مزید خبریں

نامبلہ اوڑی میں سڑک حادثہ ،2 شہری زخمی

ظفر اقبال
 
 اوڑی/نامبلہ اوڑی میں جمعرات کو ایک سڑک حادثے میں دو افراد زخمی ہو گئے۔اطلات کے مطابق ایک سومو گاڑی برف کی وجہ سے سڑک سے پھسل کر گہری کھائی میں گر گئی جسکی وجہ سے گاڑی میں سوار دو افراد زخمی ہوئے۔ زخمی ہونے والے افراد کی شناخت امیر علی ککرو(ڈرائیور)اور الطاف احمد بجاڑ کے طور ہوئی ہے، دونوں نامبلہ اوڑی کے رہنے والے ہیں۔ دونوں کو فوری طور پر علاج کے لیے سب ڈسٹرکٹ اسپتال اوڑی منتقل کیا گیا جہاں  دونوں کی حالت مستحکم بتائی جاتی ہے۔اس حولے سے اوڑی پولیس نے ایک کیس درج کیا ہے۔
 

فوج برف باری کے دوران شہریوں کی مددکوپہنچی

سرینگر//بھارتی فوج نہ صرف سرحدوں پر امن بنائے رکھنے کیلئے پرعزم ہے بلکہ مشکل حالات میں شہریوں کی مددکرنے میں بھی پیش پیش ہے۔گزشتہ روز کی بھاری برف باری کے بعد این ایچ44پر درماندہ ٹرک ڈرائیوروں کورزشٹریہ رائفلزکے ہیڈ کوارٹر واقع نویگ ٹنل نے گرم کھانااورچائے پیش کی۔نویگ ٹنل پرکارمیںدرماندہ ایک کنبے کوبحفاظت وہاں سے نکالاگیااورنزدیکی قصبے ڈوروپہنچایاگیا۔ایک اور واقعہ میں 23فروری کو 12بجے ایک ایمبولیشن جوایک حاملہ کولیجارہی تھی،نویگ ٹنل میں پھنس گئی ۔خاتون کونازک حالت میں اننتناگ لیجایاجارہاتھا۔ایک افسر کی قیادت میں فوجیوں کے ایک ٹیم نے راستے کوصاف کیااورانہیں چھاونی میں قائم طبی مرکزپرپہنچایا۔مریض کوپھر فوجی ایمبولیینس میں سول اسپتال ڈوروکنبے کے ساتھ پہنچایاگیا۔اسی دوران ایک اور حاملہ جو اپنی نجی گاڑی میں درماندہ تھی ،کوبحفاظت ایمبولینس میں ڈوروپہنچایاگیا۔فوج کے اس بروقت کارروائی نے ان کی جان بچائی۔
 

سرینگرسونہ مرگ سڑک سے برف ہٹانے کاکام مکمل 

کنگن// غلام نبی رینہ//سرینگرسونہ مرگ شاہراہ پر جمعرات کوموسم میں بہتری کے ساتھ ہی بیکن نے برف ہٹانے کاکام شروع کیااورسڑک کو قابل آمدورفت بنایا تاہم اس دوران دوسرے دن بھی سونہ مرگ سڑک پرکسی بھی گاڑی کوچلنے کی اجازت نہیں دی گئی ،جسکی وجہ سے ریزن گگن گیر کے مقام پرٹریفک جام کے مناظر دیکھنے کو ملے۔سونہ مرگ،کلن،گگن گیر،گنڈ،زوجیلہ،منی مرگ،دراس اور دیگر علاقوں میں سومواراورمنگلوار کی درمیانی شب ہلکی برف باری کاسلسلہ شروع ہوا،جوبدھ کی رات تک جاری رہاجس کے نتیجے میں ان علاقوں میںدو سے تین فٹ برف جمع ہوگئی۔اس دوران سونہ مرگ سڑک پربرفانی تودے گرآنے کے امکانات کے پیش نظرٹریفک کواحتیاطی طور بندکیاگیاتھا۔جمعرات کو موسم میں بہتری کے ساتھ ہی سونہ مرگ سڑک پر بیکن نے  برف ہٹانے کاکام شروع کیاجس کے نتیجے میں سیاحوں کو ریزن گگن گیر کے مقام پرہی روک دیاگیا،جس کے باعث وہاں ٹریفک جام کے مناظردیکھنے کوملے۔ 
 

