مزید خبرں

ڈمپل کی ڈی سی و چیف انجینئر سے ملاقات

 امبپھلا،نیو پلاٹ۔ جانی پو۔ہائی کورٹ سڑک کی کشادگی پر احتجاج 

جموں//جموں ویسٹ اسمبلی مومینٹ کے صدر سنیل ڈمپل کی قیادت میںحلقہ کے لوگوںپر مشتمل ایک وفد نے ضلع ترقیاتی کمشنررمیش کمار اور چیف انجینئر محکمہ تعمیرات عامہ ناصر گونی کے ساتھ ملاقات کی اور انہیں امبپھلا۔جانی پور ہائی کورٹ روڈ کو کشادہ کرنے کے خلاف احتجاج درج کیا۔انہوں نے ڈی سی اور چیف انجینئر سے کو ئی دوسرا متبادل تلاش کرنے کا مطالبہ کیا ،تاکہ امبپھلا، جانی پور ،نیو پلاٹ ،ہائی کورٹ روڈ تک کے 5۔لاکھ کنبوں ،کاروباریوں ،باشندوں کے جائیداد اور کاروبار کو نقصان نہ ہو۔وفد نے ڈی سی اورچیف انجینئر سے کہا کہ علاقہ کے تاجر مذکورہ سڑک کی کشادگی کے خلاف ایک زور دار احتجاج کر رہے ہیں۔وفد نے  بتایا کہ علاقہ میں ٹریفک مسلہ حل کرنے،بڑھتے سڑک حادثات اور امبپھلا ۔مانڈا سے جانی پور ہائی کورٹ روڈ سے اکھنور تک چار گلیار سرکیولر روڈ اور امبپھلا ،جانی پور ہائی کورٹ روڈ،روپ نگر، بن تالاب سے اکھنور تک میٹرو ریل شروع کرنیکا مطالبہ کیا۔انہوں نے ڈی سی سے کہا کہ گذشتہ روز محکمہ مال کے اہلکاروں نے کشادگی سے متاثر ہورہے دوکانوںپر نشان لگائے ہیں ،تاکہ انہیں منہدم کیا جاسکے۔دریں اثنا،ڈمپل نے اس موقعہ پر کہا کہ تاجر طبقہ کسی بھی صورت میں کشادگی منصوبہ کو روبہ عمل ہونے کی اجازت نہیں دیں گے۔انہوں نے تاجروں سے اکٹھا ہونے اور محکمہ مال کے اہلکاروں سے کسی بھی قسم کا تعاون نہ کرنے کو کہا ۔ڈمپل نے گورنر سے فوری طور میٹرو ریل کی تعمیر اور اسے شروع کرنے اور امبپھلا ۔مانڈا سے جانی پور ہائی کورٹ روڈ سے اکھنور تک چار گلیار سرکیولر روڈ تعمیر کرنے میں مداخلت کرنے کی اپیل کی ہے کیونکہ سابقہ سرکاریں شہر میں ٹریفک مسلہ سے نمٹنے میں ناکام رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ تاجر طبقہ ٹریفک مسائل سے نمٹنے کے لئے موثر کاروائی کرنے کے لئے ہڑتال شروع کرے گی۔ 
 
   

چناب ویلی پائور پروجیکٹس کا ایثار 

مڈل سکول چھنی ہمت کے طلاب میںکاپیاں تقسیم 

جموں //چناب ویلی پروجیکٹس کارپوریشن لمیٹڈ کی جانب سے یہاں چھنی ہمت کے گورنمنٹ مڈل سکول کے 300  طلاب میں سماجی ترقی پروگرام کے تحت کاپیاں تقسیم کیں۔ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ طلاب غریب طبقہ سے تعلق رکھتے ہیں۔جنرل منجیر فائنانس کے کے گوئل ،جنرل منیجر (ایچ آر ایم کے پاولوس اور شریمتی گوئل کے علاوہ CVPPPL  کے دیگر افسران اور لیڈیز  بھی اس موقعہ پر موجود تھے۔ اس موقعہ پر طلاب نے کمپنی کی جانب سے یہ نیک کام کرنے پر انکا شکریہ ادا کیا۔کمپنی  ضلع کشتواڑ میں تین آبی بجلی پروجیکٹ پکل ڈول ایچ ای پروجیکٹ (1000 MW) ، کائیرو ایچ ای پروجیکٹ (624 MW) اور کوار ایچ ای پروجیکٹ (540 MW) تعمیر کر رہی ہے۔
 

