مزید خبریں

 سرکاری اور دیگر عمارتوں کی تعمیر 

 ست شرما کی کم لاگت والی تکنیک بروئے کار لانے کی ہدایت

سرینگر//مکانات و شہری ترقی کے وزیر ست پال شرما نے افسروں کو ہدایت دی ہے کہ وہ ریاست میں سرکاری اور دیگر عمارتوں کی تعمیر کے دوران جدید ٹیکنالوجی کو بروئے کار لاکر اخراجات میں کمی لائیں۔وزیر کل یہاں جے اینڈ کے آرکیٹیکٹ آرگنائزیشن کی ایک جائیزہ میٹنگ سے خطاب کر رہے تھے۔میٹنگ میں چیف آرکیٹیکٹ اینڈ ڈائریکٹر بلڈنگ سینٹر جے اینڈ کے وی کے پنت بھی اس موقعہ پر موجود تھے۔وزیر نے اختراعی اور کم لاگت والے طور طریقوں کو بروئے کار لانے کی ضرورت پر زور دیا۔انہوں نے کہا کہ ہماری ریاست کو تعمیرات کے حوالے سے کئی مشکلات کا سامنا ہے لہذا یہ ٹیکنالوجی کافی فائدہ بخش ہوسکتی ہے۔انہوں نے کہا کہ بلڈنگ سینٹرز کی طرف سے تیار کئے گئے مواد کو میونسپل کارپوریشنوں اور شہری بلدیاتی اداروں کی طرف سے استعمال میں لایا جانا چاہئے۔وزیر نے جموں اور سرینگر شہروں میں ہاتھ میں لئے گئے تمام پروجیکٹوں کا جائیزہ لیا اور ان کی بروقت تکمیل کو یقینی بنانے کی ہدایت دی۔
 
 

محکمہ داخلہ کی کارکردگی کا جائزہ

سرینگر//قانون ساز کونسل کی ڈی آر ایس سی ۔ III نے کل یہاں ایک میٹنگ کے دوران محکمہ داخلہ کی کارکردگی کا جائزہ لیا۔میٹنگ کی صدارت ایم ایل سی سریندر چودھری نے انجام دی۔ارکان قانون سازیہ شوکت حسین گنائی ، ٹھاکر بلبیر سنگھ ، ایس چرنجیت سنگھ اور فردوس احمد ٹاک ، محکمہ داخلہ کے پرنسپل سیکرٹری آر کے گوئیل ، سپیشل ڈی جی پی ہیڈ کوارٹرس وی کے سنگھ ، اے ڈی جی پی ( اے پی ) اے کے چودھری ، اے ڈی جی پی ( سیکورٹی ) منیر خان ، آئی جی ہیڈ کوارٹرس آنند جین ، قانون ساز کونسل کے سپیشل سیکرٹری محمد اشرف وانی اور پولیس و کونسل سیکرٹریٹ کے اعلیٰ افسران نے میٹنگ میں شرکت کی۔میٹنگ میں ایس پی اوز ، ڈرائیورس کے لئے تبادلے کی پالیسی ، ان کے واجبات میں اضافے و دیگر اہم سہولیات میں بہتر ی لانے جیسے معاملات زیر بحث آئے تاکہ یہ عملہ اپنے فرائض بہتر طریقے سے انجام دے سکے۔کمیٹی نے جوانوں ، ایس پی اوز اور ڈرائیوروں کی حالتِ زندگی میں بہتری لانے کی خصوصی توجہ دی تاکہ یہ عملہ اپنے پیشہ وارانہ فرائض بہتر طریقے انجام دے سکیں اور ان کی خدمات عوام دوست ہوں۔
 
 
 

