مزید خبریں

گرفتاریوں کا تازہ سلسلہ قابل مذمت :لیگ

سرینگر//مسلم لیگ نے بشیر احمد بڈگامی،محمد یوسف بٹ اور سید امتیاز حیدر کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ان حربوں سے حریت پسندوں کے عزائم کو کمزور نہیں کیا جاسکتا ہے اور نہ ان کے حوصلوں کو توڑا جاسکتا ہے ۔لیگ ترجمان سجاد ایوبی نے کہا ہے کہ جیل کی کوٹھریاں ان کی استقامت کو مزید تقویت عطا کرتی ہیں ۔ 
 
 
 

۔12مئی سے سکل ڈیولپمنٹ مشن کا پہلا سہ روزہ کنکلیو

سرینگر//جموں وکشمیر سکل ڈیولپمنٹ مشن سرینگر میں 12؍ مئی سے 14؍ مئی تک پہلے سہ روزہ سکل اینڈ انٹرپرینور شپ کنکلیو کا انعقاد کرے گا۔تلاش نامی اس کنکلیو کا موضوع ہوگا ’’پرنٹنگ ہیومن کیپٹل سکل انووو یشن انٹرپروینور شپ ‘‘ انفارمیشن ٹیکنالوجی اور تکنیکی تعلیم کے وزیر عمران رضا انصاری نے کنکلیو کے حوالے سے تفصیلات دیتے ہوئے کہا کہ اس میں 400 افراد کو ہنرمندی کی تربیت دی جائے گی جس میں مختلف طبقوں سے شامل ہونے والے لوگ موجود ہوں گے۔انہو ںے کہا کہ کنکلیو کی بدولت کارپوریٹ اداروں ، کار خانہ داروں ، ہنرمند پیشہ واروں اور سرکاری محکموں کے مابین علوم کی منتقلی میں مدد ملے گی۔اُنہوں نے کہا کہ کنکلیو کے دوران مقامی نوجوان کارخانہ داروں اور اختراع کاروں کو بیرون ریاست کے بازاروں کے ساتھ جوڑنے میں مدد ملے گی۔انہوں نے کہا کہ کنکلیو کی اختتامی تقریب کے دوران انڈیا سکلز مقابلہ 2018 جیتنے والوں کی عزت افزائی بھی کی جائے گی اور وہ مئی مہینے کے آخری ہفتے میں لکھنو میں علاقائی سطح کے سکل مقابلوں میں حصہ لے سکیں۔ 
 
 
 

نائب وزیراعلیٰ کا بیان افسوسناک:مشتاق الاسلام

سرینگر// مسلم لیگ کے ایک اور دھڑے کے چیئرمین مشتاق الاسلام نے کٹھوعہ سانحہ سے متعلق نائب وزیراعلیٰ کویندر گپتا کے بیان کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح حکومت کامجرمین کے خلاف قرار واقعی سزا کے دعوئوں پر سوالیہ نشان لگ چکا ہے۔ مشتاق الاسلام نے اس واقعہ پر اپنے دلی صدمے کااظہار کرتے ہوئے کہا کہ دنیا میں کہیں بھی اس طرح کے لوگوں کو اقتدارپر براجمان نہیں کیاجاتا۔
 
 

اننت ناگ میں پولیس دربار 

سرینگر//عوام اور پولیس کے درمیان بہتر تال میل کو مضبوط بنانے کے مقصد سے پولیس اسٹیشن اُترسو میں پولیس کیمونٹی پاٹنر شپ گروپ میٹنگ منعقد ہوئی جس میں ذی عزت شہریوں کے ساتھ ساتھ مختلف محلہ کمیٹیوں اورتاجر انجمنوں کے ممبران نے شرکت کی ۔ میٹنگ ایس ڈی پی او اچھ بل تنویر احمد کی سربراہی میں منعقد ہوئی اور اُن کے ہمراہ ایس ایچ او پولیس اسٹیشن اُترسو امتیاز احمد بھی موجود رہے۔ شرکا نے منشیات ، سماجی بدعات ، قمار بازی کی روکتھام پر زور دیا جبکہ لوگوں نے پانی کی قلت اوربجلی کی عدم دستیابی جیسے مسائل ابھارے ۔ ایس ڈی پی او اور ایس ایچ او نے لوگوں کو یقین دہانی کرائی کہ ان معاملات کو متعلقہ محکموں کے ساتھ اُٹھایا جائے گا ۔
 
