکومتوں نے پسماندہ علاقوں کو ہر سطح پر نظر انداز کیا تھا، بھاجپا کی حکومت آتے ہی دیہی علاقوں میں سڑکوں کا جال بچھایا گیا جبکہ غریب و بچھڑے ہوئے طبقوں کی فلاح و بہبود کی خاطر درجنوں سکیموں کا قیام عمل میں لا کر زمینی سطح پر ان کو لاگو کیا۔ان باتوں کا اظہار سابق ممبر اسمبلی بھدرواہ دلیپ سنگھ پریہار نے گندوہ میں منعقد ایک عوامی جلسے سے مخاطب ہوتے ہوئے کیا۔اس موقع پر ضلع ترقیاتی کونسل چیئرمین دھنتر سنگھ کوشل ،ضلع صدر بی جے پی سوامی راج شرما، وائس چیئرمین سنگیتہ بھگت، ڈی ڈی سی کونسلر بھدرواہ ٹھاکر یدھویر سنگھ، چرالہ ڈی ڈی سی کونسلر منہور لال، بی ڈی سی چیئرمین بھدرواہ اومی چند، ڈی ڈی سی کونسلر ٹھاٹھری سندیپ منہاس، سمیت پنچائتی اراکین، بی جے پی کارکنوں و عوام نے شرکت کی۔پریہار نے ڈی ڈی سی کونسل چیئرمین کا والہانہ استقبال کرتے ہوئے مرکزی حکومت کی حصولیابیوں کو بیان کیا۔ انہوں نے لوگوں سے فرقہ وارانہ ہم آہنگی و آپسی بھائی چارے کو قائم رکھتے ہوئے بی جے پی کو مزید مستحکم بنانے کی اپیل کی۔ڈی ڈی سی کونسل چیئرمین دھنتر سنگھ نے پنچائتوں کو بااختیار بنانے کے لئے بی جے پی حکومت کی طرف سے کئے گئے اقدامات پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ گاؤں سطح کی ترقی و خوشحالی کے لئے پنچائتی راج کو نافذ کیا گیا۔انہوں نے کووڈ 19 کے بحران کے دوران نریندر مودی کی قیادت میں قائم مرکزی سرکار کی طرف سے اٹھائے گئے اقدامات پر سرکار کی ستائش کرتے ہوئے کہا کہ اس مہلک بیماری کے دوران عوام کی دہلیز تک بنیادی سہولیات پہنچائی گئیں۔نہوں پنشن سکیم ،گولڈن کارڈ، پی ایم اے وائی، آواس پلس ،پی ایم کسان و دیگر کئی سکیموں پر تفصیلی روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ ان کے قیام کا واحد مقصد غریب و بے سہارا کنبوں کو فائدہ پہنچانا ہے چاہیے وہ کسی بھی ذات و فرقہ سے تعلق رکھتے ہوں۔انہوں نے پنچائتی اراکین، ڈی ڈی سی کونسلروں و بی ڈی سی چیئرپرسنوں پر زور دیا کہ وہ مرکزی معاونت والی سکیموں کو گھر گھر پہنچا کر زمینی سطح پر لاگو کریں۔ اس دوران مقررین کی طرف سے رکھے عوامی مسائل پر انہوں نے انتظامیہ پر زور دیا کہ وہ لوگوں کی مشکلات کا ازالہ کرنے کے لئے ہر وقت کوشاں رہیں اور کسی بھی قسم کی لاپرواہی برتنے سے احتیاط کریں۔ انہوں نے بغیر نام لئے سرکاری آفیسران و ملازمین سے مخاطب ہوتے ہوئے کہا کہ وہ اپنے فرائض کو ایمانداری سے انجام دیں نہیں تو ان کو باہر کا راستہ دکھایا جائے گا۔ڈی ڈی سی کونسل چیئرمین تعلیم یافتہ نوجوانوں کو اپنے پاؤں پر کھڑا ہونے کے لئے مختلف اسکیموں کے تحت نزدیکی بنکوں سے کم شرح پر قرضے لے کر اپنا کاروبار شروع کرنے کی بھی اپیل کی۔انہوں نے بھاجپا کے 50 پلس مشن کو آگے بڑھانے کے لئے لوگوں سے تعاون طلب کرتے ہوئے کہا کہ رشوت خوروں کو لگام لگانے کے لئے جموں و کشمیر میں بھاجپا کی حکومت کا قیام عمل میں لانا وقت کی اہم ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ اسمبلیوں کی حدبندی ہونے کے بعد ہی یہاں اسمبلی انتخابات ہوں گے ۔دریں اثناء ضلع ترقیاتی کونسل چیئرمین نے سابق ایم ایل اے و ڈی ڈی سی کونسلروں کی موجودگی میں انتظامیہ کی میٹنگ طلب کی جس دوران انہوں تعمیراتی کاموں کی پیش رفت کا جائزہ لیا۔انہوں نے ترقیاتی منصوبوں کو وقت پر پائے تکمیل پہنچانے و عوامی مسائل کا ترجیح بنیادوں پر ازالہ کرنے کی ہدایات دیں۔میٹنگ میں ڈی ڈی سی کونسلر کاہرہ معراج الدین ملک، ڈی ڈی سی کونسلر بھلیسہ چوہدری محمد اقبال کوہلی، بی ڈی سی چیئرمین چنگا محمد عباس راتھر، ایس ڈی ایم گندوہ اشفاق کھانجی، ایس ڈی پی او شہزادہ کبیر متو و مختلف محکموں کیآفیسران و ملازمین نے شرکت کی۔
 
