مزید خبریں

ڈاکٹر بی سری نواس اے ڈی جی سی آئی ڈی مقرر 

سرینگر//حکومت نے ڈاکٹر بی سری نواس کو اے ڈی جی سی آئی ڈی کے عہدے پر تعینات کیا ہے ۔اس سلسلے میں جاری حکمنامے میں ڈاکٹر سری نواس کو عبدالغنی میر کی جگہ اس عہدے پر فائز کیا گیا ۔ حکمنامے کی رو سے عبدالغنی میر کو اے ڈی جی پی پیڈکوارٹر پی ایچ قیو میں تعینات کیا گیا ہے۔
 

کشمیر میں صحافت سے وابستہ افراد انتہائی دبائو کا شکار

کشمیری صحافی کی گرفتاری پر بین الاقوامی صحافتی انجمن برہم

سری نگر//عالمی صحافتی تنظیم انٹر نیشنل فیڈ ریشن آف جرنلسٹس نے کشمیر ی صحافی و’کشمیر نریٹر ‘کے اسسٹنٹ ایڈیٹر آصف سلطان کی گر فتاری کی مذمت کرتے ہو ئے اسکی فوری رہائی کا مطالبہ کیا ہے۔کشمیر میں صحافیوں کی صورتحال سنگین قراردیتے ہو ئے آئی ایف جے نے کہا ہے کہ اس سے پہلے بھی کئی بار متعدد صحافیوں کو عسکریت پسندی کے مبینہ الزامات میں گرفتار کیا گیا ۔ادھر کشمیر جر نلسٹس ایسو سی ایشن نے بھی آصف سلطان کی گر فتاری کی مذمت کرتے ہو ئے ان کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا ۔ آی جے ایف کی جانب سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ پولیس نے کشمیر صحافی اور کشمیر نریٹر کے اسسٹنٹ ایڈیٹرآصف سلطان کو عسکریت پسندی کے ساتھ منسلک ہو نے کے مبینہ الزامات میں گزشتہ 6روز سے حراست میں رکھا ہے ۔ آئی ایف جے نے کہا کہ آصف سلطان پہلا صحافی نہیں ہے جس کو عسکریت پسندی کے مبینہ الزامات میں گر فتار کیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اس سے پہلے بھی کامران یو سف کو 6ماہ کی طویل حراست کے بعد ضمانت پر رہا کیا گیا جبکہ اسی طرح کشمیر اوبزر ور کے عاقب جاوید حکیم کو بھی ایک علیحدگی پسند سے انٹر ویو کے سلسلے میں دہلی پو چھ تاچھ کے لئے طلب کیا گیا ۔انہوں نے بتایا کہ کشمیر صحافیوں کو سنگین حالات کا سامنا ہے اور خاص کر 14جون سے جب رایزنگ کشمیر کے ایڈیٹر اور معروف صحافی شجاعت بخاری کو ان کے دفتر کے باہر قتل کیا گیا ۔آئی ایف جے کے جنرل سیکریٹری انتھونی بیلانگر نے کہا کہ آصف سلطان کی گر فتاری اور ان پرلگا ئے گئے الزامات نا قابل قبول ہیں ۔انہوں نے آصف سلطان کی فوری رہائی کا مطالبہ کرتے ہو ئے کہا کہ کشمیر میں میڈیا سے وابستہ کار کنوں کو درپیش خراب صورتحال کا ازالہ کیا جائے ۔یاد رہے کہ آصف سلطان کو عسکریت پسندی کے مبینہ الزام میں کچھ روز قبل گرفتار کیا گیا ہے ۔آصف سلطان ایک میگزین کشمیر نریٹر کے اسسٹنٹ ایڈیٹر ہے اور آصف سلطان کی گر فتاری کو لے کر کئی تنظیموں نے گر فتاری کی مذمت کر تے ہو ئے اس کی فوری رہائی کی مانگ کی ہے ۔
 

سید صلاح الدین کے فرزندان کی گرفتاری مذموم

نئی دہلی کے اوچھے ہتھکنڈوں سے جذبہ آزادی کو دبا نہیں سکتا:صحرائی

سرینگر// تحریک حریت کے چیرمین محمد اشرف صحرائی نے حزب سربراہ سید صلاح الدین کے دو بیٹوں سید شاہد یوسف اور سید شکیل احمد کو NIAکے ذریعے گرفتار کرکے دہلی لے جانے کی کارروائی کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ حزب سربراہ کے بیٹوں کی گرفتاری سراسر انتقام گیری ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت آزادی پسند قائدین کی کردار کُشی کرنے، اُن کی عوامی وسیاسی ساکھ کو نقصان پہنچانے اور عوام میں بداعتمادی کا ماحول پیدا کرنے کی ناکام کوشش کررہی ہے۔ صحرائی نے کہا کہ اصل میں نئی دہلی جذبۂ آزادی کو ختم کرنے یا قائدین کو جدوجہدِ آزادی کی قیادت سے دستبردار کرانے میں ناکام ہونے کے بعد اب اوچھے ہتھکنڈے استعمال کررہی ہے، تاکہ جدوجہدِ آزادی کی قیادت کرنے والے قائدین تحریک آزادی سے دستبردار ہوجائیں۔ صحرائی نے کہا کہ سید صلاح الدین کے بیٹوں کی گرفتاری انتقام گیری ہے اور ان کی گرفتاریوں کا مقصد سید صلاح الدین پر دباؤ بڑھانا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سید صلاح الدین کے بچوں کا اس کے سوا کوئی قصور نہیں ہے کہ وہ اس کے بیٹے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سید صلاح الدین نے 30سال قبل اپنی فیملی سے علیحدگی اختیار کرکے خود کو آزادی کے لیے وقف کیا ہوا ہے اور دونوں کے الگ الگ راستے ہیں۔ اس کے بیٹوں کا کسی بھی سیاسی یا غیر قانونی سرگرمی کے ساتھ تعلق نہیں ہے۔ صحرائی نے کہا کہ بنیادی طور مسئلہ کشمیر ایک حل طلب مسئلہ ہے اور عالمی سطح پر تسلیم شدہ متنازعہ مسئلہ ہے اور اس مسئلے کو بامعنیٰ بات چیت سے حل کرنے کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہاکہ آزادی پسند قائدین یا ان کے رشتہ داروں کو گرفتار کرنے سے مسئلہ کشمیر کی متنازعہ حیثیت کو ختم نہیں کیا جاسکتا ہے۔ کشمیر کی اسی متنازعہ حیثیت کے پیش نظر پوری کشمیری قوم کا مطالبۂ حق خودارادیت کا ہے۔ 
 
