مزید خبریں

 ضلع سانبہ میں سکیموں کی عمل آوری

ڈائریکٹردیہی ترقی نے پیش رفت کاجائزہ لیا

جموں//ڈائریکٹردیہی ترقی جموں آرکے بٹ نے عوامی بہبودکی سکیموں کی عمل آوری کاجائزہ لینے کیلئے سانبہ انتظامیہ کے ساتھ میٹنگ کاانعقاد کیا۔اس دوران اسسٹنٹ کمشنرڈیولپمنٹ اعجازقیصر(کے اے ایس) نے پاورپوائنٹ پرزنٹیشن کے ذریعے ضلع انتظامیہ کی جانب سے سکیموں کی عمل آوری کے سلسلے میں حصولیابیوںکی جانکاری دی۔اس دوران میٹنگ میں محکمہ دیہی ترقی کے تمام آفیسران واہلکاران بشمول ضلع پنچایت افسر ،ایگزیکٹیوانجینئر آرای ڈبلیو سانبہ،بلاک ڈیولپمنٹ افسران ضلع سانبہ، اسسٹنٹ ایگزیکٹیوانجینئرس ،جونیئر انجینئرس ،ٹیکنیکل اسسٹنٹ ،پروگرام افسر ،سیکریٹری پنچایت ، ایم آئی ایس اورسی آئی سی آپریٹیر بھی موجودتھے۔میٹنگ کے دوران ڈائریکٹرموصوف نے محکمہ دیہی ترقی کے عہدیداران کومالی سال کے اختتام کے پیش نظر کاموں کی تیزی کے ساتھ تکمیل کی ہدایات دیں۔اس موقعہ پر ڈائریکٹر رورل ڈیولپمنٹ نے نیچرل ریسورس منیجمنٹ ورکس کی اہمیت پرزوردیاتاکہ آئندہ سال کے پراجیکٹوں میں اس کومدنظررکھاجائے۔ اس دوران پانی کی بچت سے متعلق کاموں ،خاص طورپرتعمیری کاموں کومقررہ مدت کے اندرپوراکرنے کیلئے ہدایت دی۔اس دوران ڈائریکٹرموصوف نے ا ے سی ڈی اعجازقیصرکی سکیموں کی عمل آوری کے سلسلے میں کاوشوں کوسراہا۔میٹنگ کااختتام ضلع پنچایت افسرسانبہ پرویزنائیک کی جانب سے شکریہ کے ساتھ ہوا۔
 

مودی حکومت بھاجپاکی حمایت کیلئے لوگوں کومجبورکررہی ہے:بھیم 

جموں//نیشنل پنتھرس پارٹی کے سرپرست اعلی پروفیسر بھیم سنگھ نے، جو جموں وکشمیر امور کے بھی ماہر ہیں، ہندستانی پارلیمنٹ سے ہندستانی آئین کی دفعہ۔370اور جموں وکشمیر آئین کے سیکشن 92کے تحت مداخلت کرنے کا مطالبہ کیا ہے جس سے جموں وکشمیر میں رہنے والے ہندستانی شہریوں کو مزید اموات اور تباہی سے بچایاجاسکے۔پنتھرس سربراہ پروفیسر بھیم سنگھ نے، جو تقریباًً پندرہ  برس تک جموں وکشمیر کے رکن اسمبلی ( دو مرتبہ ایم ایل اے اور ایک مرتبہ قانون ساز اسمبلی کے رکن)کے طورپر کام کرچکے ہیں، ہندستانی پارلیمنٹ کو یاد دلایا کہ مہاراجہ ہری سنگھ نے لوگوں کی خواہش پر، جن کی قیادت شیخ عبداللہ نے کئی برسو ں تک کی، 26اکتوبر، 1947کو باقی ریاستوں کی طرح الحاق نامہ پر دستخط کئے تھے۔انہوں نے کہا کہ یہ آئینی اسمبلی کی غلطی ہے کہ جس نے جموں وکشمیر کے لوگوں کی مرضی کے بغیر دفعہ 370لائی اور جموں وکشمیر کو الحاق والی فہرست سے باہر رکھا گیا۔جموں وکشمیر کا بقیہ 577ریاستوں کی طرح ملک سے الحاق نہیں کیا گیا جبکہ دو ریاستوں حیدرآباد اور جونا گڑھ کے حکمرانوں نے تو الحاق نامہ پر دستخط بھی نہیں کئے تھے پھر بھی آئین ساز اسمبلی نے ان دونو ں ریاستوں کو بھی ہندستان کا حصہ اعلان کر دیا۔انہوں نے کہا کہ یہ آئین ساز اسمبلی  اور ہندستانی قیادت کی ایک سیاسی غلطی ہے کہ آج تک جموں وکشمیر کا ہندستان سے مکمل الحاق نہیں ہوا ہے یہی وجہ ہے کہ آج بھی ہندستانی قوانین جموں وکشمیر میں نافذ نہیں ہیں۔ پروفیسر بھیم سنگھ نے جموں وکشمیر کی سیکولر شبیہ قائم رکھنے اور تمام مذاہب کو متحد رکھنے کی حمایت کرنے کے لئے مسلمان بھائیوں کی تعریف کی۔انہوں نے حیرت ظاہر کی کہ کیوں مودی حکومت جموں وکشمیر کے لوگوں کو بی جے پی ۔پی ڈی پی حکومت کی حمایت کرنے کے لئے مجبور کررہی ہے جبکہ وہ جموں وکشمیر اور پورے ملک کے لوگوں کے سامنے بے نقاب ہوچکی ہے۔انہوں نے کہاکہ جموں وکشمیر کے مسئلہ کا یہی حل ہے کہ جموں وکشمیر کا ملک کے ساتھ اسی طرح الحاق کیا جائے جس طرح باقی 577ریاستوں کا الحاق کیا گیا ہے ۔ کیوں ہندستانی آئین میں دیئے گئے بنیادی حقوق سے جموں وکشمیر کے لوگ آج بھی محروم ہیں؟ کیوں جموں وکشمیر کے نوجوانوں کو مارا اور پیٹا جارہا ہے؟ کیوں ہندستانی قیادت شیخ محمد عبداللہ کے قوم پرستی کے جذبہ پر عمل نہیں کرسکی؟ کیوں جموںوکشمیر کے لوگوں بنیادی حقوق حاصل نہیں ہیں جبکہ ملک کے باقی تمام حصوں میں لوگوں کو یہ حاصل ہیں؟۔انہوں نے کہاکہ جموں وکشمیر حکومت ، انتظامیہ اور پولیس ریاست میں امن وقانون قائم رکھنے اور لوگوں کو تحفظ فراہم کرنے میں ناکام رہی ہیں۔انہوں نے کہاکہ جموں وکشمیر کو مزید اموات اور تباہی سے بچانے کا ایک ہی راستہ ہے گورنر راج نافذ کرکے فوج کو  یہاں کی ذمہ داری سونپ دی جائے ۔
 