 
 
 

خانہ بدوش طبقوں کو تحفظ فراہم کیا جائے:حکیم 

 سرینگر// پی ڈی ایف چیرمین اور ایم ایل ائے خانصاحب حکیم محمد یاسین نے خانہ بدوش گُجر اور بکروال طبقے سے وابستہ لوگوں کو تحفظ فراہم کرنے میں ناکامی پر موجودہ مخلوط سرکار کی سخت الفاظ میں نکتہ چینی کی ہے۔ اُنہو ں نے کہا کہ خانہ بدوش بکروالوں کو جموں کے میدانی علاقوں سے بالائی چراگاہوں تک جاری سفر کے دوران غنڈہ گرد اور مذہبی فرقہ پرست عناصر کی طرف سے خوف زدہ کرنے اور نازیبا سلوک روا رکھنے کے واقعات کے بارے میں متواتر شکایات موصول ہورہی ہیں اور حکومت بے حسی کی صورت میں خاموش بیٹھی ہوئی ہے۔ ایک بیان میں حکیم یٰسین نے کہا کہ کٹھوعہ ضلع کے رسانہ گاؤں میں خانہ بدوش کمونیٹی سے وابستہ 8سالہ کمسن لڑکی کی عصمت ریزی اور قتل کے وحشت ناک واقعے کے پس منظر میں فرقہ پرستوں کی طرف سے شروع کی گئی سرگرمیوں کی وجہ سے مُتاثرہ کمیونیٹی کے لوگوں میں کافی عدم تحفظ پایا جارہا ہے۔ کیونکہ حکومت اس واقعے کو مذہبی منافرت اور سیاسی رنگ دینے کی عیاں کوششیں کرنے والوں کی سرگرمیوں پر قدغن لگانے میں بُری طرح ناکام ہوگئی ہے۔ اُنہوں نے حکومت کو خبردار کیا ہے کہ وہ خانہ بدوش بکروالوں کو بالائی چراگاہوں تک پہنچنے کیلئے اس وقت نقل مکانی اور سفر کے دوران اُنہیں تحفظ فراہم کرنے کیلئے معقول اقدامات کریں۔ انہوں نے کہا کہ اگر حکومت اس وقت ان محنت کش لوگوں کو مذہبی منافرت رکھنے والے عناصر کی سرگرمیوں سے تحفظ دینے میں ناکام رہی تو اس سے ریاست کے صدیوں پُرانے سیکولر اور بھائی چارے کی اعلیٰ روایات کو بہت دھچکا لگے گا۔ حکیم محمد یٰسین نے مخلوط سرکار کی نُکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ عصمت دری اور قتل کی وحشیانہ واقعہ کے بارے میں الگ الگ اکائیوں میں تضاد پایا جا رہا ہے حالانکہ اس شرمناک واقعے پر قومی اور بین الاقوامی سطح پر شدید الفاظ میں مذمت کی گئی ہے۔ 
 
 
 

