مزید خبریں

ضلع کو منشیات سے پاک و صاف بنانے کیلئے انتظامیہ سرگرم | ٹھاٹھری جنگلواڑ میں پوست کے سینکڑوں پودے تباہ

اشتیاق ملک 
ڈوڈہ// ڈوڈہ ضلع کو منشیات سے پاک و صاف بنانے کے لئے ڈپٹی کمشنر وکاس شرما و ایس ایس پی عبدالقیوم کی ہدایت پر ضلع انتظامیہ نے پوست کی غیر قانونی کاشت کے خلاف کریک ڈاؤن شروع کیا ہے۔ مذکورہ کریک ڈاؤن کے تحت پیر کے روز ایس ڈی ایم ٹھاٹھری اطہر امین زرگر نے ایس ایچ او امرت کٹوچ و ڈپٹی مجسٹریٹ کی موجودگی میں گورنمنٹ ڈگری کالج ٹھاٹھری و ہائر سیکنڈری اسکول جنگلواڑ کے طلباء کے ساتھ مل کر پوست کے پودوں کو تباہ کیا اور عوام و طلباء کو پوست کے پودے سے حاصل ہونے والی منشیات کے خطرات سے آگاہ کیا۔ اس سلسلے میں ایف آئی آر نمبر 41/2022 زیردفعہ 8/18NDPS ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ ہیروئن اور براؤن شوگر جیسی خطرناک ادویات اسی سے بنتی ہیں۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ایس ڈی ایم ٹھاٹھری اطہر امین زرگر نے کہا کہ انتظامیہ نے سخت چیکنگ مہم شروع کر دی ہے جو کہ منطقی انجام تک جاری رہے گی۔ انہوں نے پوست کے کاشتکاروں کو مشورہ دیا کہ وہ اپنی حفاظت کے لیے پودوں کو تلف کریں۔ انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ اگر ان کے محلے میں کوئی بھی منشیات کے اس غیر قانونی کاروبار میں ملوث ہے تو انتظامیہ کے نوٹس میں لائیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ جو بھی ممنوعہ پودوں کی کاشت یا منشیات کی غیر قانونی تجارت میں ملوث پایا جائے گا اس کے خلاف کارروائی کی جائے گی اور متعلقہ قوانین کے تحت مقدمہ درج کیا جائے ۔
 
 
 

رام بن میں 109 مویشی بازیاب،8ڈرائیور گرفتار

 رام بن//رام بن پولیس نے مویشیوںکی نقل و حمل میں ملوث آٹھ ڈرائیوروں کو گرفتار کیا اور پیر کو ضلع رام بن میں جموں سری نگر قومی شاہراہ پر قائم پانچ مختلف پولیس ناکوں سے 109 مویشیوں کو بچایا۔پولیس نے کہا کہ جموں سری نگر نیشنل ہائی وے سے گائے کے جانوروں کی نقل و حمل کے حوالے سے ایک مخصوص اطلاع پر الرٹ جاری کیا گیا تھا۔بانہال پولیس اسٹیشن کی پولیس پوسٹ جواہر ٹنل نے جموں سری نگر قومی شاہراہ پر ایک ناکا لگایا اور کشمیر کی طرف جانے والے ایک ٹرک، ٹاٹا موبائل اور لوڈ کیرئیر آٹو سمیت تین گاڑیوں کو روکا، تلاشی کے دوران 31 گائے ملے جن میں خوراک اور پانی کا کوئی انتظام نہیں تھا۔پولیس نے کہا کہ ان مویشیوں کو مجاز اتھارٹی کی اجازت کے بغیر وادی میں منتقل کیا جا رہا تھا۔پولیس نے تین ڈرائیوروں کو گرفتار کیا جن کی شناخت امیر حسین کھانڈے ساکنہ نوپورہ اننت ناگ، شبیر احمد قاضی گنڈ اور گلزار احمد شیرگوجری ساکنہ سرانسو قاضی گنڈ کے طور پر کی گئی ہے۔بانہال پولیس نے تھانہ بانہال میں تین الگ الگ ایف آئی آر درج کی ہیں۔ایک اور واقعہ میں، تھانہ رام بن کی پولیس پارٹی نے ایک ٹاٹا موبائل کو روکا، اور انتہائی بیدردی سے لدے ہوئے 4 گائے برآمد کر لیے۔پولیس نے بتایا کہ گاڑی کے ڈرائیور بشیر احمد ساکن پنتھیال رام بن کو اس کے ساتھی سردار محمد ساکنہ لوئر منڈا، ڈورو اننت ناگ کے ساتھ موقع پر گرفتار کر لیا گیا۔اسی طرح کے ایک اور واقعے میں چندر کوٹ پولیس اسٹیشن نے بھی جموں سرینگر ہائی وے پر ایک ناکا لگایا اور تین گاڑیوں کو روکا اور 26 مویشیوں کو بچایا۔پولیس نے بتایا کہ ڈرائیور محمد غفور ساکنہ بلی نالہ ادھم پور، لطیف ساکن ریتھائن ادھم پور اور توصیف احمد ساکنہ بٹوٹ کو گرفتار کیا گیا ہے۔ایک الگ واقعہ میں، بٹوت پولیس نے دو گاڑیوں کو روکا اور 48 گائے برآمد ہوئے۔پولیس نے کہا کہ ان تمام مویشیوں کو بغیر کسی خوراک اور پانی کے انتظام کے اور مجاز اتھارٹی سے کسی جائز اجازت کے بغیر لاد کر لے جایا جا رہا تھا۔
 