نریندر سنگھ کا گورنر کے بیان پر شدید رد عمل کا اظہار

جموں // محکمہ اطلاعات کے سابقہ ڈائریکٹر نریندر سنگھ نے ایک بیان میں ریاست کے گورنر ستیہ پال ملک کی جانب سے رشوت خوری کے سلسلہ میں دئے گئے بیان پر شدید رد عمل کا اظہار کیا ہے،جس میں گورنر نے ملی ٹینٹوں سے سیکورٹی فورسز کو نشانہ بنانے کے بجائے رشوت خور  لوگوں کو ہدف بنانے کی صلاح دی تھی۔سابقہ ڈائریکٹر نے کہا کہ ایسے عہدے پر فائض افسر سے ایسے ریمارکس کسی بھی صورت مٰں قابل قبول نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ ریاست جموں و کشمیر ہی فقط ایک ایسی ریاست نہیں ہے جہاں پر رشوت خوری کا بول بالا ہے بلکہ ملک میں بہت سی ایسی ریاستیں ہیں جہاں پر اس سے زیادہ یا اس سے کم رشوت خوری کے معاملات ہیں۔انہون نے کہا کہ اس طرح سے ملی ٹینٹوں  کو رشوت خور لوگوں کے خلاف کاروائی کرنے کیلئے کسی بھی طرح سے صیح نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ رشوت خوروں کے خلاف کاروائی کرنے کے دیگر قانونی کاروائی عمل میں لائی جا سکتی ہے۔انہوں نے کہا ہے کہ چنانچہ گوررن نے بذات خود اعتراف کیا ہے کہ انہیں بحثیت قانونی سربرا ہ کے ایسا نہیں کہنا چاہیے تھا بلکہ اسے ریاست میںملی ٹینسی کے مد نظر زیادہ محتاط رہنا چاہے تھا ۔دریں اثنا ،انہوں نے میڈیا سے بھی ملک کے مفاد میں ایسے سنسنی خیز خبریں شائع کرنے سے اجتناب کرنے کی صلاح دی ہے۔
 
  

محکمہ اوقاف نے بٹھنڈی میں ناجائز تجاوزات کو ہٹایا 

جموں //محکمہ اوقاف نے ناجائز تجاوزات کے خلاف مہم کو جاری رکھتے ہوئے بٹھنڈی میں ناجائز تجاوزات سے اوقاف کی جائیداد کو چھڑالیا۔ ایک پریس بیان میں کہا گیا ہے کہ محکمہ نے مہم کے تحت موضع سنجواں موراہ میں واقع زیر خسرہ نمبر 248سے ناجائز قبضہ ہٹا کر کروڑوں روپے مالیت کی جائیداد کو ضبط کرکے محکمہ کو واپس سونپ لیا۔  یہ کاروئی ڈیوٹی مجسٹریٹ نائب تحصیلدار باہو (ایگزیکٹو مجسٹریٹ فسٹ کلاس)محمد اقبال اور انچارج پولیس پوسٹ بٹھنڈی ،جموں کی موجودگی میں انجام دی گئی ۔ ناجائز تجاوزات کے خلاف اس مہم کو سب سے بڑی کامیاب مہم کے طور پر دیکھا جاتا ہے۔اور ان افراد کے لئے چشم کشائی ہے  کہ وہ وقف کی جائیداد پر ناجائز قبضہ کرنے سے اجتناب کریں ۔ بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ ناجائز تجاوزات کے خلاف مہم تب تک جاری رہے گی،جب تک وقف کی جائیداد کو ناجائز قبضہ سے نہیں چھُڑالیا جاتا ہے۔۔
 
 

سیاسی استحصال کنندگان سے ریاست کو بچانے کیلئے جموں وکشمیر کی تنظیم نو ہی واحد حل: پنتھرس پارٹی

