مزید خبریں

جموں وکشمیر کی تنظیم نو ہی مسائل کا واحد حل:بھیم سنگھ

سرینگر// نیشنل پنتھرس پارٹی کے سرپرست اعلی پروفیسر بھیم سنگھ نے نیشنل کانفرنس کے لیڈر ڈاکٹر فاروق عبداللہ کے نام نہاد چناب وادی سے متعلق بیان پر سوال اٹھاتے ہوئے دریافت کیا کہ اگر جموں وکشمیر کی تنظیم نو حل نہیں ہے تو پھر چنا ب وادی سے متعلق بیان کیا ہے۔ کیا نینشنل کانفرنس کے لیڈر جموں صوبہ کی تقسیم کا جواز پیش کرسکتے ہیں؟ وای چنا ب سیکٹر کیا ہے؟ پونچھ سیکٹر اور اس کی حیثیت کے بارے میں کیا؟پنتھرس سپریمو نے این سی لیڈر کے نام جواب میںفاروق عبداللہ سے کہا کہ وہ ریاست کی تاریخ کامطالعہ کریں اور دیکھیں کہ جموں وکشمیر کی تقسیم کی مہم کی شروعات این سی کے لیڈروں نے 1947میں کی تھی۔انہوں نے این سی کی قیادت سے کہا کہ وہ اپنی حکومت کے دوران ریاست میں حد بندی کی مخالفت اور لداخ اور پورے جموں صوبہ کے ساتھ امتیاز کا جواز پیش کرے۔جمو ں وکشمیر میں حدبندی کیوں نہیں ؟  اسمبلی میں جموں صوبہ کے شیئر کے بارے میں کیا؟ انہوں نے کہا کہ تینوں خطوں کے لوگوں کیلئے سیاسی ، سماجی اور اقتصادی انصاف یقینی بنانے کیلئے تنظیم نو ہی واحد حل ہے۔لداخ ، وادی کشمیر اور جموں کی سیاسی اور جغرافیائی بنیاد پر تنظیم نو ہی واحد حل ہے جس سے جموں اور وادی کشمیر کی الگ الگ اسمبلیاں ہوں جبکہ لداخ کو وہاں کے باشندوں کے خواہش کے مطابق مرکزکے زیرانتظام رکھا جائے۔وہاں ایک گورنر ، ایک ہائی کورٹ ہو جس سے ہندستانی آئین میں دیئے گئے بنیادی حقوق تمام خطوں میں نافذالعمل ہوں ۔ پروفیسر بھیم سنگھ نے نشاندہی کی اس سے ریاست میں موجودہ استحصال کا خاتمہ ہوگا اور ریاست میں امن بحال ہوگا نیز موقع پرست لیڈر غائب ہوجائیں گے۔انہوں نے کہاکہ جموں وکشمیر کے لوگوں کو اس وقت تک امن ، برابری اور انصاف نہیں مل سکتا جب تک یہاں ایک آئین اور ایک پرچم نہیں ہوگا اور جموں وکشمیر کے تمام لوگوں کو بنیادی حقوق حاصل نہیں ہوں گے۔
 
 

