مزید خبریں

کوٹرنکہ میں ہوئے مشکوک دھماکوں کا معاملہ  | پہلے دھماکے کے بعد پولیس کے فوری ردعمل نے لوگوں کی جانیں بچائی

سمت بھارگو 
راجوری//ایک ایسے وقت میں جب انٹیلی جنس ایجنسیوں اور تفتیش کاروں کو ہفتے کی شام کوٹرنکہ ٹاؤن میں ہونے والے دوہرے دھماکوں کے واقعے کی تحقیقات میں ابھی تک کوئی ٹھوس سراغ نہیں ملا ہے، سول سوسائٹی کے ساتھ ساتھ سیکورٹی سیٹ اپ نے کنڈی پولیس اسٹیشن کے فوری ردعمل کا خیرمقدم کیا ہے۔یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ یہ دوہرے دھماکے راجوری ضلع کے کوٹرنکہ قصبے میں ہفتہ کی شام کو کم ہی وقت کے درمیان ہوئے، ان دھماکوں میں وقت پر قابو پانے والے آلات کے استعمال کا شبہ ظاہر کیا جا رہا ہے جبکہ یہ پتہ لگایا جا رہا ہے کہ پہلا دھماکہ یہ محض سیکورٹی فورس کے اہلکاروں کو موقع پر لانے اور دوسرے دھماکے کے ذریعے جانی نقصان پہنچانے کا جال تھا۔اس واقعے کی اعلیٰ سطحی تحقیقات جاری ہیں اور تکنیکی ٹیموں کے ذریعے موقع سے برآمد ہونے والے کچھ مواد کو جانچ کے لئے بھیج دیا گیا ہے لیکن ابھی تک کوئی بڑی پیش رفت نہیں ہوئی ہے۔ سرکاری ذرائع نے بتایاکہ یہ دھماکے ادھم پور قسم کے دھماکے کی طرز پر ہی کیا گئے ہیں کیونکہ پھٹنے کے لیے کوئی سپلنٹ استعمال نہیں کیا گیا ہے تاہم ان کا کہنا تھا کہ سول سوسائٹی، فوج، پولیس اور دیگر انٹیلی جنس ایجنسیوں نے واقعے کے دوران تھانہ کنڈی کے پولیس اہلکاروں کی جانب سے دکھائے گئے فوری ردعمل کو بڑے پیمانے پر سراہا ہے۔سرکاری ذرائع نے بتایا’پہلے دھماکے کے بعد بڑی تعداد میں لوگ اور سیکورٹی فورس کے اہلکار دھماکے کے بارے میں پوچھ تاچھ کیلئے موقع پر جمع ہوگئے لیکن اسی وقت ایس ایچ او حبیب پٹھان کی سربراہی میں تھانہ کنڈی کی ایک ٹیم نے علاقے کی کلیئرنس کا الارم بجایا اور لوگوں کو مجبور کیاجبکہ انہوں سڑک کو کم ہی وقت میں بند کر کے پورا علاقہ خالی کروالیا گیا ۔ان کا کہنا تھا کہ پولیس ٹیم کے علاقے کو خالی کرانے کے چند سیکنڈ بعد اور علاقے کی صفائی کیلئے بم اسکواڈ کو بلایا گیا کہ دوسرا دھماکہ ہوا۔انہوں نے بتایاکہ ’پولیس ٹیم کی فوری کارروائی کی وجہ سے ہی دوسرے دھماکے میں کوئی جانی یا مالی نقصان نہیں ہوا۔ان کا کہنا تھا کہ بصورت دیگر بڑا نقصان ہو سکتا تھا کیونکہ دوسرے دھماکے کی شدت زیادہ تھی۔فوج، پولیس اور دیگر انٹیلی جنس ایجنسیوں کا ہر افسر معائینہ کیلئے جائے وقوعہ کا دورہ کر رہا ہے، کنڈی تھانے کے پولیس اہلکاروں کے ردعمل کا خیر مقدم کر رہا ہے جبکہ تمام پولیس اداروں کو ہدایت جاری کی گئی ہے کہ وہ ایسے واقعے کی صورت میں ایک ہی پروٹوکول پر عمل کریں۔
 