 

وکیل کی گرفتاری پر بار ایسوسی ایشن سیخ پا

؎سرینگر//جموں کشمیر ہائی کورٹ بار ایسو سی ایشن نے ایڈوکیٹ حسین رشید ، جنہیں یکم ستمبر کی درمیانی شب اُن کے گھر شیوہ پازلپورہ سوپور سے گرفتارکرلیا گیا تھا، کی گرفتاری کی مذمت کی ہے۔ ایڈوکیٹ حسین رشید 2014سے ہائی کورٹ سرینگر میں تعینات تھے اور اس کے علاوہ انہوں نے ایڈوکیٹ محمد امین وڈا کے ساتھ بھی کام کیا ۔ 26اگست 2018کو اُن کی شادی ہوئی اور سات دن کے بعد ایس او جی سوپور نے انہیں بلا کسی جواز کے گھر سے اٹھا کر نامعلوم جگہ پر منتقل کیا۔ایڈوکیٹ موصوف کے والد نے کئی بار ایس او جی کیمپ جاکر اپنے بیٹے کا اتہ پتہ جاننے کی کوشش کی لیکن ہر بار اُن کو وہاں سے خالی ہاتھ لوٹنا پڑا۔ بار ایسوسی ایشن ایس او جی کی ایڈوکیٹ حسین رشید کی گرفتاری اور نظر بندی کو قانون کی خلاف ورزی اور انڈین سپریم کورٹ کے فیصلوں کے برخلاف مانتے ہوئے اس کاروائی کی سخت الفاظ میں مذمت کرتی ہے۔ بار کی طرف سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ ایڈوکیٹ حسین رشید کی بلا جواز گرفتاری اور نظربندی بنا کسی شرط کے فوراً ختم کی جائے تاکہ بار ایسو سی ایشن یہ معاملہ ہائی کورٹ کی نوٹس میں لانے پر مجبور نہ ہوجائے ۔
 
 

کنٹرول لائن پر فائرنگ ، پاکستانی شہری ہلاک

نیوز ڈیسک
 
اسلام آباد //پاکستان نے کہا ہے کہ بھارتی فوج نے ایل او سی کے کوٹ کوٹیرہ سیکٹر میں شہری آبادی کو نشانہ بنایاجس کے نتیجے میں ایک شہری ہلاک ہوگیا۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی جانب سے جاری بیان کے مطابق بھارتی فوج نے ایل او سی کے کوٹ کوٹیرہ سیکٹر میں شہری آبادی کو نشانہ بنایا۔آئی ایس پی آر کے مطابق بھارتی فوج کی بلااشتعال فائرنگ کے نتیجے میں ہلاک ہونے والا شہری عبدالرؤف مویشی چرارہا تھا۔واضح رہے گزشتہ روز بھی بھارتی فوج نے ایل او سی پر واقع گوئی سیکٹر کے گاؤں اندھیری میں راکٹ لانچر حملہ کیا تھا جس کے باعث 70 سالہ بزرگ محمد صدیق شدید زخمی ہوگئے تھے۔بیان میں کہا گیا ہے کہ بھارت لگاتار فائر بندی کی خلاف ورزیاں کررہا ہے اور شہری آبادی کو نشانہ بنا رہا ہے۔
 

بلدیاتی وپنچایت چناؤ 

ترقیاتی کمشنر بانڈی پورہ نے تیاریوں کاجائزہ لیا

بانڈی پورہ//ضلع ترقیاتی کمشنر بانڈی پورہ ڈاکٹر شاہد اقبال چودھری جو کہ ضلع چنائو آفیسر بانڈی پورہ بھی ہیں، نے آفیسران کی ایک میٹنگ میںآنے والے بلدیاتی اورپنچایت چنائو کے لئے کی جارہی تیاریوں کاجائزہ لیا۔اے ڈی ڈی سی ،ایس ایس پی ،اسسٹنٹ کمشنر ریونیو،ڈپٹی ضلع چنائو آفیسر،جوائنٹ ڈائریکٹر پلاننگ ،ایس ڈی ایم سوناواری اوردیگر متعلقہ آفیسران بھی میٹنگ میں موجود تھے۔میٹنگ کے دوران چنائو عمل کو کامیاب بنانے کے لئے تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔ترقیاتی کمشنر نے کہا کہ تمام افسران اورملازمین کو چنائو کمیشن کے ساتھ رابطے میں رہنا چاہیے ۔میٹنگ میں افرادی قوت،ترتیب،جیوٹیگنگ،کیمونیکیشن ،میڈیاسیل،شکایتی سیل اور دیگر معاملات پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔دریں اثناء نوڈل آفیسران کو نوٹیفکیشن جاری ہونے کے فوراً بعد کام شروع کرنے کی ہدایت دی گئی۔اس دوران آر اووز اوراے آر اووز کو چنائو عمل کے بارے میں تربیت دی گئی۔
 

