مزید خبرں

بدھل کا دور افتادہ علاقہ دھیون 

ایک ہزارکی آبادی طبی سہولیات سے محروم

سمت بھارگو
 
راجوری //راجوری کی دورافتادہ بدھل تحصیل کے دھیون گائوں میں طبی سہولیات کی عدم دستیابی کے باعث مقامی لوگوں کو سخت مشکلات کاسامناہے ۔دھیون گائوں کی شاہپور پنچایت کے لوگوںنے بتایاکہ وہ طبی سہولیات سے محروم ہیں اور اس دورافتادہ علاقے کی لگ بھگ ایک ہزار کی آبادی کو حکام نے نظرانداز کردیاہے ۔ایک مقامی شہری وحید ملک نے بتایاکہ علاقے میں صرف ایک میڈیکل سب سنٹر ہے لیکن اس کی حالت بھی خراب ہے اور اس سے ان کی طبی ضروریات پوری نہیں ہورہی ۔ان کاکہناتھاکہ یہ طبی مرکز کرایہ کی ایک عمارت میں چلایاجارہاہے لیکن آبادی کو دیکھتے ہوئے یہ ناکافی ہے لہٰذا اس کو اپ گریڈ کیاجائے اور انہیں طبی سہولیات فراہم کی جائیں ۔انہوں نے شکایت کی کہ اس طبی مرکز میں طبی و نیم طبی عملے کی قلت پائی جارہی ہے جس سے کام کاج بری طرح سے متاثر ہے ۔ مقامی لوگوں کاکہناہے کہ انہیں دیگر کئی قسم کی مشکلات کاسامنابھی ہے اور جہاں سڑک کی حالت خستہ ہے وہیں دیگر سہولیات بھی فراہم نہیں کی جارہی ۔انہوں نے علاقے میں بنیادی سہولیات کی عدم دستیابی کیلئے سابق حکومتوں اور سیاسی لیڈران کومورد الزام ٹھہراتے ہوئے کہاکہ کسی نے اس جانب توجہ نہیں دی اور انہیں ووٹ بینک کے طور پر استعمال کیاگیا ۔رابطہ کرنے پر بلاک میڈیکل افسر کنڈی ڈاکٹر اقبال ملک نے بتایاکہ دھیون کے طبی سنٹر کیلئے عمارت نہیں ہے اور اسے ایک کرایہ کی عمارت میں چلایاجارہاہے تاہم محکمہ اپنی طرف سے لوگوں کو بہتر سے بہتر طبی خدمات فراہم کرنے کیلئے کوشاں ہے ۔
 

محکمہ آبپاشی کی عمار ت پر پولیس نے قبضہ جمالیا 

بلڈنگ 7سال سے مرمت کی منتظر،منہدم ہونیکا خدشہ 

بختیار حسین
 
سرنکوٹ// محکمہ آبپاشی سرنکوٹ کی ایک عمارت پر پولیس نے قبضہ جمارکھاہے اور اس بلڈنگ کی حالت اس قدر خراب ہوگئی ہے کہ وہ کسی بھی منہدم ہوسکتی ہے ۔یہ عمارت پولیس تھانہ کے سامنے واقع ہے جس پر پچھلے کئی برسوں سے قبضہ جمارکھاہے لیکن محکمہ کو بھی اس عمارت کی فکر نہیں ہے ۔مقامی لوگوں کاکہناہے کہ جو محکمہ اپنی عمارت کی حفاظت نہیں کرپارہا وہ لوگوں کی خدمات کیا کرے گا ۔ مقامی شہری مختار زرگر نے بتایا کہ وہ کئی عرصہ سے اس عمارت کو خستہ حالت میں دیکھ رہے ہیں اوراس کی مرمت تک نہیں کی جارہی ۔ انہوں نے کہاکہ محکمہ غفلت کی نیند میں سورہاہے اور اسے کوئی پرواہ نہیں ۔اسی طرح سے تنویر احمد نے بتایا کہ سرنکوٹ میں سرکاری عمارتیں اچھی حالت میں نہیں ہیں اور ان پر غیر قانونی قبضہ جماگیاہے جبکہ باہر سے تعینات ہونے والے ملازمین کو رہنے کیلئے جگہ نہیں ملتی اوراسی وجہ سے کئی ملازم جوائن ہی نہیں کرتے۔انہوں نے کہاکہ سرکاری رہائشی کوارٹروں کا حال بھی انتہائی خراب ہے ۔رابطہ کرنے پر اے ای ای محکمہ آبپاشی محمد ریاض نے بتایا کہ اس عمارت کو پولیس نے غیر قانونی طور پر اپنی تحویل میں رکھاہواہے ۔انہوں نے بتایاکہ انہوں نے بارہا پولیس کو عمارت خالی کرنے کیلئے بتایالیکن ابھی تک ایسا نہیں کیاگیا اوراسی وجہ سے انہیں اس کی مرمت کرنے میں دشواری آرہی ہے ۔اس عمارت میں پولیس کا ایک کنبہ کئی سال سے رہائش پذیر ہے جو اسے خالی کرنے کوتیار نہیں ۔ وہیں ایس ایچ او سرنکوٹ جاوید ملک نے بتایاکہ ان کو تعینات ہوئے کم ہی عرصہ ہواہے اور وہ معاملے کا پتہ کروائیں گے ۔
 

