مزید خبریں

محکمہ سیاحت کی جانب سے لورن میں ٹریکنگ کا اہتمام

منڈی//گزشتہ شب محفلِ سماع کے بعد محکمہ سیاحت کی جانب سے اتوار کو لورن تا سلطان پتھری ٹریکنگ کا انعقاد عمل میں لایا گیا جس میں متعدد نوجوانوں نے حصہ لیا ۔ اس ٹریکنگ قافلہ کو اضافی ضلع ترقیاتی کمیشنر پونچھ شیراز ملک اور تحصیلدار منڈی نے ہری جھنڈی دکھا کر رخصت کیا جس کے بعد یہ قافلہ نندی چھول تاراں والی نور پور گلی بیلا بالا سے سلطان پتھری تک پہنچا – اس سلسلہ میں جب ٹریکنگ کرنے والے نوجوانوں سے بات چیت کی گئی تو ان کا کہنا تھا کہ محکمہ سیاحت اور ترقیاتی اختیارات کی جانب سے محفلِ سماع کے بعد ٹریکنگ کا انعقاد کرنا لائق صد تحسین ہے کیونکہ اس سے مختلف نوجوانوں کو ایک ساتھ یکجہ ہو کر ایک دوسرے کے خیالات سے آگاہ ہونے کا موقع ملتا ہے – ان کا کہنا تھا کہ صحت کی تندرستی کے لئے یہ ٹریکنگ نہایت کارآمد ہے اور وقفہ وقفہ کے بعد ایسی سرگرمیوں کو سر انجام دیا جانا چاہیے جس سے نوجوان باقی تمام پریشانیوں کو پرے رکھ کر زندگی کا لطف بھی لے سکیں – انہوں نے اضافی ضلع ترقیاتی کمیشنر و نگراں سی ای او محکمہ سیاحت شیراز ملک کی سراہنا کرتے ہوئے ان کا شکریہ ادا کیا – واضح رہے کہ لورن سیاحت کے اعتبار سے الگ مقام رکھتا ہے اور اس طرح کی سرگرمیوں سے اس کی شہرت میں مزید اضافہ ہو گا۔
 
 

گوجربکروال طبقہ کوسیاسی ریزرویشن دینے کامطالبہ 

راجوری//اکھل بھارتیہ گوجرمہاسبھانے ریاستی حکومت سے خانہ بدوش گوجربکروالوں کی بازآبادکاری ،خانہ بدوش بستیوں کوریگورلرائز کالونیوں کادرجہ دینے اورایس ٹی طبقہ کوسیاسی ریزرویشن دینے کامطالبہ کیاہے۔ یہاں جاری پریس بیان میں اکھل بھارتیہ گوجرمہاسبھاکے ریاستی جنرل سیکریٹری انعام حفیظ چوہدری اورسماجی کارکن شمشیرہکلہ پونچھی نے الگ الگ بیانات میں کہاہے کہ ریاست جموں وکشمیرمیںگوجربکروال ریاست کی 34لاکھ نفوس پرمشتمل آبادی سیاسی نمائندگی سے محروم ہے۔انہوں نے کہاکہ آئندہ پارلیمانی انتخابات اوراسمبلی انتخابات سے قبل مرکزی حکومت کوجموں وکشمیرمیں آبادگوجربکروال طبقہ کوسیاسی ریزرویشن دینی چاہیئے ۔انعام حفیظ اورشمشیرہکلہ پونچھی نے مزیدکہاکہ گوجربکروال قوم نے ہمیشہ ملک کے ساتھ وفاداری کی ہے لیکن اس قوم کی غریب آبادی دہائیوں سے سیاسی حقوق سے محروم اورپسماندگی کی زندگی بسرکررہی ہے ۔انہوں نے کہاکہ گوجربکروال طبقہ کوسیاسی ریزرویشن دیناوقت کی ضرورت ہے اوریہ طبقہ کاجائزمطالبہ ہے جس کوپوراکرنے کیلئے عملی اقدامات کے طورپرریاستی گورنرکوچاہیئے کہ وہ ریاست کی تمام 87 اسمبلی نشستوں میں آبادی کے تناسب کاجائزہ لیں اورجن اسمبلی حلقوں میں بیشترگوجربکروال آبادی ہے انہیں ایس ٹی کیلئے مخصوص کیاجائے۔انہوں نے کہاکہ خانہ بدوش گوجربکروالوں کی آبادکاری ،ایس ٹی طبقہ کوسیاسی ریزرویشن دیاجاناوقت کاتقاضاہے۔انہوں نے ریاستی گورنرسے اپیل کی ہے کہ طبقہ کی جائزمانگوں کوپوراکرنے کیلئے فوری اقدامات اٹھائے جائیں۔
 