کرشی وگیان کیندرکے زیراہتمام وانگت میں پروگرام 

ارومامشن کسانوں کی معاشی ترقی کیلئے معاون :میاں الطاف

ارشاد احمد

گاندربل//کرشی وگیان کیندرگاندربل نے ٹرائبل سب پلان کے تحت ضلع گاندربل کے دوردرازعلاقہ پہلگام وانگت میں پروگرام کاانعقادکیا۔اس دوران ممبراسمبلی کنگن میاں الطاف احمد مہمان خصوصی جبکہ پروفیسرنذیراحمد وائس چانسلر سکاسٹ۔کشمیر،پروفیسرمشتاق احمد ایکسٹنشن سکاسٹ۔کے ، ڈاکٹرپیوش سانگلہ ڈسٹرکٹ ڈیولپمنٹ کمشنرگاندربل ،پروگرام کوآرڈی نیٹر کرشی وگیان کیندرگاندربل، کوآرڈی نیٹر اروما مشن اورکے وی کے کے سائنسدان بھی موجودتھے۔پروفیسرنذیراحمد نے کسانوں کی بہبودکیلئے چلائی جارہی سکیموں اورمختلف سرگرمیوں کے بارے میں جانکاری دی جوریاست بھرمیں سی ایس آئی آراروما مشن کے تحت چل رہی ہیں۔انہوں نے ارومیٹک فصلوں مثلا ً لیونڈر، گلاب، روزمیری، مونارڈا  اور ٹیگوٹس وغیرہ کی پیداواربڑھانے سے متعلق پہلوئوں کواُجاگرکیا۔انہوں نے کہاکہ ارومامشن کشمیراورلداخ میں مشترکہ طورپرسی ایس آئی آر،انڈین انسٹی ٹیوٹ آف انٹی گریٹڈ میڈیسن جموں اورسکاسٹ کشمیرکی طرف سے عملایا جارہا ہے۔اس دوران میاں الطاف نے کسانوں کواروما مشن کی لانچنگ کیلئے مبارکبادپیش کی اورتوقع کی کہ اس سکیم سے کسانوں کوروزگارملنے کے ساتھ ساتھ ان کی معاشی حالت بھی بہترہوگی۔
 
 
 

راجوری میں عوامی شکایات کے ازالے کا کیمپ

راجوری//لوگوں کی دہلیز پر ہی ان کی شکایات کا ازالہ کرنے کے لئے اینمل وشیپ ہسبنڈری اورماہی پروری کے وزیر عبدالغنی کوہلی نے راجوری کے ڈوگانی سمکار علاقے میں منعقدہ ایک عوامی شکایات کے ازالے کے لئے کیمپ کی صدارت کی۔کیمپ میں مقامی لوگوں کے علاوہ گردونواح سے آئے ہوئے بڑی تعداد میںلوگوں نے شرکت کی اور وزیر موصوف کو اپنے درپیش مسائل کے بارے میں جانکاری دی۔اس موقعہ پر لوگوں نے بجلی ،پینے کے پانی،تعمیر عامہ ،زراعت اورطبی سہولیات کے علاوہ لائیو سٹاک کے معاملات اُٹھائے۔وزیر موصوف نے لوگوں کو یقین دہانی کرائی کہ ان کے جائز مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کئے جائیں گے۔کوہلی نے عوامی مسائل کے حل کے لئے متعلقہ آفیسران کو موقعہ پر ہی ہدایت دی ۔کیمپ سے خطاب کرتے ہوئے عبدالغنی کوہلی نے کہا کہ اس طرح کے کیمپ کے انعقاد کا مقصد لوگوں کے معاملات اورمشکلات کو موقعہ پر ہی حل کرنا ہے۔وزیر موصوف نے کہا کہ لوگوں کو بنیادی سہولیات کی فراہمی یقینی بنانے کے لئے سرکار نے متعدد فلاحی سکیموں اورپروگراموں کی عمل آوری شروع کی ہے جن پر کروڑوں روپے خرچ کئے جارہے ہیں۔
 
 
 

 پریم ناتھ بزاز کی اہلیہ کی برسی پر 8 مئی سے تقاریب

سرینگر//پنڈت پریم ناتھ بزاز کی اہلیہ کی 36ویں برسی کی تقریب8مئی سے10مئی کو نئی دلی ، جموں اور سرینگر میں انجام دی جارہی ہیں۔
 
 
 
 

