مزید خبرں

 کریوٹ پولنگ اسٹیشن میںآنگن واڑی ورکر پر حملہ 

تحصیلدا رنے مقدمہ درج کر نے کی ہدایت جاری کی 

طارق شال
 تھنہ منڈی//تحصیل تھنہ منڈی کے کریوٹ پولنگ اسٹیشن پر تعینات آنگن ورکر کیساتھ بدسلوکی کئے جانے کے بعد تحصیلدار تھنہ منڈی نے دو افراد کیخلاف معاملہ درج کرنے کا حکم جاری کیا ۔مڈل سکول کریوٹ میں قائم پولنگ اسٹیشن نمبر 23پر تعینات ایک خاتو ن آنگن واڑی ورکرز کو کچھ مقامی افراد نے تھپڑ رسید کرتے ہوئے بے عزتی کی ۔بدسلوکی کرنے والی کی شناکٹ منظور حسین او ر محمد شوکت ولد نظیر حسین کے طور پر ہوئی ہے ۔اس دوران مقامی لوگوں اور انتخابی عملے کے مابین ہوئے تصادم کے دوران ووٹنگ عمل کو بند کرنا پڑا تاہم ایس ایچ ائو تھنہ منڈی نے پولیس ٹیم کے ہمراہ موقعہ پر جا کر معاملہ کو ٹھنڈا کیا ۔اسی دوران غنڈا گردی میں ملوث افراد کیخلاف معاملہ درج کر نے کا حکم جاری کردیا گیا ہے ۔سب ڈویژن مجسٹر یٹ تھنہ منڈی ڈاکٹر تنویر خان نے حملہ کی شدید الفاظ میں مذمت کی ۔ایس ایچ ائو نے کہا کہ پولیس معاملہ کی تحقیقات کر رہی ہے اور اس سلسلہ میں پتہ لگایا جائے گا کہ حملہ آور افراد کا تعلق کسی سیاسی جماعت سے ہے یا نہیں ۔انہوں نے کہاکہ ملوث ملزمان کیخلاف قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی ۔
 
 

الیکٹر انک ووٹنگ مشینوں میں خرابی ،ووٹنگ تاخیر سے شروع 

طارق شال 
تھنہ منڈی //تحصیل تھنہ منڈی کے مختلف پولنگ اسٹیشنوں میں نصب الیکٹر نگ ووٹنگ مشینوں میں خرابی کی وجہ سے ووٹروں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا جبکہ کچھ ایک پولنگ اسٹیشنوں پر ووٹنگ بھی تاخیر سے شروع ہو ئی ۔ پولنگ اسٹیشن 32میں الیکٹرنگ ووٹنگ مشین میں خرابی کی وجہ سے ووٹنگ تاخیر سے شروع ہو ئی ۔الیکٹر نک ووٹنگ مشین میں خرابی کی وجہ سے کئی ایک ووٹر اپنے حق رائے دہندگی کا استعمال کئے بغیر واپس لوٹ گئے ۔پرائمری سکول ڈھنہ میں قائم شدہ پولنگ اسٹیشن میں 7کے بجائے 9بجے پولنگ شروع کی گئی ۔اسی طرح پولنگ اسٹیشن 13میں نصب مشین میں خرابی کی وجہ سے مقامی لوگوں کو دقتوں کا سامنا کرناپڑا جبکہ اس کے علا قہ پو لنگ اسٹیشن کوٹ اے ،پولنگ اسٹیشن 49اور پولنگ اسٹیشن 74میں نصب شدہ الیکٹرنگ ووٹنگ مشینوں میں خرابی کی وجہ سے ووٹروں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ۔
 

ای وی ایم میں خرابی، بلنایی میں 3گھنٹے تک پولنگ بند رہی

عشرت حسین بٹ
منڈی//تحصیل منڈی کے دور دراز علاقہ بلنایی میں جمعرات کو پارلیمانی انتخابات کے دوران ای وی ایم مشین میںآئی خرابی کے باعث تین گھنٹوں تک پولنگ بند رہی۔ تحصیل منڈی کے صدر مقام سے دس کلو میٹر دورپہاڑی پر واقعہ بلنایی علاقہ میں دوران پولنگ الیکٹر نگ ووٹنگ مشین میں آئی خرابی کی وجہ سے پولنگ تین گھنٹوں تک بند رہی ۔سرپنچ بلنایی منیرہ بیگم کے مطابق بلنایی پولنگ بوتھ جو کہ مڈل سکول بلنایی میں قائم کیا گیا تھا میں تین گھنٹے تک پولنگ متاثر رہی۔ انہوں نے کہا کہ دس بجے ای وی ایم مشین میں تکنیکی خرابی آئی جوایک بجے تک رہی جس کی وجہ سے حق رائے دہندگی کا استعمال کرنے آئے لوگوں کو بغیر ووٹ ڈالے واپس جانا پڑا ۔تاہم 3گھنٹوں کے بعد نئی مشین نصب کرنے کے بعد پولنگ عمل بحال ہوا اور شام چھ بجے تک 737 ووٹوں میں سے 537ووٹ پول ہوئے تھے ۔
 

