مزید خبرں

خواتین پولی ٹیکنک کالج میں سوچھ بھارت ابھیان پر پروگرام 

جموں //گور نمنٹ وومن پولی ٹیکنک کالج لوہر شیو نگر میں جموں میونسپل کارپوریشن کی طرف سے ’سوچھ بھارت ابھیان ‘کے عنوان سے ایک بیداری پروگرام کا اہتمام کیا گیا ۔اس بیداری پروگرام کے دوران مقررین نے طلباء کو صفائی ستھرائی کے بارے میں جانکاری فراہم کرتے ہوئے کہاکہ جموں شہر کو صاف ستھرا بنانے کیلئے عوام کو بیدار کرنے کیلئے اپنا رول ادا کریں ۔ کالج پرنسپل انجینئر ریتو جموال کی قیادت میں منعقدہ پروگرام کے دوران جموں میونسپل کارپوریشن کی سوچھ بھارت کمیٹی کے اراکین نے طلباء کو گندگی کو ٹھکانے لگانے اور اس سلسلہ میں احتیاطی اقدامات کے بارے میں جانکاری فراہم کی ۔مقررین نے کہاکہ بھاجپا کی مرکزی حکومت کی جانب سے 2014میں صفائی ستھرائی کے سلسلہ میں سوچھ بھارت ابھیان شروع کیا گیا تھا تاہم عوام کو اپنے آس پاس میں صفائی ستھرائی کیلئے بیدار کیا جائے ۔ اپنے خطاب میں ورج پرکاش پدھا نے کہاکہ جموں کے ہر ایک شہری کو چاہیے کہ وہ شہر کو ملک کے سر فہرست دس صاف ستھراے شہروں میں لانے کیلئے اپنا رول ادا کرے۔جموں مئیر کی ہدایات پر منعقدہ پروگرام میں ڈپٹی مئیر جموں ،سوچھ بھارت ابھیان کمیٹی کے اراکین اور کمشنر جموں میونسپل کارپوریشن کے علا وہ دیگران بھی موجود تھے ۔
 

ڈوگرہ ڈگری کالج میں کوئز مقابلے کا اہتمام کیا گیا 

سانبہ //ڈوگرہ ڈگری کالج انتظامیہ کی جانب سے طلباء کی ذہنیت کو نکھارنے کیلئے ایک کوئز مقابلے کا اہتمام کیا گیاجس میں طلباء کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی ۔اس کوئز مقابلے میں پانچ ٹیموں کے شرکت کی ۔پانچ مرحلوں پر مشتمل اس کوئز مقابلے کے دوران ہر ایک مرحلے میں سب سے کم اسکور کرنے والی ٹیم کا آئندہ مرحلے میں داخل نہیں ہو سکتی تھی جبکہ کوئز مقابلے میں بہترین کارکر دگی کا مظاہرہ کرنے والی ٹیم میں انعامات بھی تقسیم کئے گئے ۔اس موقعہ پر بولتے ہوئے کالج پرنسپل نے طلبا ء پر زور دیتے ہوئے کہاکہ وہ پڑھائی کیساتھ ساتھ کھیلوں و دیگر سرگرمیوں میں بھی شرکت کر کے اپنی صلاحیتوں کا مظاہرہ کریں ۔اس موقعہ پر کالج طلباء کے علاوہ سٹاف ممبران بھی موجود تھے ۔
 

بہوجن سماج پارٹی نے الیکشن کمیشن کے فیصلے پر ناراضگی کا اظہار کیا 

جموں //بہوجن سماج پارٹی کی ریاستی اکائی نے الیکشن کمیشن کی جانب سے ریاست جموں وکشمیرمیں اسمبلی انتخابات کے سلسلہ میں کئے گئے فیصلے پر ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ سیاسی پارٹیوں کی امنگوں کے بر عکس فیصلہ کیا گیا ہے جوکہ عوامی مفاد میں نہیں ہے ۔یہاں منعقدہ ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بی ایس پی کے ریاستی صدر ایس آر مجوتراہ نے کہاکہ الیکشن کمیشن کی جانب سے ریاستی عوام کیساتھ نا انصافی کی گئی ہے جبکہ مذکورہ فیصلے سے ایسا لگتا ہے کہ ریاستی گورنر اور الیکشن کمیشن آف انڈیا بھاجپا کے اشاروں پر کام کر رہے ہیں ۔انہوں نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ اس سے قبل بھاجپا نے ہر ایک ادارے کے کام کاج میں داخل اندازی دی ہے جبکہ اب الیکشن کمیشن بھی پارٹی کے اشاروں کے تحت کام کر رہا ہے ۔
 