حالیہ برف باری سے پیداصورتحال

بجلی ملازمین خصوصاًڈیلی ویجروں کارول قابل تحسین

 سرینگر //بجلی ملازمین کی انجمن نے حالیہ برف باری کے بعد پیداشدہ صورتحال کامقابلہ کرنے کے دوران محکمہ کے عارضی ملازمین کے رول کی ستائش کرتے ہوئے کہا کہ محکمہ کے تمام ملازمین نے جانفشانی سے کام کیااورلوگوں کو بجلی فراہم کی۔ایک بیان میں الیکٹریکل ایمپلائز یونین کے صدرمشتاق احمدنجار نے کہا کہ محکمہ کے عارضی ملازمین نے حسب روایت ایک بار پھر محکمہ کی لاج رکھ کر اپنے فرائض انجام دیئے،اب یہ انتظامیہ پرمنحصر ہے کہ وہ ان کی مستقلی کے سلسلے میں کتنے پرخلوص اور وعدہ بند ہیں۔الیکٹریکل ایمپلائز ایسوسی ایشن نے تمام ملازمین بشمول ڈیلی ویجرس کاشکریہ اداکیاجولگاتار سسٹم کیساتھ منسلک رہ کرکسی بھی وقت کسی بھی مشکل کامقابلہ کرنے کیلئے تیارہیں۔ایسوسی ایشن نے فیلڈ میں کام کررہے عملہ سے بھی استدعاکی کہ وہ اپنی حفاظت کاخاص رکھیں تاکہ حادثات سے بچاجائے۔
 

 شہر میں سڑکیں جھیل جیسا منظر پیش کررہی ہیں ،انتظامیہ ناکام:لائیگرو

سرینگر// پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی کے یوتھ لیڈر عارف لائیگرو نے سڑکوں کی صفائی نہ ہونے اور شہر میں پانی جمع ہونے پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ حبہ کدل اور شہر کے دیگر حصوں میں سڑکیں جھیلوں کا منظر پیش کررہی ہیں۔لائیگرو نے کہا کہ اس حقیقت سے انکار نہیں کیا جا سکتا کہ نکاسی آب کا مناسب نظام تعمیر کرنے میں انتظامیہ ناکام رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ انتظامی بے حسی نے شہر کے لوگوں کے لیے پریشانیوں کو جنم دیا ہے۔
 
 
 

ہاری پاری گام میں تیندوے کا حملہ

۔15بھیڑیں ہلاک، 5زخمی

سید اعجاز 
ترال//ترال کے ہاری پاری گام نامی گائوں میں ایک تیندوے نے دوران شب غلام احمد ماگرے کے گاو خانے میں داخل ہو کر یہاںگائوخانے میں موجود15بھیڑوںکو ہلاک جبکہ5کو شدید زخمی کر دیا ہے۔متاثرہ شہری نے بتایا کہ وہ نیند میں مست تھے کہ تیندوا گاوخانے میں داخل ہوا ۔ انہوں نے اس دوران بھیڑوں کی آواز سنی جب وہ وہاں پہنچے تب تک تیندوے نے 15بھیڑیں ہلاک جبکہ پانچ زخمی ہوگئے تھے ۔انہوں نے بتایا کہ گزشتہ روز تیندوے نے سرفزار احمد نامی ایک اور شہری کے اسی طرح5بھیڑوں کو ہلاک کیا تھا جس کی وجہ سے اب مقامی لوگوں میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے ۔ اس دوران محکمہ وائلڈ لائف نے واقعے کے بعد علاقے میں ایک جھال نصب کیا ہے ۔ 
 
 