 

وزیر اعلیٰ نے این سی سی دستے کی میزبانی کی 

جموں /جے اینڈ کے این سی سی یوم جمہوریہ دستے نے آج وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کے ساتھ ملاقات کی۔اس دستے میں 109کیڈٹ شامل تھے جس کی سربراہی ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل این سی سی جموں وکشمیر میجر جنرل نیلندر کمار کر رہے تھے۔وزیر اعلیٰ نے یوم جمہوریہ پریڈ کے دوران بہتری کارکردگی دکھانے کے لئے دستے کو مبارک باد دی اور انہیں آگے کے مقابلوں میں بہترین کارکردگی کی نیک خواہشات دیں۔وزیرا علیٰ نے ریاست کے مختلف علاقوں سے تعلق رکھنے والے کیڈٹوں کو تربیت دینے کے لئے ڈائریکٹوریٹ کے افسروں کی سراہنا کی۔اس موقعہ پرمیجر جنرل کمار نے جے اینڈ کے ڈائریکٹوریٹ آف این سی سی کے پچھلے سال کی کارکردگی کی رپورٹ بھی پیش کی ۔بریگرییڈر اے ایس کسانہ ، مسز نیلندرکے علاوہ کئی دیگر افسران اور دستے کے ممبران موجو دتھے۔
 

ورلڈ کینسر ڈے کے موقعہ پر گورنر کا پیغام 

جموں /ورلڈ کینسر ڈے کے سلسلے میں گورنر این این ووہرانے اپنے پیغام میں کہا ہے کہ کینسر کے مختلف اقسام کے مضر اثرات کو کم کرنے کے سلسلے میں معیاد بند بنیادوں پر مختلف ضروری اقدامات کرنے کی اشد ضرورت ہے جو ہمارے ملک میں بڑی تیزی سے پھیل رہا ہے اور ہر سال لاکھوں اس مرض میںمبتلا مریض رجسٹر کئے جاتے ہیں۔گورنر نے کہا کہ ورلڈ کینسر ڈے اس بیماری کے حوالے سے عام لوگوںمیں بیداری پیدا کرنے کا ایک موقعہ فراہم کرتا ہے ۔گورنر نے کہا کہ بچوں کو اس بیماری کے احتیاطی تدابیر کے بارے میں روشناس کرانا جانا چاہیئے۔انہوں نے کہا کہ محکمہ صحت کو غیر سرکاری تنظیموں کے اشتراک سے ریاست بھر میں اس بیماری کا پتہ لگانے اور احتیاطی تدابیر عام کرنے کے لئے خاطر خواہ اقدامات کرنے چاہیئے۔
 

