مزید خبریں

اسلامی سکالر انجینئر نذیر احمد پانپوری کی رحلت

فاروق عبداللہ سمیت کئی دینی، سماجی اور ملازم انجمنوں کا اظہار تعزیت

سرینگر//معروف اسلامی دانشور انجینئر نذیر احمد پانپوری جمعہ کو انتقال کرگئے۔مرحوم پیشے سے ایک انجینئر ہونے کے ساتھ ساتھ ایک نامور سکالر،مصنف اور مبلغ تھے۔ انہوں نے اسلامی موضوعات پر چالیس سے زیادہ کتابیں تصنیف کی ہیں۔ وہ گذشتہ تین دہائیوں سے ایک سرگرم داعی کے طور متحرک تھے اور شاہ ہمدان میموریل ٹرسٹ سے وابستہ رہے۔ انکی وفات پر کئی دینی،سماجی اور ملازم انجمنوں نے رنج و الم کا اظہار کیا ہے اور غم ذدہ خاندان کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کیا ہے۔صدرِ جموں وکشمیر نیشنل کانفرنس اور نائب صدر عمر عبداللہ نے اس سانحہ ارتحال پر مرحوم کے جملہ سوگوران کیساتھ دلی تعزیت کا اظہار کیا اور مرحوم کی جنت نشینی اور بلند درجات کیلئے دعا کی۔ انہوں نے مرحوم کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہاکہ نذیر صاحب ایک باصاحیت دینی شخصیت کے مالک اور عالم باعمل تھے۔ اللہ نے مرحوم کو دینی اسلام کی تعلیم سے سرفراز کیا تھا اور مرحوم ایک بہترین مقرر تھے۔ پارٹی جنرل سکریٹری حاجی علی محمد ساگر، رکن پارلیمان حسنین مسعودی، ضلع صدر پلوامہ غلام محی الدین میر اور یاور مسعودی نے بھی اس سانحہ ارتحال پر تعزیت کا اظہار کیاہے۔  جمعیت ہمدانیہ کے سربراہ مولانا ریاض احمد ہمدانی نے مرحوم کے جملہ سوگوران کیساتھ تعزیت کا اظہار کیا اور مرحوم کی جنت نشینی اور بلند درجات کیلئے دعا کی ۔دریں اثناء جمعیت کے ایک تعزیتی اجلاس میں مرحوم کو زبردست خراج عقیدت پیش کیا گیا اور اس موقعے پر مرحوم کے حق میں دعائے مغفرت اور کلمات ادا کئے گئے اور مرحوم کی جنت نشینی اور بلند درجات کیلئے دعا کئے گئے۔  جمعیت کے حاجی عبدالرشید گانی، الحاج صاحبزادہ محمد اشرف، علامہ مولانا شوکت حسین کینگ، پیرزادہ محمد یاسین ظہرہ، فاروق احمد گانی،پیرزادہ محمد اشرف عنایتی، پیر غلام نبی فاروقی نوشہری، منظور الحسن قریشی ، امام و خطیب خانقاہِ معلی غلام احمد ہمدانی، حاجی عبدالمجید متو،نشان دہ زیارت پیردستگیر صاحبؒ الحاج غلام قادر قادری ، محمد شفیع شاہ، الحاج مسعود الحسین ہمدانی ،شفیق احمد ہمدانی ، جاوید احمد قادری، نذیر احمد قادری، پیرزادہ امام درگاہِ محبوب العالم الحاج پیرزادہ علی محمد صاحب مخدومی،محمد شفیع بسو، الحاج شبیر احمد مخدومی، جی ایم جی ساقی نے بھی تعزیت کا اظہار کیا ہے۔جبکہ  متحدہ علمائے اہل سنت، حقانی میموریل ٹرسٹ جموں و کشمیر،منہاج الاسلام ،کاروان اسلامی، اسلامک ایجوکیشنل ٹرسٹ بڈگام نے بھی ان کی موت پر گہرے دکھ کا اظہار کیا ۔حقانی میموریل ٹرسٹ کے سرپرست اعلی اور جنرل سکریٹری بشیر احمد ڈار نے انکی وفات پر دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مرحوم ایک عظیم دانشور، اسلامی عالم، بے بدل مقرر اور اعلی درجہ کے مصنف تھے۔ انہوں نے اپنے قلم اور زبان سے دین اسلام کی بیلوث خدمت انجام دی ۔ انجمن علما احناف جموں کشمیر کے سربراہ مولانا اخضر حسین نے بھی مرحوم کے انتقال پر دکھ اور صدمہ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مرتے دم تک مرحوم نے تحریر ی اور تقریر ری دین اسلام کی بالخصوص اور اہل وسنت کی بالعموم خدمت کی۔سرکردہ عالم دین شوکت حسین کنگ نے مرحوم کے انتقال کو ملت کیلے ایک بڑا نقصان قرار دیتے ہوے سوگواروں کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کیا ۔   
 