بانڈی پورہ مارکیٹ کی سڑکوں اورفٹ پاتھوں پر چھاپڑی فروشوں کاقبضہ

عازم جان
 
بانڈی پورہ//بانڈی پورہ کے مارکیٹ میں چھاپڑی فروشوں اور مچھلی فروش خواتین نے فٹ پاتھوں اور سڑکوں پر ناجائز طور قبضہ کرکے ٹریفک کی نقل وحمل اور راہگیروں کے آنے جانے کو مشکل بنادیا ہے۔عام لوگوں نے میونسپل کمیٹی اور پولیس پر الزام عائد کیا ہے کہ انہوں نے چھاپڑی فروشوں کو کھلی چھوٹ دے کر بانڈی پورہ مارکیٹ میں عام لوگوں کا چلنا پھرنا محال بنادیا ہے۔بانڈی پورہ کے بازار میں جگہ جگہ مچھلی فروش خواتین اور چھاپڑی فروشوں نے اپنا قبضہ جمالیا ہے۔اس وجہ سے ایک طرف ٹریفک کی نقل وحمل متاثرہوئی ہے اور مارکیٹ میں دن بھر ٹریفک جام رہتا ہے جبکہ عام لوگوں کو بھی بازار میں چلنے پھرنے میں مشکلات پیش آتی ہیں۔لوگوں کا کہنا ہے کہ میونسپل حکام اور پولیس چھاپڑی فروشوں سے ہفتہ وصول کرکے انہیں سڑکوں اور فٹ پاتھوں پر خوانچے لگانے کی اجازت دیتے ہیں۔ٹریڈرس فیڈریشن نے کہا کہ ڈپٹی کمشنر کی نوٹس میں اگرچہ یہ معاملہ کئی بار لایا گیا لیکن ان کی یقین دہانیوں کے باوجودبازار سے چھاپڑی فروشوں کو نہیں ہٹایا گیا۔سول سوسائٹی بانڈی پورہ نے انتظامیہ سے اپیل کی کہ بانڈی پورہ مارکیٹ میں چھاپڑی فروشوں اور مچھلی فروش خواتین کو فوری طور کسی دوسری جگہ منتقل کیا جائے تاکہ لوگوں کو چلنے پھرنے میں آسانی ہو۔
 

بانڈی پورہ میں پی ڈی پی کاکنونشن

مظفر حسین بیگ نے لوگوں کا بھروسہ نہیں توڑا:سفینہ بیگ

عازم جان
 
بانڈی پورہ//پیپلزڈیموکریٹک پارٹی شعبہ خواتین کی صدر سفینہ مظفر بیگ نے کہا ہے کہ مظفر حسین بیگ بھاجپا پی ڈی پی مخلوط حکومت کا حصہ نہیں تھے اور کشمیری عوام کا بھروسہ توڑنے میں ان کا کوئی رول نہیں ہے۔بانڈی پورہ میں پی ڈی پی کارکنوں کے کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کشمیری عوام کا بھروسہ توڑنے کے ذمہ دار حکومت کی بھاگ ڈورمیں شامل دوسرے لوگ ہیں۔انہوں نے کہا کہ مظفر حسین بیگ نہ ریاستی حکومت میں شامل تھے اور ناہی نئی دلی کی حکومت میں ،پس بیگ صاحب کچھ نہیں کرسکے۔انہوں نے کہا کہ ہمیں معلوم ہے کارکنوں کو بنیادی سطح پر کچھ نہیں ملا،جس کی انہیں امید تھی ،لیکن اس کے ذمہ دار مظفر بیگ نہیں بلکہ دوسرے لوگ ہیں،جو حکومت میں شامل تھے۔سفینہ بیگ نے کہا اگر مظفر بیگ حکومت میں  ہوتے تو وہ لوگوں کیلئے بہت کچھ کرتے۔صحافیوںکے سوالوں کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مظفر حسین بیگ نے پی ڈی پی بنائی،پی ڈی پی کا آئین بنایا ،وہ پی ڈی پی ہیں اور پی ڈی پی اُن کے ساتھ ہیں۔ اس موقعہ پر انہوں نے مظفر حسین بیگ کے پارلیمانی فنڈ سے ایک کروڑ روپے ایک ایمبولنس گاڑی خریدنے اور بارہمولہ کالج میں ویٹنگ روم تعمیر کرنے کیلئے دینے کا اعلان کیا۔ 
 

طلباء لگن کے ساتھ تعلیم حاصل کریں 

عازم جان 
 
بانڈی پورہ//حسن کھہیوہامی میموریل ڈگری کالج بانڈی پورہ میں پی ڈی پی کے شعبہ خواتین صدر سفینہ بیگ نے طلباء کے ساتھ بات چیت کے دوران انہیں لگن کے ساتھ تعلیم حاصل کرنے پر زوردیا۔انہوں نے کہا کہ دنیا میں اس وقت اسلام مخالف دورچل رہا ہے اور اس میں ہمیں لگن کے ساتھ تعلیم حاصل کرنالازمی بن گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ تعلیم سے ہی ہم دنیا کواپنا تابع بناسکتے ہیں اور کامیابی ہماری قدم چومے گی۔اس موقعہ پرڈپٹی کمشنر بانڈی پورہ ،ایس ایس پی بانڈی پورہ بھی موجودتھے۔ 
 