 

 مرکزی وزیر مملکت قانون وانصاف کا راجوری کا دورہ  

فوری اِنصاف کی فراہمی کیلئے فاسٹ ٹریک عدالتوں اور لوک عدالتوں کے کردارکو اُجاگر کیا

راجوری//مرکزی حکومت کے عوامی رَسائی پرگرام کے ایک حصے کے طور پرمرکزی وزیر مملکت برائے قانون و اِنصاف پروفیسر ایس پی سنگھ بگھیل نے ضلع راجوری کا دورہ کیا۔مرکزی وزیر مملکت نے اِجتماع سے خطاب کرتے ہوئے درخواست دہندگان کو فوری اِنصاف کی فراہمی
 کو یقینی بنانے میں فاسٹ ٹریک عدالتوں اور لوک عدالتوں کے کردار پر روشنی ڈالی ۔اُنہوں نے کہا کہ عدالتوں کے ذریعے مؤثر اِنصاف کی فراہمی کے لئے تین اہم عناصرکی ضرورت ہوتی ہے جس میں  ۱) عدالتوں تک رَسائی،  ۲) ججوں کی طرف سے مؤثر فیصلہ سازی اور ۳) ان فیصلوں پر مناسب عمل در آمدشامل ہے۔وزیر مملکت موصوف نے ہائیر سکینڈری سکول چنگس کا دورہ کرکے طلاب او رعملے سے استفسار کیا تاکہ وہاں کے بچوں کو دی جانے والی تعلیم کے بارے میں معلومات حاصل کیا جاسکے۔اُنہوں نے اَساتذہ پر زو ردیا کہ وہ اِس بات کو یقینی بنائیں کہ طلباء کو اخلاقی اقدار کے علاوہ غیر نصابی سرگرمیوں پر یکساں زور دیتے ہوئے معیاری تعلیم دی جائے۔اُنہوں نے مراد پور ٹائل فیکٹری کے اَپنے دورے کے دوران مختلف یونٹوں کا معائینہ کیا۔ انہوں نے ماحول دوست صنعتوں کو فروغ دینے کی ضرورت پر زور دیا تاکہ آئندہ نسلوں کو صحت مند ماحول سے نوازا جائے۔مرکزی وزیر مملکت برائے قانون و اِنصاف پروفیسر ایس پی سنگھ بگھیل نے یوٹی میں اِس بڑے پیمانے پر عوامی رَسائی پروگرام کو شروع کرنے کے مقصد کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ یہ وزیر اعظم نریندر مودی کا پختہ عزم ہے کہ کوئی بھی ترقیاتی اقدامات کے فوائد سے محروم نہ ہوں۔اُنہوں نے کہا کہ وزیراعظم کی ہدایات کے مطابق ہم یہاں آئے ہیں تاکہ خطے میں مختلف سرکاری سکیموں کی عمل آوری کی زمینی صورتحال کا جائزہ لیا جاسکے۔بعد میں پروفیسر سنگھ نے مختلف سکیموں کے مستحقین کے ساتھ بات چیت کی اور پی ایم اے وائی ،پی ایم اجوالا،پی ایم کسان سمن ندھی اور متعلقہ پروگرام چنگس فورٹ میں لگائے گے محکمانہ سٹالوں کا معائینہ کیا۔ مرکزی وزیر مملکت نے وہاں عوام سے اَپنے خیالات کا اِظہا رکرتے ہوئے کہا کہ کس طرح سوچھ بھارت مشن نے قوم کو رہنے کے لئے ایک صاف ستھرا اور حفظان صحت مند مقام بننے میں مدد دی ہے۔اِس طرح مرکزی وزیر مملکت موصوف نے آیوشمان بھارت سکیم کے فوائد کو اُجاگر کرتے ہوئے کہا کہ یہ ان غریب لوگوں کے لئے ایک نعمت ثابت ہوئی جو شدید طبی اخراجات برداشت نہیں کرسکتے ۔مرکزی وزیر مملکت نے مختلف سکیموں کے تحت مستحقین کو منظور ی نامے بھی دئیے۔بعد میں مرکزی وزیر مملکت نے جوڈیشل افسران ، لوکل بار ایسو سی ایشن ، منتخب بی ڈی سی اور ڈی ڈی سی ممبران ،ضلع اَفسران ، نامور شہریوں اوردیگر شراکت داروں کے ساتھ ملاقات کا ایک سلسلہ بھی منعقدکیا۔