شہر میں ٹریفک نظام کو درست کرنے کا فیصلہ صحیح

 آٹو رکھشا ڈرائیورس ایسو سی ایشن نے خیر مقدم کیا

سرینگر//انتظامیہ کی جانب سے پرانی گاڑیوں کے دستاویزات کی تجدید اور شہر میں ٹریفک نظام کو درست کرنے کے فیصلے کو بروقت قرار دیتے ہوئے آٹو درائیوروں نے امید ظاہر کی کہ انکے مطالبات کو حل کیا جائے گا۔آل کشمیر آٹو رکھشا ڈرائیورس ایسو سی ایشن(ٹی آر سی) کے ایک وفد نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ حال ہی میںجموں میں ٹرانسپوٹروں کی ٹرانسپورٹ کمشنر کے ساتھ میٹنگ میں پرانی گاڑیوں کے دستاویزات کی تجدید کرنے کی جو اجازت دی گئی وہ خوش آئند ہے اور اس سے کافی لوگ بے روزگار ہونے سے بھی بچ جائیںگئے۔ انہوں نے کہا کہ سرکار کی جانب سے یہ فیصلہ بروقت ہے،جس کیلئے ٹرانسپوٹر اُن کے شکر گزار ہیں۔ ایسو سی ایشن نے سرینگر میں بے ہنگم ٹریفک کو استوار کرنے اور نظام کو درست کرنے کے فیصلے کا بھی خیر مقدم کیا۔انہوں نے کہا کہ عدالتی احکامات کو بجا لانے سے جہاں شہر مین ٹریفک جام کی صورتحال ختم ہوئی وہیں انکا روزگار بھی بحال ہوا۔
 

منشیات مخالف مہم

ڈگری کالج ہنداورہ میں پولیس کا پروگرام

اشرف چراغ
ہندوارہ// پولیس نے ڈگری کالج ہندوارہ میں یوتھ ڈیولپمنٹ اینڈ ریہیبلی ٹیشن سنٹر سرینگر کے تعاون سے منشیات سے نجات کے سلسلے میںایک پروگرام کا انعقاد کیا۔ ایس پی ہندوارہ سندیپ گپتا نے پروگرام کا آغاز کرتے ہوئے منشیات کی لت اور پولیس ڈرگ ڈی ایڈکشن سنٹر میں دستیاب علاج کی سہولیات کے بارے میں بات کی۔انہوں نے کشمیر میں منشیات کی لت کے منظر نامے پر روشنی ڈالی ۔ایس پی موصوف نے انسداد منشیات میں جموںکشمیر پولیس کے کردار کی وضاحت کی۔ انہوں نے عوام کو نشے کی علامات کے بارے میں بھی آگاہ کیا۔ پروگرام کے آخر میں سوال وجواب کا ایک سیشن بھی ہوا۔ ماہرین کی جانب سے تسلی بخش جوابات دئے گئے۔پروگرام کو عوام نے بے حد سراہا اور ضلع میں مزیدایسے پروگرام کرنے کی درخواست کی۔ 
 

گاندربل میں 2افراد گرفتار،15بوتلیںبرآمد

گاندربل//گاندربل پولیس نے ایس ایس پی نکھل بورکر کی ہدایت پر ڈی او شادی پورہ کی قیادت میں ڈی وائی ایس پی ہیڈ کوارٹر گاندربل عبدالمجیدکی نگرانی میںواسکورہ میں ایک ناکہ چیکنگ کے دوران ایک سفید رنگ کی زائلو گاڑی زیر نمبرJK15-0610کو روکاجس میں2افراد پالی تھین بیگ میں ممنوعہ مادہ لے جاتے ہوئے پائے گئے جن کی شناخت بلال احمد پیر ساکن وانگی پورہ سمبل بانڈی پورہ اور جاوید احمد گنائی ساکن لار گاندربل کے طور پر ہوئی ہے۔ان کی ذاتی تلاشی اور ان کی گاڑی کی تلاشی کے دوران ان کے قبضے سے ممنوعہ مادہ 15نمبر سیل بند بوتلیں کوڈین فاسفیٹ اور اسپاسمو پراکسیون پلس کیپسول برآمد ہوئے۔ دونوں افراد کو گرفتار کر لیا گیااورتھانہ گاندربل نے اس سلسلے میں مقدمہ ایف آئی آر نمبر 41/2022 درج کرکے مزید تفتیش شروع کی گئی۔ جے کے این ایس

 