زرعی تحقیق کوکسانوں تک پہنچایا جائے

 وائس چانسلرسکاسٹ کشمیر

سرینگر//سکاسٹ کشمیر کے وائس چانسلر پروفیسر نذیر احمد کی صدارت میںکپواڑہ میں ایس اے سی میٹنگ منعقد ہوئی ۔میٹنگ میں کے وی کے کپواڑہ کے مجموعی کام کاج کا جائیزہ لیا گیا۔اس موقعہ پر پچھلے برس کی حصولیابیوں اور آنے والے سال کے لئے منصوبہ بندی سے جڑے امور پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔میٹنگ میں سکاسٹ کے ماہرین اورمختلف محکموں کے افسروں و ترقی پسند کاشتکاروں نے شرکت کی۔میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے وائس چانسلر نے سائنسدانوں پر زور دیا کہ وہ اس بات کو یقینی بنائیں کہ زرعی تحقیق کسانوں تک پہنچے تا کہ فصلوں کی پیداوار اور پیداواریت میں اضافہ کیا جاسکے۔انہوں نے کہا کہ یونیورسٹی نے دھان اور سبزیوں کے معیاری بیج تیار کئے ہیں جن سے کسانوں کو کافی فائدہ ہوا ہے۔ انہوں نے متعلقین پر زور دیا کہ وہ ٹنگڈار میں مُشک بدجی کو بڑھاوا دیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ کسانوں کو کاشتکاری کے جدید طور طریقوں اور ٹیکنالوجی سے روشناس کرایا جانا چاہئے۔انہوں نے اس موقعہ پر مستحقین میں1.40 لاکھ روپے چیک تقسیم کئے۔انہوں نے کے وی کے کی طرف سے اخروٹ کی کاشتکاری سے متعلق جانکاری پر مبنی ایک کتابچہ بھی جاری کیا۔اس سے پہلے کرشی وگیان کیندر کے کوارڈی نیٹر نے میٹنگ میں کے وی کے کے کام کاج اور حصولیابیوں کا تفصیلی خاکہ پیش کیا۔
 

سوپوراور کولگام میں بھنگ کی فصل تباہ

سرینگر//منیشات کے خلاف کاروائی کرتے ہوئے سوپور پولیس نے چھوروگاوَں میں کئی کنال اراضی پر پھیلی بھنگ کی کاشت کوتباہ کیا۔ بھنگ کی کاشت کے خلاف اپنی کاروائی جاری رکھتے ہوئے سوپور پولیس نے چھورو گائوں میں بھنگ کی فصل کو ضائع کیا۔ ایس ایس پی سوپور جاوید اقبال کی ہدایت پر ایس ڈی پی او سوپور کی نگرانی میں پولیس پوسٹ پتو کھاہ میں تعینات ڈی او کی سربراہی میں پولیس ٹیم اور سیول سوسائٹی سے وابستہ شہریوں نے مشترکہ طورپر سوپور کے چھوروگائوں میں کئی کنال اراضی پر پھیلی بھنگ کی کاشت کو تباہ کیا۔ مقامی لوگوں ، ذی عزت شہریوں اور نوجوانوں نے سوپور پولیس کی جانب سے بھنگ کی کاشت کے خلاف چلائی جارہی مہم کو خوب سراہا ہے۔ادھرونپوہ کھڈونی کولگام میں کولگام پولیس ، ایکسائز اور محکمہ مال نے مشترکہ کارروائی کے دوران کئی کنال اراضی پر پھیلی بھنگ کی فصل کوضائع کیا ۔ مقامی لوگوںاور ذی عزت شہریوں نے پولیس کی جانب سے بھنگ کی کاشت کے خلاف چلائی جا رہی مہم کی بڑے پیمانے پر سراہنا کی۔
 

۔ 100کروڑ روپے مالیت کی ہیروئن 

۔17لاکھ نقدی ضبط ،4گرفتار

بویک ماتھر
 
جموں// نارکوٹکس کنٹرول بیورو نے ایک ارب روپے مالیت کی22کلو گرام ہیروئین اور 17لاکھ روپے نقدی منشیات اسمگلروں سے ضبط کرنے کا دعویٰ کیا ہے ۔NCBزونل ڈائریکٹر جموں وریندر یادونے یہاں منعقدہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ اس سلسلہ میں 4نوجوانوں کو حراست میں لیا گیا ہے جن میں سے 3کا تعلق کشمیر جب کہ چوتھے کا پنجاب سے ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ 2ستمبر کو ایک مصدقہ اطلاع ملنے پر جموں پٹھانکوٹ شاہراہ پر پالی موڑ کٹھوعہ سینٹر وکار JK03C-4756 کوروکا گیا تو دوران تلاشی اس میں سے 22کلو145گرام ہیروئن برآمد ہوئی جس کوگاڑی کی پچھلے سیٹ کے نیچے چھپا کر رکھاگیاتھا۔ یہ ہیروئن ہندواڑہ کشمیر سے پنجاب جالندھر اسمگل کی جارہی تھی۔اس سلسلہ میں بشیر احمد ساکن لاچی پورہ، فیروز احمد شیخ ساکن گنگتھ پورہ اور وسیم محمدساکن ساہتھل کپوارہ کے طور کی گئی ہے۔ملزمان کے طرف سے فراہم معلومات کی بناء پر  این سی بی جموں اور امرتسر نے 3ستمبر کو ایک مشترکہ کارروائی کے دوران پرمجیت سنگھ ولد جگجیت سنگھ ساکن ترنتارن پنجاب کو حراست میں لے لیا ، اس کی گاڑی زیر نمبر PB10DE-7331 سے نقدی 17لاکھ49ہزار400روپے برآمد کئے گئے ۔ ان کے خلاف این ڈی پی ایس ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کر کے مزید تحقیقات شروع کر دی گئی ہے ۔زونل ڈائریکٹر این سی بی نے دعویٰ کیا کہ پوچھ گچھ کے دوران پرم جیت سنگھ نے قبول کیا ہے کہ وہ یہ رقم منشیات کی کھیپ لے کر آرہے نوجوانوں کو دینے کیلئے لے جا رہا تھا۔ انہوں نے کہا کہ نارکوٹکس کنٹرول بیورو کی طرف سے منشیات مخالف مہم کے تحت رواں برس کے دوران یہ 11ویں بڑی کامیابی ہے ۔ 
 