 

قصبہ بانہال میںمارکیٹ چیکنگ،2700روپے جرمانہ وصول

 محمد تسکین
بانہال//رمضان المبارک کے پیش نظر قیمتوں کو اعتدال پر رکھنے کیلئے تحصیل انتظامیہ بانہال کی طرف سے پیر کے روز قصبہ بانہال میں مارکیٹ چیکنگ کی گئی ہے اور اس موقع پر 17خطاوار دکانداروں سے 2700 روپئے کا جرمانہ عائد کیا گیا۔ محکمہ مال ، امور صارفین و عوامی تقسیم کاری اور پولیس پر مشتمل مارکیٹ چیکنگ کی اس ٹیم کی قیادت نائب تحصیلدار بانہال ذاکر حسین کر رہے تھے۔چیکنگ ٹیم نے قصبہ بانہال میں بغیر ریٹ لسٹ کے سبزی ، پھل ، مرغ وغیرہ بیچنے والوں کے خلاف وارننگ کے طور کاروائی کی اور ہلکے پھلکے جرمانے عائد کئے۔ چیکنگ ٹیم نے خطاوار دکانداروں کو وارننگ دی گئی کہ وہ ریٹ لسٹ سے زائد کی لوٹ کھسوٹ سے باز آئیں ورنہ ان کے خلاف سخت قانونی کارروائی کی جائے گی۔ 
 
 

ٹرک سے7 کلو گرام پوست برآمد، باپ بیٹے گرفتار

 ایم ایم پرویز
رام بن//رامسو پولیس نے پیر کو ٹرک سے 7 کلو گرام پوست کا بھوسا برآمد ہونے کے بعد ٹرک ڈرائیور اور اس کے بیٹے کو گرفتار کر لیا۔پولیس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ جموں سری نگر قومی شاہراہ پر رامسو میں گاڑیوں کی معمول کی چیکنگ کے دوران ایک پولیس پارٹی نے رجسٹریشن نمبر JK02 AL-6095 والے ٹرک کو چیکنگ کے لیے روکا، تلاشی کے دوران ٹرک سے 7 کلو گرام پوست کا بھوسا برآمد ہوا۔ٹرک جموں کی طرف جا رہا تھا۔پولیس نے بتایا کہ ٹرک کے ڈرائیور رویندر سنگھ اور اس کے بیٹے تنویر سنگھ دونوں کو آر ایس پورہ جموں کے رہنے والے موقع پر گرفتار کر لیا گیا۔پولیس نے پولیس اسٹیشن رامسو میں این ڈی پی ایس ایکٹ کی متعلقہ دفعات کے تحت ایف آئی آر نمبر 36 درج کیا ہے۔
 