کلرکوں کی ہڑتال جاری ،سرکاری دفاترمیں کام کاج متاثر

 جموں//سرکار کی طرف سے کلرکوں کی تنخواہوں میں تفاوات دور نہ کئے جانے کے مسئلے کولے کرکلرکوں کی ہڑتال ہنوزجاری ہے ۔یہ ہڑتال 22 اپریل کوشروع ہوئی تھی جس کے بعداسے 28 اپریل اورپھر 8 مئی تک بڑھادیاتھا ۔کلرکوں کی اس کام چھوڑ ہڑتال کی وجہ سے مسلسل چھٹے روز بھی بیشتر سرکاری دفاتر میںکام کاج متاثر رہا۔ اس دوران ایسو سی ایشن نے پولیس کی طرف سے ہڑتالی کلرکوں پر کی جانے والی زیادتیوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ان کی آواز کو زور زبردستی دبایا جارہا ہے ۔ مقررین نے دعویٰ کیا کہ جموں کے علاوہ خطہ کے تمام دس اضلاع سے آئے ہوئے کلرکوں نے کام چھوڑ ہڑتال میں حصہ لیا۔ مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے بابو حسین ملک، روی سنگھ باہو، بھارت بھوشن ، انل مہتہ وغیرہ نے کہا کہ حکومت کی طرف سے دی جانے والی بار بار کی یقین دہانیوں کے باوجود ان کے مسائل کے حل کی جانب توجہ نہیں دی جا رہی ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ ریاستی ہائی کورٹ نے بھی اس سلسلہ میں واضح ہدایات دی ہوئی ہیں لیکن ان کی عمل آوری بھی نہیں کی جا رہی ہے ۔ مقررین نے حکومت کو متنبہ کیا کہ وہ ملازمین کے ساتھ ٹکرائو کی پالیسی کو ترک کر کے ان کے ساتھ مفاہمتی رویہ اپنا ئے اور پانچویں پے کمیشن کے مطابق جونئر اسسٹنٹ کو   4000-6000سینئر اسسٹنٹ کو  4500-7000اور ہیڈ اسسٹنٹ کو  5500-9000 کا گریڈدینے کا حکمنامہ جاری کرے۔ انہوں نے مانگ کی کہ یکم جنوری 1996سے یہ گریڈ دینے کے علاوہ 19فروری2003سے مالی فوائد بھی دئیے جائیں۔ کوارڈی نیشن کمیٹی نے کام چھوڑو ہڑتال کو دی جانے والی حمایت کیلئے تشکر کا اظہار کرتے ہوئے ااپنے مطالبات کے حق میں ہڑتال جاری رکھنے پرزوردیا۔علاوہ ازیںکلرکوں کی ہڑ تال نے سنگین رخ اختیار کر کے ریاست کے سر کاری دفتروں کے کام کاج کوبر ی طرح سے در ہم بر ہم کر کے رکھ دیا جس کے نتیجے میں سر کاری دفتروں کارخ کر نے والے لو گوں کو اپنے مسا ئل کا ازالہ کرا نے میں مشکلات کا سا منا کر نا پڑ رہا ہے ۔ادھر کلرکل ایسو سی ایشن نے دھمکی دی کہ جب تک نہ سر کار ان کے مطا لبات پورا کریگی تب تک وہ اپنی ہڑتال ختم نہیں کریں گے۔کلریکل ایسوسی ایشن کے لیڈران کے مطا بق کلر یکل اسٹاف نے کام چھوڑ ہڑتال 8 مئی 2018تک بڑھادی گئی ہے ۔عام لوگوں کے مطابق کلرکوں کی غیر معینہ ہڑ تال نے جموں کے سر کاری دفتروں کے کام کاج کو بری طرح سے در ہم بر ہم کر کے رکھ دیا ہے اور سر کاری دفتروں میں کو ئی بھی کام نہیں ہو پا رہا ہے۔ دفتروں کا رخ کرنے والے عام لوگ بھی کلرکوں کی ہڑ تال کی وجہ سے اپنے مسا ئل حل کرا نے میں نا کام ثا بت ہو رہے ہیں۔ کلرکوں کی ہڑ تال نے سر کاری اداروں کے کام کاج پر سوالیہ نشان لگا دیا ہے ۔گز شتہ دنوں وزیر خزانہ نے کلرکوں کو یقین دلا یا تھا کہ ان کے جا ئز مطالبات کا ازالہ کرنے کیلئے جلد ہی اقدا مات اٹھا ئے جا ئینگے تا ہم ساتویں پے کمیشن کی اسکیم لا گو ہو نے کے اعلان کے بعد کلر کوں کے مسا ئل حل کر نے کی خاطر کو ئی بھی کاروا ئی عمل میںنہیں لا ئی گئی جس کی وجہ سے کلرکل سٹاپ نے پو ری ریاست میں غیر معینہ عرصے کیلئے ہڑ تال شروع کر دی ۔کلرکل سٹاف کے مطا بق جب تک نہ سر کار ان کے مطا لبات من و عن حل کرنے کیلئے اقدا مات اٹھا ئے گی تب تک وہ ہڑ تال ختم نہیں کریںگے ۔
 
