مزید خبریں

نیلی پنچایت میں پانی کی شدید قلت | لوگ قدرتی چشموں سے پانی لانے پر مجبور

 پرویز خان
منجا کوٹ //تحصیل منجا کوٹ کی پنچایت نیلی میں پینے کے صاف پانی کی شدید قلت کی وجہ سے مقامی لوگوں کو مشکلات کا سامنا کرناپڑرہا ہے ۔مقامی لوگوں کا کہنا تھا کہ کئی سال پہلے لگائی گئی پاپئیںبوسیدہ ہو چکی ہیں لیکن متعلقہ محکمہ کی جانب سے ان بوسیدہ لائنوں کی مرمت ہی نہیں کی گئی ہے ۔مکینوں نے بتایا کہ پانی نظام کو معیاری بنانے کیلئے متعلقہ محکمہ کے ملازمین و اعلیٰ آفیسران سنجیدگی سے کام ہی نہیں کررہے ہیں جس کی وجہ سے عوامی مشکلات میں مزید اضافہ ہو گیا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ پائپ لائنوں کی مر مت نہ ہونے کی وجہ سے اب سپلائی بھی متاثر ہو گئی ہے ۔مقامی معززین و پنچایتی اراکین نے بتایا کہ محکمہ کی نا اہلی کی وجہ سے ان کو کئی کلو میٹر کی پیدل مسافت طے کر کے پینے کا صاف پانی لانا پڑرہا ہے ۔مقامی معززین نے مانگ کرے ہوئے کہاکہ پنچایت میں پینے کا صاف پانی سپلائی کرنے کیلئے متعلقہ حکام و ملازمین کو ہدایت جاری کی جائیں ۔
 
 

مہنگائی کو کنٹرول کرنے کی اپیل 

محمد بشارت 
کوٹرنکہ //سب ڈویژن کوٹرنکہ کے مکینوں نے حکومت کی جانب سے پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں کی گئی کمی کا خیر مقدم کرتے ہوئے مانگ کی کہ کھانے پینے کی اشیاء کی  قیمتوں میں کمی کی جائے تاکہ غریبوں کو سہولیات مل سکیں ۔مقامی لوگوں نے کہا کہ مرکزی حکومت کی جانب سے دیوالی کے موقعہ پر تیل کی قیمتوں میں کمی کر کے مکینوں کو راحت پہنچائی ہے تاہم اس وقت اشیا ء خوردنی کی قیمتوں میں کووڈ کے دور سے ہی اضافہ ہو چکا ہے جس کو کنٹرول کرنے کی جانب کوئی دھیان ہی نہیں دیا جارہا ہے ۔انہوں نے کہاکہ مزدور طبقہ کووڈ کے شروع ہونے کیساتھ ہی بے روز گار ہوا ہے لیکن مہنگائی کی وجہ سے غریبوں کی مشکلا ت ہز گزرتے دن کیساتھ بڑھتی ہی جارہی ہیں ۔سماجی کارکن کبیر راتھر نے کہاکہ مہنگائی نے کمر توڑ دی ہے ۔انہوں نے کہاکہ حکام کی جانب سے بھی قیمتوں کو کنٹرول کرنے کیلئے کوئی عملی قدم نہیں اٹھایا گیا ہے ۔مکینوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ مہنگا ئی کو کنٹرول کرنے کیلئے عملی اقدامات اٹھائے جائیں ۔
 
 
 
 

راجوری میراتھن میں سینکڑوں افراد کی شرکت 

سمت بھارگو 
راجوری //زندگی کے ہر ایک شعبہ سے تعلق رکھنے والے سینکڑوں افراد نے فوج کی جانب سے منعقدہ میراتھن میں شرکت کی ۔ضلع ہیڈ کوارٹر راجوری میں ’فٹ انڈیا ‘کے تحت فوج کے ایس آف سپیڈ ڈویژن کی جانب سے ’میراتھن 2021‘کا اہتمام کیا گیا ۔اس میراتھن ریلی میں 12سو سے زائد افراد نے شرکت کی ۔فوج کی جانب سے میراتھن کو تین زمروں میں منعقد کیا گیا تھا ان میں15کلو میٹر ،10کلو میٹر اور 5کلو میٹر تک کی درجہ بندی کی گئی تھی ۔اس ریلی میں 200سے زائد خواتین اور لڑکیوں نے بھی شرکت کی ۔ ایونٹ کا آغازوارم اپ زومبا سے ہواجس کے دوران راہل اور ان کی ٹیم نے فلیگ آف کیاگیا۔اس کے بعد جاز بینڈ کی پرفارمنس، بھنگڑا، کھکری ڈانس، گتگا، مارشل آرٹ، لیزم ڈانس، ڈاگ شو اور مارشل آرٹس کی نمائش پر مشتمل ایک شاندار ثقافتی پروگرام کا انعقاد کیا گیا۔اس سلسلہ میں منعقدہ تقریب میں فوجی اور بی ایس ایف کے اعلیٰ آفیسران نے شرکت کی ۔میراتھن میں معیاری کارکر دگی کا مظاہرہ کرنے والوں میں 51اعزاز بھی تقسیم کئے گئے ۔
 