جموں//جموں وکشمیر نیشنل پنتھرس پارٹی کے سرپرست اعلی پروفیسر بھیم سنگھ نے نیشنل کانفرنس کے لیڈر ڈاکٹر فاروق عبداللہ کے نام نہاد چناب وادی سے متعلق بیان پر سوال اٹھاتے ہوئے دریافت کیا کہ اگر جموں وکشمیر کی تنظیم نو حل نہیں ہے تو پھر چنا ب وادی سے متعلق بیان کیا ہے۔ کیا نینشنل کانفرنس کے لیڈر جموں صوبہ کی تقسیم کا جواز پیش کرسکتے ہیں؟ وای چنا ب سیکٹر کیا ہے؟ پونچ سیکٹر اور اس کی حیثیت کے بارے میں کیا؟پنتھرس سپریمو نے این سی لیڈر کے نام جواب میںفاروق عبداللہ سے کہا کہ وہ ریاست کی تاریخ کامطالعہ کریں اور دیکھیں کہ  جموں وکشمیر کی تقسیم کی مہم کی شروعات این سی کے لیڈروں نے 1947میں کی تھی۔انہوں نے این سی کی قیادت سے کہا کہ وہ اپنی حکومت کے دوران ریاست میں حد بندی کی مخالفت اور لداخ اور پورے جموں صوبہ کے ساتھ امتیاز کا جواز پیش کرے۔جمو ں وکشمیر میں حدبندی کیوں نہیں ؟  اسمبلی میں جموں صوبہ کے شیئر کے بارے میں کیا؟ انہوں نے کہا کہ تینوں خطوں کے لوگوں کے لئے سیاسی ، سماجی اور اقتصادی انصاف یقینی بنانے کیلئے تنظیم نو ہی واحد حل ہے۔لداخ ، وادی کشمیر اور جموں کی سیاسی اور جغرافیائی بنیاد پر تنظیم نو ہی واحد حل ہے جس سے جموں اور وادی کشمیر کی الگ الگ اسمبلیاں ہوں جبکہ لداخ کو وہاں کے باشندوں کے خواہش کے مطابق مرکزکے زیرانتظام رکھا جائے۔وہاں ایک گورنر ، ایک ہائی کورٹ ہو جس سے ہندستانی آئین میں دیئے گئے بنیادی حقوق تمام خطوں میں نافذالعمل ہوں ۔ پروفیسر بھیم سنگھ نے نشاندہی کی اس سے ریاست میں موجودہ استحصال کا خاتمہ ہوگا اور ریاست میں امن بحال ہوگا نیز موقع پرست لیڈر غائب ہوجائیں گے۔انہوں نے کہاکہ جموں وکشمیر کے لوگوں کو اس وقت تک امن ، برابری اور انصاف نہیں مل سکتا جب تک یہاں ایک آئین اور ایک پرچم نہیں ہوگا اور جموں وکشمیر کے تمام لوگوں کو بنیادی حقوق حاصل نہیں ہوں گے۔
 
 

بڑی براہمناں انڈسٹریز ایسو سی ایشن وفد چیئر مین جے کے بینک سے ملاقی

جموں //بڑی براہمناں انڈسٹریز ایسو سی ایشن کے صدر للت مہاجن کی قیادت میں سینئر نائب صدر ترن سنگلہ، نائب صدر اجے لنگر ،جنرل سیکرٹری وراج مہاجن ،سیکرٹری راجیش جین اور ایسو سی ایشن کے خزانچی وویک سنگھلہ  پر مشتمل ایک وفد نے یہاں جمعرات کے روز جموں و کشمیر بینک کے چیر من ا چیف ایگزیکٹو افسر آر کے چھبر سے تبادلہ خیال کرکے جے اینڈ کے میں صنعتی شعبہ کے مسائل سے باخبر کیا اور ان کے فوری حل کی اپیل کی۔جے اینڈ کے بینک بڑی براہمناںبرانچ کی کارکردگی کی ستائش کرتے ہوئے وفدنے چیر مین کی نوٹس میں درج ذیل مسائل لائے ،جن میں معیاد بند وقت میں کیش کریڈٹ حد کی تجدیدکاری ،تین سال کے بجائے پانچ سال کے بعد فکسڈ اثاثہ کی قیمت کا اندازہ کرنا ،میسرز ڈی ایم یس پیٹرو کیمکلز پرائیویٹ لمیٹڈ کے بقایا معاملہ کو بذریعہ نیشنل کمپنی لاء ٹریبونل چندی گڑھ حل کرنا ، وزارت دفاع کے تحت ناردن کمان کی جانب سے جے اینڈ کے بینک کی بینک گارنٹی کی قبول نہ کرنے ، بڑی براہمناں میںجے اینڈ کے بینک کے احاطہ میں گرین بیلٹ پارک کا ایک ٹکڑا قائم کرنے کا مدعا بھی شامل تھا ۔ چیئر مین آر کے چھبر نے وفد کو بغور سُنا اور ترجیحی بنیادوں پر انہیں حل کرنے کی یقین دہانی کی۔