کرگل کوریر سروس 

۔ 146مسافروں کو منزل مقصودتک پہنچایا گیا

جموں /کرگل کوریر کے ذریعے 146مسافروں جن میں کرگل سے جموں 23، کرگل سے سرینگر25 ، جموں سے کرگل 48 اور سرینگر سے کرگل 50 مسافر شامل ہیںکو اپنی اپنی منزل تک پہنچایا گیا۔اس بات کی جانکاری سٹیٹ کواڈنیٹر کرگل کو ریر عامر علی جو ڈائریکٹر ڈیزاسٹرمنیجمنٹ بھی ہیں نے دی۔
 
 

مفتی محمدسعیدجموں کشمیرمیں امن اورکلہم ترقی کے متمنی تھے: پروفیسر مٹو

جموں /وزیرا علیٰ کے مشیر پروفیسر امیتابھ مٹو نے کہا کہ مرحوم مفتی محمد سعید کی ریاست کے تئیں امن اور کلہم ترقی کی جانب قابل سراہنا ہے اور جس سے صدیوں تک یاد رکھا جائے گا۔پروفیسر مٹو نے ان باتوں کا اظہار معروف سماجی کارکن اور سول سوسائٹی کے ممبران کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے کیا۔پروفیسر مٹو نے کہا کہ مرحوم مفتی نہ صرف پی ڈی پی کے آئینہ تھے بلکہ لوگوں کے جذبات کے ترجمان تھے۔اس کے علاوہ مرحوم ایک مانے ہوئے مدبر سیاست داں تھے جنہیں ریاست کے تمام لوگ عزت کی نگاہوں سے دیکھتے تھے۔انہوں نے کہاکہ مفتی محمد سعید عدم تشدد کے پیرو کار اور انہوںنے ہمیشہ امن اور بھائی چارے کے ساتھ رہنے پر زور دیا ہے۔انہوں نے تمام طرح کے تشدد سے پاک ماحول قائم کرنے کی وکالت کی ہے ۔پروفیسر مٹو نے کہاکہ سابق وزیرا علیٰ التوا میں پڑے معاملات کو بات چیت کے ذریعے حل کرنے میں یقین رکھتے تھے۔انہوںنے کہاکہ ہم سب کا فرض ہے کہ ہم مرحوم کی ویژن کو مشترکہ طور فروغ دیں جس سے برصغیر میں پائیدار امن قائم ہوگا۔
 

مہاریشی ودھیا سکول کا27واں سالا نہ دِن

بہتر تعلیم کیلئے والدین اوراساتذہ کے درمیان تال میل ضروری:کویندر

جموں /قانون ساز اسمبلی کے سپیکر کویندر گپتا نے مہاریشی ودھیا سینئر سیکنڈری سکول جموں کے 27ویں سالانہ دِن کی تقریب میں حصہ لیا۔اس موقعہ پر ایم ایل سی وکر م رندھاوا ، ڈائریکٹر ریڈیو کشمیر جموں انجلی شرما، ڈائریکٹر راجیہ سینک بورڈ بریگیڈیر ہرچرن سنگھ ، وائس چیئرمین سپورٹس کونسل جموں / ممبر بی سی سی آئی راجیو کالرا موجود تھے۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کویندر گپتا نے سکول کے انتظامیہ کی معیار ی تعلیم فراہم کرنے اور طلاب کو مختلف سرگرمیوں میں حصہ لینے کی ستائش کی۔انہوں نے کہا کہ طلاب قوم کے معمار ہیں اور انہیں بہتر تعلیم فراہم کر کے ان کی شخصیت کو نکھارنا ہم سب کا فرض ہے ۔سپیکر نے والدین اور اساتذہ سے اپیل کی کہ وہ آپس میں مضبوط تال میل قائم کرکے بچوں کی بہتر تعلیم و تربیت یقینی بنائیں۔اس موقعہ پر سکول کی پرنسپل ریتا شرما نے سکول کے مختلف خدو خال پر روشنی ڈالی۔سکول کے طلاب نے ایک رنگا رنگ تمدنی پروگرام پیش کیا۔اس کے علاوہ ذہین اور قابل بچوں میں انعامات تقسیم کئے گئے ۔
 
 
 

چودھری ذوالفقار علی گورنر سے ملاقی

جموں /خوراک ، شہری رسدات و امور صارفین اور قبائلی امور کے وزیر چودھری ذوالفقار علی نے راج بھون میں گورنر این این ووہرا کے ساتھ ملاقات کی۔وزیر نے گورنر کو محکمہ کی طرف سے چلائی جارہی مختلف سکیموں اور راشن کی تقسیم کاری بالخصوص ریاست کے دور دراز علاقوں میں لوگوں کو غذائی اجناس فراہم کرنے کے بارے میں جانکاری دی۔گورنر نے وزیر کی ان کوششوں کو سراہا کہ ریاست کے 74لاکھ بی پی ایل مستحقین کو وقت پر راشن فراہم کی جاتی ہے ۔