 

پولنگ اسٹیشنوں کی تبدیلی کامعاملہ 

کوٹ دھڑا اور کٹار مل میں مقامی لوگوں کا احتجاج 

سمت بھارگو 
راجوری //اسمبلی حلقہ راجوری میں پولنگ اسٹیشنوں کی تبدیلی کیخلاف احتجاج کرتے ہوئے مقامی لوگوں نے الیکشن کے بائیکاٹ کا نتباہ دیا تاہم متعلقہ انتظامیہ کی یقین دہانیوں کے بعد ان عوام نے ووٹ ڈالنے کا عمل شروع کیا ۔راجوری کے کوٹ دھڑا اور منجا کوٹ تحصیل کے کٹارمل علا قہ میں قائم پولنگ اسٹیشنوںکو تبدیل کردیا گیا تھا ۔کوٹ دھڑا کی عوام نے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ انتظامیہ کی جانب سے ان کا پولنگ اسٹیشن دوسری جگہ پر منتقل کیا گیا تھا جس کی وجہ سے ان کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ۔پولنگ اسٹیشن کی تبدیلی کے سلسلہ میں مقامی لوگوں کی جانب سے احتجاج کئے گئے احتجاج کے بعد مقامی انتظامیہ کے اعلیٰ آفیسران نے لوگوں کیساتھ ملاقات کرکے ان کو یقین دہانی کروائی جس کے بعد لوگوں نے ووٹ ڈالنے کا عمل شروع کیا ۔اسی طرح منجاکوٹ کے کٹار مل علاقہ کے لوگوں نے ان کی خواہشات کے برعکس پولنگ اسٹیشن تبدیل کرنے کے عمل کیخلاف احتجاج کیا تاہم اعلیٰ آفیسران کی مداخلت کے بعد ووٹنگ کے عمل کو شروع کیا گیا ۔
 
 

 ساوجیاں گگڑیاں کی عوام نے سرحدی کشیدگی ختم کرنے کیلئے ووٹ ڈالا

عشرت حسین بٹ
منڈی//پارلیمانی انتخابات کے پہلے مرحلے کے دوران تحصیل منڈی کے سرحدی علاقہ ساوجیاں گگڑیاں کی عوام نے سرحد پر دونوں ملکوں کے درمیان کشیدگی کو ختم کرنے کے لیے اپنے ووٹ کا استعمال کیا۔ منڈی کے سرحدی علاقہ ساوجیاں ،گگڑیاں،چھمبر،کناری کھیت اور گنتڑ کی عوام نے کہا کہ انہوں نے سرحدی علا قوں میں کشیدگی اور فائرنگ کے عمل پر روک لگانے کیلئے ووٹ کااستعمال کیا ہے ۔ ساوجیاں کے عبد رشید ، شمشیر احمد ،مشتاق احمد اور فردوس احمد نے بتایا کہ انہوں نے بے روز گاری ختم کر نے اور دیگر بنیادی سہولیات کی فراہم کے بجائے سرحدی علا قوں میں فائرنگ کے عمل کو بند کروانے کیلئے ووٹ دیا ہے ۔انہوں نے کہاکہ دو نوں افواج کے مابین ہونے والی فائرنگ کی وجہ سے سرحدی علا قوںمیں مقامی لوگوں کو شدید نقصان کا سامنا کرنا پڑ تاہے ۔مقامی لوگوں نے کہاکہ فائرنگ کی وجہ سے سرحدی علا قوں کی عوام ہر وقت زندگی اور موت کی کشمکش میں رہتی ہے جبکہ اس بار انہوں نے اس کشیدگی کو ختم کرنے کیلئے ووٹ کا استعمال کیا ہے ۔اسی طرح چھمبر کناری کے محمد لطیف محمد عثمان اور عبدل رشیدنے کہاکہ سرحدی علا قوں کی عوام کیلئے تعمیر و ترقی کے بجائے امن زیادہ ضروری ہے ۔انہوں نے کہاکہ ضلع پونچھ کے سرحدی علا قوں کی عوام ہمیشہ خطرے میں رہتی ہیں جبکہ پارلیمانی انتخابات میں انہوں نے اس امید سے ووٹ کا استعمال کیا ہے کہ آئندہ دونوں ممالک کے مابین تعلقات بہتر بنا نے کر عوام کو تحفظ فراہم کیا جائے گا۔
 

