مزید خبریں

منڈی میں بھی اثر دیکھاگیا،مسافر متاثر

عشرت حسین بٹ

 
منڈی//ٹرانسپورٹ یونین پونچھ کی جانب سے گاڑیوں کی آمد و رفت کو معطل کرنے کی کال دی گئی تھی جس کا اثر ضلع کی تحصیل منڈی میں بھی دیکھنے کو ملا۔ٹرانسپورٹ یونین کی یہ ہڑتال اے آر ٹی او پونچھ کے خلاف تھی اور یونین کا الزام ہے کہ موصوف کے دفتر میں کام نہیںہورہا اوران کی فائلیں لٹکی ہوئی ہیں ۔وہیں منڈی کی ٹرانسپورٹ یونین نے بھی اے آر ٹی او دفتر میں کام نہ ہونے کی شکایت کی ہے ۔ یونین کے ارکان کاکہناہے کہ دفتر میں نہایت ضروری کاغذات کو روکا جا رہا ہے اور عرصہ دراز سے گاڑیوں کو پرمٹ اور ڈرائیوروں کے لائسنس کی تجدید نہیں ہورہی ۔ ان کا کہنا تھا کہ پونچھ اور منڈی ٹرانسپورٹ یونین کی کال پرگاڑیوں کی آمد و رفت بند رہی اور اگر دفتری طوالت کا سلسلہ ختم نہیںہواتووہ پھر سے ایسا اقدام اٹھائیں گے ۔ہڑتال کے باعث لوگوں کو مشکلات کاسامناکرناپڑا اور کئی عورتوں ، بچوں اور بزرگوںکو پیدل چلناپڑا۔
 
 

چیف ایجوکیشن افسر کا دورہ ٔ نوشہرہ 

سرحدی سکولوں کے امتحانی مراکز کا جائزہ لیا

راجوری //چیف ایجوکیشن افسر راجوری محمد اشرف راتھر نے نوشہرہ کادورہ کرکے اس سرحدی علاقے میں قائم کئے گئے امتحانات کے مراکز کا جائزہ لیا ۔اس دوران راتھر کو بتایاگیاکہ پیر کے روز بارہویں جماعت کے میڈیکل طلباء کا امتحان لیاگیا جس دوران نوشہرہ سب ڈیویژن اور دیگر علاقوں میں امتحانی مراکز اقائم کئے گئے ۔یہ بات قابل ذکر ہے کہ نوشہرہ میں پچھلے کئی روز سے ہندوپاک افواج کے درمیان فائرنگ اور گولہ باری کا تبادلہ ہورہاہے ۔راتھر نے بوائز ہائراسکینڈری سکول نوشہرہ، گرلز ہائراسکینڈری سکول نوشہرہ ، گورنمنٹ ہائراسکینڈری سکول کلسیاں، گورنمنٹ ہائراسکینڈری سکول سیری اور گورنمنٹ ہائراسکینڈری سکول باجا بائیں کا دورہ کرکے صورتحال کا جائزہ لیا ۔اس دوران پایاگیاکہ طلباء کے امتحانات کا عمل خوش اسلوبی سے جاری ہے ۔
 
 

پولیس کا عوام کے ساتھ اجلاس 

تھنہ منڈی //پولیس نے تھنہ منڈی میں عوام کے ساتھ ایک اجلاس منعقد کرکے ان کے مسائل سنے ۔اجلاس کی صدارت سب ڈیویژنل پولیس افسر تھنہ منڈی محمد صدیق نے کی جبکہ اس موقعہ پر ایس ایچ او تھنہ منڈی جاوید ملک بھی موجو دتھے ۔اجلاس میں مقامی لوگوں کے علاوہ بیوپار منڈل کے ارکان، پنچایتی نمائندگان، ٹرانسپورٹروں، سیول سوسائٹی ارکان نے بھی شرکت کی ۔اس موقعہ پر شرکاء نے بجلی کی غیر اعلانیہ کٹوتی ، تھنہ منڈی راجوری سڑک کی خراب حالت، بس اڈہ اور پارکنگ ، ٹرانسپورٹ نظام میںبہتری لانے اور ائورلوڈنگ پر قابو پانے ، منشیات کی وباجیسے معاملات اجاگر کئے اور پولیس افسران پر زور دیاکہ اس سلسلے میں عملی سطح پر اقدامات کئے جائیں ۔اس دوران تھنہ منڈی میں امن و قانون کی صورتحال پر بھی تبادلہ خیال ہوا اور پولیس افسران نے عوام پر زور دیاکہ وہ امن کو بہر صورت قائم رکھیں اور اس سلسلے میں پولیس کو تعاون فراہم کریں ۔ انہوں نے کہاکہ ان کی طرف سے اجاگر کئے گئے مسائل کو حل کرنے کے اقدامات کئے جائیں گے ۔انہوںنے کہاکہ منشیات کی روک تھام کیلئے عوام کا تعاون بے حد لازمی ہے ۔اجلاس میں سابق کونسلر نذیر احمد گنائی،عبدالرشید شال،مشتاق احمد ٹھکر، سرپنچ منشی خان، نور حسین، ماسٹر عبدالعزیز، مشتاق احمد وانی نائب سرپنچ، بشارت خان ، جاوید خان،ماسٹر حنیف کالس، بشیر خان، محمد اقبال وانی،نعیم گنائی،مقبول رینہ، مقصود خان وغیرہ بھی موجو دتھے۔
 