مرتضیٰ خان کو صدمہ ماموں انتقال کرگئے 

مینڈھر//پی ڈی پی کے سینئر رہنما و سابق رکن قانون سازیہ مرتضیٰ احمد خان کے ماموں ریٹائرڈ ٹیچر بغداد حسین خان حرکت قلب بند ہوجانے کی وجہ سے انتقال کرگئے ہیں۔وہ مینڈھر کے گلہوتہ علاقے سے تعلق رکھتے تھے اور ان کی نماز جنازہ ادا کرکے انہیں وہیں پر دفن کیاگیاہے ۔مرحوم کی عمر لگ بھگ 70برس تھی ۔مرحوم گزشتہ دنوں کسی کام کے سلسلے میں جموں گئے ہوئے تھے اور وہیں انہیں دل کا دورہ پڑا جس وجہ سے وہ وفات پاگئے ۔نماز جنازہ میں مرتضیٰ خان کے علاوہ سابق وزیر نثار خان وبڑی تعداد میں سماجی وسیاسی کارکنان و دیگر لوگوں نے شرکت کی ۔خطہ پیر پنچال کی سیاسی وسماجی تنظیموں نے مرحوم کی موت پر گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے مرتضیٰ خان کے ساتھ ہمدردی کا اظہا رکیاہے۔
 

محکمہ صاف پانی فراہم کرنے میں ناکام

نارلہ کوٹ چروال کی عوام آلودہ پانی پینے پر مجبور 

کوٹرنکہ //ضلع راجوری کی تحصیل خواص میں محکمہ پی ایچ ای عوام کو پینے کا صاف پانی فراہم کرنے میں ناکام ثابت ہواہے۔مقامی لوگوں کے مطابق دوردراز علاقہ جات نارلہ کوٹ چروال ،کھوڑبنی وغیرہ میں پینے کا صاف پانی دستیاب نہیں اور وہ گندہ پانی پینے پر مجبو رہورہے ہیں جس کے نتیجہ میں بیماریوں کا خطرہ رہتاہے ۔نارلہ بمبل  کے لوگوں نے محکمہ پی ایچ ای پر الزام عائد کیا کہ اس کی طرف سے اسکولی بچوں اور عام لوگوں کو گندہ پانی سپلائی کیا جارہا ہے ۔لوگوں کا کہنا تھا کہ سنگلوٹ تا بمبل جانے والی پی ایچ ای لائین سے گندہ پانی سپلائی کیاجارہاہے ۔حافظ عبدالقیوم نے کہاکہ یہ پانی ایک چشمے سے سپلائی ہوتاہے اور وہیں پر کچھ لوگ کپڑے دھوتے اور نہاتے ہیں جبکہ اسی مقام سے مویشی پانی پیتے ہیں اور یہ ساری گندگی سپلائی لائن میں مل جاتی ہے جسے پر مقامی آبادی اور ہائر اسکینڈری اسکول نارلہ و دیگر سکولوں کے طلباء بھی پیتے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ اگر محکمہ کوئی ٹینک تعمیر کر ے گاتو پانی کو غلیظ ہونے سے بچایاجاسکتاہے لیکن ایسا نہیں کیاجارہا۔انہوںنے کہاکہ اگر سپلائی لائن خراب ہوجائے تو کوئی دھیان نہیں دیاجاتا اور محکمہ کاکوئی افسر علاقے کادورہ نہیں کرتا۔رابطہ کرنے پر اے ای ای فتح علی خان نے بتایاکہ انہوں نے ٹی لگادی ہے اور اب پانی صاف ہے ۔ انہوں نے کہاکہ کپڑے دھونے ،نہانے اور مویشیوں کے پینے کیلئے الگ پائپ لائن لگادی گئی ہے اور ساتھ ہی ٹینک کی تعمیر کیلئے حکام کو لکھاگیاہے جس کی منظوری ملتے ہی کام شروع کردیاجائے گا۔وہیں نائب تحصیلدار کوٹ جروال نارلہ بمبل نے بتایاکہ ان کے پاس چند روز قبل ایک وفد آیاجس نے شکایت کی کہ انہیں گندہ پانی سپلائی کیاجارہاہے جس پر انہوں نے معائنے کیلئے ایک ٹیم بھیجی جس نے پایاکہ واقعی گندہ پانی سپلائی ہورہاہے ۔ انہوں نے کہاکہ ٹینک تعمیر ہونے تک پانی صاف نہیں ہوسکتاہے۔
 