 
 

حد بندی کمیشن رپورٹ شیڈول کاسٹ طبقہ کے خلاف تعصب پرمبنی: ڈاکٹربھگت

کہا کمیشن جموں میں SCآبادی کو درپیش مسائل کا جائزہ لینے میں ناکام رہا  

جموں//جموں و کشمیر نیشنل کانفرنس کے نائب ترجمان اعلیٰ ڈاکٹر گگن بھگت نے پیر کو کہا کہ حد بندی کمیشن کی رپورٹ میں نمائندگی کے اصولوں پر بنیادی رہنما خطوط کو نظر انداز کیا گیا ہے اور جموں کی درج فہرست ذات برادری کو خاص طور پر چھوڑ دیا گیا ہے۔حد بندی کمیشن کی طرف سے لگائے گئے پیمانوں کو قرار دیتے ہوئے بھگت نے کہا کہ حلقہ بندیوں کی حد بندی کرتے وقت کنیکٹیویٹی اور تسلسل کو مسترد کرنے کے علاوہ، رپورٹ جموں کی ایس سی کمیونٹی کو نمائندگی کے معاملے میں اس کا حق دینے میں ناکام رہی ہے۔ان کا کہناتھا "ہمارا پہلا اعتراض دہلیز پر اعتراض تھا۔ حد بندی کمیشن حد بندی ایکٹ کے تحت تشکیل دیا گیا ہے۔ حد بندی ایکٹ جموں و کشمیر پر لاگو نہیں تھا۔ اس کا اطلاق 5 اگست 2019 کو تنظیم نو ایکٹ کے سیکشن 96 کے ذریعے کیا گیا تھا۔ ایکٹ عدالتی جانچ کے تحت ہے۔ سپریم کورٹ اس کے آئینی جواز کی جانچ کرنے میں مصروف ہے لہذا حد بندی ایکٹ کی جموں و کشمیر میں درخواست اور توسیع بھی عدالتی جانچ کے تحت ہے۔ لہٰذا حد بندی کمیشن کے لیے، حد بندی ایکٹ کی تخلیق ہونے کی وجہ سے، یہ مناسب ہے کہ وہ اپنے ہاتھ سے باز رہے۔ سپریم کورٹ کے حوالے سے اور آئینی اخلاقیات کے احترام سے باہر نہ جانا۔ یہ ہمارا ابتدائی اعتراض تھا اور ہم اس پر قائم ہیں‘‘۔بھگت نے کہا "پینل نے 4 اپریل کو جموں اور 5 اپریل کو سری نگر میں عوامی اجلاسوں کے لیے جموں و کشمیر کا دورہ کیا تاکہ اعتراضات کا فیصلہ کیا جا سکے۔ اعتراضات پر غور کرنے کے بعد، پینل اپنی رپورٹ مرکزی وزارت قانون و انصاف کو 6 مئی کو یا اس سے پہلے پیش کرے گا۔ آخری حد بندی کمیشن نے رپورٹ پیش کرنے میں سات سال کا وقت لیا تھا، اور موجودہ پینل نے اس کی تکمیل کی ہے۔COVID وبائی امراض کے باوجود دو سال اور دو ماہ کے اندر اپنا کام انجام دیا اور یہ پہلے سال میں زیادہ کام نہیں کر سکا۔ یہ پوری مشق پر ہی ایک بڑا سوالیہ نشان اٹھاتا ہے‘‘۔ انہوں نے کہا کہ حد بندی کی مشق جموں و کشمیر کے لوگوں کے لیے ایک اور جھٹکا ہے۔ان کاکہناتھا "یہ جمہوری اصولوں اور آئینی حقانیت کی نشاندہی کرتا ہے۔ کمیشن ناگپور کی اپنی خواہش کی فہرست کے ساتھ چلا گیا ہے۔ نمائندگی کے تمام اصولوں کو ختم کرتے ہوئے، کمیشن نے بی جے پی اور اس کی اے، بی، اور سی ٹیموں کو فائدہ پہنچانے کے لیے حلقوں کی حد بندی کی ہے۔ رپورٹ کے مسودے نے فرقہ وارانہ ذہن سازی اور غیر معقولیت کو ختم کر دیا ہے‘‘۔انہوں نے کہا کہ کمیشن حکمراں بی جے پی کے بڑھے ہوئے بازو کی طرح برتاؤ کر رہا ہے ،یہ پچھلے دروازے سے جے کے میں غیر جمہوری داخلوں کو دھکیلنے کی ایک اور کوشش ہے۔ کمیشن نے تمام ڈھونگوں کو چھوڑ دیا ہے اور وہ بی جے پی کے الیکشن سیل کی طرح برتاؤ کر رہا ہے۔انہوں نے دعویٰ کیا کہ جموں کی ایس سی کمیونٹی اس یک طرفہ اور غیر متوازن حد بندی کمیشن کے مرکز میں ہے،"ایس سی کی کم نمائندگی کمیشن کی رپورٹ کی سطح کے نیچے عدم مساوات اور عدم توازن کی ایک اور پریشان کن جہت ہے۔ رپورٹ کے ذہن میں متناسب نمائندگی کے علاوہ باقی سب کچھ ہے۔ SC برادری خاص طور پر اس کے اختتام پر ہے۔ جموں میں ایس سی کمیونٹی کی حالت زار کا حساب لینے میں ناکام رہی ہے۔ محض سات نشستیں حاصل کرنا ان کے زخموں پر نمک چھڑکنے کے مترادف ہے۔
  
