مزید خبرں

تنظیم علماء اسلام کا اجلاس منعقد 

دینی خدمات کیلئے تنظیم کو مزید مستحکم کرنے کا عزم 
جموں // تنظیم علماء اسلام کے ہیڈ آفس جموں میںایک اجلاس کا اہتمام کیا گیا جس میں تنظیم کے متعدد اراکین نے شرکت کی ۔اس اجلاس میں تنظیم کی مضبوطی پر زور دیتے ہوئے اراکین نے کہاکہ ریاست جموں وکشمیر میں اس تنظیم کو مزید مستحکم کرنے کیلئے یکجا ہو کر کام کیا جائے گا۔ اس اجلاس میں جماعت اہلسنت کے کئی علماء اور معززین نے شرکت کرتے ہوئے جموں جنرل بس اسٹینڈ پر حالیہ دنوں میں ہو ئے گرینڈ حملے اور دیگر ریاستوں میں کشمیر طلباء و تاجروں پر ہونے والے حملوں کی شدید الفاظ میں مذمت کی گئی ۔اراکین نے مرکزی حکومت اور ہندو انتہا پسندوں سے کہا کہ اگر وہ کشمیر کو اپنا مانتے ہیں تو دہشت گردی و دیگر مسائل سے متاثر ہو کر دیگر ریاستوں میں محنت مزدوری کیلئے گئے ہوئے کشمیریوں کیساتھ بھی اچھا سلوک رکھیں ۔اراکین نے کہاکہ مرکزی حکومت کا چاہیے کہ وہ کشمیر ی عوام کو تحفظ فراہم کرنے کیلئے ترجیح بنیادوں پر اقدامات اٹھا ئے تاکہ کشمیر ی طلباء کی پڑھائی متاثر نہ ہو ۔اس اجلاس میں مفتی محمد فرید شاہ مصباحی صدر تنظیم علماء اسلام جموں ،نائب صدر مولانا لیاقت علی نعیمی ،سیکریٹری غیاث الدین ،حافظ محمد اصغر رضا ،حافظ محمد اشرف ،ریاض احمد ،مولانا سید محمد ساحل ودیگران بھی موجود تھے ۔
 
 

کٹھوعہ میں لائسنس شدہ ہتھیار جمع کروانے کا حکم 

حافظ قریشی 
کٹھوعہ //آئندہ پارلیمانی انتخابات کو الیکشن کمیشن کی ہدایات کے مطابق صاف و شفاف منعقد کروانے کیلئے ضلع کٹھوعہ میں انتظامیہ نے عوام کیلئے ایڈ وائزری جاری کرتے ہوئے کہاکہ لائسنس شدہ ہتھیاروں کو مقامی پولیس اسٹیشنوں میں جمع کروایا جائے ۔ایس ایس پی کٹھوعہ کی جانب سے جاری ایک حکم نامے کے مطابق آئندہ پارلیمانی انتخابات 2019کو پُر امن منعقد کروانے کے سلسلہ میں مذکورہ قدم اٹھا یا گیا ہے جبکہ اس حکم نامے کے تحت بینکوںاور دیگر نجی اداروں میں تعینات سیکورٹی گارڈز پولیس انتظامیہ سے معقول اجاز نامہ لے کر ہی اب اہتھیار اپنے پاس رکھ سکیں گے ۔کٹھوعہ پولیس نے عوام سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ حکم نامے کی خلاف ورزی کے سلسلہ میں پولیس کیساتھ 01922-234311,234100 ان نمبرات پر رابطہ قائم کریں تاکہ قانونی کاروائی عمل میں لائی جاسکے ۔
 
 

 سیاسی پارٹیوں نے جموںکی عوام کیساتھ کھلواڑ کیا

ڈوگرہ صدر سبھا کے اجلاس میں مقررین کاالزام

 جموں //ڈوگرہ صدر سبھا کا اجلاس جموں میں منعقدہ ہو ا جس میں صوبہ جموں کے مختلف اضلاع سے تنظیم کے اراکین نے شرکت کی ۔اجلاس کے دوران اراکین نے ریاست کی سیاسی صورتحال پر تفصیلی روشنی ڈالتے ہوئے الزام عائد کیا کہ سیاسی پارٹیوں نے اپنے مفاد کیلئے صوبہ جموں کی عوام کیساتھ کھلواڑ کیا ۔گل چین سنگھ چاڑک کی قیادت میں منعقدہ اجلاس کے دوران اراکین نے کہاکہ گزشتہ 70برسوں سے ریاست میں تعمیر و ترقی کے نام پر رشوت خوری اور ند عنوانی کو فروغ دیا گیا ہے جبکہ عوام کی فلاح و بہبود کی جانب کوئی توجہ نہیں دی گئی ۔ڈوگر ہ صدر سبھا کے کارکنوں نے کہاکہ صوبہ جموں میں کی عوام کے علا وہ ڈوگرہ تمدنی و ثقافت ،سیاحتی مقامات ،تعلیم نظام ،تعمیر و ترقی اور بے روز گار نوجوانوں کو درپیش مسائل کی جانب کسی بھی حکومت نے کوئی توجہ نہیں دی ۔انتخابات کے دوران نوجوانوں کو بہترین مستقبل کے خواب دکھاے جاتے ہیں لیکن اقتدار میں آنے کے بعد ان کو یکسر نظر انداز کر دیا جاتا ہے ۔سبھا کے اراکین نے عزم ظاہر کرتے ہوئے کہاکہ وہ مذکورہ تنظیم کے بینر تلے نوجوانوں کے علا وہ عام لوگوں کی تعمیر و ترقی کیلئے ہر ممکن کو شش کرینگے ۔اس اجلاس کے دوران تنظیم کی جانب سے سیاسی امور سے وابستہ ایک کمیٹی بھی تشکیل دی گئی جبکہ اس کمیٹی میں ڈاکٹر این کے شرما ،وریندر کے سہائی ،سنیئر صحافی پی ایس گپتا ،جی ڈی ایس چاڑک ،جے اے خواجہ ،ایم ایس جموال اور کرشن کمار کو شامل کیا گیا ہے ۔اس کمیٹی میں جموں صوبہ کے تمام اضلاع سے اراکین کو شامل کیا گیا ہے ۔