نار بل میں 6کروڑ روپے کی لاگت سے واٹر سپلائی سکیم تعمیر کی جارہی ہے:شیام چودھری 

سرینگر//صحت عامہ ، آبپاشی و فلڈ کنٹرول کے وزیر شیام لال چودھری نے پی ایچ ای حکام کو ہدایت دی ہے کہ وہ ماہ رمضان کے دوران بلا خلل پانی فراہم کریں۔ وزیر نے یہ ہدایات بیروہ حلقہ کی واٹر سپلائی سکیموں کے معائینہ کے دوران دیں ۔اس دوران انہوں نے گگر پورہ اور ماگام واٹر سپلائی سکیموں کا جائزہ لیا۔گگر پورہ میں لوگوں کے ساتھ بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ حکومت لوگوں کو پینے کے پانی کے حوالے سے درپیش مسائل سے پوری طرح باخبر ہے اور ان مسائل کو دور کرنے کے لئے اقدامات کئے جارہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ علاقے میں نبارڈ کے تحت 6.54کروڑ روپے کی لاگت سے ایک واٹر سپلائی سکیم قائم کی جارہی ہے جس پر کام عنقریب شروع ہوگا۔ شیام چودھری نے کہا کہ 22.33کروڑ روپے کی لاگت سے سات سکیمیں جب کہ 12.79کروڑ روپے کی لاگت سے چار سکیمیں ہاتھ میں لی گئی ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ان سکیموں کے مکمل ہونے سے علاقے کے 30ہزار نفوس کو فائدہ پہنچے گا۔ اس سے پہلے ضلع بڈگام میں پی ایچ ای سکیموں کے بارے میں جانکاری حاصل کرتے ہوئے وزیر کو بتایا گیا کہ ضلع میں اس وقت ضلع سیکٹر اور این آر ڈی ڈبلیو پی کے تحت بالترتیب 26اور 33سکیمیں ہاتھ میں لی گئی ہیں جن میں پانچ سکیموں کو مکمل کیا جاچکا ہے جبکہ مزید آٹھ سکیموں کو رواں مالی سال کے دوران مکمل کیا جائے گا۔انہیں بتایا گیا کہ ضلع میں اس وقت 43فلٹریشن اور ٹریٹمنٹ پلانٹ لوگوں کو پینے کا صاف پانی مہیا کر رہے ہیں۔
 
 

ٹنگمرگ میں محکمہ بجلی کے خلاف احتجاج

 ٹنگمرگ //ہردہ اچھلو ٹنگمرگ کے لوگوںنے بجلی ٹرانسفارمر کو کفن اوڑھ کرمحکمہ بجلی کے خلاف انوکھا احتجاج کیا۔احتجاجی مظاہرین نے کہا کہ محکمہ  بجلی کی لاپرواہی سے وہ گزشتہ 20 روز سے بجلی سپلائی سے محروم ہیں۔مظاہرین نے سرینگر گلمرگ شاہراہ پر محکمہ بجلی کے خلاف زبردست نعرے بازی کرتے ہوئے شاہراہ پر ٹریفک کی نقل و حرکت مسدود کی۔ عبدالاحد گنائی نامی ایک شہری نے بتایا کہ اگرچہ محکمہ نے گائوں میں 100کے وی پرانا بجلی ٹرانسفارمر نصب کیا ہے لیکن وہ بار بار جل جاتا ہے جس کی وجہ سے وہ گزشتہ 20 روز سے بجلی سپلائی سے محروم ہیں۔اس سلسلے میں اسسٹنٹ ایگزیکٹیو انجینئر اشفاق احمد نے کہا کہ اگلے چند روز میں گائوں میں نیا بجلی ٹرانسفارمر نصب کیا جائے گا ۔(مشتاق الحسن)
 
 