 
 
 

منجیت سنگھ کی قیادت میں دکانداروں، ہوٹل اور ڈھابہ مالکان کا احتجاج

سانبہ میں جموں پٹھانکوٹ شاہراہ کے نزدیک تجارتی اراضی کا معاوضہ بڑھانے کا مطالبہ
سانبہ//اپنی پارٹی صوبائی صدر جموں منجیت سنگھ نے گاؤں والوں کے ساتھ مل کر سانبہ میں جموں پٹھانکوٹ قومی شاہراہ کے نزدیک تجارتی اراضی کا غیر معقول معاوضہ دینے کے خلاف احتجاج کیا۔ اپنی پارٹی صوبائی صدر وسابقہ وزیر منجیت سنگھ کی قیادت میں دکاندار، ہوٹل اور ڈھابہ مالکان کے علاوہ اپنی پارٹی لیڈران ڈپٹی کمشنر سانبہ دفتر کے باہر جمع ہوئے اور احتجاج کیا۔ انہوں نے معاوضے کو غیر منصفانہ قرار دیا اور مانگ کی کہ قومی شاہراہ کوکشادہ کرنے کے لئے جو زمین لی جارہی ہے کا معقول معاوضہ دیاجائے۔ انہوں نے کہاکہ فی کنال بیس لاکھ روپے دیئے جارہے ہیں جوکہ انتہائی قلیل رقم ہے۔ قومی شاہراہ کے نزدیک موجود اراضی کی قیمت کروڑوں میں ہے اور حکومت کوڑیوں کے دام لوگوں سے خریدنا چاہتی ہے۔ اس زمین پر لوگوں نے دکانیں، ہوٹل اور ڈھابے قائم کئے تھے جوکہ اُن کی روزی روٹی کا ذریعہ تھے لیکن اب اِن لوگوں کو قلیل سے رقم دیکر زمین سے محڑوم کیاجارہا ہے۔ گاؤں ڈیرہ گندوترہ کے لوگوں نے کہاکہ نیشنل ہائی وے اتھارٹی آف انڈیا کی ناقص منصوبہ بندی کی وجہ سے اُن کی زمین تقسیم ہوگئی ہے۔ آدھا حصہ شاہراہ کے ایک طر ف تو آدھا دوسری طرف چلاگیاہے ۔
 