سات روزہ اسکوپ فیسٹول 

گاندھی بھون کشمیر یونیورسٹی میں تیسرے روز دستاویزی فلموں کی نمائش

ارشاد احمد
سرینگر//سنٹرل یونیورسٹی کشمیر اور کشمیر یونیورسٹی کی جانب سے جاری سائنس اور ٹیکنالوجی کی جانب سکوپ فیسٹیول فار آل کے تیسرے دن سائنس اور ٹیکنالوجی کمیونیکیشن، پاپولرائزیشن اور اس کی توسیع سکوپ کے تحت مختلف سرگرمیاں منعقد کی گئیں۔اس فیسٹول کا انعقاد سنٹرل یونیورسٹی کشمیر اور کشمیر یونیورسٹی نے مشترکہ طور پر وگیان پرسر کے اشتراک سے کشمیر یونیورسٹی کے گاندھی بھون میں کیا ہے۔’’حیاتیاتی علوم کی شراکت اور ترقی‘‘کے موضوع پر بات کرتے ہوئے سنٹرل یونیورسٹی کشمیر کے رجسٹرار پروفیسر ایم افضل زرگر نے حیاتیاتی اور حیاتیاتی علوم کے اہم واقعات کے ارتقا کی درجہ بندی کی اور قدیم تہذیبوں میں شراکت کرنے والے بعض لوگوں کے تاریخی تناظر کو بیان کیا۔اسکالروں اور سائنسدانوں کے تعاون کے بارے میں بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا’’زندگی میں مواقع لیں، تجربات کریں، لیکن سائنس اور تجربات کے ساتھ سچے رہیں کیونکہ یہ نئی دریافتوں کا باعث بن سکتے ہیں۔زرعی اراضی یونیورسٹی کشمیر سے ڈاکٹر ظہور احمد ڈار نے’’کشمیر میں زرعی ترقی میں زرعی یونیورسٹی کا کردار‘‘کے موضوع پر اپنے خطاب میں کہا کہ زرعی یونیورسٹی علوم میں ایک علمی مرکز بن چکی ہے۔ہم ایک ایسی جگہ پیدا کرنے کے لیے تعلیم کو انٹرپرینیورشپ کے ساتھ ملا رہے ہیں جہاں بڑی تبدیلیوں اور ترقی کی گنجائش ہو سکتی ہے۔ہماری بڑی کامیابیوں میں سے ایک پشمینہ بکری کلون نوری اور فصل کی 104 اقسام تیار کرنا ہے۔’’بھارت میں بایومیڈیکل ریسرچ‘‘کے موضوع پر شرکا سے خطاب کرتے ہوئے کشمیر یونیورسٹی کارڑ کے پروفیسر بشیر احمد گنائی نے ہندوستان میں آزادی کے بعد کی سائنس اور تحقیق پر ایک بصیرت دی۔ انہوں نے کہا’’سائنس ملکوں یا قوموں کا مطالعہ نہیں ہے، بلکہ یہ بنی نوع انسان کے لیے ہے تاکہ لوگ اس سے فائدہ اٹھا سکیں اور آرام دہ زندگی گزار سکیں۔’’سیشن کے پیشکش سربراہ اکیڈمک افیئرز کشمیر یونیورسٹی پروفیسر فاروق احمد مسعودی نے اپنے درس میں کہا’’سالماتی حیاتیات اور بائیو ٹیکنالوجی میں انقلاب شروع ہو چکا ہے۔ ہم اسے مختلف بیماریوں کے علاج کے طور پر استعمال کرتے رہیں گے اور اس سے نئے جاندار تیار کریں گے۔جو 15-20 سال پہلے سوچا بھی نہیں جا سکتا تھا آج ہم نے سائنس کے استعمال سے حاصل کر لیا ہے۔دوپہر کے سیشن میں تین دستاویزی فلمیں دکھائی گئیں جن میں ’’گلوبل وارمنگ- ایک تباہی ان دی میٹنگ‘‘، شفقت حبیب اور پروفیسر شاہد رسول کی، "The Bitter Truth- Dal Losing battles between locals and authority"عبدالرشید اور "فوڈ سائنس اینڈ ٹیکنالوجی" از ریحانہ اختر۔اس سے قبل گزشتہ روز دوسرے روز بھی سرگرمیاں آن لائن کی گئیں۔جس کا موضوع تھا ’’اینلز آف ہسٹری آف سائنس‘‘-جدید سائنس کے بانیوں پر ایک نظر اور اس بات کا پتہ لگانا کہ کس طرح ان کی شراکت نے ہندوستان کو قومی اہمیت کے اداروں میں جدید سائنس اور ٹکنالوجی نظام قائم کرنے میں مدد کی اور کس طرح انہوں نے قوم کی تعمیر میں اپنا حصہ ڈالا۔شرکا سے خطاب کرتے ہوئے کشمیر کی کمپیوٹر سائنسز یونیورسٹی کے ڈائریکٹر ڈاکٹر معروف قادری نے کہا کہ انفارمیشن کمیونیکیشن ٹیکنالوجی نے موجودہ تعلیمی منظرنامے میں انقلاب برپا کر دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ طلبا کو بڑھتے ہوئے مسابقتی کام کے ماحول کے لیے تیاری کرنی چاہیے۔شعبہ نباتات کشمیر یونیورسٹی کے سربراہ پروفیسر ظفر احمدنے ہندوستان میں لائف سائنسز کے تاریخی تناظر کے بارے میں بات کی۔ اس موقع پر خطاب کرنے والوں میں پروفیسر محمد یوسف، پروفیسر ولی محمد شاہ اور پروفیسر ایم اکبر بھی شامل تھے۔
 