آئی ایس ٹی ای کے اشتراک سے ایس ایس ایم کالج میں تقریب

سرینگر //ایس ایس ایم کالج پریہاسپورہ نے انڈین سو سائٹی فار ٹیکنیکل ایجوکیشن( آئی ایس ٹی ای) کے اشتراک سے وادی میں ایک تقریب کے دوران فیکلٹی اور طلبہ باب کا آغاز کیا ہے۔ تقریب کی شروعات کالج کے ترانے سے کی گئی جبکہ تقریب میں مہمانوں کا استقبال کالج کے پرنسپل پروفیسر نذیر احمد شاہ نے کیا ۔اس موقع پر آئی ایس ٹی ای کے صدر پرتاپ سنگھ کاکسو دیسائی، نے پروفیسر اے پی متل، پروفیسر بوٹا سنگھ سدھو، پروفیسر راکیش سہگل ڈائریکٹر این آئی ٹی سرینگر نے طبلہ اور فیکلٹی باب کا آغاز کیا ۔ پروفیسر پرتاب سنگھ نے اس موقعے پر آئی ایس ٹی کو کشمیر میں شروع کرنے پر خوشی کا اظہار کیا ۔اے آئی سی ٹی ای کے ممبر سیکریٹری پروفیسر اے پی متل نے کالج کو آئی ایس ٹی ای میں شمولیت اختیار کرنے پر مبارک باد دی ۔ پروفیسر بوٹا سنگھ سدھو نے اُمید ظاہر کی ہے کہ ایس ایس کالج آئی ایس ٹی میں شمولیت اختیار کرکے ٹیکنیکل ایجوکیشن کو آگے بڑھانے کے میشن کو جاری و ساری رکھیں گے۔ اس موقعے پر ڈائریکٹر این آئی ٹی سرینگر ڈاکٹر راکیشن سہگل، پروفیسر ایم آر ڈی کندن گھر اور پروفیسر ایم مصطفی نے بھی خطاب کیا اور مہمانوں کا شکریہ ادا کیا ۔
 
 

 غلام نبی خیال ڈی پی ایس بڈگام میں اعزاز سے سرفراز

سرینگر//دہلی پبلک سکول بڈگام کی طرف سے ایک تقریب پر معروف صحافی اور مصنف غلام نبی خیال کو اعزاز سے نوازا گیا۔تقریب کی صدارت معروف افسانہ نگار وحشی سعید نے کی۔تقریب پر کئی نامو ر ادیب اور ادبی شخصیات موجود تھیں جن میں پروفیسر فاروق فیاض، ڈاکٹر شبنم عشائی، وحشی سعید، نور شاہ، جا وید شبیر، ڈاکٹر اشرف آثاری، واجدہ تبسم،کاچو اسفند یار کے علاوہ ادارے کے طلبا اور طالبات موجود تھیں۔ میزبانی کے فرائض ممتازالنسا سوز، پروفیسر سیف لدین سوز اور سکول کے پرنسپل محفوظ اسلم نے انجام دئے۔ڈاکٹر شبنم عشائی ، ڈاکٹر فاروق فیاض اور پرنسپل نے خیال کی ادبی اور صحافتی خدمات پر روشنی ڈالی اورانھیں کشمیر کی ایک نابغہ روزگار مایہ ناز ہستی سے تعبیر کیا۔سکول کی طالبات نے اس موقعے پر موصوف کا ایک خوبصورت نغمہ کشمیری کورس کی شکل میں پیش کیا۔متاز النساء سوز نیغلام نبی خیال کو ایک توصیف نامہ، قیمتی سوٹ  اور شال پیش کیا۔تقریب کی نظامت افشاں لون نے انجام دی۔
 
 

بانڈی پورہ میں کئی افسران کی کرسیاں خالی

عازم جان

بانڈی پورہ//بانڈی پورہ ضلع میں 19 نائب تحصیلداروں کی کرسیاں خالی ہیں جس کی وجہ سے لوگوں کوسخت پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ضلع میںاے ڈی سی کا دفتر بھی عرصہ دراز سے تالا بندہے چونکہ اے ڈی سی بانڈی پورہ خورشید احمد سنائی کو دو ماہ قبل ڈپٹی کمشنر بانڈی پورہ کا چارج دیا گیا ۔اسی طرح ضلع ترقیاتی کمشنر دفتر میںکئی اہم افسروں اور ملازمین کی کرسیاں خالی ہیں۔ بانڈی پورہ کے لوگوں نے مطالبہ کیا ہے  کہ ڈپٹی کمشنر دفتر ودیگر دفاتر میں جن افسران اور ملازمین کی کرسیاں خالی ہیں انہیں جلد از جلد پُر کیا جائے تاکہ لوگوں کو راحت مل سے ۔
 
 
 