 
 
 
 
 

بانہال میں بھاجپا لیڈر کے سیکورٹی اہلکاروں کی ہڑبونگ

نوجوان کی مارپیٹ اور ہوائی فائرنگ، عوامی احتجاج کے بعد دونوں گرفتار

بانہال /محمد تسکین / بانہال کے ایک نوجوان سے مارپیٹ کرنے اور ہوا میں فائرنگ کرنے کے واقع کے بعد ایک تحریری شکایت کی بنا پر بانہال پولیس نے بھارتیہ جنتا پارٹی کے ایک کشمیری لیڈر کے دو سیکورٹی اہلکاروں کو گرفتار کرکے اْن کے خلاف کئی دفعات کے تحت کیس درج کیا ہے۔ یہ واقع پیر کی رات بانہال کے نزدیک گنڈ عدلکوٹ میں پیش آیا ۔ مارپیٹ کا شکار بننے والا نوجوان بھی بھارتیہ جنتا پارٹی کے ایک مقامی لیڈر کا بیٹا ہے۔ عینی شاہدین نے کشمیر عظمی کو بتایا کہ پیر کی رات نو بجے کے قریب بھارتیہ جنتا پارٹی کا ایک لیڈر اور ممبر لیجسلیٹیو کونسل صوفی یوسف اپنے سیکورٹی اہلکاروں کے ہمراہ جموں سے سرینگر کی طرف آرہے تھے ۔اس وقت بانہال کے نزدیک  ٹریفک جام کی صورتحال تھی۔ اس دوران  بھارتیہ جنتا پارٹی کے لیڈر کے پی ایس اوز اور ایک مقامی نوجوان عامر سلیم بٹ ولد محمد سلیم بٹ ساکنہ ہولن بانہال ایک دوسرے سے گتھم گتھا ہوئے ۔ سیکورٹی اہلکاروں نے بندوقیں تان کر عامر سلیم کو کئی تھپڑ رسید کئے اور اسکی گاڑی کی چابی نکال لی۔ عامر سلیم بٹ کے والد محمد سلیم بٹ بھی بھارتیہ جنتا پاڑتی کے لیڈر ہیں اور انہوں نے ماضی میں لوک جن شکتی پارٹی پر الیکشن بھی لڑا ہے۔ عینی شاہدین کے مطابق اس واقع کے بعد وہاں لوگ جمع ہونا شروع ہوئے اور حالات کی نزاکت کو بھانپتے ہوئے ایم ایل سی صوفی یوسف کے پی ایس اوز نے ہوا میں گولیوں کے کم از کم تین روانڈ فائر کر دیئے جس کی وجہ سے علاقے میں سراسمیگی پھیل گئی ۔ ایس ایچ او بانہال اعجاز وانی نے کشمیر عظمی کو بتایا کہ عامرسلیم کی تحریری شکایت کے بعد پولیس سٹیشن بانہال میں ایک کیس زیر نمبر61 زیر دفعہ 307، 341، 323 رنبیر پینل کوڈ اور 7/27 آرمز ایکٹ کے تحت درج کرکے دونوں اہلکاروں کو حراست میں لیا ہے اور معاملے کی مزید تحقیقات کا آغاز کیا گیا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ ٹریفک جام کی وجہ سے بھاجپا لیڈر کو آگے نکالنے کیلئے مذکورہ پی ایس اوزرامسو سے بانہال تک کئی گاڑی والوں سے الجھ چکے تھے ۔بانہال میں ان کی گرفتاری کے بعد بھارتیہ جنتا پارٹی کے لیڈر صوفی یوسف کو مزید سیکورٹی بندوبست فراہم کرکے جواہر ٹنل پار کروایا گیا۔ 
 