پوشن ابھیان

ترقیاتی کمشنر شوپیان نے ایک روزہ ورکشاپ کا افتتاح کیا

شوپیان//قومی سطح پر ماہ تعذیہ منانے کی مناسبت سے ضلع ترقیاتی کمشنر شوپیان  نے ایک روزہ پوشن ابھیان کا افتتاح کیا۔منی سیکریٹریٹ آرہامہ شوپیان میںمنعقدہ رسمِ آغاز کے موقعہ پر اے ڈی سی،جو کہ آئی سی ڈی ایس کے پروگرام آفیسر بھی ہیں، کے علاوہ کے وی کے شوپیان کے سائنسدان،بلاک میڈیکل آفیسر،سی ڈی پی اووز اور مختلف محکموں کے متعلقہ آفیسران موجود تھے۔صحت،خصوصاً بچوں اور خواتین کے لئے تعذیہ کی اہمیت پررو شنی ڈالتے ہوئے ترقیاتی کمشنر نے کہا کہ قومی تعذیہ مشن کے لئے پوشن ابھیان انتہائی اہمیت کا حامل ہے، جس سے جہاں نوزائد بچوں کی صحت پر مثبت اثرات پڑتے ہیں ،وہیںمائوں کا دودھ پینے سے نو زائد بچوں کی نشوونما کو فروغ حاصل ہوتا ہے۔ترقیاتی کمشنر نے متعلقہ اہلکاروں اور افسران پر تعذیہ کے نظا م کو مزید بہتر بنانے پر زوردیتے ہوئے کہا کہ دوردراز اورپچھڑے علاقوں میں لوگوں کو تعذیہ کی اہمیت کے بارے میں جانکاری فراہم کی جانی چاہیے۔
 

 محکمہ تعلیم کے فرض شناس ملازم کی سبکدوشی پر الوداعیہ 

سرینگر//ناظم تعلیم کشمیر ڈاکٹر جی این ایتو نے کہا ہے کہ دیانتدار اور فرض شناس ملازمین کو سبکدوشی کے بعد عزت و احترام کا مقام دیا جانا چاہئے تاکہ وہ اپنے دیگر ساتھیوں کے لئے ایک رول ماڈل بن سکیں۔انہوں نے ان خیالات کا اظہار ایک تقریب کے دوران کیا جو محکمہ میں او ایس ڈی آئی ایم ڈبلیو کے عہدے پر تعینات ظہور احمد بانڈے کی سبکدوشی کے موقعہ پر منعقد کی گئی تھی۔ڈاکٹر ایتو نے ظہور احمد بانڈے کو ایک انسان دوست شخص قرار دیا۔اس موقعہ پر محکمہ کے دیگر افسران نے بھی ظہور احمد بانڈے کی محکمہ کے تئیں چالیس سالہ خدمات کو یاد کرتے ہوئے کہا کہ اُن کی خدمات کو یاد رکھا جائے گا۔اپنے رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے ظہور احمد بانڈے نے محکمہ میں اپنی چالیس سالہ ملازمت کے بارے میں مختصراً کہا۔ ظہور احمد کہا کہ انہوںنے اپنی مرضی سے استاد کا پیشہ چُنا اور اُن کے خاندان میں یہ پیشہ پچھلی دو صدیوں سے چنا جارہا ہے۔انہوں نے کہا کہ اُن کے دادا جی نے1812 ء میں استاد بننے کو ترجیح دی۔تقریب کے آخر پر محکمہ کے افسران اور اہلکاروں نے ظہور احمد بانڈے، اُن کے بھائی اور فرزندان کو کشمیری شال پیش کرنے کی اُن کی عزت افزائی کی۔
 

  حبیب چھان کاسالانہ عُرس

 ٹھیون کنگن میں منایاگیا

کنگن //روحانی بزرگ اور فقیرحبیب اللہ نجارالمعروف حبیب چھان کاسالانہ عُرس ٹھیون کنگن میں منایاگیا۔اس سلسلے میں رات بھرفقیرکے آستانے پرشب بیداری کی مجلس آراستہ کی گئی جس میں سینکڑوں عقیدتمندوںنے شرکت کی ۔منگل کے روزیہاں عرس کی تقریب منعقد ہوئی اوراس دوران پورے دن درودواذکارکی روح پرورمجالس کااہتمام کیاگیا۔ 
 

بہرو احد لاوڈاری کا سالانہ عرس 7 ستمبر کوہوگا

سری نگر//صوفی بزرگ بہرو احد لاوڈاری کے سالانہ عرس کے سلسلے میں لاوڈارہ بانڈی پورہ  میں 7؍ستمبر 2018ء کو ایک تقریب منعقد ہو رہی ہے ۔ اس موقعہ پر ختمات الالمعظمات اور دوروواذکار کی مجالس کا اہتمام ہوگا۔اس کے علاوہ محفل مشاعرہ اور محفل موسیقی بھی منعقد ہوگی ۔
 
 
 