 
 
 

گاندربل میں چوری کی کوشش ناکام ، غیر قانونی لکڑی ضبط 

سرینگر// گاندربل پولیس نے چوری کی ایک کوشش کو ناکام بناتے ہوئے غیر قانونی لکڑی ضبط کرکے اس سلسلے میں کیس در ج کیا ہے۔  ہیان پال پورہ کنگن میں لکڑی کی اسمگلنگ کے بارے میں ایک مصدقہ اطلاع پر فوری کارروائی کرتے ہوئے ایس ایچ او تھانہ کنگن نے ایس ڈی پی او کنگن سید یاسر قادری کی نگرانی میں مذکورہ مخصوص جگہ پر چھاپہ مارا اور ایک شخص عبدالکریم کمارولد غلام محمد کمارساکن ہیان پال پورہ کنگن کے قبضے سے غیر قانونی لکڑی برآمد کرکے ضبط کی۔تاہم ملزم جائے وقوعہ سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا۔تھانہ پولیس کنگن نے اس سلسلے میں کیس زیر  ایف آئی آر نمبر 21/2022 قانون کی متعلقہ دفعات کے تحت درج کیا ہے اور معاملے کی مزید تفتیش بھی شروع کر دی گئی ہے۔
 
 

سوپور پولیس کی کارروائی 

غیر قانونی ریت نکالنے پر 9ٹریکٹر ضبط

غلام محمد
سوپور// سوپور پولیس نے جمعہ کو رفیع آباد گاؤں میں غیر قانونی طور پر ریت نکالنے کی پاداش میں 9ٹریکٹر ضبط کیے ہیں۔پولیس نے ایک بیان میں کہا کہ ایس ڈی پی او رفیع آباد محمد امین بٹ اور ایس ایچ او تھانہ کی سربراہی میں ایک ٹیم نے تھانہ ڈنگی وچہ کی حدود میں لیزر کراسنگ پر ناکے کی چیکنگ کے دوران 9 ٹریکٹر قبضے میںلئے جن پر غیر قانونی طور پر ریت لدی ہوئی تھی ۔پولیس نے اس سلسلے میں ڈنگی وچہ پولیس سٹیشن میں ایک کیس درج کر کے مزید تحقیقات شروع کر دی ہے ۔پولیس نے لوگوں سے اپیل کی ہے کہ وہ نالوں سے غیر قانونی طور ریت اور باجری نکالنے سے گریز کریں اور قانون کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی ۔
 
 
 

لداخ میں کووِڈ- 19 کے54نئے معاملے

لیہہ//لداخ میں کووِڈ- 19 کے54 نئے معاملے سامنے آئے ہیں اور اس طرح خطے میں کوروناوائرس متاثرین کی تعداد27695ہوگئی ہے جبکہ مرکزی زیرانتظام خطے میں فعال کورونا مریضوں کی تعداد 416 ہے۔ حکام کے مطابق اس دوران 105مریضوں کو صحت یاب ہونے کے بعد اسپتالوں سے رخصت کیا گیا۔ان میں87لیہہ سے اور 18کرگل سے تعلق رکھتے ہیں ۔ اس کے ساتھ ہی خطے میں صحتیاب ہوئے مریضوں کی تعداد27051ہوگئی ہے۔نئے54کیسوں میں 46لیہہ سے تعلق رکھتے ہیں جبکہ8کاتعلق کرگل سے ہے.۔خطے میں اب تک 228لوگوں کی کورونا سے موت ہوئی ہے جن میں168لیہہ سے اور60کرگل سے تعلق رکھتے ہیں ۔