 

سرنکوٹ کے متعدد علاقوں کو آر بی اے درجہ نہ دیناافسوسناک :مشتاق بخاری

سرنکوٹ// نیشنل کانفرنس کے ریاستی سیکریٹری سید مشتاق احمد بخاری نے کہاہے کہ حکومت نے سرنکوٹ کے متعدد علاقوں کوآربی اے کے درجہ سے محروم رکھ کرناانصافی کی ہے۔یہاں جاری پریس بیان میں مشتاق احمدبخاری نے کہاکہ سرنکوٹ میں متعدد علاقوں کو آر بی اے کے درجے سے محروم رکھنا ایک سوچی سمجھی سازش ہے ۔انھوں نے کہا کہ سرنکوٹ میں ایسے علاقے موجود ہیں جہاں نہ سڑکیں پہنچ پائیں اور نہ بجلی مکمل طریقے سے مل سکی اور سرکار سے دی جانے والی سہولیات سے مکمل طور پر محروم رکھے گئے انہیں لوگوں کو بنیادی اور روز مرہ کی سہولیات بھی میسر نہیں ان علاقوں کو آر بی اے سے محروم رکھنا نہایت ہی افسوس ناک بات ہے۔ انھوں نے کہاکہ لوگوں نے آر بی اے کا درجہ حاصل کرنے کے لیے  کئی سالوں سے خود چکر کاٹے لیکن آج ان کے خواب چکنا چور ہو گئے جب ان کو آر بی اے کے زمرہ سے محروم رکھ دیا گیا۔ انھوں نے کہا کہ سرنکوٹ کی عوام سے گورنر انتظامیہ  نے اچھا سلوک نہیں کیا ہے اور ان علاقوں کے سینکڑوں پڑے لکھے نوجوان بے روز گار ہیں جن کو  اس درجے سے ملازمت حاصل کرنے میں آسانی ہوتی۔مگر افسوس سے کہنا پڑتا ہے کہ آخر کار ان علاقوں کو آر بی اے کادرجہ کیوں نہیں دیاگیا۔ انھوں نے گورنر انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ وہ سرنکوٹ کے مستحق علاقہ جات کوآربی کادرجہ دیں۔
 
 

تھنہ منڈی میں پوشن ابھیان کے تحت بیداری ریلی کااہتمام 

طارق شال

راجوری//تھنہ منڈی میں آنگن واڑی ورکروں اور ہیلپروں کی جانب سے آئی سی ڈی ایس محکمہ کے تحت چلائی جارہی  مرکزی اسکیم پوشن ابھیان کی مناسبت سے ایک بیداری ریلی کااہتمام کیاجس کے ذریعے لوگوں کو بچیوں کی صحت ،صاف ، تازہ اور متوازن غذا فراہم کرنے اور انکی نگہداشت کرنے کے بارے میں  جانکاری فراہم کی گئی۔ تحصیل تھنہ منڈی کی آنگن واڑی ورکروں اور ہیلپروں کی ریلی جس کی قیادت انچارج چائیلڈ ڈیولپمنٹ پروجیکٹ آفیسر درہال کرامت بیگم کر رہی تھیں جبکہ اس دوران  عارف لطیف خان نیو ٹریشن موبلائزر، محمد افضل نجار سینئر اسسٹنٹ،نثار فاطمہ،سپر وائزر۔ اختر بیگم سپر وائزر ودیگران بھی موجود تھے۔ یہ ریلی چائلڈ ڈیولپمنٹ آفیسر تھنہ منڈی کے دفتر اسلام پور سے برآمد ہوئی اور غزالی مارکیٹ سے گذرتی ہو ئی شاہدرا پل کے قریب پہنچ کراختتام پذیر ہوئی۔ریلی کے دوران آئی سی ڈی ایس میں کام کر رہی آنگن واڑی ورکروں اور ہیلپروں نے ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈ اٹھارکھے تھے جو بچیوں کی صحت ،متوازن غذکی فراہمی سے متعلق نعرے بازی کر رہی تھیں۔ ریلی کے اختتام پر انچارج سی ڈی پی او کرامت بیگم نے کہا کہ مرکز کی طرف سے چلائی جا رہی پوشن ابھیان اسکیم کے تحت یہ مہم چلائی جا رہی ہے جو 8 مارچ سے 22 مارچ تک چلے گی۔ انہوں نے کہا کہ مشن ڈائریکٹر آئی سی ڈی ایس جموں کشمیر کی طرف سے ایک کلینڈر جاری کیا گیا ہے جس میں حاملہ خواتین اور بچیوں کی صحت ،صفائی اور اچھی غذا فراہم کرنا ہے ۔انہوں نے مزید کہاکہ بلاک تھنہ منڈی۔ پلانگڑھ اور درہال میں تین تین پنچائتوں کا مشترکہ پروگرام منعقدکیاگیا ہے جس کے ذریعے عوام، بچیوں اور طلبہ کو اس مہم کے ذریعے جانکاری فراہم کی جائیگی۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ کا اگلا پروگرام درہال میں منعقد ہو گا۔
 