 
 

پیرا میڈیکل کونسل اور جموں وکشمیر کے پیرا 

میڈیکل کالجوںکے درمیان ساز باز کی کی تحقیقات کرائی جائے  :اپنی پارٹی یوتھ ونگ 
جموں//اپنی پارٹی یوتھ ونگ ریاستی نائب صدر رقیق احمد خان نے پیرا میڈیکل کونوسل جموں وکشمیر، پیر امیڈیکل کالجز اور BOPEEپر جموں وکشمیر کے طلبا کے مستقبل کے ساتھ کھیلنے کا الزام عائد کرتے ہوئے اِن اداروں کے درمیان ساز باز کی اعلیٰ سطحی تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے ۔ یہاں منقدہ ایک پریس کانفرنس رقیق خان نے دعویٰ کہاکہ جموں وکشمیر کے چند پیرامیڈیکل انسٹی چیوٹ دو سالوں سے طلبا کو امتحان میں بیٹھنے کی اجازت نہیں دے رہے۔ انہوں نے کہااِن پیرا میڈیکل طلبا سے امتحان فیس بھی لی گئی ہے لیکن ابھی بھی اُن کے BOPEEفارم نہیں بھرے گئے اور نہ ہی متعلقہ کالجوں نے جمع کرائے ہیں جس سے وہ امتحا ن میں بیٹھنے کے اہل ہوتے۔ انہوں نے کہاکہ پچھلے دو سالوں سے اِن اداروں نے یہی طریقہ اپنایا ہوا ہے اور پیرامیڈیکل کورسز کرنے والے طلبا پریشان حال ہیں۔ انہوں نے طلبا ذہنی طور پریشان ہیں۔ انہوں نے لیفٹیننٹ گورنر سے مانگ کی کہ پیرا میڈیکل کونسل جموں وکشمیر، متعلقہ پیرا میڈیکل کالج اور BOPEEکے درمیان اِس سانٹھ گانٹھ کی تحقیقات کرائی جائے۔ 
 
 
 

 چیئرپرسن ڈی ڈی سی رام بن کی لیفٹیننٹ گورنر سے ملاقات

جموں//چیئرپرسن ضلع ترقیاتی کونسل رام بن شمشاد شان نے راج بھون میں لیفٹیننٹ گورنر منوج سِنہا سے ملاقات کی۔دورانِ میٹنگ ڈی ڈی سی چیئرپرسن اور لیفٹیننٹ گورنر نے ضلع رام بن کی ترقی سے متعلق مختلف اَمور پر تبادلہ خیال کیا۔ شمشاد شان نے ضلع میں محکمہ تعلیمی عملے کو مضبوط اور معقول بنانے سمیت مطالبات کی ایک یاداشت بھی پیش کی۔جس میں ریلوے کنسٹرکشن کمپنی کی طرف سے مقامی اَفرادی قوت کا مناسب اِستعمال ، رام بن میں بس سٹینڈز ، منی سیکرٹریٹ اور مزید فائر سٹیشنوں کے مطالبات بھی شامل ہے۔لیفٹیننٹ گورنر نے ڈی ڈی سی چیئرپرسن کی جانب سے پیش کئے گئے تمام مطالبات کوبغور سنا اور اُنہوں نے کہا کہ ان کے جلد ازالے کے لئے جائزمطالبات اور مسائل پر غور کیا جائے گا۔اُنہوں نے چیئرپرسن پر مزید زور دیا کہ وہ نچلی سطح پر جمہوریت کے ایک اہم رکن کے طور پر لوگوں کی ضروریات کو اُجاگر کرنے اور ان سے نمٹنے کے لئے اپنی کوششیں جاری رکھیں۔ انہوں نے انہیں جموںوکشمیر یوٹی انتظامیہ کی طرف سے ہر طرح کے تعاون کا یقین دلایا۔
  
 
 