حد بندی کمیشن کی رپورٹ 

ترہگام کو الگ اسمبلی حلقہ قائم کرنے پر علاقہ کے لوگو ں میں مسرت 

اشرف چراغ 
کپوارہ//شمالی ضلع کپوارہ کے ترہگام علاقہ کے لوگو ں نے حد بندی کمیشن کی دوسری رپورٹ منظر عام پر لانے کے بعد حد بندی کمیشن نے ترہگام کو الگ اسمبلی حلقہ قائم کر کے یہا ں کے لوگو ں کی دیرینہ مانگ پوری کی گئی ۔علاقہ ترہگام کے لوگو ں کا کہنا ہے کہ سابقہ حکومتو ں نے علاقہ ترہگام سے سوتیلی ماں کا سلوک کیا اور علاقہ ترہگام تعمیر و ترقی کے لحاظ سے بہت پیچھے ہے ۔علاقہ کے لوگو ں کا مزید کہنا ہے کہ ترہگام کا الگ ایک تاریخی پس منظر ہے اور آج تک ترہگام علاقہ کو اپنے حق سے محروم رکھا گیا لیکن ترہگام کو الگ اسمبلی حلقہ دیکر لوگو ں نے ایک امید ظاہر کی کہ کمیشن کی جانب سے یہ ایک درست فیصلہ ہے ۔علاقہ کے لوگو ں نے بھارتیہ جنتا پارٹی کے ریاستی صدر رویندر رینہ کے اس بیان کو سراہا جس میں انہو ں نے کہا کہ ترہگام کے لوگو ں اور سابق رکن قانون ساز رفیق شاہ کی کاوشوں سے ترہگام کو الگ اسمبلی حلقہ بنایا گیا ۔واضع رہے کہ دو روز قبل بھارتیا جنتا پارٹی کے صدر رویندر رینہ نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ کپوارہ کے ترہگام علاقہ کو اسمبلی حلقہ دینے میں علاقہ کے لوگو ں اور سابق رکن اسمبلی رفیق شاہ کا بڑا ہاتھ ہے جنہو ں نے ابتدا سے ہی جد وجہد کی کہ ترہگام کو الگ اسمبلی حلقہ دیں اور آج اسی بدولت ترہگام کو ایک الگ اسمبلی حلقہ دیا گیا ۔
 