ترال کے متعدد دیہات میں دھان کی فصل بلاسٹ بیماری کی لپیٹ میں

سید اعجاز
 
ترال//ترال کے کئی دیہات میں وسیع اراضی پر پھیلی دھان کی فصل بلاسٹ بیماری کی لپیٹ میں آگئی ہے۔ متعلقہ محکمہ کا کہنا ہے کہ کسان محکمہ کی تدابیر نظر انداز کرتے ہیں ۔ ترال کے لرگام، لرو، واگڈ، آری پل، دیدار پورہ،جواہر پورہ لام،نہر کھاسی پورہ،چھترو گام سمیت کئی علاقوں میںوسیع اراضی پر پھیلی دھان کی فصل بلاسٹ بیماری کی لپیٹ میں آگئی ہے ۔کسانوں کا کہنا ہے کہ بعض مقامات پرکئی مقامات پر ادویات  چھڑکنے کے باوجود بیماری پر قابو نہیں پایا جارہا ہے ۔ اس حوالے سے محکمہ زراعت کے ایک آفسر نے بتایا کہ محکمہ لوگوں کو پہلے سے ہی جانکاری فراہم کرتا رہا ہے اور ادویات بھی تجویز کی ہیں تاہم کسان ان رہنمائی خطوط کو نظر انداز کرتے ہیں۔ ادھر دیدار پورہ آری پل کے کسانوں نے بتایا کہ امسا ل زرعی یونیورسٹی شالیمار سرینگر کی جانب سے ’مشک بدج‘کے بیج فراہم کئے گئے تھے جو تیارر ہونے کے ساتھ ہی نا معلوم بیماری کا شکار ہوا ہے ۔اس ضمن میں زرعی یونیورسٹی کے اسسٹنٹ ڈائرایکٹر ریسرچ ڈاکٹر جے آر پرے نے بتایا ’’یہ بیج کسانوں کو تجربے کے طور زمین کے ایک معمولی حصے پر لگانے کے لئے دئے گئے تھے ‘‘۔
 

 اساتذہ کی جائز مانگوں کو پورا کیا جائے 

 ڈاکٹر فاروق کی گورنر سے اپیل

سرینگر// نیشنل کانفرنس صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے یوم اساتذہ کے موقع پر اپنے پیغام میں کہاہے کہ سماج میں استاد کا مقام نہایت قابل قدر ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ اساتذہ کا رول تعلیمی میدان میں ناقابل فراموش ہے، خصوصاً نامساعد حالات کے دوران تعلیمی نظام کو پٹری پر لانے کیلئے اساتذہ نے جو کام کیا ہے وہ ایک تاریخ ہے۔ اُنہوں نے اساتذہ سے اپیل کی کہ وہ ریاست کے زیر تعلیم طالب علموں کو علم کے نور سے آراستہ کرنے میں کوئی کسر باقی نہ رکھیں۔ڈاکٹر فاروق نے کہاکہ اہل کشمیر کو اِس بات پر فخر ہے کہ مرحوم شیخ محمد عبداللہ نے اپنا کیرئیر بحیثیت استاد شروع کیا اور عوامی راج کی باگ ڈور سنبھالتے ہی سب سے پہلے تعلیمی شعبے کو اہمیت دینے کیلئے کارگر اقدامات کئے۔
 

جنرل موسیٰ سے تعزیت پرسی کا سلسلہ جاری

سرینگر//حریت (گ)چیئرمین سید علی گیلانی نے مزاحمتی تحریک سے وابستہ محمد صدیق ڈار مرحوم کی اہلیہ کے انتقال پر غمزدہ خاندان بالخصوص ان کے فرزند جنرل موسیٰ کے ساتھ تعزیت کا اظہار کیا ہے ۔انہوں نے کہا کہا کہ مرحومہ ایک نیک سیرت خاتون تھیں جنہوں نے تحریک اسلامی کی کافی خدمت کی ہے۔ گیلانی نے مرحومہ کے حق میں مغفرت اورپسماندگان کیلئے صبر کی دعا کی۔اس دوران بلال صدیقی، حکیم عبدالرشید، امتیاز احمد شاہ، بشیر احمد اندرابی، یاسمین راجہ، شبیر احمد زرگر، عبدالرشید کلپوری ، ڈاکٹر نسیم گیلانی، ڈاکٹر غلام محمد گنائی اور غلام احمد گلزار نے بھی جنرل موسیٰ کے گھر جاکر ان کے ساتھ تعزیت کی۔ عوامی مجلس عمل کے سربراہ و حریت (ع) چیئرمین میرواعظ محمد عمر فاروق نے مزاحمتی رہنما جنرل محمد موسیٰ کی والدہ کی وفات پر دکھ اور صدمے کا اظہار کیا اور مرحومہ کی جنت الفردوس میں جگہ کیلئے خصوصی دعا کی۔ میرواعظ کی ہدایت پر تنظیم کے ایک وفد نے مرحومہ کے گھر جاکر جنرل محمد موسیٰ اور لواحقین کے ساتھ تعزیت پرسی کی۔تحریک کشمیر کے نائب صدر ایڈو کیٹ علی محمد ڈار نے تنظیم کے سربراہ جنرل موسیٰ کے ساتھ تعزیت کا اظہار کیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ تحریک کشمیر اس گھرانے کو سلام عقیدت پیش کرتی ہے کیونکہ اس گھرانے نے اسلام اور آزادی کیلئے اپنا سب کچھ قربان کیا۔ نیشنل فرنٹ کا ایک وفدجنرل موسیٰ سے ملنے گیا جن کی والدہ گذشتہ روز رحلت کرگئیں۔ وفد نے جنرل موسیٰ کے ساتھ تعزیت و ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اُن کے گھرانے نے مزاحمتی تحریک کے دوران بے پناہ مصائب برداشت کئے ہیں۔ پیپلز لیگ نے جنرل موسیٰ کی والدہ کے انتقال پر گہرے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے لواحقین سے اظہار تعزیت کی ہے ۔ لیگ کے قائمقام چیرمین سید محمد شفیع اور سینئر رہنما عبد الرشید ڈار کے علاوہ دیگر ارکان پر مشتمل ایک وفد نے جنرل موسیٰ کے گھر جاکر تعزیت کی اور سوگوارگھرانے کے ساتھ اپنی ہمدردی اور یکجہتی کا اظہار کیا ۔ تحریک مزاحمت کے چیئرمین بلال احمد صدیقی نے جنرل موسیٰ کی والدہ کے انتقال پر تعزیت و ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مرحومہ قوم و ملت کی غمخوار ماؤں میں ایک ممتاز مقام رکھتی تھیں۔انہوں نے کہا کہ اسلام اور آزادی کی محبت ان کی رگ رگ میں بسی تھی اور اس حوالے سے ان کی خدمات و قربانیاں اور صبر و استقامت جہاں ایک طرف ناقابل فراموش ہے وہیں ہم سب کے لیے قابل تقلید بھی ہے۔ بلال احمد صدیقی نے تنظیم کے وفد کے ہمراہ سعدہ کدل جاکر مرحومہ کے لواحقین کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کیا۔ وفد میں شبیر احمد زرگر، محمد سلیم زرگر، شیخ مصعب اور ریاض احمد بھی شامل تھے ۔محاز آزادی کے صدر سید الطاف اندرابی ااور جنرل سکریٹری جہانگیر سلیم و دیگر رفقاء نے معروف حریت رہنما جنرل موسیٰ کی والدہ کے انتقال پر  منعقدہ ایک دعائیہ تقریب میں شرکت کی۔اس موقعہ پر الطاف اندرابی نے غمزدہ خاندان کے ساتھ اظہار یکجہتی کرتے ہوئے مرحومہ کی جنت نشینی اور لواحقین کیلئے صبر جمیل کی دعا کی۔
 