پاکستانی بس ڈرائیور کا بیٹا بنا برطانیہ کا نیا وزیر خزانہ

سرینگر// برطانیہ کے نئے وزیر اعظم بورس جانسن نے اپنی ٹیم کا اعلان کر دیا ہے۔ انہوں نے پاکستانی نڑاد ساجد جاوید کو اپنا وزیر خزانہ بنایا ہے۔ ساجد کا کنبہ پہلے پاکستان میں رہتا تھا۔ روزگار کی تلاش میں ان کے والد عبدالغنی برطانیہ چلے گئے تھے۔ ان کے والد ایک بس ڈرائیور تھے۔برطانیہ کے نئے وزیر اعظم بورس جانسن نے اپنی ٹیم کا اعلان کر دیا ہے۔ انہوں نے پاکستانی نڑاد ساجد جاوید کو اپنا وزیر خزانہ بنایا ہے۔ ساجد جاوید کی پیدائش برطانیہ میں ہوئی ہے۔ ساجد کو سال 2018 میں جب وزیر داخلہ بنایا گیا تو وہ برطانیہ کی پہلی نسلی اقلیتی برادری سے آنے والے وزیر داخلہ تھے۔جاوید پہلی بار سال 2010 سے برومسگرو سے رکن پارلیمنٹ منتخب کئے گئے تھے۔ آپ کو بتا دیں کہ ساجد برطانیہ کی تاریخ میں یہ مقام حاصل کرنے والی پاکستانی نڑاد کے پہلے سیاستداں ہیں۔ ان کی پیدائش 1969 میں برطانیہ کے روشڈیل قصبے میں ہوئی۔ساجد کا کنبہ پہلے پاکستان میں رہتا تھا۔ روزگار کی تلاش میں ان کے والد عبدالغنی برطانیہ چلے گئے تھے۔ ان کے والد ایک بس ڈرائیور تھے۔اپنے کنبہ کے بارے میں انہوں نے ایک انٹرویو میں کہا تھا کہ میرے والد پاکستان کے ایک چھوٹے سے گاؤں سے ہیں اور وہ صرف 17 سال کی عمر میں کام کے سلسلہ میں برطانیہ آگئے تھے۔ انہوں نے بتایا کہ میرے والد راک ڈیل میں رہنے لگے اور یہاں کلاتھ مل میں کام کرتے تھے۔ لیکن کچھ وقت کے بعد انہوں نے محسوس کیا کہ یہ یہاں بس ڈرائیوروں کی تنخواہ اچھی ہے۔ پھر وہ بس ڈرائیور بن گئے۔ وہ دن ہو یا رات جب بھی انہیں کام ملتا تھا کام کرتے تھے اور اسی لئے ہی انہیں ‘ مسٹر نائٹ اینڈ ڈے‘ کے نام سے بھی جانا جاتا تھا۔
 
 

بار ایسوسی ایشن کا تین کشمیریوں کی باعزت رہائی پر اطمینان کا اظہار

سرینگر// کشمیر ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن نے راجستھان ہائی کورٹ کی طرف سے تین کشمیریوں کوباعزت رہا کرنے پراطمینان کااظہار کیا ہے۔لطیف احمد وازہ،مرزانثارحسین اورعلی محمدبٹ ساکنان سرینگر کودہلی ہائی کورٹ نے اس سے قبل بھی بری کیاگیاتھا تاہم اس کے بعد اُنہیں دوبارہ گرفتار کرکے جے پور منتقل کیاگیاتھاجہاں اُن پر 1996کے دھماکے میں ملوث ہونے کے الزام میں پولیس کی طرف سے کیس درج دکھایا گیا۔بار کے ایک بیان کے مطابق دہلی ہائی کورٹ اور اس کے بعد راجستھان ہائی کورٹ کی طرف سے تین کشمیریوں کو رہا کرنے  سے ثابت ہوتا ہے کہ بھارت میں پولیس معصوم کشمیریوں کے پیچھے پڑی ہوئی ہے اوراُنہیں جھوٹے مقدموں میں پھنسایاجاتاہے اور جب وہ باعزت بری ہوتے ہیں تواُن کی زندگی تباہ کرنے والوں کیخلاف کوئی کارروائی نہیں کی جاتی ہے اور نہ ہی انہیں غیرقانونی طور جیل میں بند رکھنے کا کوئی معاوضہ دیاجاتا ہے۔ بار نے اُمیدظاہر کی ہے کہ راجستھان ہائی کورٹ کے فیصلے سے ہدایت حاصل کرکے اُن تمام کشمیریوں جو بھارت کی جیلوں میں بغیر کسی سماعت یاجن کی سماعت میں جان بوجھ کر تاخیر کی جاتی ہے تاکہ اُن کی نظر بندی کوطول دیاجائے ،کے معاملات کی فاسٹ ٹریک بنیادوں پر سماعت کی جائے گی اورانہیں انصاف فراہم کیاجائے گا۔ 
 
 
 

