مزید خبریں

زونل ایجوکیشن آفیسر منڈی کے دفتر میں اساتذہ اٹیچ 

سرکاری سکول میں طلباء کی پڑھائی کا عمل بُری طرح سے متاثر 

عشرت حسین بٹ

منڈی// ضلع پونچھ کے زونل ایجوکیشن دفتر منڈی میں ابھی بھی متعدد اساتذہ اٹیچ رکھے گئے ہیں جس کی وجہ سے تعلیمی زون منڈی کے سکولوں میںطلباء و طالبات کی تعلیم کافی حد تک متاثر ہو رہی ہے۔ تفصیلات کے مطابق اگرچہ حال ہی میں سرکار اور ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ کی جانب سے تمام سکولوں کے اساتذہ کی اٹیچ منٹس کو منسوخ کرنے کے احکامات صادرکئے گئے تھے تاکہ سکولوں میں بچوں کی تعلیم متاثر نہ ہو مگر زیڈ ای او دفتر منڈی کے آفسران پر اس طرح کے احکامات کا کوئی بھی اثر نہیں دیکھائی دے رہا ہے اورمذکورہ دفتر کی جانب سے مبینہ طورپر کھلے عام اس طرح کے سرکاری احکامات کی خلاف ورزی کی جارہی ہے اور دفتر میں موجود آفسران مبینہ طورپر اپنی من مانی چلا کر طلباء و طالبات کے مستقبل کے ساتھ کھلواڑ کر رہے ہیں۔ ادھر منڈی تعلیمی زون کے دور دراز علاقوں کے سکولوں میں اپنے بچوں کو تعلیم دے رہے والدین نے اس حوالے سے ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کو بتایا اگر چہ کوڈ 19کے دو سال بعد ایک بار پھر سکولوں کو سرکار کی جانب سے بچوں کی تعلیم و تربیت کے لئے کھولا گیا تھا مگر سکولوں میں اساتذہ کا نہ ہونا ان کیلئے کافی تشویش کا باعث ہے۔ والدین کا کہنا تھا کہ محکمہ کے آفسران کی ملی بھگت سے اساتذہ کو زیڈ ای او دفتر منڈی میں اٹیچ رکھا گیا ہے اور اساتذہ سکولوں کے بجائے آفسران کے نجی کام انجام دے رہے ہیں جس کی وجہ سے ان کے بچوں کی تعلیم متاثر ہو رہی ہے۔والدین نے ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ سے اپیل کی ہے کہ اساتذہ کی اٹیچ منٹس کو جلد زمینی سطح پر ختم کیا جائے تاکہ منڈی کے دور دراز علاقوں کے تعلیمی اداروں میں تعلیم حاصل کر رہے غریب طلباء و طالبات کی پڑھائی متاثر نہ ہو۔ اس حوالے سے جب کشمیر عظمی نے زونل ایجوکیشن آفسر منڈی محمد بشیر سے رابطہ کیا تو انہوں نے اس معاملے پر کوئی بھی معقول جواب نہیں دیا ۔

 

 

سالڈ ویسٹ مینجمنٹ

راجوری میں ورکشاپ کا انعقاد کیا گیا 

راجوری//راجوری میونسپل کونسل نے ڈسٹرکٹ لیگل سروسز اتھارٹی راجوری کے اشتراک سے راجوری ٹاؤن ہال میں ایک روزہ سالڈ ویسٹ مینجمنٹ بیداری ورکشاپ کا انعقاد کیا جس میں سالڈ ویسٹ مینجمنٹ کے ماہرین کو مدعو کیا گیا تھا۔اس سالڈ ویسٹ بیداری ورکشاپ پروگرام میں سینکڑوں شہریوں نے شرکت کی جن میں ایس ایس پی راجوری محمد اسلم، صدر میونسپل کونسل راجوری محمد عارف، چیئرمین ڈسٹرکٹ لیگل سروسز اتھارٹی سریندر کمار تھاپا، ضلع شماریات اور تشخیص افسر سندیپ شرما، ای او میونسپل کونسل راجوری، محمد یعقوب، کونسلرز ایڈووکیٹ یوگیش شرما، ممتا دت، رابعہ قریشی، اعظم چودھری اور ڈسٹرکٹ لیگل سروسز اتھارٹی کے رضاکارودیگران بھی موجود تھے ۔سالڈ ویسٹ مینجمنٹ کے ماہرین ڈاکٹر ظفر اقبال نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے گھر کے کچرے کو آسان اور تکنیکی طریقے سے ہینڈل کرنے کے تمام تکنیکی طریقوں پر تبادلہ خیال کیا تاکہ کچرے کو دولت میں تبدیل کیا جا سکے اور شہر کو صاف ستھرا اور سرسبز بنایا جا سکے۔