امت کی مائیں ایسی ہوا کرتی ہیں:صلاح الدین

مظفر آباد//حزب المجاہدین کے سربراہ اور متحدہ جہاد کونسل کے چیئرمین سید صلاح الدین نے جنرل موسیٰ کی والدہ کے انتقال پر رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اُمت کی مائیں ایسی ہی ہوا کرتی ہیں۔ صلاح الدین نے کہا کہ مرحومہ نے پورے خاندان کو تحریک آزادی پر قربان ہوتے ہوئے دیکھا لیکن پھر بھی زندگی کی آخری سانس تک میدان عمل میں چٹان کی طرح ڈٹی رہیں۔ حزب ترجمان سلیم ہاشمی کے مطابق صلاح الدین حزب کمانڈ کونسل کے ایک اجلاس سے خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ معروف حریت رہنما جنرل موسیٰ کی والدہ انتہائی نیک، تہجد گذار اور صبر کا پیکر تھیں۔انہوں نے کہا کہعسکریت پسند اُنہیں نانی کے نام سے جانتے تھے اور انہیں وہ ہمیشہ نانی کا ہی پیار دیا کرتی تھیں۔ پورا گھرانہ پچھلے تیس برسوں میں دشمن کے عذاب و عتاب کا شکار رہا لیکن نانی اماں ثابت قدمی کے ساتھ ڈٹی رہیں اور امت کی مائوں کی طرح انمٹ نقوش چھوڑ کر چلی گئیں۔ اجلاس میں مرحومہ کی بلند درجات اور لواحقین کیلئے صبر جمیل کی دعا کی گئی۔
 

ویری ناگ اسپتال میں ڈاکٹر سے مبینہ تذلیل کا معاملہ

ڈورو/عارف بلوچ/ویری ناگ اسپتال میں منگل کی شام گئے ایک ڈاکٹر سے مبینہ تذلیل کا واقع پیش آیا ہے ،جس پر اسپتال عملہ نے سخت ناراضگی کا اظہار کیا ہے ۔منگل کی شام کو پی ایچ سی ویری ناگ میں اُس وقت ماحول خراب ہوا جب یہاں شبانہ ڈیوٹی پرمامور ایک ڈاکٹر نے دو مقامی افراد کی جانب سے اُن پر حملہ کرنے اور تذلیل کرنے کا الزام عائد کیا ۔ڈاکٹر کے مطابق وہ اپنے فرائض کی انجام دہی میں مصروف تھا کہ اس دوران دو مقامی افراد مریض کے ہمراہ اسپتال میں داخل ہوئے اور مریض کا بلڈ پریشر چک کرنے کو کہاتاہم اسپتال میں پہلے سے ہی موجود مریض ہونے کے سبب اُس نے چند منٹ انتظار کرنے کو کہا ۔مذکورہ ڈاکٹرکے مطابق دونوں افراد آگ بگولہ ہوئے اوراُسے پکڑ کر مارا پیٹا۔ڈورو پولیس نے معاملے کی نسبت کیس زیر نمبر80/18زیر دفعات353,332,506 درج کیا ہے ۔
 