 
 

کشمیر میں جوں کی توں پوزیشن 

پاکستان سے زیادہ بھارت کیلئے نقصان دہ:انقلابی

سرینگر// قومی محاذِ آزادی کے سینئر رکُن اعظم انقلابی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ پاکستان ایٹمی طاقت کی حیثیت سے نہ صرف کشمیر کنڑول لائن پر بلکہ دنیا کے ہر فورم میں بھارت کا پیچھا کرتا رہے گا۔ اور کئی پہلو ہیں جن کی موجودگی میں کشمیر میں جوں کی توں پوزیشن (status quo)  پاکستان کے مقابلے میں بھارت کے لیے زیادہ نقصان دہ ثابت ہوگی۔ بہتریہی ہے کہ بھارت استعماری mindset کو خیرباد کہتے ہوئے futuristic اداؤں اور تمنّاؤں کے ساتھ سامنے آئیں اور بڑے اعتماد کے ساتھ اعلان کریں کہ بھارت پنڈت نہرو کے وعدۂ رائے شماری اور کشمیر سے متعلق اقوام متحدہ کی قرار دادوں کے آئینے میں مسئلہ کشمیر کا ایک پرُ امن اور پائیدار حل تلاش کرنے کا قصد کرتا ہے۔ اور اِس سمت میں پاکستان کو اعتماد میں لیتے ہوئے جنگ بندی لائن (دیوارِ برلن) کو منہدم کیا جائے گا تاکہ سرینگر سے مظفر آباد تک پھیلی ہوئی وادی کشمیر کے باشندے اپنی پارلیمنٹ میں حقِ خود ارادیّت کے اصول کے تحت کشمیر کے سیاسی مستقبل کا تعیّن کریں۔ فوری اقدامات کے طور آپ سبھی محبوس کشمیری رہنماؤں اور کارکنوں کو جیلوں اور تھانوں سے رہا کر کے یہاں سیاسی گھٹن کا ماحول دوُر کریں۔ قانونِ مکافات سے خوف محسوس کریں۔
 
 
 
 
 
 
 
 
 
خان سوپوری کی عدالتی تحویل میں 2 روز کی توسیع
سرینگر// پیپلز لیگ کے محبوس و علیل چیئرمین غلام محمد خان سوپوری کی عدالتی تحویل میں 3 مئی تک توسیع کی گئی ہے۔ پیپلز لیگ کے ترجمان غلام قادر راہ کے مطابق غلام محمد خان سوپوری کوپولیس تھانہ تارزو میں درج ایک کیس زیرایف آئی آرنمبر2017/ 102کے تحت پابندسلاسل رکھاگیا تھا۔انہوں نے کہاکہ سوموار کوپولیس نے خان سوپوری کوسرینگر سنٹرل جیل سے ایڈیشنل شیشن جج سوپور کی عدالت میں پیش کیا۔بیان کے مطابق متعلقہ جج نے پولیس کی درخواست کومنظورکرتے ہوئے غلام محمد خان سوپوری کی جوڈیشل ریمانڈ3مئی تک بڑھادی۔
 
 
 
وزیراعلیٰ اور میرکی مبارکباد 
سرینگر//وزیراعلیٰ محبوبہ مفتی اور  پردیش کانگریس صدر غلام احمد میر نے شب برات کے مقدس موقعہ پر ریاست کے لوگوں کو مبارک باد دی ہے۔ مبارکبادی کے اپنے ایک پیغام میں وزیرا علیٰ نے کہا کہ شب برات اللہ سے اس کی مہربانیاں اور گناہوں کی مغفر ت حاصل کرنے کا ایک عظیم موقع ہے ۔انہوں نے لوگوں سے اپیل کی وہ اس مقدس رات کے دوران اللہ کی رحمتوں و برکتوں کا بھرپور فیض حاصل کرتے ہوئے اپنے اندر غربا ، مساکین اور محتاج لوگوں کے تئیں جذبہ ہمدردی پیدا کریں۔محبوبہ مفتی نے اُمید ظاہر کی کہ شب برات کی بدولت ریاست میں امن ، خوشحالی اور بھائی چارے کی فضا قائم ہوگی۔ پردیش کانگریس صدر غلام احمد میر نے مبارکباد پیش کرتے ہوئے ریاست کی خوشحالی، فلاح و بہبود اور امن کی دعا کی ہے۔ غلام احمد میر نے عوام سے اپیل کی کہ وہ اس موقعہ پر ریاست میں امن کی بحالی کیلئے دعا کریں۔
 