 

بین ضلع بھرتی سے پابندی ہٹانیکا مطالبہ 

راجوری //آل انڈیا کنفیڈریشن آف ایس ٹی ، ایس سی ودیگر بیکورڈ کلاسز آرگنائزیشن نے بین ضلع بھرتی پر پابندی کو ہٹانے کا مطالبہ کیاہے ۔ راجوری میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے تنظیم کے صدر صابر چوہدری نے کہاکہ گورنر انتظامیہ درج ذیل طبقہ جات کے مسائل حل کرنے کیلئے اقدامات کرے اور بین ضلع بھرتی پر عائد پابندی کو ہٹایاجائے ۔انہوںنے کہاکہ منڈل کمیشن کی سفارشات پر عمل درآمد کرکے ریاست کے اوبی سی طبقہ کو 27فیصد ریزرویشن دی جائے ۔انہوںنے فارسٹ رائٹ ایکٹ کے نفاذ کی مانگ کرتے ہوئے کہاکہ ریزرویشن کے حوالے سے لئے گئے حالیہ فیصلہ پر ایس آر اوجاری کیاجائے ۔
 
 

رنگ منچ کی طرف سے ڈرامہ پیش کیاگیا

راجوری //رنگ منچ تھیٹر گروپ کی طرف سے راجوری میں مختلف مقامات پر ’میرا ووٹ میرا حق ‘ڈرامہ پیش کیاگیا ۔اس ڈرامہ کا مقصد لوگوںکو ان کے جمہوری حقوق پر بیداری فراہم کرنااور جمہوری اداروں کو مضبوط بنانے کے بارے میں انہیں روشناس کرواناتھا۔یہ ڈرامہ بس اڈہ ، اوقاف مارکیٹ، نگیش پل اور امبیڈپارک میں پیش کیاگیا۔اس دوران رائے دہندگان کو بتایاگیاکہ کس طرح سے وہ اپنے جمہوری حقوق کا استعمال کرتے ہوئے حکومت سازی میں شامل ہوسکتے ہیں ۔ اس ڈرامے کی ہدایت کار ی وشال پہاڑی نے کی ہے جبکہ سکرپٹ تابش ملک اور وشال پہاڑی نے لکھی ہے ۔اس میں وشال پہاڑی کے علاوہ وکرانت شرما، تابش ملک، انیل شرما، شیتل شرما، ایشو شرمااور رمیض نے بطور فنکار حصہ لیا ۔
 
 