پانڈیچری کے سپیکر کا جموں وکشمیر اسمبلی کا دورہ 

سرینگر//پانڈیچری قانون ساز اسمبلی کئے سپیکر بی ویتھی لنگم جو جموں وکشمیر کے دورے پر ہیں، نے کل ریاستی قانون ساز اسمبلی کے ڈپٹی سپیکر نذیر احمد گریزی کے ساتھ ملاقات کی۔اس دوران انہوں نے اپنی اپنی ریاستوں میں قانون سازیہ کی کاروائی چلانے کے حوالے سے تجربات کا تبادلہ کیا۔انہوں نے دونوں ریاستوں کی سماج ،اقتصادی و ثقافتی اور ترقیاتی منظر نامے کو بھی زیر بحث لایا۔ویتھی لنگم جو پہلی مرتبہ وادی کے دورے پر آئے ہیں، نے یہاں کے لوگوں کی مہمانوازی کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ کشمیر صحیح معنوں میں زمین پر جنت کا ٹکڑا ہے۔ انہوں نے ریاست میں امن اور روا داری سے حالات برقرار رکھنے میں مختلف حکومتوں کی تعریف کی۔نذیر گریزی نے پانڈیچری کے سپیکر پر زور دیا کہ وہ یہاں کی مہمانوازی کے سفیر بن کر کشمیر کے مثبت پیغام کو عام کرنے میں اپنا کلیدی رول ادا کریں تا کہ پانڈیچری اور ملک کے دیگر علاقوں سے زیادہ سے زیادہ تعداد میں لوگ وادی کی سیر پر آسکیں۔بعد میں انہوں نے اسمبلی کمپلیکس کے مختلف شعبوں کا دورہ کر کے وہاں عملہ کے ساتھ بھی بات چیت کی۔
 
 

فورسز کاروائیاں قابل تشویش:محاذ آزادی 

سرینگر//محازآزادی کے صدر سید الطاف اندرابی نے فورسز اہلکاروں کی طرف سے ماردھاڑ ،چھاپوں اور گرفتاریوں پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔محاذترجمان محمد یوسف گلکار کے مطابق تنظیم کے ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے صدر تنظیم نے کہا کہ یہ بڑی مضحکہ خیز بات ہے کہ نہتے کشمیریوں کے قتل عام کو قانون کا نام دیاگیا ہے اور دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت کے دعویدار ہی جمہوری عمل یعنی حق خودارادیت کے منحرف ہیں۔اجلاس میں محمد یوسف کلو،محمد شفیع میر،جہانگیرسلیم ،شفیق سوپوری،سید ہارون رشیداورخواجہ عطا محمد نے بھی شرکت کی۔انہوں نے کہا کہ افسپا کا ایک لفظ کشمیر میں آگ وآتش اورخون ناحق بہانے کیلئے کافی ہے۔اندرابی نے اس بات پر زور دیا کہ حکمرانوں کو چاہئے کہ سرکاری  دہشت گردی کے بجائے سیاسی سطح پرکشمیری عوام کا مقابلہ کریں ۔انہوں نے تنظیم کے سرپرست اعلیٰ محمد اعظم انقلابی کے پیغام کودہرایاکہ بھارت کوکشمیریوں کو مٹانے کے بجائے اپنے عوام کی خوشحالی اور ترقی کے لئے کام کرنا چاہئے۔
 
 