 

ہائی سکول مینڈھرکادرجہ نہ بڑھنے پرلوگوں کاانتظامیہ کیخلاف احتجاج 

جاوید اقبال

مینڈھر//مینڈھر کے پٹھانہ تیر علاقہ کے لوگوں نے ہائی سکول کادرجہ نہ بڑھنے کے معاملے کو لے کر انتظامیہ کے خلاف احتجاج کیااورنعرے بازی کرتے ہوئے سکول کادرجہ بڑھانے کی مانگ کی۔اس دوران متعلقہ سکول کی ایک طالبہ نے  لیڈران کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ایک سال قبل ماہ رمضان کے مہینے میں سکول کے درجہ کو لے کر ہم نے کئی دن احتجاج کیا تھااور اس وقت سابقہ ایم ایل اے نے ہمارے ساتھ آ کر وعدہ کیا کہ بہت جلد آپ کے سکول کا درجہ بڑھایا جائے گا اور اگلے سال آپ کے سکول میں نئی کلاس لگے گی اور سکول کا درجہ بڑھایاجائے گا۔متعلقہ سکول کی طالبہ نے بولتے ہوئے کہا کہ ہم لیڈران سے یہ اپیل کرتے ہیں کہ ہمارے ساتھ کیا گیا وعدہ پورا کیا جائے تاکہ دور دراز پہاڑی علاقہ بر بسنے والے بچے اپنی تعلیم آسانی سے جاری رکھ سکیں اور دور دراز علاقہ سے تعلق رکھنے والے بچے یہاں پر دسویں کلاس تک تعلیم حاصل کرنے آتے ہیں جس کے بعد بچے بالخصوص بچیاںاپنی تعلیم جاری نہیں رکھ سکتے جس کی وجہ یہ ہے کہ زیادہ تر بچے غریب خاندان سے تعلق رکھتے ہیں جن کا دور دراز  سکول میں جا کر اپنی تعلیم جاری رکھ پاناممکن نہیں ہوتاہے۔ان کا کہنا تھا کہ ہم گورنر انتظامیہ سے اپیل کرتے ہیں کہ فوری طور اس معاملہ میں ازسرنوغورکرکے  ہمارے سکول کا درجہ بڑھایا جائے تاکہ ہمارے لوگوں کو انصاف  مل سکے ورنہ ہم والدین کو ساتھ لے کر احتجاج کریں گے۔اس دوران علاقہ سے تعلق رکھنے والے محکمہ تعلیم کے اعلی افسران کو بھی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ متعلقہ افسران جان بوجھ کر ان لوگوں کے ساتھ نا انصافی کر رہے ہیں جن کا حق بنتا ہے لہذا فوری طور اپنے فیصلہ کو بدلہ جائے اور پٹھانہ تیر کے لوگوں کو حق دیا جائے ورنہ ہم احتجاج کریں گے۔
 
 