 
 

کھنیال کوٹ۔ ڈھوک رابطہ سڑک پر تارکول بچھانے کا مطالبہ

عظمیٰ یاسمین 
تھنہ منڈی // تھنہ منڈی سب ڈویژن کے مکینوں نے کھنیال کوٹ تا ڈھوک رابطہ سڑک پر جلدازجلد تار کول بچھانے کا مطالبہ کیا ہے۔انہوں نے کہاکہ فوری طور پر مذکورہ سڑک پر تار کول بچھانے کا عمل شروع کیا جائے تاکہ مسافروں و ٹرانسپورٹروں کو سہولیات مل سکیں ۔انہوں نے کہاکہ یہ رابطہ سڑک اب بہت پرانی اور کافی مضبوط ہے لہذا اس کی ضروری مرمت کر کے اس پر تارکول بچھانے کا عمل شروع کیا جائے۔ غور طلب ہے کہ سب ڈویژں تھنہ منڈی کے اکثر دیہات میں رابطہ سڑکیں انتہائی خستہ حالی کا شکارہ ہو گئی ہیں جس کی وجہ سے جہاں مکینوں کو مشکلات درپیش ہیں وہیں ٹرانسپورٹروں کو بھی کئی طرح کے مسائل کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ محمد شبیر نامی ایک شخص نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ دیہات میں سڑکیں پیدل چلنے کے قابل بھی نہیں ہیں۔ لہٰذا وقت کی اہم ضرورت ہے کہ علاقہ میں تعمیراتی عمل شروع کیا جائے۔ اس سلسلے میں مکینوں نے بتایا کہ موضع درہ کی طرح ، ڈھوک رابطہ سڑک پر بھی تارکول بچھانے کا عمل شروع کیا جائے۔ مکینوں نے مانگ کرتے ہوئے کہا کہ سڑک پر تار کول کے عمل کو شروع کرنے سے پہلے سڑک کی نالیوں کا بندوبست بھی کیا جائے تاکہ عوام کی زمینوں کو کم سے کم نقصان پہنچے اور عوامی پریشانیوں کا ازالہ ہو سکے۔
 
 
 
 

انجمن جعفریہ سرنکوٹ کی باڈی تحلیل 

سرنکوٹ //ملت جعفریہ سرنکوٹ نے مشترکہ طور پر انجمن جعفریہ سرنکوٹ کی کمیٹی کوغیر آئینی قرار دیتے ہوئے تحلیل کر کے انجمن کے تمام تر اختیارات ضلع سطح کی منتخب 14 رکنی کمیٹی کے حوالے کر دئیے ۔ملت جعفریہ سرنکوٹ کی مختلف انجمنوں جن میں انجمن جعفریہ سانگلہ،انجمن جعفریہ پوٹھہ، انجمن حیدریہ انعام والا سنئی، انجمن انصار المہدی سرنکوٹ اور انجمن سادات نگر سرنکوٹ شامل ہیں، نے مشترکہ طور پر فیصلہ کرکے انجمن جعفریہ سرنکوٹ کو تحلیل کر دیا۔ اس سلسلہ میں ان تمام انجمنوں کی جانب سے 5 نومبر 2021 کو ریزولیشن ایس ڈی ایم سرنکوٹ کے حوالے کی گئی تھی جن کے ذریعہ انتظامیہ کو اس کی اطلاع دی گئی تھی کہ تمام جماعتوں نے باتفاق رائے انجمن جعفریہ سرنکوٹ کی غیر آئینی کمیٹی کو تحلیل کر دیا ہے اور انجمن جعفریہ سرنکوٹ کے تمام تر اختیارات 14 رکنی کمیٹی کو سونپے گئے ہیں۔مذکورہ کمیٹی سے یہ گزارش کی گئی ہے کہ وہ انجمن کی مسخ شدہ املاک کو بازیاب کرکے اسے قومی اثاثہ میں شامل کریں اور اس کے تحفظ کیلئے اقدامات کریں۔ نیز الیکشن کروا کر نئی انجمن کی تشکیل کریںمذکورہ تمام انجمنوں کے اراکین کے ساتھ ساتھ علاقے کے دیگر مومنین نے بھی مشترکہ طور پر ریزولیشن پر دستخط کی مومنین کی طرف سے مزید وضاحت کی گئی کہ تحلیل شدہ انجمن کے عہدے دار غیر شرعی اور غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث تھے جس پر پوری ملت گزشتہ کچھ عرصہ سے سراپا احتجاج تھے۔ 
 