 

دیہات میں مزید بینک شاخیں کھولنے کی مانگ 

راجوری//پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی کی رہنما نسیمہ چوہان نے ضلع ریاسی کی تحصیل چسانہ کے دور افتادہ علاقوں سنگڑی ، تولی اور سانگلی کوٹ میں جموں و کشمیر بینک کی شاخیں کھولنے کا مطالبہ کیا ہے اور بینک ملازمین کو رمضان کے دوران ڈبل شفٹوں میں کام کرنے کی ہدایت دینے کا مطالبہ کیا ہے۔جاری بیان میں نسیمہ چوہان نے کہا کہ تحصیل چسانہ رقبہ اور آبادی کے لحاظ سے ضلع ریاسی کی سب سے بڑی تحصیل ہے اور زیادہ تر آبادی دور دراز علاقوں میں رہتی ہے۔انہوں نے کہا کہ چسانہ تحصیل ہیڈ کوارٹر میں جموں و کشمیر بینک کی صرف ایک شاخ ہے جہاں تحصیل چسانہ کے تمام سرکاری ملازمین، منریگا کارکنوں، کسانوں اور طلباء کے کھاتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ زیادہ رش کی وجہ سے بوڑھے اور بچے کئی گھنٹوں لائن میں کھڑے ہونے کے باوجود بینک میں رقم جمع نہیں کراسکتے اور نہ ہی رقم نکال سکتے ہیں۔نسیمہ چوہان نے چیئرمین جموں و کشمیر بنک سے مطالبہ کیا ہے کہ تحصیل چسانہ کے علاقوں سنگڑی، ٹولی اور سانگلی کوٹ میں جموں و کشمیر بنک کی مزید برانچیں کھولی جائیں تاکہ صارفین کو کسی قسم کی مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

 

 

ٹھیکیداری کارڈوں کی نئی تجدید کاری 

کمشنر سیکریٹری کے حکم کو واپس لینے کا مطالبہ 

رمیش کیسر 

نوشہرہ //ٹھیکیدار یونین نے لیفٹیننٹ گورنر سے مطالبہ کیا ہے کہ محکمہ پی ڈبلیو ڈی کے کمشنر سکریٹری کی طرف سے کنٹر یکٹر کارڈوں کی نئی تجدید کاری کے سلسلہ میں جاری کردہ حکم نامے کو واپس لیا جائے۔نوشہرہ میں ٹھیکیداروں کی تنظیم کی جانب سے نوشہرہ میں ایک اجلاس کا اہتمام کیا گیا جس میں اراکین نے بڑی تعداد میں شرکت کی ۔اجلاس کے دوران اراکین نے کہاکہ انتظامیہ کی جانب سے ایک حکم نامہ جاری کر کے ٹھیکیداری کارڈوں کی تجدید کاری کے سلسلہ میں حکم جاری کیا ہے جبکہ اس حکم نامے کے زیر تحت رکھی گئی شرائط ٹھیکیداروں کیلئے پوری کرنا انتہائی مشکل عمل ہے جبکہ اس عمل سے تعمیر اتی عمل کے متاثر ہونے کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے ۔ٹھیکیدارو ں نے جموں وکشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر سے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ مذکورہ حکم نامے کو جلدازجلد واپس لیا جائے تاکہ ٹھیکیدار تعمیر اتی عمل میں اپنا رول ادا کرسکیں ۔

 

 

 