رمضان کی آمد کے پیش نظر وقف بورڈ کی میٹنگ

سرینگر//مسلم وقف بورڈ کی ایک اعلیٰ سطحی میٹنگ بور ڈ کے وائس چیئرمین نظام الدین بٹ کی سربراہی میں منعقد ہوئی جس میں بورڈ ممبران ایڈوکیٹ اظہر الامین ، پروفیسر مشتاق قریشی ، ڈاکٹر شفع احمد خان ، مولانا شوکت حسین کینگ اور مولانا شوکت علی مسعودی نے بھی شرکت کی جبکہ اس دوران میٹنگ میں وقف بورڈ کے اعلیٰ افسران بھی موجود تھے۔ میٹنگ میں وقف بورڈ سے منسلک زیارت گاہوں، بقعہ جات اور مساجد میں رمضان المبارک کی مقدس ماہ کئے گئے دوران انتظامات کا جائزہ لیا گیا۔ اس موقعہ پر ماہ مبارک کے دوران تمام متبرک مقامات پرعامۃ المسلمین کیلئے بہتر سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنانے پر زور دیتے ہوئے کہا گیا کہ وقف بورڈ کی طرف سے زیارت گاہوں ، بقعہ جات اور مساجد میں ہر طرح کی سہولیا ت کو فراہم کرنا وقف بورڈ کے فرائض منصبی میں شامل ہے تاہم رمضان المبارک کے دوران لو گوں کی طرف سے کثرت عبادت کے پیش نظر خصوصی انتظامات کئے جارہے ہیں ۔وائس چیئرمین نے کہا کہ متبرک مقامات پر پانی اور بجلی کی بلا خلل سپلائی کو ممکن بنانے کے لئے متعلقہ محکمہ جات کے ساتھ معاملہ اٹھایا گیا ہے اور تلقین کی گئی ہے کہ رمضان ایام کے دوران متبرک مقامات پر بنیادی سہولیات کی فراہمی کے لئے سرکاری سطح پر ضروری اقدامات کئے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ فرش و فروش کا مناسب انتظام بھی کیا گیا ہے تاکہ عوام الناس کو عبادات کے دوران کسی پر یشانی کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ماہ مبارک کی عظمت اور شان کو مدنظر رکھتے ہوئے فیصلہ لیا گیا کہ رمضان المبارک کے دوران عظیم الشان’’نزول قرآن کانفرنس اور مقابلہ حسن نعت ‘‘ کااہتمام ہو گا۔ اس موقعہ پر کہا گیا کہ ماہ مبارک کے دوران مصر سے اعلیٰ پایہ کے قاری حضرات تشریف لارہے ہیںجو زیارت حضرت امیر کبیر میر سیدعلی 

ہمدانی ؒ سرینگر اور زیارت اہم شریف بانڈی پورہ میں قرات کی محافل سجائیںگے۔

 
 
 فلورس سکن کیئر نے ٹایگور ہال میںانعامات تقسیم کئے
سرینگر //فلورس سکن کیئر سرینگر نے منگل کوٹایگور ہال میں ایک تقریب کے دوران خوش قسمت لوگوں میں انعامات تقسیم کئے۔ اس موقع پر فلورس سکن کیئر سرینگر کے سی ای او الطاف احمد نے خطاب کرتے ہوئے کمپنی کی مختلف مصنوعات کے بارے میں لوگوں کو جانکاری دی اور کمپنی کی طرف سے فروخت کئے جانے والے منصوعات سے کشمیر میں بڑھے لکھے نوجوانوں کو روز گار فراہم کرنا کمپنی کا ایک مقصد ہے۔ میٹنگ میں کمپنی کے ڈیلروں کے علاوہ ایگزیکیٹوز سمیت دیگر عملہ بھی موجود تھا۔ 
 
 

سماج کو بااختیار بنانے میں خواتین کا اہم رول

شمع فائونڈیشن کے اہتمام سے کشمیر یونیورسٹی میں سمینار

سرینگر// شمع فائونڈیشن نے کشمیر یونیورسٹی کے شعبہ سوشل ورک کے اشتراک سے ایک روزہ سمینار بعنوان ’’صنفی انصاف اور خواتین کو بااختیار بنانا‘‘ منعقد کیا جس میں ماہرین تعلیم،سابق جج اور طلبا کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ اس موقعہ پرمقررین نے سماج میں خواتین کے حقوق کو بحال کرنے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ جب تک خواتین کو اخلاقی و قانونی حق حاصل نہیںہوگا تب تک سماج میں انتشار اور اضطرابی کیفیت برقرار رہے گی۔ مقررین نے اسلامی تعلیمات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ سماج کو بااختیار بنانے میں خواتین کا اہم رول بنتا ہے۔ انہوں نے اس موقعہ پر ریاست اور بیرون ریاست خواتین پر ہورہی زیادتیوں کی تفصیلات فراہم کرتے ہوئے شرکاء کی توجہ اس جانب مبذول کرائی ۔ سیمینار میں جن مقررین نے اظہار خیال کیا اُن میں پروفیسر حمید نسیم رفیع آبادی، جسٹس (ر)بشیر احمد کرمانی، ڈاکٹر قراۃ العین، پروفیسر حسین (شعبہ قانون)، سینئر اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر عادل بشیرکے علاوہ ڈاکٹر شازیہ منظور شامل ہیں
 