 

سابق حکومت نے درہال کو نظرانداز رکھا:اقبال ملک 

نیوز ڈیسک
 
درہال //پردیش کانگریس پارٹی کے ممبر وسینئر لیڈر محمد اقبال ملک کی قیادت میں درہال میں ایک اجلاس منعقد ہوا۔اس موقعہ پر خطاب کرتے ہوئے اقبال ملک نے کہاکہ سابق حکومت کے دور میں درہال کے ساتھ سوتیلا سلوک اختیار کیاگیا اور سڑک ، پانی ،بجلی اور طبی و تعلیمی شعبے میں نظرانداز کیاگیاجس کے باعث لوگ مشکلات کاسامناکرنے پر مجبور ہیں ۔ انہوںنے گورنر انتظامیہ سے اپیل کی کہ یہاں کے بگڑے ہوئے نظام کو سدھارنے کیلئے فوری طور پر اقدامات کئے جائیں اور سابق دور میں ہوئی زیادتیوں کاسدباب کیاجائے ۔انہوں نے سابق وزیر چوہدری ذوالفقار علی کو شدید تنقید کانشانہ بناتے ہوئے کہاکہ انہوں نے اپنے دو راقتدا رمیں پنچایتی سطح سے لیکر صوبائی سطح تک رشوت خوری کا بازارگرم کیا جس کی وجہ سے آج ملازمین کو کمیشن کے نام پر لئے جانے والے پیسہ کے کام کرنے کا من ہی نہیں کرتا۔ انہوں نے کہاکہ موجودہ دور میں یہاں اندھیرنگری اور چوپٹ راج قائم کیاگیاہے اور علاقے کو ترقیاتی سطح پرنظرانداز رکھاگیا۔ ان کاکہناتھاکہ لوگ آنے والے وقت میں اس کا جواب دیں گے اور آئندہ حکومت کانگریس کی ہی ہوگی ۔ اس موقعہ پر سرپنچ مرزا انور،سرپنچ بیت اللہ ملک ،سرپنچ عمر دراز مرزا،عبد الحق خان،محمد اسلم، حاجی محمد یعقوب،محمد عالم،ہادی نور وغیرہ بھی موجو دتھے ۔
 

تھنہ منڈی کے طلباء بیرون ریاست پر روانہ 

تھنہ منڈی //فوج کی طرف سے تھنہ منڈی کے طلباء کو کیپسٹی بلڈنگ دورے کے تحت بیرون ریاست روانہ کیاہے ۔اس دورے کا اہتمام راشٹریہ رائفل 38کی طرف سے کیاگیاہے ۔دورے پر بھیجے گئے طلباء دھیرادون فارسٹ ریسرچ انسٹی ٹیوٹ اور لال بہادر شاستری نیشنل اکیڈمی بھی جائیں گے ۔اس دورے کو بریگیڈیئر روی دیمری ڈپٹی جنرل افسر ان کمانڈنگ سی آئی ایف (رومیو)فورس نے ہری جھنڈی دکھاکرروانہ کیا ۔اس موقعہ پر ایس ڈی ایم تھنہ منڈی محمد تنویر خان، ایس ڈی پی او تھنہ منڈی محمد صادق ، اوقاف اسلامیہ چیئرمین عبدالقیوم ڈار، میونسپل کمیٹی چیئرمین شکیل میر، خورشید بسمل ، کالج پرنسپل شکیل احمد رینہ و دیگران بھی موجود تھے ۔
 

نوجوانوں کیلئے بھرتی کی تربیت اختتام پذیر

نیوز ڈیسک
 
راجوری //راجوری میں فوج کی طرف سے نوجوانوں کیلئے بھرتی کی تربیت کا اہتمام کیاگیا جو پیر کے روز اختتام پذیر ہوگئی ۔ اس تربیتی پروگرام میں بڑی تعداد میںنوجوانوں نے شرکت کی جنہیں اب بھرتی عمل میں حصہ لیکر اپنی قسمت آزمائی کرناہے ۔ یہ تربیتی پروگرام دو ہفتوں تک چلا جس دوران نوجوانوں کو بھرتی سے متعلق تمام امور کے بارے میں جانکاری فراہم کی گئی اور ان سے مشق بھی کرائی گئی ۔
 