بڑھتی ہوئی مہنگا ئی و ناجائز منافع خوری

صارفین پریشان ،معاملہ کا سنجیدہ نوٹس لینے کی اپیل 

 عظمیٰ یاسمین

 تھنہ منڈی // پورے ملک کے ساتھ ساتھ یو ٹی جموں و کشمیر میں آسمان چھوتی مہنگائی اور بیروزگاری نے مزدور پیشہ افراد کی کمر توڑ کر رکھ دی ہے۔ اس سلسلے میں عوام تھنہ منڈی کا کہنا ہے کہ آئے دن اشیائے خوردونوش کی قیمتوں میں بے پناہ اضافہ کیا جا رہا ہے اور بازار میں من مانی کا دور دورہ ہے اکثر دکاندار غریب عوام کو دو دو ہاتھوں سے لوٹ رہے ہیں۔ لوگوں نے الزام لگایا کہ بھاجپا سرکار تیل کمپنیوں کے دبائومیں پٹرولیم مصنوعات اور اشیائے خوردونوش کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ کررہی ہے۔ جس سے غریب عوام کا جینا دوبھر ہو گیا ہے۔ اس سلسلے میں کئی صارفین نے کشمیر عظمیٰ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ضروری اشیاء کی قیمتوں میں تشویشناک اضافہ کی وجہ سے اکثر عوام غربت کی لکیر سے نیچے چلے گئے ہیں جو انتہائی تشویشناک صورتحال ہے۔عام آدمی کا معیارِ زندگی مہنگائی کی وجہ سے بہت متاثر ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بے روزگاری کو ختم کرنے کے لئے حکومت کو کوئی لائحہ عمل اختیار کرنا پڑے گا اور ذاتی مفادات کو بالائے طاق رکھ کر عوامی اور اجتماعی مفادات کے لئے کوششیں کرنی ہوں گی۔ عوام نے آسمان چھوتی قیمتوں پر قابو پانے کیلئے ذخیرہ اندوزوں اور منافع خوروں کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ حکومت کا فرض بنتا ہے کہ عوام کو ضرورت زندگی کی اشیاء سستے داموں مہیا کرے لیکن بدقسمتی سے تھنہ منڈی میں سب کچھ اس کے برعکس ہو رہا ہے اور مہنگائی کا جادو سر چڑھ کے بول رہا ہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ سرکار کی جانب سے تیل خاکی لوگوں کو دیا جاتا تھا وہ بھی اب ملنا بند ہو گیا ہے جس کی وجہ سے دور دراز علاقہ جات کے غریب عوام پریشان ہیں۔لوگوں کا کہنا ہے کہ ایسا لگ رہا ہے کہ جیسے دکانداروں سبزی فروشوں اور میوہ فروشوں کو لوٹ کھسوٹ کی کھلی چھوٹ دی گئی ہے اور وہ من مانی قیمتوں پر سامان فروخت کر رہے ہیں ان کا کہنا ہے کہ بازاروں میں قیمتوں کو اعتدال میں رکھنے اور ذخیرہ اندوزی کو روکنے کیلئے جان بوجھ کر خاطر خواہ اقدامات نہیں اٹھائے جارہے ہیں۔جس کی وجہ سے دکاندار بلا خوف صارفین سے من مانی قیمتیں وصول کر رہے ہیں۔ عوام نے حکام سے ناجائز منافع خوروں کے خلاف کارروائی کرنے اور قیمتوں کے بے تحاشہ اضافہ کو روکنے کے لیے ٹھوس اقدامات کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ بازار میں ریٹ لسٹیں آویزاں کی جائیں تاکہ سماج دشمن عناصر کو لوٹ کھسوٹ کا موقع میسر نہ آئے اور عوام کو راحت کی سانس مل سکے۔

 

 

 

پونچھ میں’ثقافتی ورثے‘ کا عالمی دن منایا گیا

حسین محتشم

پونچھ//ضلع پونچھ میں ثقافتی ورثہ کے عالمی دن پرمختلف اداروں میں پروگراموں کا اہتمام کیا گیا جن میں طلبہ، اساتذہ سمیت مقامی باشندوں نے شرکت کی۔ اس دوران اسکولوں کے طلباء نے رنگا رنگ پروگرام پیش کرکے داد تحسین وصول کی۔اس حوالے سے بات کرتے ہوئے محمد امین سماجی کارکن اور دیگر باشندوں نے اس طرح کے پروگراموں کے انعقاد پر خوش کا اظہار کیا۔ انہوں نے مستقبل میں بھی اس طرح کے مزید پروگرام کے انعقاد کی امید ظاہر کی۔انہوں نے کہا اس دن کو منانے کا مقصد ثقافتی ورثے یعنی تاریخی یادگاروں کوتحفظ فراہم کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے آباؤ اجداد اور پرانے وقتوں کی یادوں کو محفوظ رکھنے والی ان قیمتی اشیاء کی اہمیت کو مدنظر رکھتے ہوئے اقوام متحدہ کے ادارے یونیسکو نے 1983 سے ہر سال 18 اپریل کو عالمی ثقافتی ورثہ کا دن منانا شروع کیا۔ اس سے پہلے ہر سال 18 اپریل کو عالمی یادگاروں اور آثار قدیمہ کا دن منایا جاتا تھا۔ ہمارے آباؤ اجداد کے دئیے گئے ورثے کو قیمتی سمجھتے ہوئے یونیسکو نے اس دن کو عالمی ثقافتی ورثہ کے دن میں تبدیل کر دیا۔ انہوں نے کہا کہ اس دن کو صرف منانا ہی نہیں ہے بلکہ یہ عہد کرنا ہے کہ ہم اپنے ثقافتی ورثے کو ہر طرح کا تحفظ فراہم کریں گے۔