نوشہرہ کا رانی بڈیسرگائوں پسماندگی کی زندہ مثال

مسافر بس نہ دیگرسہولیات،روزانہ19کلو میٹر سفر کرنے پر مجبورہیں مکین

نوشہرہ//رمیش کیسر//جہاں ریاستی حکومت دوردرازعلاقہ جات میں سڑکوں کاجال بچھاکرآمدورفت کی سہولیات فراہم کے دعوے کررہی ہے وہیں دوسری طرف سب ڈویژن نوشہرہ ان دعوئوں کی نفی کررہاہے جہاں کے لوگ نوشہرہ سے اپنے گائوں رانی بڈیسرپہنچنے کیلئے 19کلومیٹرپیدل سفرکرنے پرمجبورہیں ۔تفصیلات کے مطابق سب ڈویژن نوشہرہ کے دورافتادہ گائوں رانی بڈیسرمیں مسافرگاڑیوں کی قلت کی وجہ سے لوگوں کومشکلات کاسامناکرناپڑرہاہے ۔مقامی لوگوں نے ضلع انتظامیہ سے مانگ کی ہے کہ علاقہ رانی بڈیسرکے عوام کی پریشانیوں کاازالہ کرنے کیلئے نوشہرہ سے مسافرگاڑی کی سہولت کاانتظام کیاجائے۔رانی بڈیستر گائونوشہرہ سے 19 کلومیٹرکی دوری پرواقع ہے اوراس گائوں میں جہاں دیگربنیاد ی سہولیات کافقدان پایاجارہاہے وہیں گائوں کے لوگوں کی اہم پریشانی مسافرگاڑی کی عدم دستیابی ہے ۔اس سلسلے میں سرپنچ شمیم اختر،نائب سرپنچ اشوک کمار، سابقہ سرپنچ حاجی فیروزخان ،علی جان، شوکت حسین ودیگرلوگوں کاکہناہے کہ رانی بڈیسرگائوں کیلئے نوشہرہ سے کوئی بھی مسافرگاڑی نہیں چلتی ہے جس کی وجہ سے لوگ پیدل سفرکرتے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ انتظامیہ کے نمائندوں کے سامنے رانی بڈیسرکے لوگوں نے کئی باراپنی مانگ کورکھالیکن اس کے باوجود مانگ پرانتظامیہ نے کوئی توجہ نہیں دی جس سے عوام میں انتظامیہ کے خلاف غم وغصہ پایاجارہاہے۔انہوں نے سب ڈویژن وضلع انتظامیہ سے مانگ کی کہ نوشہرہ سے رانی بڈیسرگائوں کیلئے مسافرگاڑی کی سہولت کابندوبست کیاجائے۔
 

ڈی سی پونچھ نے بانڈی چیچاں کے لوگوں کے مسائل سنے 

پونچھ//ضلع ترقیاتی کمشنرپونچھ راہول یادو نے پونچھ کے دور دراز گاؤں بانڈی چچیاں کا دورہ کیااور عوامی دربارکاانعقادکرکے لوگوں کے مسائل کے بارے میں جانکاری حاصل کی۔ان دوران ڈی سی کے ہمراہ ایکسین محکمہ تعمیرات عامہ ، ایکسین محکمہ صحت عامہ، معاون ترقیاتی کمشنر ودیگرافسران اورمعززین بھی موجودتھے۔  اس موقعہ پر لوگوں نے ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ سے کہاکہ بانڈی چیچیاں ایک سرحدی علاقہ ہے جہاں پر  لوگوں کو کئی قسم کی مشکلات درپیش آ رہی ہیں اور لوگ سہولیات سے محروم ہیں۔انہوں نے کہا کہ بجلی پانی اور سڑکوں کی خستہ حالت ہے جبکہ ابھی تک ہمارے بنکر بھی مکمل نہیں ہو سکے ہیں لہذا بنکروں کی تعمیر جلد مکمل کی جائے تاکہ لوگ اپنی جان ومال کی حفاظت کر سکیں۔ انہوں نے کہا کہ علاقہ میں بجلی ،پانی جیسی اہم سہولیات نہ داردہیں جبکہ صحت کاانتظام بھی ناقص ہے۔اس دوران ضلع ترقیاتی کمشنر نے تمام باتیں سننے کے بعد لوگوں کو یقین دلایا کہ تمام کام پہلی فرصت میں کئے جائیں گے ۔انھوں نے کہا کہ  وہ تمام ضلع افسران ساتھ لائے تاکہ انکی پریشانیاں حل ہو سکیں۔انھوں نے لوگوں کو یقین دلایا  بنکر جلد تعمیر کرائے جائیں گے ۔انہوں نے افسران کو تمام ترقیاتی کام مکمل کرنے کی ہدایت دی۔ اس دوران بانڈی  چچیاں  کی مختلف  پنچاتوں کے  سرپنچ اور پنچ موجود تھے ۔
 