 
 
 
 
 

سرنکوٹ میں محکمہ جل شکتی کی ناقص کارکردگی 

نظام کو بہتر بنا نے و سہولیات فراہم کرنے کی مانگ 

بختیار کاظمی
سرنکوٹ// سرنکوٹ کے متعدد دیہات میں محکمہ جل شکتی کی ناقص کارکر دگی کی وجہ سے لوگوں کو پینے کا صاف پانی کی میسر نہیں ہورہا ہے جبکہ مکینوں نے محکمہ پر الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ گائوں میں بچھائی گئی پاپئیں اب بوسیدہ ہو گئی ہیں جس کی وجہ سے پانی کی سپلائی متاثر ہورہی ہے ۔مکینوں نے بتایا کہ کئی ایک جگہوں پر پاپئیں راستوں میں بچھائی گئی ہیں جس کی وجہ سے لوگوں کی آمد ورفت بھی متاثر ہو رہی ہے ۔انہوں نے بتایا کہ محکمہ کے ملازمین کو جانکاری فراہم کرنے کے باوجود بھی اس طرف کوئی توجہ نہیں دی جارہی ہے ۔پنچایت درہ سانگلہ کی ستر فیصد عوام محکمہ کی عدم توجہی کا شکار ہو ئی ہے ۔پنچایت کے مکینوں نے بتایا کہ درہ سانگلہ پانی کے قدرتی وسائل سے مالا مال ہونے کے باوجود بھی لوگوں کو پینے کے صاف پانی سپلائی ہی نہیں کیا جارہا ہے ۔اسی طرح سانگلہ لوہر ،گونتھل ،ڈہنہ لوہر ،پمروٹ ،کلر کٹل ودیگر علاقوں میں پانی کے بوسیدہ نظام کی وجہ سے عام لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔مقامی لوگوں نے ضلع انتظامیہ پونچھ سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ لوگوں کو پینے کا صاف پانی فراہم کرنے کیلئے محکمہ کو متحرک کیا جائے ۔
 
 
 
 
 
 
 

پونچھ میں ریت بجری مافیا کیخلاف کارروائی 

ڈی ایم او نے 2جے سی بی مشینیں ضبط کرلی 

حسین محتشم
پونچھ//ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ اندرجیت جی کی ہدایت پر ڈی ایم او پونچھ جاوید اقبال کھٹانہ نے سخت کارروائی کرتے ہوئے گائوں شیندرہ سے کان کنی کے لئے استعمال کی جا رہی دو جے سی بی ضبط کیں۔ غیر قانونی کان کنی میں مقامی لوگوں نے ڈی ایم او پونچھ جاوید اقبال کھٹانہ کی کاوشوں کو سراہا تے ہوئے کہا کہ کان کنی پر قدغن لگانا نہایت اہم ہے۔ انہوں نے کہا کان کنی کی وجہ سے وہ لوگ پہلے ہی بہت زیادہ نقصان اٹھا چکے ہیں کیونکہ اس وجہ سے علاقہ کے کئی نوجوان دریا میں ڈوب کر موت کا شکار بن گئے اب وہ مزید نقصان برداشت نہیں کرسکتے۔ اسی سلسلہ میں خ بات کرتے ہوئے ایڈوکیٹ اجیت ورما چیئرمین نواپونچھ نے کہا پونچھ کے لوگ بہت خوش قسمت ہیں کہ ایک کہ ایک مخلص اور قابل ڈپٹی کمشنر اور ایک ایماندار ڈسٹرکٹ مائننگ آفیسر پونچھ میں تعینات ہیں۔ انہوں نے کہا یہ افسر غیر قانونی کان کنی کو روکنے کیلئے کوئی کسر نہیں چھوڑ رہے ہیں۔ انہوں نے ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ سے مزید درخواست کی کہ وہ کان کنی میں ملوث بڑی مچھلیوں کو پکڑیں جیسے کہ قصبے کے آس پاس میں کام کرنے والے غیر قانونی کرشر۔ نوجوت شرما (ایڈووکیٹ) نامی سماجی کارکن نے کہا کہ اگرچہ ڈی ایم او پونچھ دن کے وقت غیر قانونی لعنت کو روکنے کے لیے اپنی سطح پر پوری کوشش کر رہے ہیں لیکن ریت بجری مافیا رات میں کام کرتے ہیں اور اس میں بھی کچھ سرکاری افسران کی شمولیت ہوتی ہے۔انہوں نے رات کے وقت غیر قانونی لعنت کو چیک کرنا پر زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ انہیں قابل ڈپٹی کمشنر پونچھ سے بہت امیدیں ہیں کیونکہ انہوں نے اپنی صلاحیت کا مظاہرہ کیا ہے اور پونچھ کے لوگوں کے لئے انتھک محنت کر رہے ہیں۔
 