 

نوشہرہ میں ایک شخص کی لاش برآمد

راجوری//نوشہرہ سب ڈویژں کے دھنکا گائوں میں پیر کی صبح ایک اڑتیس سالہ شخص پراسرار طور پرمردہ پایا گیا جس کی لاش درخت کے ساتھ لٹکی ہوئی ملی۔مرنے والے کی شناخت سریش کمار ولد جگدیش چندرسکنہ نوشہرہ دھنکا کے طور پر ہوئی ہے۔پولیس نے بتایا کہ پیر کی صبح متوفی کی لاش گھر کے قریب درخت کے ساتھ لٹکی ہوئی ملی جس کے بعد مقامی تھانے کی پولیس کی ٹیم نے موقع پر پہنچ کر لاش کو اپنے قبضے میں لے لیا۔پولیس کا کہنا ہے کہ قانونی کارروائی کی گئی ہے اور معاملے کی تحقیقات جاری ہے۔
 
 

مینڈھر فیسٹ 2022 اختتام پذیر

جی او سی وائٹ نائٹ کور نے نوجوانوں کی حوصلہ افزائی کی 

جاوید اقبال 
مینڈھر //فوج کی جانب سے ’مینڈھر کلچرل فیسٹ ۔22' کے نام سے منعقدہ 2روزہ میگا کلچرل فیسٹیول پیر کو اختتام پذیر ہوا جس کے آخری دن جنرل آفیسر ان کمانڈنگ وائٹ نائٹ کور تقریب کے مہمان خصوصی تھے۔اس میلے کا اہتمام ایس آف سپیڈز ڈویژن کے زیراہتمام فوج کی بھمبر گلی بریگیڈ نے کیا ہے۔فوج نے کہا کہ اس تقریب کا انعقاد نوجوانوں کی حوصلہ افزائی اور مقامی آبادی کو خطے میں ثقافتی رونق کو منانے کیلئے سہولت فراہم کرنے کے مقصد سے کیا گیا تھا۔ ایس آف سپیڈز ڈویژن نے اسکولوں اور کالجوں کے نوجوانوں کو اپنی صلاحیتوں کا مظاہرہ کرنے،کھیلوں کو فروغ دینے اور روزگار کے مختلف مواقع کے بارے میں بیداری پھیلانے کے لیے ایک پلیٹ فارم فراہم کرنے کیلئے منفرد پہل کی۔میگا کلچرل فیسٹیول کے آخری دن لیفٹیننٹ جنرل منجندر سنگھ، جی او سی وائٹ نائٹ کور نے اعلیٰ فوجی عہدیداروں اور سول انتظامیہ کے معززین کی موجودگی میں اس موقع پر شاندار استقبال کیا۔کور کمانڈر کے ساتھ میجر جنرل راجیو پوری جی او سی سپیڈس ڈویژن کے آفیسرسول انتظامیہ کے معززین اور خطے کے تینوں ڈگری کالجوں کے پرنسپل بھی تھے۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے لیفٹیننٹ جنرل منجندر سنگھ نے پونچھ کے سرحدی علاقے میں ہنر کے اس شاندار مظاہرہ کیلئے نوجوانوں اور مقامی لوگوں کی تعریف کی۔ انہوں نے اجتماع کو یقین دلایا کہ ہندوستانی فوج خطے میں امن اور خوشحالی کیلئے شہری آبادی کی امنگوں کے ساتھ ہمیشہ مضبوطی سے کھڑی ہے۔انہوں نے نوجوانوں کو اپنے مستقبل کو محفوظ بنانے کیلئے سخت محنت کرنے کی ترغیب دی اور انہیں منشیات کے استعمال اور ملک دشمن عناصر کی طرف سے پھیلائے جانے والے پروپیگنڈے سے ہوشیار رہنے کی تلقین کی۔انہوں نے مزید کہا کہ ہم سب پرعزم ہیں اور خطے میں امن اور خوشحالی کے سازگار ماحول کو برقرار رکھنے کیلئے مل کر کام کرتے رہیں گے۔
 