جموں وکشمیر کے تمام کالج اس برس سکل کورسز شروع کرینگے: روہت کنسل 

جموں//پرنسپل سیکرٹری محکمہ اعلیٰ تعلیم نے گورنمنٹ ڈگری کالج مڑہ میں ایک اِضافی بلاک کے اِی۔ اِفتتاح کرنے کے دوران کہا، ’’ ایک اچھا کالج نوجوانوں کو روزگار فراہم کرنے کی کوشش کرتا ہے اور اِس کی طاقت اس کی تعلیمی فضیلت میں مضمر ہے ۔ اِس سے زندگیوں میں جو بہتری آتی ہے اس کا معیار اور مقدار معاشرے پر اس کے اثرات کا حقیقی اِمتحان ہے ۔‘‘پرنسپل سیکرٹری  نے یقین دِلایا کہ کالج کیمپس کی تعمیر اِس مالی برس میں شروع کی جائے گی اور یہ اگلے برس کے اوائل تک منتقل ہونے کے لئے تیار ہوجائے گا ۔پرنسپل سیکرٹری کی طرف سے یقین دہانی کی گئی کہ جموںوکشمیر یوٹی اِنتظامیہ موجودہ مالی برس میں کالج کے لئے مزید پری فیبر یکٹیڈ ڈھانچہ فراہم کرے گی۔ یہ بھی تجویز دی گئی کہ کالج کی اِضافی بنیاد ی ڈھانچے کی ضرورت کے لئے کالج تفصیلی پروجیکٹ رِپورٹ ڈائریکٹر پلاننگ پیش کرے۔اَپنے خطاب کے دوران پرنسپل سیکرٹری نے کافی تعداد میں طلباء بالخصوص لڑکیوں کے داخلہ کو راغب کرنے کے لئے کالج کی ستائش کی۔ اُنہوں نے اِس کارنامے کو ایک اچھے کالج کی نشانیاں قرار دیتے ہوئے کہا کہ کالج نوجوان طلباء کی مقامی اُمنگوں اور ضرورتوں کو پورا کرنے میں کامیاب رہا ہے ۔اُنہوں نے سکل ڈیولپمنٹ اور ہنر مندی میں اِضافے کے کورسوں کے کامیاب آغاز پر کالج کی تعریف کی۔پرنسپل سیکرٹری نے کالجوں کو ہدایت دی کہ وہ قومی تعلیمی پالیسی کے تحت فراہم کئے جانے والے کورسوں کا فریم ورک تیار کریں اور نوجوان طلباء کو جامع ترقی فراہم کریں ۔ اُنہوں نے ان پر بھی زور دیا کہ وہ درجہ بندی میں بہتری لائیں اور این اے اے سی کے اَصولوں کے تحت تسلیم شدہ ہوں ۔اُنہوں نے پالیسی کے حوالے سے اعلان کیا کہ تمام سرکاری کالج سکل ڈیولپمنٹ کورسز دینا شروع کر یں گے۔اُنہوں نے طلباء کو فیڈ بیک سسٹم سے تدریسی معیار پر رائے دینے کی سہولیت فراہم کرنے پر زور دیا ۔ اُنہوں نے کہاکہ بدلے میں یہ اساتذہ کو اَپنی صلاحیتوں کو بہتر بنانے کا موقع فراہم کرے گا اور مزید کہا کہ اس سلسلے میں مقررہ رہنما خطوط بھی متعارف کئے جائیں گے ۔پرنسپل سیکرٹری نے کالجوں میں پری ایڈمیشن اور کیرئیر کونسلنگ کی سہولیت شروع کرنے کی تجویر دی اور انہیں اردگرد کے ماحول کو بہتر بنانے ، عام علاقوں کی صفائی اور بیت الخلاء کا مشورہ دیا۔آن لائن پروگرام میں ڈائریکٹر کالجز ڈاکٹر یاسمین عشائی ، پرنسپل جی ڈی سی مارچ ڈاکٹر ایکتا گپتا اور ایچ او ڈی رِیاضیات پروفیسر ڈاکٹر رام دیال نے شرکت کی۔