 

پریس کلب مینڈھرکے قیام کی ستائش 

مینڈھر// مینڈھرکے سیاسی و سماجی لوگوں نے ورکنگ جرنلسٹ ایسوسی ایشن کی جانب سے پریس کلب مینڈھر کے نام سے تشکیل دی گئی اکائی کو خوش آئندقدم قراردیاہے۔اس دوران سابقہ ایم ایل سی رشیدقریشی،ماہر تعلیم ڈاکٹر شہزاد ملک،کانگریس لیڈر پروین سرور خان ،پی ڈی پی سینئر لیڈر ایڈوکیٹ ندیم خان،نیشنل کانفرنس سینئر لیڈر چوہدری ولی داد،یوتھ لیڈر احسان اکرم،یوتھ لیڈر محمد یونس ڈار،ایڈوکیٹ تنویر اقبال قریشی،بار ایسوسی ایشن کے صدر ایڈوکیٹ شوکت چوہدری، نیشنل کانفرنس تحصیل سکریٹری حاجی محمد ساحل چوہدری،کانگریس لیڈر عمران ظفر کے علاوہ کئی لیڈران نے نئی تشکیل دی گئی جرنلسٹ ایسوسیشن کی اکائی کو مبارک باد دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں امید ہے کہ اس سے قبل بھی یہ لوگ ایمانداری سے کام کرتے رہے اور اب مزید مضبوطی سے لوگوں کا کام کریں گے ۔انہوں نے کہاکہ مینڈھر ایک سرحدی علاقہ ہے جہاں پر میڈیا کے لوگوں کی طرف سے عوامی مسائل کااجاگرکرنا بہت اہم ہے۔انہوں نے کہاکہ مینڈھر سے وابستہ صحافیوں نے ا س سے قبل بھی سرحدی پر رہنے والے لوگوں کی آواز کو ہمیشہ بلند کیا اور اعلی سطح پر غریب لوگوں کی آواز پہنچائی ہم ان کو مبارک باد دیتے ہیں اور امید کرتے ہیں کہ آئند دنوں میں بھی یہ لوگ بہتر کام کریں گے تاکہ لوگوں کو فائدہ ملے۔
 
 

ڈی سی پونچھ کا انتخابی ضابطہ اخلاق کی پاسداری پرزور

پونچھ//حسین محتشم//الیکشن کمیشن آف انڈیا کی جانب سے پارلیمانی انتخابات کے اعلان کے فورا ًبعد ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ نے ایک پریس کانفرنس کے دوران عوام سے اپیل کی کہ وہ ماڈل کوڈ آف کنڈکٹ(ضابطہ اخلاق) جو پورے ملک کے ساتھ ساتھ ضلع پونچھ میں بھی نافذہوگیا ہے کی عمل آوری یقینی بنائے۔انہوں نے سیاسی جماعتوں کے لیڈران سے بھی انتخابی ضابطہ اخلاقپر عمل درآمد کرنے اور تمام قوانین کی پاسداری کی تلقین کی۔ انہوں نے کہا کہ جتنے بھی قوانین ہیں اگر ان کی خلاف ورزی کسی نے بھی کی تو اس  کے خلاف سخت کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔انہوں نے سیاسی لیڈران سے اپیل کی کہ وہ سویدا ایپ کے تحت کسی بھی طرح کی سہولت لیں ۔۔انہوں نے کہا کہ 1950 ٹول فری نمبر پر کال کرکے بھی اپنی شکایات درج کرائی جاسکتی ہے ۔ انہوں نے الیکشن کمیشن آف انڈیا کی جانب سے انٹرنیٹ پر مہیا ایپس کے استعمال کرنے کے ساتھ ساتھ تمام تر قوانین پر عمل درآمد کرنے کی بھی ہدایت دی۔انھوں نے سرکاری ملازمین  اور عام لوگوں سے بھی اپیل کی کہ وہ ماڈل کوڈ آف کنڈکٹ کے دوران تمام قوانین کی پاسداری کریں تاکہ یہ انتخابات احسن طریقہ کار سے پایہ تکمیل کوپہنچ سکیں۔