بڈگام میں ڈزاسٹر منیجمنٹ ٹریننگ اورمشق

بڈگام//ڈسٹرکٹ منیجمنٹ اتھارٹی بڈگام نے ضلع انتظامیہ اور سکولی تعلیم کے اشتراک سے گورنمنٹ گرلز ہائر سیکنڈری سکول بڈگام میں ڈزاسٹر منیجمنٹ ٹریننگ اور فرضی مشق کی مناسطت سے ایک روزہ پروگرام کا انعقاد کیا ۔ضلع ترقیاتی کمشنرڈاکٹر سید سحرش اصغر نے پروگرام کا افتتاح کیا ۔پروگرام میں سکو ل کے پرنسپل فاروق احمد رعنا کے علاوہ فیکلٹی اوراساتذہ ممبران،طلبأ وطالبات اوراین جی اووز کے علاوہ رضاکاروں نے بھی شرکت کی۔پروگرام کے انعقاد کا مقصد شرکاء کو امکانی سیلابی اورصورتحال اوردیگر آفات سماوی کے دوران بچائو اورراحت کاری کے اقدامات کے بارے میں جانکاری فراہم کرنا تھا۔اس موقعہ پر ترقیاتی کمشنر نے کہا کہ اس طرح کے پروگراموں کا انعقاد انتہائی اہم ہے تاکہ لوگوں کو امکانی سیلابی صورتحال ،بچائو اور راحت کاری کے بارے میں جانکاری دی جاسکے تاکہ آفات کے دوران لوگوں کے مال وجان کا تحفظ یقینی بن سکے۔انہوںنے طلبأ پر بچائواور راحت کاری اقدامات کے لئے تیار رہنے پر زوردیا۔اہوںنے کہا کہ یہ طلبأ کا فرض ہے کہ وہ ان فرضی مشقوں سے جو تربیت حاصل کریں وہ عوامی خدمات کے لئے بروئے کار لائی جائے۔اس موقعہ پر طلبأ ،رضاکاروں اور این جی اووز کو امکانی سیلابی صورتحال اور بچائو اقدامات کے لئے لازمی تربیت فراہم کی گئی۔
 

کریک ڈائون پالیسی ہلاکت خیز، پلوامہ ہلاکت پر مزاحمتی خیمہ سیخ پا

سرینگر// ڈیمو کریٹک فریڈم پارٹی نے کریک ڈائون پالیسی کو ہلاکت خیز قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس پالیسی کے نتیجے میں ہی شہری ہلاکتیں وقوع پذیر ہورہی ہیں۔فریڈم پارٹی نے فورسز کے ہاتھوں چیوہ کلان پلوامہ کے فیاض احمد وانی نامی نوجوان کی بہیمانہ ہلاکت پر گہرے رنج و غم کا اظہارکیا ہے۔ ترجمان نے ایک بیان میں کہا کہ تلاشی کارروائیوں کے نام پر کریک ڈائون شہری ہلاکتوں کی بنیادی وجہ ہے ۔انہوں نے کہا کہ ان کریک محاصروںکے دوران اکثر فورسز بے قابو ہوکر شہریوں کو مارنا پیٹنا شروع کرتی ہیں، اُن کی جائیدادوں کو نقصان پہنچاتی ہیں یہاں تک کہ اُن کی خواتین تک کی تذلیل کرتی ہیں جس کے رد عمل میں لوگ صدائے احتجاج بلند کرتے ہیں اور فورسز ان احتجاج کرنے والے لوگوں پر طاقت کا استعمال کرکے لوگوں کو جاں بحق یا زخمی کرتی ہیں تاکہ عوام اپنے حقوق کیلئے آواز نہ اٹھائے۔نیشنل فرنٹ ترجمان نے فیاض احمد وانی کی ہلاکت پر دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ نہتے مظاہرین پر طاقت کے وحشیانہ استعمال کا کوئی جواز نہیں ہوتا ہے۔انہوں نے کہا کہ اس غیر جمہوری طرز عمل کی وجہ سے شہری ہلاکتوں کے دل دکھانے والے واقعات رونما ہوتے ہیں جس سے اب یہاں سماجی سطح پر کئی مسائل نے سر نکالنا شروع کیا ہے۔دختران ملت نے کہا ہے کہ پولیس جموں و کشمیر میں تحریک آزادی اور عوامی خواہشات کو کچلنا چاہتی ہے۔تنظیم کی ترجمان رفعت فاطمہ نے کہا کہ جنگجوئوں کی موجودگی کا بہانہ بنا کر پلوامہ کے ایک بہت بڑے حصے کا کریک ڈائون کیا گیا اور نہتے شہریوں پر مظالم ڈھائے گئے،گھروں اور املاک کو تاراج کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ بھارتی افواج نے نہتے عوام پر گولیاں برسائیں جس کی وجہ سے درجنوں افراد زخمی ہوئے جو سرینگر اور پلوامہ کے اسپتالوں میں زیر علاج ہیں جن میںسے فیاض احمد نامی نوجوان اپنی جان جان آفرین کے حوالے کرگیا۔رفعت فاطمہ نے کہا کہ  جموں و کشمیر ایک پولیس ریاست ہے اور یہاں فوج عوام کا قتل عام کر رہی ہے۔انہوں نے صحافی آصف سلطان کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ میڈیا کو بھی آزادی سے کام نہیں کرنے دیا جارہا ہے۔مسلم لیگ نے فوج کے ہاتھوں ایک نہتے نوجوان فیاض احمد وانی کی ہلاکت کی مذمت کی ہے ۔لیگ ترجمان سجاد ایوبی کے مطابق منظور احمد للہاری اور فارق احمد صوفی پر مشتمل لیگ وفدجنرل سیکریٹری محمد رفیق گنائی کی قیادت میںچیوا کلان گیا جہاں انہوں نے غمزدہ خاندان کے ساتھ تعزیت کی اور ان کی ڈھارس بندھائی۔پیپلز لیگ کے تر جمان عبدالحمید الٰہی نے فیاض احمد نامی نوجوان کو لقمہ اجل بنانے کی مذمت کرتے ہو ئے اسے وحشیانہ حرکت قرار دیا۔محاذآزادی کے ایک دھڑے کے صدر محمد اقبال میر نے نہتے شہری کی ہلاکت اور درجنوں افراد کو زخمی کرنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی  حکومت نے جموں کشمیر کو فوجی چھاونی میں تبدیل کرکے غیر اعلانیہ مارشل لاء نافذ کیا ہے۔