کانگریس پارٹی مضبوطی کی جانب گامزن :رمن بھلہ 

جموں //کانگریس سنیئر لیڈر اور سابقہ ریاستی وزیر رمن بھلہ نے کہا کہ کانگریس پارٹی ریاست میں مضبوطی کی جانب گامز ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے حالیہ بلدیاتی انتخابات میں بطور آزاد امید وار حصہ لینے والی ائومہ ابروال کی جانب سے اپنی حامیوں سمیت کانگریس میں شمولیت اختیار کرنے کیلئے منعقدہ ایک پرگرام سے خطاب کرتے ہو ئے کیا ۔انہوں نے کہاکہ خواتین سماج کی تعمیر و ترقی میں ایک اہم رول ادا کر رہی ہیں جبکہ ان کی طاقت کو ضائع نہیں کیا جاسکتا ۔انہوں نے نئی شمولیت کا پارٹی میں استقبال کرتے ہوئے امید ظاہر کی کہ ان کی آمد سے کانگریس پارٹی کو مضبوطی ملے گی ۔اس موقعہ پر ضلع کانگریس کمیٹی جموں کے صدر وکرم ملہوترہ نے جموں میونسپل کا رپوریشن انتخابات میں حصہ لینے والی ائومہ ابروال کا پارٹی میں استقبال کرتے ہوئے کارکنوں کو ہدایات جاری کیں کہ وہ پارلیمانی انتخابات کے سلسلہ میں پارٹی کو زمینی سطح پر مضبوط کرنے کیلئے اپنا رول ادا کریں ۔پارٹی میں شمولیت اختیار کرنے والوں میں سنجے ابروال ،راکیش کمار ،روی کانت شرما ،ستیندر کمار ودیگران نے بھی پارٹی میں شمولیت اختیار کرلی ۔
 

 ہزاروں اساتذہ کی چارماہ کی تنخواہیں واجب الادا

 رہبر تعلیم ٹیچرز فورم کا فوری واگذاری کا مطالبہ ، متعلقہ حکام سے ذاتی مداخلت کی اپیل

سرینگر+جموں// ریاست کے ہزاروں رہبر تعلیم سے گریڈ ٹو میں شامل ہونے والے اسا تذہ اور ماسٹر گریڈ اساتذہ کی گذشتہ چار ماہ سے بند پڑی تنخواہوں کی وجہ سے شدید مالی مشکلات سے دوچار ہیں ۔ان اساتذہ کے مطابق گذشتہ ماہ یقین دیانیوں کے باوجود ان کی بند پڑی تنخواہوں کو ٹریجری سے واگذار نہیں کیا جا رہاے ۔ ان اساتذہ کے مطابق محکمہ کے فائنانئس ڈیپارٹمنٹ کی طرف سے اگر چہ بلوں کو ٹریجری میں جمع کرایا گیا ہے لیکن ابھی تک دو ہفتے سے زائید کا عرصہ گذر نے کے باوجود بھی ان کی تنخواہیں واگذار نہیں کی جا رہی ہیں ۔ چار ماہ کے زائید عرصے کی تنخواہیں بند ہونے کی وجہ سے اساتذہ زبرست مالی مشکلات سے پریشان ہیں ۔ اس سلسلے میں جموں کشمیر رہبر تعلیم ٹیچرز فورم نے اپنے ایک بیان میں متعلقہ حکام سے اپیل کی ہے کہ وہ اساتذہ کی بند پڑی تنخواہوں کو فوری طور پر واگذار کیا جائے تاکہ اساتذہ کی مزید مالی مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے ۔ فورم چیئر مین فاروق احمد تانترے نے محکمہ تعلیم کے اعلیٰ حکام سے اپیل کی ہے کہ وہ اس بارے میں ذاتی مداخلت کر کے اساتذہ کی بند پڑی تنخواہوں کو واگذار کرائیں تاکہ ہزاروں اساتذہ کو مزیدپریشان ہونا پڑے۔اُنہوں نے کہا کہ اُنہیںیقین دہانی کرائی گئی تھی کہ اس ہفتے تک بند پڑی تنخواہوں کو واگذار کیا جائے گا لیکن تاحال تنخواہیں واگذار نہ کی گئی ہیں ۔