 
 
 
 
وزیراعلیٰ اور عمر عبداللہ بارہمولہ ہلاکتوں پر افسردہ
سرینگر//وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی اور سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے بارہمولہ ہلاکتوں پر دکھ کا اظہار کرتے ہوئے سوگوار کنبوں کے ساتھ دلی ہمدردری کا اظہار کیا ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ نوجوان لڑکوں کی ہلاکت دیکھ کرانہیں انتہائی دُکھ اور افسوس ہو رہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ یہ سلسلہ کسی بھی طرح سے ختم ہونا چاہئے ۔محبوبہ مفتی نے ہلاک شدگان کے کنبوں کے ساتھ گہری ہمدردی کا اظہار کیا ہے۔ نیشنل کانفرنس کے کارگزار صدر اور سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے علیحدگی پسند لیڈران کی تنقید کرتے ہوئے کہا ’’ میں چاہتا ہوں کہ اب علیحدگی پسندوں کی جانب سے بھی ایسی ہلاکتوں کے خلاف مذمتی بیان جاری ہوں‘‘۔ ٹویٹر پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے عمر عبداللہ نے کہا ’’دہشت گردوں نے کچھ ہی دیر پہلے 3افراد کو بارہمولہ میں قتل کردیاہے۔ میں یہ دیکھنا چاہوں گا کہ آیا علیحدگی پسندوں کی جانب سے بھی اس حوالے سے مذمتی بیان جاری ہونگے یا وہ صرف فورسز کی طرف سے واقع ہونے والی ہلاکتوں پرہی بیانات جاری کرتے ہیں‘‘۔
 
 
 
بار نے عدالتی تحقیقات کا مطالبہ کیا
سرینگر// کشمیر ہائی کورٹ بار ایسو سی ایشن نے بارہمولہ میںنامعلوم بندوق برداروں کی طرف سے3نوجوانوں کی ہلاکت کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ایک نوجوان کو15روز قبل ہی رہا کیا گیا تھا۔ بار نے اس واقع کی غیر جانبدرانہ اورعدالتی تحقیقات کا مطالبہ کیاتاکہ لوگوں کو اس واقع سے متعلق حقائق سے آگاہ کیا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ اس معاملے کی عدالتی تحقیقات اس لئے بھی ضروری ہے کیونکہ ماضی میں نامعلوم بندوق برداروں کے نام پر معصوم لوگوں کو یا تو ہلاک کیا گیایا انہیں سخت مظالم کے دور سے گزرنا پڑالیکن حقائق کھبی بھی سامنے نہیں آئے۔ بار نے نائب وزیر اعلیٰ کی طرف سے کھٹوعہ میں عصمت ریزی اور قتل کے سانحہ کے واقعے کو معمولی واقعہ قرار دینے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ موصوف کا دعویٰ ہے کہ وہ13سال کی عمر سے آر ایس ایس کا متحرک کارکن رہا ہے،کے نزدیک یہ معمولی واقعہ ہے اور اس کو اجاگر نہیں کیا جانا چاہئے۔ بار نے کہا کہ ایک ایسے وقت پر جب دنیا بھر کے مہذب لوگوں نے اس واقع کی مذمت کی اور واقع میں ملوث مجرموں کو سزائے موت دینے کا مطالبہ کر رہے ہیں،کویندر گپتا کا بیان قابل مذمت ہے۔ 
 
 
 