کانگریس لیڈران کے دورہ ٔ مینڈھر کے سلسلے میں اجلاس 

جا وید اقبال
 
مینڈھر// کانگریس کی سینئر لیڈر و اے آئی سی سی ممبر پروین سرور خان نے مینڈھر میں پارٹی کارکنان کی ایک میٹنگ منعقد کی جس میں ضلع نائب صدر راجا وسیم احمد خان و ضلع سکریٹری حاجی امتیاز احمد خان ،تینوں بلاک کے صدورحاجی ظہیر احمد خان،اللہ داد خان،لیاقت خان ،چوہدری ظفر اللہ آزاد،چوہدری عمران ظفر ،تحصیل یوتھ صدر طاہر مرزا،جنرل سکریٹری بالاکوٹ محمد سلیم خان جنجوعہ و دیگران بھی موجو دتھے۔ میٹنگ کا مقصد 9فروری کوکانگریس کے ریاستی صدر جی اے میر و اے آئی سی سی کے سکریٹری و انچارج جموں وکشمیر ایم ایل اے بہار اسمبلی شکیل احمد خان کے دورہ ٔ مینڈھر پر انتظامات کو حتمی شکل دیناتھا۔اس موقعہ پر بتایاگیاکہ نو تاریخ کو کانگریس کا مینڈھر ڈاک بنگلہ میں پروگرام منعقد ہوگا جسے کامیاب بنانے کیلئے اقدامات کئے جائیں ۔ 
 

سرنکوٹ میں حیران کن واقعہ

ہم جماعت لڑکیوں نے طالبہ کو چاقو گھونپ دیا

سرنکوٹ //سرنکوٹ میںپیش آئے ایک حیران کن واقعہ میں بارہویں جماعت کی طالبہ کو اس کی ہم جماعت لڑکیوں نے چاقو گھونپ دیا۔متاثر لڑکی کی شناخت روبینہ کوثر کے طور پر ہوئی ہے جسے اس کے گھر پر تین لڑکیوںنے چاقو ماردیا۔ذرائع کے مطابق روبینہ اپنے گھر میں موجود تھی جہاں اس کی دیگرلڑکیوں کے ساتھ لڑائی ہوئی اور اسی دوران اس پر چاقو سے حملہ کیاگیا۔روبینہ گورنمنٹ گرلز ہائراسکینڈری سکول کی طالبہ ہے جسے فوری طور پرسرنکوٹ ہسپتال منتقل کیاگیاجہاں وہ زیر علاج ہے ۔رابطہ کرنے پر ڈی وائی ایس پی سرنکوٹ ریاض احمد نے بتایاکہ لڑکی ہسپتال میں زیر علاج ہے اور پولیس معاملے کی تحقیقات کررہی ہے ۔انہوں نے بتایاکہ ابتدائی تحقیقات سے معلوم ہواہے کہ اس پر اسی کی ہم جماعت تین لڑکیوں نے حملہ کیاہے ۔
 

سومو حادثے کاشکار، 1زخمی 

بختیار حسین
سرنکوٹ// بفلیاز سے سرنکوٹ کی طرف آرہی ایک سومو گاڑی حادثے کاشکار ہوگئی جس کے نتیجہ میں ایک شخص زخمی ہواہے۔سومو زیرنمبرJK12-2969بفلیاز سے سرنکوٹ آتے ہوئے ڈرائیور کے قابو سے باہر ہوکر سڑک سے لڑھک کر نیچے نالے میں جاگری جس کے نتیجہ میں ایک شخص زخمی ہواجس کی شناخت صابر حسین ولدنذیر حسین ساکنہ دروگیاں عمر 26 سال کے طور پر ہوئی ہے ۔اس دوران گاڑی چکنا چور ہوگئی ۔حادثے کی خبر ملتے ہی ایس ایچ او سرنکوٹ جاوید ملک موقعہ پر پہنچے اور انہوں نے مضروب نوجوان کو جائے حادثہ سے اٹھاکر سب ضلع ہسپتال سرنکوٹ منتقل کیا۔پولیس نے اس سلسلے میں کیس درج کرکے تحقیقات شروع کردی ہے جبکہ گاڑی کا ڈرائیور موقعہ سے فرار کرگیا۔
 

کینسر کی بیداری سے متعلق پروگرام 

 کوٹرنکہ//کینسر کے بارے میں بیداری عام کرنے کیلئے سموٹ آرمی کی طرف سے ایک پروگرام منعقد کیاگیا۔اس موقعہ پر طلباء کو کینسر کے مرض اور اس کے کامیاب علاج کے بارے میں بتایاگیااورساتھ ہی اس کی علامات کے بارے میں بیدار کیاگیا۔ فوجی ماہرین کی طرف سے توسیعی لیکچر کے ذریعہ کینسر کی روک تھام کے بارے میں بتایاگیا۔اس دوران سوالات وجوابات کا سیشن بھی ہوا۔