 

وائس چانسلرBGSBUنے مختلف شعبوں کا دورہ کیا 

راجوری//بابا غلام شاہ بادشاہ یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر اکبر مسعود نے پیر کو یونیورسٹی کے مختلف شعبوں کا دورہ کیا اور طلباء ، ریسرچ اسکالرز، فیکلٹی اور غیر تدریسی عملے سے بات چیت کی۔اپنے دورے کے دوران پروفیسر اکبر نے کیمپس میں موجودہ تعلیمی اور بنیادی ڈھانچہ کے منظر نامے اور یونیورسٹی میں تعلیمی زندگی میں بہتری کے مستقبل کے امکانات کا جائزہ لیا۔وائس چانسلر نے طلباء اور اسکالرز کو مشورہ دیا کہ وہ بی جی ایس بی یونیورسٹی کے معیار اور اقدار کو مزید بہتر بنائیں۔موصوف نے طلباء ، اسکالرز اور فیکلٹی ممبران کو بی جی ایس بی یو کو سیکھنے، ترقی اور قوم کے مستقبل کے معماروں کو تیار کرنے کیلئے ایک متحرک جگہ بنانے کے لئے کسی بھی تجویز اور کوشش کیلئے مکمل تعاون کا یقین دلایا۔وائس چانسلر نے طلباء کو مشورہ دیا کہ وہ اپنے وقت کا بہترین استعمال کریں اور اپنے مطالعہ کے شعبوں میں بہترین کارکردگی کے حصول کے لیے کیمپس میں دستیاب سہولیات سے فائدہ اٹھائیں۔انہوں نے ریسرچ اسکالرز پر زور دیا کہ وہ بنی نوع انسان کے زیادہ سے زیادہ فائدے کے لیے مطالعہ کے جدید ترین شعبوں میں جدید تحقیق کے ساتھ آئیں۔اس موقع پر پروفیسر اکبر مسعود نے کہا کہ BGSBU عالمی معیارات کے مطابق معیاری تدریس اور تحقیق میں سب سے آگے رہنے کے لیے مسلسل کوشاں ہے۔مختلف شعبہ جات کے سربراہان نے وائس چانسلر کو جاری تعلیمی و تحقیقی سرگرمیوں اور طلباء کو فراہم کی جانے والی سہولیات کے بارے میں آگاہ کیا۔اس موقع پر وائس چانسلر کے ہمراہ ڈین اکیڈمک افیئرز پروفیسر اقبال پرویز، ڈین آف ایجوکیشن پروفیسر جی ایم ملک ودیگران بھی موجود تھے ۔
 
 

سرنکوٹ میں مارکیٹ کا معائینہ کیا گیا 

بختیار کاظمی
سرنکوٹ//ایس ڈی ایم سرنکوٹ نعیم النساء کی ہدایت پر اے سی ایف پونچھ کی نگرانی میں فوڈ سیفٹی افسران کی ایک ٹیم نے سرنکوٹ کے بازار کی چیکنگ کی جس کے دوران ٹیم کی جانب سے دکانوں پر فروخت ہونے والے ساز و سامان کا معائینہ کیا جبکہ غیر قانونی عمل میں ملوث تاجروں و ریڑی فروشوں کو انتباہ بھی دیا گیا ۔اس دوران لفافے بھی ضبط کئے گئے جبکہ دو چالان کرنے کیساتھ ساتھ دکانداروں کو ہدایت جاری کی گئیں کہ وہ قانون پر سختی کیساتھ عمل کریں تاہم غیر قانونی عمل میں ملوث افراد کیخلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی ۔دوسری جانب صارفین نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ قصبہ میں رمضان سے قبل ہر ایک اشیاء کامعائینہ کیا جائے جبکہ قاعدہ کیخلاف کام کرنے والوں کیخلاف کارروائی بھی عمل میں لائی جائے ۔ 
 