پولنگ عمل صاف و شفاف اختتام پذ یر :انتظامیہ 

سمت بھارگو 
راجوری //ضلع انتظامیہ راجوری اور پونچھ نے پارلیمانی انتخابات 2019کے سلسلہ میں جاری بیان میں کہا ہے کہ پورا انتخابی عمل صاف و شفاف طریقے سے اختتام پذیر ہو گیا ہے ۔ایس ایس پی راجوری نے کہاکہ ضلع راجوری میں پورا انتخابی عمل بغیر کسی خلل کے اختتام پذیر ہو ا ۔انہوں نے کہا کہ ضلع کے کچھ علا قوں میں قائم پولنگ اسٹیشنوں پر سے کچھ ایک معاملات کی خبر یں موصول ہوئی تاہم مقامی انتظامیہ ان تمام معاملات کو خوش اسلوبی کیساتھ حل کردیا گیا ۔انہوں نے کہاکہ کچھ ایک پولنگ اسٹیشنوں پر سیاسی پارٹیوں کے اراکین کے مابین نوک جوک ہوئیں تاہم امن و امان کی صورتحال سے متعلق کوئی بھی معاملہ پیش نہیں آیا ۔انہوں نے کہاکہ پارلیمانی انتخابات کے سلسلہ میں سیکورٹی کے سخت ترین انتظامات کئے گئے تھے ۔انہوں نے کہاکہ کوٹ دھڑا میں مقامی لوگوںنے پولنگ اسٹیشن کی تبدیلی اور بنیادی سہولیات کے فقدان پر ووٹ نہ ڈالنے کا فیصلہ کیا تھا لیکن انتظامیہ کی مداخلت کے بعد عوام نے حق رائے دہندگی کا استعمال کیا ۔ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ نے کہاکہ کچھ ایک پولنگ اسٹیشنوں پر مشینوں میںآئی تکنکی خرابیوں اور کچھ اسٹیشنوں پر فورسز وووٹروں کے مابین نوک جھوک کے علاوہ الیکشن کامیابی کیساتھ اختتام پذیر ہو گیا ۔انہوںنے کہاکہ ضلع میں ووٹنگ کی شرح بھی زیادہ رہی ہے ۔
 
 
 
 

کوٹرنکہ کی پنچایت درمن میں بجلی نظام مفلوج 

۔5ہزار کی آباد ی والی پنچایت میں ٹرانسفارمر نصب کرنے کی مانگ 

محمد بشارت 
کوٹرنکہ //سب ڈویژن کوٹرنکہ کی پنچایت درمن میں محکمہ پی ڈی ڈی کی ناقص کارکردگی ک وجہ سے مقامی لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔5ہزار کی آبادی والی مذکورہ پنچایت کے مو ڑہ رنگ بگلہ کے لوگوں نے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ متعلقہ محکمہ کی عدم توجہی کی وجہ سے پورے گائوں میں بجلی نظام پوری طرح سے مفلوج ہو چکا ہے ۔انہوں نے کہاکہ اس پنچایت میں فراہم کی جارہی بجلی کی وولٹیج بہت کم ہے تاہم اس کے باوجود بھی متعلقہ محکمہ کی جانب سے ہر ایک ماہ میں بجلی کے بل گھروں میں ارسال کردئے جاتے ہیں لیکن متعدد بار مانگ کرنے اور اعلیٰ آفیسران سے رجوع کرنے کے باوجود بھی بجلی کا ٹرانسفارمر فراہم نہیں کیا گیا ہے ۔شوکت علی اور محمد اسلم نے بتایا کہ پنچایتی اراکین سے لے کر متعلقہ محکمہ کے اعلیٰ آفیسران غریب لوگوں کا استحصال کر رہے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ انتظامیہ ہر ایک گائوں میں بنیادی سہولیات فراہم کرنے کے دعوے کر رہی ہے لیکن زمینی سطح پر پورا نظام ہی مفلوج ہو چکاہے ۔مقامی لوگوں نے ضلع ترقیاتی کمشنر راجوری سے اپیل کر تے ہوئے کہاکہ مذکورہ موڑہ میں بجلی کا ٹرانسفارمر نصب کیا جائے تاکہ مقامی لوگوں کو درپیش مشکلات حل ہوسکیں ۔محکمہ بجلی کے اسسٹنٹ ایگزیکٹو انجینئر نے بتا یا کہ لوڈ شیڈنگ کے بارے میں تفصیل جمع کرنے کے بعد علا قہ کا دور کر کے جائزہ لیا جائے گا ۔