 
 
 
 

ساوجیاں میں ٹاٹا سومو حادثہ ،1زخمی 

حسین محتشم
مینڈھر//پونچھ ضلع کی تحصیل منڈی میں ہوئے ایک سڑک حادثے میں ایک لڑکی زخمی ہوگیا ۔منڈی سے ساوجیاں کی طرف جانے والی ایک ٹاٹا سومو زیر نمبر1548-JK12سندری نالہ پر ڈرائیور کے کنٹرول سے باہر ہو کر حادثے کا شکار ہو گئی جس کے نتیجے میں ایک لڑکی زخمی ہوگئی ۔اس کی شناخت شاہین اختر دختر ممتاز احمد عمر 18برس کے طور پر ہوئی ہے جس کو علاج معالجہ کیلئے پرائمری ہیلتھ سنٹر ساوجیاں منتقل کر دیا گیا ۔ڈاکٹروں نے بتایا کہ زخمی لڑکی کی حالت مستحکم ہے جبکہ اس کا علاج معالجہ کیاجارہاہے ۔
 
 
 
 
 

نوجوانوں کی پیپلز کانفرنس میں شمولیت

حسین محتشم
پونچھ//پونچھ میں جموں و کشمیر پیپلز کانفرنس کے سینئر لیڈر ریدھم سنگھ کی قیادت میں منعقدہ ایک تقریب کے دوران ضلع پونچھ سے تعلق رکھنے والے نوجوان سیاسی کارکنان نے پیپلز کانفرنس میں شمولیت اختیار کی۔ ردھم پریت سنگھ اور دیگر پرٹی کارکنان نے استقبال کرتے ہوئے کہا کہ پارٹی کے دروازے سبھی افراد کیلئے کھلے ہیں۔انہوں نے ردھم پریت سنگھ کو کامیاب سیاسی و سماجی کارکن قرار دیتے ہوئے کہا کہ موصوف نے بنیادی سطح سے اپنے سیاسی کیرئیر کی شروعات کی۔ انہیں سیاست ہماری طرح وراثت میں نہیں ملی بلکہ انہوں نے کافی محنت و مشقت اور عوامی خدمات انجام دیکر اپنے علاقے میں اونچا مقام حاصل کیا ہے۔ردھم پریت نے دعویٰ کیا کہ مختلف سیاسی رہنما اور کرکنان پیپلز کانفرنس میں شمولیت اختیار کر رہے ہیں اور ان کی پارٹی عنقریب  ایک بڑی سیاسی جماعت کے طور پر سامنے آئے گے۔
 
 
 
 

درہ میں او بی سی تنظیم کے اراکین کا اجلاس 

عظمیٰ یاسمین
 تھنہ منڈی // سب ڈویژں تھنہ منڈی کے درہ علاقے میں او بی سی ممبران کی ایک اہم میٹنگ منعقد ہوئی جس میں او بی سی کے ضلع صدر محمد سعید نجار اور ضلع سیکریٹری محمد افضل کے علاوہ دیگر کئی ممبران نے شرکت کی۔ محمد سعید نجار کی صدرات میں منعقد ہوئی میٹنگ کے دوران او بی سی طبقہ کے مسائل پر تفصیلی بات چیت کی گئی۔ اس اجلاس میں تمام اراکین نے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ مرکزی حکومت او بی سی طبقہ کے مسائل کو حل ہی نہیں کررہی ہے جبکہ کئی ایک معاملات میں طبقہ کو یکسر نظرانداز کیاجارہا ہے۔انہوں نے کہاکہ طبقہ کو ابھی تک 27فیصد ریزرویشن سے دور رکھا گیا ہے جس کی وجہ سے سماج کے پسماندہ طبقہ کے لوگوں کی فلاح و بہبو د میں رکاوٹیں پیدا ہو گئی ہیں۔انہوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ اس پسماندہ طبقہ کے مسائل کے ساتھ ساتھ ان کی تمام مانگیں جلدازجلد پوری کی جائیں جن کا ان کے ساتھ برسوں سے وعدہ کیا جا رہا ہے۔اس اجلاس میں محمد سعید، محمد افضل، محمد منشی، عبدالرشید، محمد بشیر اور محمد شبیر کے علاوہ دیگر کئی لوگوں نے شرکت کی۔
 