 

آنگن واڑی ورکرز و ہیلپرز 9ماہ سے تنخواہ سے محروم 

بختیار کاظمی
سرنکوٹ// سرنکوٹ میں آنگن واڑی شعبہ میں کام کرنے والی ہیلپرز اور ورکرز گزشتہ نو ماہ سے تنخواہ سے محروم ہیں جس کی وجہ سے ان کو کئی طرح کے مسائل کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔ان ورکروں نے بتایا کہ وہ گزشتہ کئی ماہ سے کووڈ ویکسین کیلئے کام کررہے ہیں لیکن انتظامیہ کی جانب سے ان کو تنخواہ ہی فراہم نہیں کی جارہی ہیں ۔غور طلب ہے کہ محکمہ صحت کی جانب سے مذکورہ ورکروں کی مدد سے دیہاتوں و دیگر دور دراز علاقوں میں جا کر کووڈ ویکسین لگانے کا عملی بنیادوں پر کام کیا ہے ۔ان آنگن واڑی ورکروں نے بتایا کہ اس شعبہ سے منسلک دیگر ملازمین کو انتظامیہ کی جانب سے اضافی مشاہرہ بھی دیا گیا ہے لیکن مذکورہ ورکروں کو پہلے سے دی جارہی تنخواہ بھی نہیں دی جارہی ہے ۔انہوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ آئندہ ماہ رمضان سے قبل ہی ان کو تنخواہ فراہم کی جائے تاکہ ان کی مشکلات کم ہو سکیں ۔
 
 
 