 

دارالعلوم فاطمۃ الزھراگزریال میں خواتین کا سالانہ اجتماع 

اشرف چراغ

کپوارہ// گزریال کپوارہ میں قائم دا رالعلوم مدرسہ فاطمۃ الزھرا الغازیہ میں خواتین کا ایک دینی اجتماع منعقد ہوا جس میں ضلع کے متعد د علاقوں سے تعلق رکھنے والی سینکڑوں خواتین نے شرکت کی ۔اس موقع پردارالعلوم میں زیر تعلیم طالبات نے مختلف پروگرام پیش کر کے سامعین کو محظوظ کیا جبکہ ایک درجن طالبات کو بہتر کا رکردگی پر حوصلہ افزائی کی گئی ۔دارالعلوم کی معلمات غزالہ ،سمیہ ،خالدہ اور سما کی کا ر کردگی کو سراہا گیا اوراعزاز سے نوازا گیا ۔اجتماع کے دوران ان خوش نصیب والدین کی دستاد بندی کی گئی جن کی بچیو ں نے دارالعلوم میں مختلف شعبوں میں بہترین کارکردگی دکھائی جبکہ کئی ایک نے قرآن پاک حفظ کیا ہے ۔اس دوران مدرسہ کے بانی و سر پرست مولا ناغازی حسین مکی نے اپنے خطاب میں  کہا کہ موجودہ دور میں والدین پر یہ اہم ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ اپنی بچیوں کو دینی تعلیم سے آ راستہ کریں ۔
 
 
 
 
 
 

شوپیان کے کئی وفود اشرف میر سے ملاقی

سرینگر//شوپیاں ضلع سے تعلق رکھنے والے کئی عوامی وفود نے خوراک،شہری رسدات اور امور صارفین کے وزیر محمد اشرف میر کے ساتھ ملاقات کی اور انہیں اپنے اپنے مسائل سے آگاہ کیا۔اس دوران اونورہ ،کنجور، وچی، پالپورہ، کاپرن، مد پورہ اور دیگر علاقہ کے لوگوں نے سڑکوں، بجلی، تعلیم اور غذائی اجناس کے حوالے سے اپنے مسائل کو وزیر موصوف کی نوٹس میں لایا۔وزیر موصوف جو ضلع ترقیاتی بورڈ شوپیاں کے چیئرمین بھی ہیں، نے وفود کے مسائل غور سے سُنے اور یقین دلایا کہ ان پر ہمدردانہ غور کیا جائے گا۔انہوں نے متعلقہ حکام کو ہدایت دی کہ وہ اس بات کو یقینی بنائیں کہ ضلع کے لوگوں کو غذائی اجناس کی دقتوں کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ انہوں نے عوامی مطالبات کو معیاد بند مدت کے اندر پورا کرنے پر زور دیا۔
 
 
 
 