 
 

گردوارہ دکھ نوارن درہ میں سالانہ گرمت سماگم کا انعقاد

حسین محتشم
پونچھ// گرودوارہ دکھ نوارن درہ پونچھ میں گردوارہ کے یوم تاسیس کے موقعہ پر ایک بڑے گرمت سماگم کا انعقاد کیا گیا۔اس موقع پر سینکڑوں کی تعداد میں عقیدت مندوں نے شرکت کی،وہیں سماگم میں بیرون ریاست سے بھی جتھوں نے شرکت کر شبد کیرتن پیش کیا۔اس موقع پر سنگھ پرچارکوں نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ گرو گرنتھ صاحب کے دکھائے ہوئے راستے کی پیروی کریں۔اس موقع پر موجود ایڈوکیٹ راجندر سنگھ نے کہا کہ یہ سالانہ تقریب گردوارہ کے یوم تاسیس کے سلسلے میں ہر سال کی طرح اس بار بھی منعقد کی جا رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ اس تقریب میں پونچھ کے علاوہ دوسرے اضلاع اور بیرون جموں کشمیر سے لوگ شرکت کر کے اظہار عقدت کر رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ گردوارہ کی انتظامیہ کمیٹی کی جانب سے بھی تمام شرکاء کیلئے کہ لنگر کا اہتمام کیا گیا ہے۔
 
 
 
 

بجلی کا کرنٹ لگنے سے1زخمی 

راجوری //راجوری ضلع ہیڈ کوارٹر پر اتر پردیش کا ایک شہری کو بجلی کے کرنٹ لگنے کے بعد ہسپتال داخل کروایا گیا ہے ۔مقامی ذرائع نے بتایا کہ ضلع ہیڈکوارٹر کے ورکشاپ پل کے نزدیک کرایہ کے کمرے میں رہائش پذیر یوپی کے ایک شہری کو اچانک بجلی کے کرنٹ لگے جس کی وجہ سے وہ شدید زخمی ہو گیا ۔زخمی کی شناخت 28سالہ نعیم علی ولد ابرار حسین سکنہ رام پور اتر پردیش کے طورپر ہوئی ہے ۔جموں وکشمیر پولیس نے بتایا کہ مذکورہ شخص ایک کرایہ کے مکان میں رہائش پذیر تھا جہاں اس کو کئی کرنٹ لگے اور اس کو زخمی حالت میں گور نمنٹ میڈیکل کالج راجوری داخل کروا دیا گیا ہے جہاں پر اس کی حالت تشویش ناک بتائی جارہی ہے ۔
 
 
 
 

منشیات کے مضر اثرات پر بیداری کیمپ 

راجوری //سرحدی ضلع پونچھ کے مڑہوٹ علاقہ میں فوج کی جانب سے منشیات کے مضر اثرات پر ایک بیداری کیمپ کا اہتمام کیاگیا جس کے دوران فوجی آفیسران نے مقامی نوجوانوں کو منشیات کے مضر اثرات کے سلسلہ میں تفصیلی طورپر بیدار کیا ۔فوجی آفیسران نے بتایا کہ اس وقت سماج میں مختلف نوعیت کی برائیاں پھیل رہی ہیں تاہم نوجوانوں کا منشیات کی جانب بڑھتا ہوا رجحان انتہائی تشویش ناک ہے ۔انہوں نے کہاکہ نوجوان ملک کا اثاثہ ہیں جبکہ ان کو چاہئے کہ وہ منشیات کے بجائے ملکی تعمیر و ترقی میں اپنا رول ادا کریں ۔انہوں نے کہاکہ نوجوانوں کو چاہئے کہ وہ پڑھائی کیساتھ ساتھ کھیلوں کی جانب راغب ہو کر ملک اور اپنے والدین کا نام روشن کریں ۔