 جامعہ حنفیہ نظامیہ حنفی نگر ایتی میں یک روزہ کانفرنس کا انعقاد 

عظمیٰ یاسمین
 تھنہ منڈی// تحریکِ امن واصلاح جموں و کشمیر کے بینر تلے معروف دینی درسگاہ جامعہ حنفیہ نظامیہ حنفی نگرایتی راجوری میں یک روزہ عظیم الشان سراج الامہ کانفرنس کا انعقاد کیا گیا۔ کانفرنس سائیں عبدالرشید سجادہ نشیں خانقاہ عالیہ سائیں گنجی بادشاہ علیہ الرحمتہ اللہ علیہ کی سرپرستی اور سرپرست جامعہ حنفیہ نظامیہ حنفی نگر ایتی راجوری و تحریکِ امن و اصلاح کے صوبائی صدر مولانا مفتی عبدالرؤف نعیمی کی صدارت میں منعقد ہوئی۔ مہمانِ خصوصی علامہ قاری سخاوت حسین مرادابادی نے اپنے بصیرت افروز بیان میں مدارسِ اسلامیہ کا تاریخی رول اور پسِ منظر بیان کرتے ہوئے کہا کہ اگر امن و شانتی مودت،محبت،سخاوت، عدالت، صداقت اور معاشرے کی اصلاح چاہتے ہو تو دینی اداروں کو مضبوط کریں اور ان میں زیر تعلیم طلباء اور اساتذہ کی ہمت افزائی اور مالی معاونت بھی کریں۔ انھوں نے امام اعظم ابوحنیفہ علیہ الرحمتہ کی حیاتِ کے چند گوشوں کا ذکر کر کے یہ ثابت کیا کہ دین کے ادارے اور دین کا کام خلوص وللہیت چاہتا ہے۔ کانفرنس میں جن دیگر علمائے کرام نے خطاب کیا ان میں مولانا قاری شبیر احمد نوری صدر تحریکِ امن واصلاح ضلع جموں و خطیب جامع مسجد کریانی تالاب جموں اور مولانا پیر سید وارد حسین شاہ مشہدی صدر تحریکِ امن واصلاح ضلع راجوری قابلِ ذکر ہیں۔ علماء و مشائخ نے ادارہ کے سرپرست علامہ مفتی عبدالرؤف کو مبارکباد قابل محنتی ذی استعداد اور تجربہ کار اساتذہ کے انتخاب پر مبارکباد پیش کی جو ادارہ کی تعمیر و ترقی، تعلیم وتربیت اور تصنیف و تالیف کو بام عروج تک پہنچانے میں سرگرم عمل ہیں۔جس کے نتیجے میں تقریباً 18طلبہ نے فراغت کی دہلیز پرپہنچ کر علماء کرام اور زعماء کے ہاتھوں دستار و اسناد حاصل کیں۔ کانفرنس میں سینئر سیاستدان شبیر احمد خان اور مونسپل کمیٹی کے ضلعی صدر عارف جٹ اورکئی اہم سیاسی وسماجی شخصیات کے علاوہ مولانا محمد یونس اشفاقی نائب صدر تحریک ہذا صوبہ جموں، مولانا محمد افضل نعیمی جنرل سکریٹری ضلع راجوری تحریک ہذا ، قاری انوار احمد نقشبندی ، حافظ محمد سلیم پلمہ، مولانا اسحاق رضوی خطیب وامام جامع مسجد پٹھیاں، مولانا قاری وجاہت حسین استاذ دارالعلوم رضویہ اشرفیہ ایتی، مولانا ریاضت علی نعیمی تتہ پانی، مولانا نجم الدین شاہدرہ شریف ، مولانا حافظ عبدالمجید، قاری عبدالماجد نعیمی، مولانا ساجد رضا ،مولانا اسلم ، مولانا حافظ رفیع،مولانا گلزار احمد منجا کوٹ، مولوی فرید ،مولانا خادم حسین مولانا آصف رضا اور حافظ آصف میر علیگ ناظم جامعہ محمدیہ راحت العلوم درہال ملکاں وغیرہ نے بھی شرکت کی۔ صدارتی خطبہ میں جامعہ حنفیہ نظامیہ حنفی نگر ایتی راجوری و صوبائی صدر تحریکِ امن واصلاح جموں وکشمیر مولانا مفتی عبدالرؤف نعیمی امن و بھائی چارگی کا خصوصی درس دیتے ہوئے شریک بزم تمام معزز مہمانوں کا شکریہ ادا کیا۔ مفتی محمد عارف القادری ناظم تعلیمات جامعہ ہذا و مولانا محمد ظفر القادری الرضوی جنرل سکریٹری تحریک ہذا نے یکے بعد دیگرے احسن طریقے سے نظامت کے فرائض انجام دئے۔
 
 

الکوثر فلاح ملت ٹرسٹ کی جانب سے مستحقین میں امداد تقسیم

 عشرت حسین بٹ
منڈی// تحصیل منڈی کے دھڑہ فتح پور علاقہ میں قائم ملی فلاحی تنظیم ’الکوثر فلاح ملت ٹرسٹ‘کی جانب سے زیر علاقہ کے مستحقین میں امداد تقسیم امداد کے پہلے دھڑہ، فتح پور کی بیواؤں یتیموں اور غریبوں میں اشیاء خردونوش تقسیم کی گئیں اورآئندہ بھی منتظمین کی جانب سے اس امدادی سلسلے کو جاری رکھنے کاعہدکیا گیا۔ اس حوالے سے ’فلاح ملت ٹرسٹ‘کے سرپرست اور مدرسہ زینت الاسلام دھڑہ فتح پور کے منتظمین نے بتایاکہ معاونین کے تعاون سے چلنے والا یہ فلاح ملت ٹرسٹ جس کے زیر اہتمام متعدد شعبہ جات پر کام کیاجاتاہے جس میں ایک شعبہ خدمت خلق بھی ہے جس کے تحت غریبوں بیواؤں یتیموں کو جہاں امداد کے ذریعہ مدد کی جاتی ہے وہیں پر یہ ادارہ غریب یتم اور بے سہارابچوں کو تعلیم کے زیور سے آراستہ کرنے میں بھی پیش پیش ہے اور موقہ برموقہ ان بچوں میں کتابیں وردیاں اور سکولی بیگ وغیرہ تقسیم کئے جاتے ہیں اسی سلسلہ کی ایک کڑی تھی دھڑہ میں غریب بیواہوں اور مسکینوں میں امداد تقسیم کی گئی ۔انہوں نے لوگوں سے اس موقہ پر گزارش کی کہ وہ فلاح ملت ٹرسٹ کا بھر پور تعاون کریںتاکہ آ ئندہ بھی یہ سلسلہ جاری رکھا جاسکے۔
 