کلچرل فورم کپوارہ کی جانب سے آن لائن محفل مشاعرہ 

اشرف چراغ 
کپوارہ//کلچرل فورم کپوارہ نے اپنے سلسلہ وار پروگروامو ں کو جاری رکھتے ہوئے گزشتہ روز ایک آن لائن محفل مشاعرہ کا انعقاد کیا جس کی صدرات کلچرل فورم کے صدر شوکت ثاقب پوشپوری نے کی ۔آن لائن مشاعرے میں وادی بھر کے معروف شعرا ء نے اپنا کلام پیش کر کے سامعین کو محظوظ کیا ۔کلچرل فورم کپوارہ کے سر پرست شوکت ثاقب پوشپوری نے کشمیر عظمیٰ کو بتا یا کہ آئندہ بھی ایسے آن لائن مشاعرے جاری رہیں گے تاہم آج کے مشاعرے کی ایک خاص اہمیت یہ تھی کہ اس مشاعرے کا عنوان ’’موج یعنی ماں‘‘تھا۔مشاعرے کی دوسری نشست کی صدرات وادی کے معروف شاعر ،نقاد، سکالر اور ایواڑ یافتہ پریم ناتھ شاد نے کی جبکہ مہمان ذی قار کے فرائض کشمیر رائٹرس فورم کے نائب صدر مجروح کشمیری نے انجام دی۔اس دوران ملژار ادب ترہگام کے صدر سالک شفیع ،عشرت گل ،شاداب یاسمینہ ،سجادپرے سجاد ،بیدار مقبول ،گل تنویر ،عنایت اللہ راہی ،سنجے کمار راہگیر،نذیر جان،عاشق حسین زاہد ،فوزیہ اختر ردا،فاروقہ پروین ،حسینہ عزیمہ ،عبد الرشید جاں نثار ،حافظ عبد الرشید ،غلام رسول گوہر نے اپنا تازہ کلام پیش کیا ۔مختلف ادبی تنظیمو ں نے کلچرل فورم کے اس آن لائن مشاعرے کی سراہنا کی ۔
 

محکمہ اطلاعات کی جانب سے محفل موسیقی

سرینگر//محکمہ اطلاعات و رابطہ عامہ ( ڈی آئی پی آر ) کے کلچر یونٹ سرینگر نے کلچرل یونٹ ہال رام باغ میں ایک صوفیانہ سازینا پروگرام کا اہتمام کیا۔اِس موقع پر مشتاق احمد سازنواز نے سنتور پر مسحور کن صوفیانہ سازینہ پیش کیا اور اُن کے ساتھ سارنگی پر غلام محمد بٹ انزوالی اور گڑا پر غلام محی الدین کھانڈے تھے۔جوائنٹ ڈائریکٹر اِنفارمیشن کشمیر اور محکمہ کے ملازمین نے پروگرام میں شرکت کی۔
 

 مولانا ہمدانی کا یوم وصال کل

سرینگر//ریاست کے سرکردہ عالم دین مولانا غلام نبی ہمدانی کا 63واں یوم وصال 27فروری بروز سنیچر عقیدت کے ساتھ منایا جارہا ہے۔ اِس سلسلے میں جمعیت ہمدانیہ کی جانب سے خانقاہ معلی میں ایک خصوصی تقریب کا انعقاد ہورہا ہے۔اس روز نمازِ ظہر کے بعد خانقاہ معلی میں اجتماعی فاتحہ خوانی ہوگی اور مقررین حضرات مرحوم کی تاریخ ساز اسلامی خدمات پر تفصیل سے روشنی ڈالیں گے۔مختلف مساجد، زیارت گاہوں اور خانقاہوں کے علاوہ ہمدانی منزل پر قرآن خوانی ہوگی۔
 

عرس ِحضرت سیدقاسم شاہ حقانی

انتظامیہ سے مناسب انتظامات بہم رکھنے کی اپیل

سرینگر//وادی کشمیر کے معردف ولی کامل حضرت میر سید قاسم شاہ حقانی کا عرس 2 اور3 مارچ کو وادی بھر میں منایاجارہا ہے۔اس سلسلے میںنرپرستان فتح کدل میںجمعرات کو صبح آٹھ بجے سے نماز ظہر تک تقریب منعقد ہوگی جس میں ختمات المعظمات اور مولود شریف کے ساتھ ساتھ ذکر واذکارکا اہتمام ہوگا۔عرس مبارک پر ضلع انتظامیہ کو زائرین کی سہولیات کیلئے معقول اور مناسب انتظامات بہم رکھنے کا مطالبہ کرتے ہوئے ٹرسٹ کے جنرل سیکریٹری بشیر احمد ڈار نے کہا کہ عرس کے پیش نظر زائرین کی سہولیات بجلی ، پینے کا پانی ، صحت وصفائی اور عقیدت مندوں کیلئے معقول ٹرانسپورٹ سہولیات دستیاب رکھی جائیں۔
 