تندہی کے ساتھ اپنے فرائض انجام دیں

ویری کی اپنے ماتحت محکمہ کے افسروں کو ہدایت

سرینگر//دیہی ترقی او رپنچایتی راج کے وزیر عبدالرحمان ویری نے کہا کہ ریاست میں دیہی ترقی سیکٹر کے تحت عملائی جارہی سکیموں کو موثر طریقے پر عملایا جانا چاہئے تاکہ عام لوگ ان سے استفادہ کرسکیں۔انہوں نے کہا کہ محکمہ دیہی ترقی کے ساتھ وابستہ ہر کوئی اہل کار اپنی سرگرمی اور کام کے لئے جواب دہ ہے اور ہر افسر کو لگن اور تندہی کے ساتھ اپنے فرائض انجام دینے چاہئے۔وزیر موصوف نیشنل رورل لائیولی ہڈ مشن کے تحت جاری سکیموں کی عمل آوری کا جائزہ لینے کے لئے طلب کی گئی ایک میٹنگ کے دوران بول رہے تھے۔ میٹنگ میں انٹگریٹیڈ واٹر شیڈ منیجمنٹ پروگرام کا بھی جائزہ لیا گیا۔سیکریٹری آر ڈی ڈی شیتل نندہ اور متعلقہ محکموں کے افسران بھی ا س میٹنگ میں موجود تھے۔این آر ایل ایم کے ڈائریکٹر نے ریاست میں امید سکیم کی عمل آوری اور اس کے تحت حاصل کئے گئے اہداف کے بارے میں وزیر کو جانکاری دی۔انہوں نے کہا کہ اب تک 26054 سیلف ہیلپ گروپ، 2218دیہی انجمنیں قائم کی گئی ہیں جن کے دائرے میں 240089 کنبوں کو لایا گیا ہے ۔ڈائریکٹر نے مزید کہا کہ اب تک 24792سیلف ہیلپ گروپ بینک اکائونٹ کھولے گئے ہیں۔عبدالرحمان ویری نے امید کی عمل آوری کا جائزہ لیتے ہوئے ہدایت دی کہ اس سکیم کے فوائد کو زمینی سطح پر مستحق افراد تک پہنچانے کو یقینی بنایا جانا چاہئے۔انہوں نے مختلف دیہات میں سیلف ہیلپ گروپوں کی سرگرمیوں کے بارے میں بھی تفصیلات طلب کیں۔وزیر کو بتایا گیا کہ ریاست میں اب تک قائم کئے گئے سیلف ہیلپ گروپوں کو 111 کروڑ ورپے کی مالی معاونت فراہم کی جاچکی ہے۔نیشنل رورل لائیولی ہڈ مشن کے ڈائریکٹر نے وزیر کو بتایا کہ ریاست میں 206 ملک کلیکشن سینٹر کھولے گئے ہیں جن کا انتظامات مقامی لوگ چلاتے ہیں۔وزیر نے اس پروجیکٹ کی عمل آوری پر کڑی نگاہ رکھنے کی ہدایت دی تاکہ اس کو کامیاب بنایا جاسکے۔حمایت کے چیف اوپریٹنگ آفیسر نے وزیر کو جانکاری دیتے ہوئے دیہی ترقی محکمہ کی وزارت کی جانب سے 2016سے 2019ء تک مقرر کئے گئے اہداف اور اب تک کی حصولیابیوں کے بارے میں تفصیلات دیں۔ انہوں نے کہاکہ جے کے ایس آر ایل ایم کی جانب سے سات پروجیکٹ عمل آوری ایجنسیوں کو منظوری دی گئی ہے۔ان ایجنسیوں کی جانب سے 20701 امید واروں کو مختلف ہنروں کی تربیت فراہم کرنے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے ۔آج کی تاریخ میں 14تربیتی مراکز کام کر رہے ہیں جن میں 2997 امید واروں کو تربیت دینے کی گنجائش ہے ۔انہوں نے کہا کہ 31؍ مئی تک مزید 10تربیتی مراکز قائم کئے جائیں گے جن میں 2500امید واروں کو تربیت فراہم کرنے کی گنجائش ہوگی ۔عبدالرحمان ویری نے سکیموں کی موثر عمل آوری کے لئے ضلع سطح پر عملے کی تعیناتی پر زور دیا ۔ میٹنگ میں کشمیر صوبے میں انٹگریٹیڈ واٹر شید منیجمنٹ پروگرام کی عمل آوری کا بھی جائزہ لیا گیا ۔آئی ڈبلیو ایم پی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر نے کہا کہ اب تک 159پروجیکٹ منظور کئے گئے ہیں جن پر 979.72کروڑ روپے لاگت آنے کا اندازہ ہے۔اس میں سے مارچ 2018ء کے آخر تک 165.97 کروڑ روپے خرچ کئے جاچکے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ مرکزی حکومت نے حال ہی  میں 40کروڑ روپے واگزار کئے ہیں۔عبدالرحمان ویری نے آئی ڈبلیو ایم پی کے دیگر عہدہ داروں کے ساتھ بھی تبادلہ خیال کیا۔