مزید خبریں

کشتواڑ میں جنم اشٹمی 

شوبھا یاترا کے انتظامات کو حتمی شکل 

اے آئی بٹ
کشتواڑ//ضلع ترقیاتی کمشنر انگریز سنگھ رانا کی قیادت میں شری کرشن جنم اشٹمی منانے اور شوبھا یاترا نکالنے کے سلسلہ میں کئے جارہے انتظامات کو ایک اجلاس میں حتمی شکل دی۔اجلاس میں سناتن دھرم سبھا کے نمائندوں کے علاوہ سینئر سرکاری عہدہ داراں بھی شامل تھے۔اجلاس کے آغاز میں سناتن دھرم سبھا کے صدر ہنس راج بھوٹیال نے جنم اشٹی تہوار منانے کے لئے جائے مقام اور شوبھا یاترا کے روٹوں کی جانکاری دی  اور ان مقامات پر معقول سہولیات وسیکورٹی کا بند و بست کرنے کی درخواست کی۔ضلع ترقیاتی کمشنر نے سبھا کے ممبران کو سیکورٹی، صحت و صفائی، طبی سہولیات، پینے کے پانی کے تمام انتظامات کی یقین دہانی کی۔انہوں نے ایگزیکٹو انجینئر تعمیرات عامہ کو جنم اشٹمی تہوار سے قبل شو مندر روڈ پر میکڈم بچھانے کی ہدایت دی۔.
 
           

 سوچھ بھارت مشن پرریاسی میں ورکشاپ 

ریاسی //ضلع انتظامیہ کی جانب سے سوچھ بھارت مشن پر ایک ورکشاپ کا اہتمام کیا گیا ۔ورکشاپ کا مقصد سوچھ بھارت مشن پر مباحثہ میں تیزی لانا اور اجتماعی کارروائی کرنا اور تمام فلیڈ عہدہ داروں کے ساتھ شرکا کی سوچھ بھارت مشن پر تبادلہ خیال کرنا تھا ۔ورکشاپ زیر قیادت ضلع ترقیاتی کمشنر پرسننا راما سوامی اور اے سی ڈی ریاسی منعقد ہوا۔ورکشاپ میں ایم وائی ملک ،ڈٖی پی او پرویندر کور، بی ڈی او کٹرہ سنجیو شرما ، بی ڈی او جج باگلی گورجیت سنگھ،بی ڈی او ارناس او رتمام اہلکاروں نے شرکت کی۔ایس بی ایم کی اہمیت کو اُجاگر کرتے ہوئے ڈی سی نے کہا کہ سوچھ ریاسی کا مقصد حاصل کرنے میں ورکشاپ ایک سنگ میل کی حثیت رکھتا ہے۔اور ہمیں توقع ہے کہ5ستمبر تک ریاسی کو کھلے میں پاخانہ سے پاک قرار دینے کاہدف حاصل ہوگا۔انہوں نے مزید کہا کہ سوچھ بھارت مشن فقط صحت و صفائی کا ایک مدعا نہیں ہے بلکہ ایک انسانی وقار کا معاملہ ہے۔ہم یہ ہدف تب ہی حاصل کر سکیں گے جب سرکار، این جی او اور شہری اکٹھا ہو جائیںگے۔ورکشاپ سے اے سی ڈی نے بھی خطاب کیا۔رورل سینٹیشن جموں کے ماسٹر ٹرینر ونود کمار نے شرکا کو تربیت دی۔
 
 
              