قصبہ سرنکوٹ میں نصب سٹریٹ لائٹس خراب | رمضان سے قبل ہی مشینری کی مرمت کا مطالبہ 

بختیار کاظمی
سرنکوٹ// میونسپلٹی سرنکوٹ کی طرف سے مین بازار میں نصب 26 لائٹوں میں سے محض 6 لائٹیں ہی کام کر رہی ہیں جس میں سے آٹھ بڑی سٹریٹ لائٹیں جو عرصہ دراز سے بند پڑی ہیںاور اٹھارہ چھوٹی لائٹیں شامل ہیں ۔مقامی ذرائع نے بتایا کہ انتظامیہ کی جانب سے سرنکوٹ سب ڈویژن ہسپتال ،پولیس سٹیشن اور سب جج سرنکوٹ کے کوارٹر کے سامنے نصب کردہ لائٹیں بھی خراب پڑی ہوئی ہیں جن کی مرمت کیلئے ابھی تک انتظامیہ کی جانب سے کوئی عملی قدم نہیں اٹھایا گیا ہے ۔مکینوں نے بتایا کہ انتظامیہ کی جانب سے عوامی سہولیت کیلئے اہم مقامات اور کئی اداروں کے مین گیٹ پر نصب کردہ سٹریٹ لائٹس بھی خراب پڑی ہوئی ہیں جبکہ بجلی دفتر سے لے کر بس سٹینڈ سرنکوٹ تک نصب کردہ سبھی لائٹیں خراب پڑی ہوئی ہیں جس سے انتظامیہ و متعلقہ شعبہ کی محنت و لگن کا اندازہ لگایا جاسکتا ہے ۔مقامی لوگوں نے کہاکہ اب جب رمضان کی آمد کو کچھ ہی دن باقی بچے ہوئے ہیں ،متعلقہ محکمہ کو ہدایت جاری کی جائیں تاکہ سٹریٹ لائٹس کی جلدازجلد مرمت کر کے روزہ داروں اور نمازیوں کو سہولیات میسر ہو سکیں ۔
 

چک بنولہ میں ہینڈ پمپ نصب کیا گیا 

جاوید اقبال 
مینڈھر //ضلع ترقیاتی کونسل پونچھ کے وائس چیئر مین انجینئر محمد اشفاق چوہدری نے مینڈھر سب ڈویژن کے چک بنولہ علاقہ میں ایک ہینڈ پمپ کا افتتاح کیا ۔اس موقعہ پر موصوف کے ہمراہ مقامی معززین کیساتھ ساتھ پنچایتی اراکین بھی بڑی تعداد میں موجود تھے ۔اس موقعہ پر بولتے ہوئے وائس چیئر مین نے کہاکہ عوامی مشکلات کو دیکھتے ہوئے مذکورہ علاقہ میں ہینڈ پمپ نصب کیا گیا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ اس سے قبل بھی مینڈھر کے کئی علاقوں میں عوامی سہولیات و پانی کی قلت کو دور کرنے کیلئے ہینڈ پمپ نصب کئے گئے ہیں جبکہ آئندہ بھی اس عمل کو مسلسل جاری رکھا جائے گا ۔مقامی لوگوں نے موصوف کی تعریف کرتے ہوئے امید ظاہر کی کہ جلدازجلد اس طرح کے اقداماٹ اٹھا ئے دیگر علاقوں میں بھی عوامی مسائل کو ترجیح بنیادوں پر حل کیا جائے گا ۔
 