احد بب سوپور کا عرس جوش و جذبہ سے منایا گیا
عقیدتمندوں کی بھاری شرکت
غلام محمد
سوپور//سوپور میں احد بب کا عرس نورباغ میں منگل کو جوش و جذبے کے ساتھ منایا گیا۔ عرس میں وادی کے مختلف مقامات سے مرد و زن اور بچے شرکت کرنے کیلئے آئے تھے جس دوران مرحوم کی رہائش گاہ کے قریب مزار پر قرآن خوانی کی گئی جبکہ ہڑتا ل کے باوجود نورباغ سوپور میں بھاری تعداد میں لوگوں نے احد بب کے مزار پر حاضری دی ۔احد بب کے کنبہ کے ایک فرد نے کہاکہ ’نہ صرف کشمیر سے بلکہ بیرون ریاست سے بھی مرید آتے ہیں اور 10ہزار سے زائد لوگوں کیلئے صبح11بجے سے 4بجے تک کھانے کا انتظام کیاگیا‘۔احد بب 30جون 1930کو عشہ پیر محلہ سوپور میں پیدا ہوئے تھے اور 80سال کی عمر میں26جولائی 2010کو مختصر علالت کے بعد انتقال کرگئے۔
 
 
سالویشن مومنٹ چیئرمین کی خانہ نظربندی پر برہم
سرینگر// سالویشن مومنٹ نے پارٹی چیئرمین ظفر اکبر بٹ کی خانہ نظربند ی کوانتظامیہ کی بوکھلاہٹ اور سیاسی انتقام گیری سے تعبیر کیا ہے۔پارٹی ترجمان نے ظفر اکبر ، پارٹی لیڈر غازی جاوید بابا اور دیگر گرفتار نوجوانوں کی رہائی کا مطالبہ کیا ہے۔
 
 
ہندوارہ میں نقب زنی میں ملوث 2افراد گرفتار
سرینگر//ہندوارہ پولیس نے لیپ ٹاپ اور موبائل چوروں کے گروہ کا پردہ فاش کرتے ہوئے 2افراد کو گرفتار کیا ہے۔ہندوارہ پولیس نے 2 افراد کو گرفتار کرکے ان سے ہزاروں روپے مالیت کے لیپ ٹاپ اور موبائیل فون ضبط کئے ہیں جو گزشتہ دو برسوں کے دوران علاقے میں چوری کی کئی وارداتوں میں ملوث ہیں۔ ایس پی پی ہندوارہ غلام جیلانی وانی نے ایس پی آفس میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ طارق احمد لون ساکن گنستان ماگام اوررفیق احمد لون ساکن ماگام جبکہ ان کے تیسرے ساتھی کو پہلے ہی ایک دوسرے کیس میں کپوارہ پولیس نے حراست میں لیا ہے جن کے قبضے سے دو عددلیپ ٹاپ اور کئی موبائل فون برآمد کئے ہیں۔اس سلسلے میں ایک ایف آئی آرزیر نمبر 149/2018 ا 457، 380 بھی درج ہے۔ایس ایس پی نے کہا کہ تیسرا ملزم دانش منظور زرگر ساکن ٹکر کی شناخت پہلے ہی کی جاچکی ہے جو ایف آئی آر زیر نمبر 68/2017 کے تحت حراست میں ہے۔
 
ٹنگمرگ میں بندر کے حملے میں شہری زخمی
 ٹنگمرگ//ٹنگمرگ میں اُس وقت ایک مقامی ہوٹل کا ملازم شدید زخمی ہوگیا جب نزدیکی جنگل سے ایک بندر نے اس پر حملہ کیا ۔ غلام نبی شیخ ولد عبدالاحد شیخ ساکن چونٹی پتھری بابا ریشی ہوٹل کے صحن میں کرسیاں صاف کرنے میں مصروف تھا کہ اس دوران نزدیکی جنگل سے اچانک ایک بندر نے اُس پر حملہ کردیا۔زخمی ملازم کے شور مچانے پر وہاں لوگ جمع ہوگئے تاہم بندر نزدیکی جنگل کی طرف بھاگ گیا۔ مقامی لوگوں نے زخمی شخص کو سب ڈسٹرک اسپتال منتقل کیا جہاں اس کا علاج ومعالجہ کیا گیا۔(مشتاق الحسن)