جرنلسٹ ایسو سی ایشن پونچھ کے صدر کا انتقال

 پونچھ//پونچھ کے سینئر صحافی و جرنلسٹ ایسوسی ایشن پونچھ کے صدر ہربجھن سنگھ کا منگل کو مختصر علالت کے بعد لدھیانہ کے فاٹیز ہسپتال میں انتقال ہوگیا۔خاندانی ذرائع کے مطابق ہربھجن کا دو روز قبل بلڈ پریشر بڑھ گیاجس کے بعد ان کے سر میں خون منجمد ہوااوراسی حالت میں انہیں گورنمنٹ میڈیکل کالج وہسپتال جموں لے جایا گیا جہاں سے ان کو لدھیانہ کے فاٹیز ہسپتال منتقل کیاگیاتاہم وہ جاں بر نہ ہوسکے اور منگل کی صبح دوران علاج انتقال کرگئے ۔وہ ریاست کے موقر انگریزی اخباراورآج تک ٹی وی چینل اور خبر رساں ایجنسی پی ٹی آئی کیلئے پچھلے کئی برسوں سے کام کررہے تھے ۔ان کا شعبہ صحافت میں پچیس سال کا تجربہ تھااوروہ ضلع جرنلسٹ ایسوسی ایشن پونچھ کے صدر بھی تھے۔ان کی وفات پر تنظیم نے گہرے دکھ کا اظہار کیاہے ۔تنظیم کے نائب چیئر مین پردیپ کھنہ نے کہا کہ ہربجھن سنگھ ضلع پونچھ کی صحافت کی ریڑ کی ہڈی تھے۔ انہوں نے کہا کہ انہوں نے صحافت کے میدان میں ہمیشہ ضلع پونچھ کے عوام کی ترجمانی کی اور ان کی موت سے پید اہونے والے خلاکو پُر نہیں کیاجاسکے گا۔انجمن اردو صحافت جموں وکشمیر کے نائب صدر عشرت حسین بٹ اور جملہ ذمہ داروں کے علاوہ ضلع کی صحافتی برادری، سیاسی اورسماجی انجمنوںنے بھی غمزدہ کنبے کے ساتھ ہمدردی کااظہار کیاہے۔
 
 
 
 

’سرحدی متاثرین کا کوئی پرسان حال نہیں‘

پونچھ //پونچھ کی غیر سرکاری تنظیم یشن کے ارکان نے سرحدی علاقوں سلوتری اور جھلاس کادورہ کرکے مقامی لوگوں سے ملاقات کی ۔ یہاں جاری بیان کے مطابق تنظیم کے کارکنان نے اس کے صدر امتیاز سلاریہ کی قیادت میں فائرنگ اور گولہ باری سے متاثر ہ علاقوں کادورہ کرکے صورتحال کا جائزہ لیا اور متاثرہ کنبوں میں امدادی سامان کی تقسیم عمل میں لائی ۔اس موقعہ پر سلاریہ نے کہاکہ سیاستدانوں کو صرف ووٹ چاہئے اور انہیں سرحدی عوام کے مسائل سے کوئی لینادینانہیں ۔انہوں نے الزام عائد کیاکہ سیاستدان اگر ان علاقوں کادورہ کرتے بھی ہیں تو صرف خودنمائش کیلئے ۔انہوں نے گورنر انتظامیہ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ اس کی طرف سے متاثرہ کنبوں کیلئے کچھ نہیں کیاگیا اور نہ ہی انہیں امداد ملی اور نہ ہی محفوظ ٹھکانے کیلئے بنکر ۔ان کاکہناتھاکہ سرحدی متاثرین کا کوئی پرسان حال نہیں اور انہیں حالات کے رحم و کرم پر چھوڑ دیاگیاہے ۔اس دوران مدثر بخاری، فاروق تنہا، ابرار اختر، اکرم نائیک،وسیم احمد، منظور حسین، سجاد احمد ، ہدایت اللہ و دیگران بھی موجو دتھے ۔
 
 

منجاکوٹ کے نجی تعلیمی ادارے نے یوم تاسیس منایا

نیوز ڈیسک

منجاکوٹ//منجاکوٹ کے نجی تعلیمی ادارہ خان انسٹی ٹیوٹ حیاتپورہ نے اپنا 26واں یوم تاسیس منایا۔اس سلسلے میں ایک تقریب منعقد ہوئی جس میں مہمان خصوصی کانگریس کے سینئر لیڈر و سابق وزیر شبیر احمد خان تھے۔تقریب میں تحصیلدار منجاکوٹ صغیر چوہدری،ایس ڈی پی او نثار خواجہ،ایس ایچ او منجاکوٹ منظور کوہلی،ضلع جنرل سیکرٹری پرائیویٹ انسٹی ٹیوٹ راجوری پرویز چوہدری،منیجنگ ڈائریکٹر انٹر نیشنل اسکول منجاکوٹ پرویز خان و دیگر لوگ بھی موجو دتھے ۔اس موقعہ پر سکولی طلباء نے رنگا رنگ پروگرام پیش کئے جن کی سراہنا کی گئی ۔اپنے خطاب میں ادارے کے سربراہ بابو حسین خان نے جہاں ادارے کی کارکردگی پر روشنی ڈالی وہیں والدین اور اساتذہ کا شکریہ اد اکیا ۔