محکمہ صحت کیFMPHWتنخواہوں کی واگزاری کیلئے فریادی

زاہد بشیر
گول// ضلع بھر میں محکمہ صحت میں کام کر رہی FMPHWگزشتہ 6ماہ سے لگا تار تنخواہوں سے محروم ہیں جس وجہ سے انہیں کافی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ اگر چہ کئی مرتبہ ان ورکروں نے سرکار اور انتظامیہ سے تنخواہیں واگزار کرنے کی مانگ بھی کیں لیکن اس کی جانب کسی نے کوئی توجہ نہیں دی ۔ آج ضلع صدر رام بن میں محکمہ صحت کے آفیسران سے FMPHWکے ایک وفد نے ملاقات کی جس میں انہوں نے ایک یا دو ہفتے کے اندر اندر تنخواہیں واگزار کرانے کی مانگ کی ۔ ذرائع ابلاغ کے ساتھ بات کرتے ہوئے محکمہ صحت کے ایک آفیسر نے کہا کہ مرکز کی جانب سے تنخواہوں میں دیری ہو رہی ہیں اور یہ سکیم مرکز کی ہے جس طرح سے اوپر  سے تنخواہ آئے گی ہم بھی آگے اسی طرح سے تنخواہیں دیتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ اس سے قبل بھی پانچ چھ ماہ کی تنخواہ یکمشت دی تھی اور آج کی بار بھی ایسا ہی ہے اور ایک دو ہفتے کے اندر اندر ان ورکروں کو تنخواہ دی جائے گی ۔FMPHWکا کہنا ہے کہ اگر ہماری تنخواہ جلد از جلد واگزار نہیں کی گئی تو ہمیں جو کام سونپا جاتا ہے ہم کوئی بھی کام نہیں کریں گے ۔
 
                 

رام بن روڈ سیفٹی اجلاس میںحادثات پر قدغن کی قوائد

رام بن //ضلع مجسٹریٹ شوکت اعجازبٹ کی قیادت میں جمعہ کے روز رام بن میں ضلع روڈ سیفٹی کمیٹی کا ایک اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس میں سڑک حادثات کو کم کرنے ،لوگوں میں روڈ سیفٹی کے تئیں بیداری پیدا کرنے ،سڑکوں کا سیفٹی آڈٹ کرنے اور سڑکوں کی بہتری پر مباحثہ کیا گیا ۔ کمیٹی نے قومی شاہراہ پر ناشری سے بانہال تک ان مقامات کی نشاندہی کرنے پر زور دیا جہاںپر سڑک حادثات کا خطرہ زیادہ رہتا ہے ،تاکہ وہاں پر جنگلہ نصب کیا جا سکے۔اسکے علاوہ رام بن ، بانہال اور رام سو میں چوبیس گھنٹے ایمبولنس کو رکھنے کا بھی فیصلہ لیا گیا ،تاکہ کسی بھی صورتحال سے نمٹا جا سکے۔اجلاس میں ایس ایس پی رام بن انیتا شرما ، اے سی آر و و یک پوری، سی پی او اوتم سنگھ ، اے ایس پی سنجے پریہار، اے آر ٹی او محمد سلیم ، سی ایم او ،پی ڈبلیو ڈی ، پی ایم جی ایس وائی ،پی ایچ ای کے ایگزیکٹو انجینئروں ، سی ای او ،این جی اوز او رتعمیراتی کمپنیوں کے نمائندوں نے شرکت کی۔ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ نے انجینئروں سے تمام سڑکوں کی مرمت یقینی کرنے کی ہدایت دی اور سڑکوں پر بنے ہوئے تمام گڑھوں کو پُر کرنے کی ہدیات دی۔اس سے قبل اے آر ٹی او نے اجلاس کو بتایا کہ تیز رفتاری اور زیادہ کرایہ وصول کرنے،غلط پارکنگ، شراب پی کر گاڑی چلانے اور کم سن ڈرائیونگ وغیرہ کا خاتمہ کرنے کے لئے کئی اقدام کئے گئے ہیں۔انہوں نے انکشاف کیا کہ ٹریفک کی خلاف ورزیاں کرنے والوں سے 21لاکھ روپیہ بطور جُرمانہ وصول کیا گیا ہے۔اسکے علاوہ 10 ڈرائیونگ لائسنس اور 12روٹ پرمٹ منسوخ کئے گئے ہیںجبکہ14اشخاص کو اس سلسلہ میں نوٹس اجرا کی گئی ہے۔
 