روزگار ڈھونڈنے والے نہیں،فراہم کرنے والے بن جائیں

 فاروق خان کی اسلامک یونیورسٹی میں طلاب سے ملاقات

سرینگر//گورنر کے مشیر فاروق احمد خان نے اسلامک یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی ( آئی یو ایس ٹی ) اونتی پورہ کا دورہ کیا اور وہاں فیکلٹی اور طلبأ کے ساتھ بات چیت کی۔یونیورسٹی کی طرف سے کئی اہم اقدامات پر اطمینان کا اِظہار کرتے ہوئے اُنہوں نے کہاکہ یونیورسٹی کو نوجوانوں میں اپنے یونٹ قائم کرنے اور اپنا روزگار کمانے کے لئے متعلقہ تعلیم و تربیت سے روشنا س ہونا چاہئے ۔ اس سلسلے میںانہوں نے کہا کہ یونیورسٹی کی انٹرپرینور شپ ڈیولپمنٹ سیل ریاست میں کار خانہ داری کے لئے مناسب ماحول پیدا کرنے کے لئے جدید طریقۂ کار اپنا نا چاہئے ۔اِس موقعہ پر طلبأ نے یونیورسٹی میں تیارکردہ مختلف عطر کے نمونے پیش کئے ۔ طلبأ کی ان کاوشوں کی ستائش کرتے ہوئے انہوں نے طلبأ پر زور دیا کہ وہ روزگار ڈھونڈنے والوں کے بجائے روزگار فراہم کرنے والے بن جائے۔اُنہوں نے آئی یو ایس ٹی کے وائس چانسلر کو یقین دلایا کہ اُن کے مستقبل کے پروگراموں میں حکومت تمام ممکنہ تعاون فراہم کرے گی۔ وائس چانسلر آئی یو ایس ٹی نے مشیر موصوف کو یونیورسٹی کی کارکردگی کے علاوہ یونیورسٹی کو درپیش مسائل سے آگاہ کیا۔ اعلیٰ تعلیم کے سیکرٹری طلعت پرویز روہیلا مشیر موصوف کے ہمراہ تھے۔
 
 
 
 
 
 

 وزیراعظم کی پالیسیاں کامیاب ثابت ہورہی ہیں

اشوک کول کا بارہمولہ میں ممبرشپ مہم کے دوران خطاب 

سرینگر//بھارتیہ جنتا پارٹی کے جنرل سیکریٹری (تنظیم )اشوک کول نے کہا ہے کہ حکومت عام لوگوں کے مشکلات کودور کرنے کیلئے دن رات کام کررہی ہے ۔کول اوڑی بارہ مولہ میں ممبرشپ مہم کے دوران خطاب کررہے تھے ۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نریندرمودی کی پالیسیاں کامیاب ثابت ہورہی ہیں اور ان کی وجہ سے ہی لوگ بھاجپا میں جوق در جوق شمولیت کررہے ہیں اور ہمارایہ فرض ہے کہ ہم لوگوں کی بلا تفریق مذہب،ذات یانسل خدمت کریں ۔کول نے کہا کہ وزیراعظم نریندرمودی کے ترقی کے نعرے نے ملک بھر میں وہ شکل اختیار کی ہے کہ عوامی بہبودوترقی نے نفرت،تقسیم اور رشوت خوری کی سیاست جگہ لے لی ہے۔انہوں نے کہا کہ لوگوں کواپنے خوشحال اور محفوظ مستقبل کیلئے اس جماعت میں شامل ہوجانا چاہیے۔انہوں نے اس بات پرزوردیا کہ پارٹی کا یقین ہے کہ پہلے ملک،پھر پارٹی اور آخر میں خود کو رکھا جائے اور جو بھی اس جماعت میں شامل ہورہاہے کو اسی جذبے کے ساتھ کام کرنا ہوگا۔اس موقعہ پر ریاستی بھاجپا کے نائب صدر ڈاکٹر علی محمدمیر،سینئررہنماایم ایم وار،منظور بٹ،ضلع صدر بارہمولہ ڈی کے نہرو،نائب صدر بارہمولہ میر مشتاق ودیگر موجود تھے۔