 عوامی آواز پارٹی کا گاندربل واقع پر اظہارافسوس

سرینگر//گاندربل میںانہدامی کارروائی کے دوران ایک نوجوان کی خود سوزی کی کوشش پر افسوس کااظہارکرتے ہوئے عوامی آواز پارٹی نے کہا ہے کہ اگر پہلے ہی انتظامیہ اس طرح غیر قانونی تعمیراتی کی اجازت نہ دیتی تو یہ واقع ہرگز پیش نہ آیا ہوتا۔ پارٹی نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس طرح کی سرگرمیوں کیلئے کون سے سرکاری ملازمین اجازت دیتے ہیں۔ پارٹی نے گاندربل میں تجاوزات کے خلاف مہم کے دوران نوجوانوں کی خود سوزی کی کوشش پر ناراضگی اور غم و غصے کا اظہار کیا ہے۔پارٹی کے چیئرمین سہیل احمد خان نے انتظامیہ پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ پہلے غیر قانونی تعمیرات کی اجازت دی اور پھر انہدامی مہم کے دوران صورتحال کو سنبھالنے میں ناکام رہی۔ انہوں نے زور دیا کہ اگر انتظامیہ قوانین پر عمل کرے تو ہم اس بدتر صورتحال کو کبھی نہیں پہنچ پائیں گے۔پارٹی کے جنرل سیکریٹری سید عرفان ہاشمی نے متاثرہ شخص اور اس کے اہل خانہ سے دلی ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے انتظامیہ بالخصوص محکمہ بلدیات اور محکمہ آبپاشی و فلڈ کنٹرول سے مطالبہ کیا کہ وہ غیر قانونی تعمیرات کی اجازت نہ دیں جو کہ طویل عرصے تک تباہی کا باعث بنتے ہیں۔ 
 

ڈاکٹر فاروق عبداللہ کا غلام احمد میر سے اظہار تعزیت

سرینگر// نیشنل کانفرنس صدرڈاکٹر فاروق عبداللہ نے جموں کشمیرپردیش کانگریس کمیٹی کے صدر غلام احمد میر کی والدئہ نسبتی کے انتقال پر گہرے صدمے کا اظہار کیاہے۔ انہوں نے مرحومہ کے جملہ سوگواران کے ساتھ تعزیت کا اظہار کیا ہے اور مرحومہ کی جنت نشینی کیلئے دعا کی۔ ڈاکٹر فاروق نے غلام احمد میرکے ساتھ ٹیلی فون پر رابطہ کرکے تعزیت کی ۔ پارٹی کے نائب صدرعمر عبداللہ ، جنرل سکریٹری علی محمد ساگر، معاون جنرل سکریٹری ڈاکٹر مصطفی کمال، صوبائی صدر ناصر اسلم وانی نے بھی تعزیت کا اظہار کیاہے۔
 

کسانوں کے قرضے معاف کئے جائیں:انجینئرایتو

سرینگر//اپنی پارٹی رہنماانجینئرنذیراحمدایتو نے لیفٹیننٹ گورنر پرزوردیا ہے کہ کسانوں کے قرضے معاف کئے جائیں۔ایک بیان میں انہوں نے حالیہ بھاری برف باری سے بڈگام ضلع کے باغ مالکان کو ہوئے نقصان پرتشویش کااظہار کیا ہے اورلیفٹیننٹ گورنر سے اپیل کی کہ وہ متاثرہ کسانوں کے قرضے معاف کئے جائیں۔انہوں نے متاثرہ کسانوں کو فوری طور نقدی امداددینے کامطالبہ بھی کیا۔ انہوں نے کہا کہ متاثرہ کسانوں کو مالی معاونت کے علاوہ مفت راشن،اورکھاددیں فراہم کرنے کی بھی مانگ کی۔انہوں نے کہاکہ باغ مالکان کو ہوا نقصان(بقیہ صفحہ8پر، کسانوں کے) کافی زیادہ ہے،حکومت کو فوری طور متاثرہ کسانوں کی مددکرنی چاہیے اورا ن کیلئے معقول امداد ی پیکیج کابھی اعلان کرناچاہیے۔