 
 

ڈوڈہ میں آج سے بغیر ہیلمٹ کے دو پہیہ کو ایندھن نہیں ملے گا

یوگیش سگوترہ 
جموں //ضلع ڈوڈہ کے حدود میں بغیر ہیلمٹ کے دو پہیہ وہیکلز کو پٹرول فراہم نہیں ہوگا۔ضلع ترقیاتی کمشنر نے اس سلسلہ میں جاری حُکم نامہ میں بغیر ہیلمٹ کے دو ہیہ وہیکلز کو ضلع میں پٹرول فراہم کرنے پر مورخہ 31اگست2018 سے پابندی عائد کی ہے۔پٹرول پمپوں اور فلنگ اسٹیشن کے مالکان کو سی سی ٹی او نصب کرنے کی ہدایت دی گئی ہے۔انہوں نے ایس ایچ اوز ، انچارج پولیس پوسٹوں یا ڈی اسی ی رینک سے بالا افسروں کے علاوہ ایگزیکٹو مجسٹریٹوں کو اس پابندی کو سختی سے عملانے کی ہدایت دی ہے۔اور اس سلسلہ میں قصور واروں کے خلاف کاروائی کرنے کے لئے ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ کو سفارش کرنے کی ہدایت دی ہے۔حُکم کے مطاب اس حُکم کی خلاف ورزی پر دفعہ188۔آر پی سی کے تحت کاروائی کی جا ئے گی۔ضلع  مجسٹریٹ نے یہ فیصلہ ا نسانی زندگی کے تحفظ کے لئے لیا ہے۔یہ فیصلہ لگاتار ہو رہے سڑک حادثات کو کم کرنے اور ضلع میں ہیلمٹ پہننے پر سختی سے عمل کرنے اور دو پہیہ سواروں کی حفاظت کے لئے لیا گیا ہے۔
 
 
      

سلال پائور اسٹیشن میں سوچھتا پکھواڑہ اختتام پذیر 

ریاسی//سلال پائور اسٹیشن کی جانب سے مورخہ 16.08.2018 سے منعقدہ سوچھتا پکھواڑہ کا اختتام جمعہ کے روز یعنی کہ مورخہ 31.08.2018. کو جیوتی پورم میں انعامات کی تقسیم کاری کے ساتھ ہوا ۔اس سلسلہ میں منعقدہ تقریب کی قیادت جنرل منیجر سلال پائور اسٹیشن ہمانشو شیکھر نے کی ،جنھوں نے  سوچھتا پکھواڑہ کے دوران منعقدہ مختلف مقابلوں جیسے کہ مضمون نویسی ، مصوری مقابلے  اور سوچھتا مقابلوں میں شرکت کرنے والے فاتح کو مبارک باد دی ۔ چیف انجینئر (سول) راکیش گوئل ، سینئر منیجر سیرا فینا لاکرا، ،این ایچ پی سی کے سینئر افسراں ، اساتذہ اور طلاب بھی اس موقعہ پر موجود تھے۔اس موقعہ پر اپنے خطاب میںہمانشوشیکھر نے کہاکہ سوچھتا مہم فقط پکھواڑہ تک ہی محدود نہیں ہونی چاہیے بلکہ اسکے مطلوبہ نتائج حاصل کرنے کے لئے اس عمل کو جاری رکھا چاہیے۔انہوں نے مزید کہا کہ وزیر اعظم کی جانب سے لانچ کی گئی سوچھ ابھیان کی کامیابی انسان کے ذہنوں کو صاف کرنے سے ہوگی۔انہوں نے کہا کہ صحت مند طرز زندگی نہ صرف جسمانی صفائی پر منحصر ہے بلکہ ایک صاف ذہن ایک صاف ماحول پر ہے کیونکہ ایک صاف ذہن ہی ہمیشہ سے مثبت سوچ رکھتا ہے۔