 

شمشان گھاٹ سڑک کی تعمیر مکمل کرنے کا مطالبہ

حسین محتشم
پونچھ// سرحدی ضلع پونچھ کے سرحدی حلقہ پنچایت جھلاس لوہر میں مین روڈ تا شمشان گھاٹ وارڈ نمبر5 کی سڑک کا تعمیری کام مکمل نہ کئے جانے پر مقامی لوگوں نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے حکومت اور ضلع انتظامیہ سے فوری سڑک کی تعمیر مکمل کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ مقامی لوگوں کے مطابق علاقہ کے سینکڑوں مکینوں کو کئی طرح کی پریشانیوں کاسامنا ہے۔ مقامی لوگوں کے مطابق بارہا متعلقہ محکمہ کے افسروں سے اپیل کرنے کے باوجود اس سڑک کی تعمیر مکمل نہیں ہو رہی ہے۔ وارڈ نمبر 5 کے مقامی سعید محمد، محمد کبیر، کیتن بالی،سرفراز احمد اور محمد اکرم نے ضلع ترقیاتی کمشنرپونچھ اندر جیت سے پرزور اپیل کی کہ وہ مین روڈ تا شمشان گھاٹ وارڈ نمبر5 کیلئے کھودی گئی اس سڑک کا کام مکمل کروائیں۔انہوں نے کہا کہ یہ سڑک تباہ و برباد ہو چکی ہے۔ جس کی وجہ سے مقامی لوگ خصوصاً سکول جانے والے طلباء ، خواتین اور بزرگ عذاب میں مبتلا رہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ متعلقہ محکمہ کے افسران سے ایک بار پھر مطالبہ کرتے ہیں کہ خدارا اس سڑک کو فی الفور بنانے کا کام شروع کیا جائے۔ انہوں نے انتباہ دیا کی اگر سڑک کی تعمیر مکمل نہ کی گئی تو علاقہ کے لوگ احتجاج کرنے پر مجبور ہوجائیں گے۔
 

سرکاری عمارت میں پٹوار خانہ قائم،نائب تحصیلدار بھینچ کی سراہنا

حسین محتشم
پونچھ//پونچھ کے گائوں بھینچ میں نائب تحصیلدار انمول سنگھ کی جانب سے عوام کی سہولت کے لئے گورنمنٹ مڈل اسکول کی ایک پرانی عمارت میں پٹوارخانہ قائم کیاہے جسکا مقامی عوام نے استقبال کرتے ہوئے مسرت کا اظہار کیا ہے۔ واضح رہے کہ گائوں میں عرصہ دراز سے پٹوار خانہ نہ ہونے کی وجہ سے لوگوں کو ضروری نقول کے لئے کئی طرح کی دقتوں کا سامنا کرنا ہڑتا تھا۔ پٹواریوں کوبھی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا تھا، لوگوں کی پریشانیوں کو دیکھتے ہوئے نائب تحصیلدار نے خالی پڑی اسکول کی ایک پرانی عمارت میں مقامی لوگوں کی سہولت کے لئے پٹوارخانہ قائم کیا ہے جس پر وہاں کے مقامی لوگوں نے ان کا شکریہ ادا کیا ہے۔انہوں نے اس سلسلہ میں اساتذہ کی مداخلت پر شدید برہمی ظاہر کرتے ہوئے ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ اندرجیت سے اپیل کی ہے کہ وہ نائب تحصیلدار کے اس اقدام کی مخالفت کرنے والوں کو ہدایت کریں کہ وہ نائب تحصیلدار کے اس اقدام جو انھوں نے عوام کی بہتری اور سہولیات کے لئے اٹھایا ہے میں خلل نہ ڈالیں۔