مزید خبرں

جموں وکشمیر میں صنعتی ترقی 

 نئی مرکزی شعبے کی سکیم جلد شروع کی جائے گی

سری نگر//چیف سیکرٹری ڈاکٹر ارون کمار مہتا نے  مرکزی داخلہ سیکرٹری اور مرکزی سیکرٹر ی روڈ، ٹرانسپورٹ اور ہائی ویز وزارت کے ساتھ میٹنگ میں شرکت کی تاکہ جموں وکشمیرمیں صنعتی ترقی کے لئے نئی مرکزی شعبے کی سکیم کے خدوخال پر تبادلہ خیال کیا جاسکے۔میٹنگ میں صنعت و حرفت کے پرنسپل سیکرٹری بھی موجو دتھے۔بتایاگیا کہ یونین ٹیریٹری صنعتی ترقی کو فروغ دینے کے لئے مرکزی حکومت جلد ہی جموں وکشمیر کے لئے ایک صنعتی سکیم شروع کرے گی۔یہ سکیم ایم ایس ایم ایز اور بڑی صنعتوں دونوں کو فائدہ پہنچانے کے لئے بنائی گئی ہے ۔ یہ نہ صرف نئی سرمایہ کاری کی حوصلہ افزائی کرے گا بلکہ موجودہ صنعتوں کو فروغ دینے میں بھی مدد کرے گا۔نئی سکیم کیپٹل انوسٹمنٹ ، کیپٹل اِنٹرسٹ سبوینشن ، کیپٹل انوسٹمنٹ لون ، پلانٹ اور مشینری کے لئے جی ایس ٹی سے منسلک مراعات اور ورکنگ کیپٹل اِنٹرسٹ سبونشن کے لئے مراعات فراہم کرے گی۔واضح رہے کہ جموں و کشمیر میں صنعتی ترقی حکومت کی اوّلین ترجیحات میں سے ایک ہے اورتوقع ہے کہ جموں و کشمیر میں روزگار کے اہم مواقع پیدا ہوں گے۔
 

ریت نکالنے کے دوران دو گروہوںمیں تصادم

بارہمولہ میں جہلم میں غرقآب نوجوان کی لاش 2دن بعد برآمد

بارہمولہ//فیاض بخاری//چکلو بارہمولہ میں چند روز قبل غیر قانونی طور ریت نکالنے کے دوران دو گروپوں کے درمیان ایک تصادم میں 40سالہ نوجوان دریائے جہلم میں ڈوب گیا تھا ،کی لاش کو سوموار کو خانپورہ کے نزدیک برآمد کی گئی۔ مقامی لوگوں نے بارہمولہ میں احتجاجی دھرنا دیکر قاتلوں کو سزا دینے کی مانگ کی ۔بلال احمد پنڈت ولد محمد اسماعیل ساکنہ خوجہ باغ سنیچر 31 جولائی کو چکلو بارہمولہ میں اپنے دوست کے ساتھ ریت نکال رہا تھا۔اس دوران وہاں کچھ اور افراد موجود تھے اور جھگڑا ہوا جس کے بعد بلال دریائے جہلم میں ڈوب گیا۔ متوفی  کے رشتہ داروں نے احتجاج کرتے ہوئے مانگ کی کہ قاتلوں کو فوری طور پر سزا دی جائے۔ معلوم ہوا ہے کہ پولیس نے اس سلسلے میں کئی افراد کو گرفتار کیا ہے اور مزید تفتیش جاری ہے۔
 

ماگام میں سنسنی

سڑک کے کنارے رائس ککر پائے گئے

ارشاداحمد
 
بڈگام//سرینگر گلمرگ شاہراہ پر ماگام میں تین چاول پکانے والے ککروں کی موجودگی سے پورے علاقے میں سنسنی پھیل گئی ہے اورگھنٹوں ٹریفک کی نقل و حرکت متاثر ہوکر رہ گئی۔اس موقع پر پولیس نے بم ناکارہ بنانے والی ٹیم کو بلایا جنہوں نے ناکارہ بنانے کے دوران تینوں ککروں کو خالی پایا۔ پولیس کے اعلی حکام نے بتایا کہ بظاہر ایسا لگتا ہے کہ چور، چوری کی ہوئی اشیا ء کو سڑک کنارے چھوڑ کر رفوچکر ہوگئے تھے۔پولیس  کے اعلی حکام نے  بتایا کہ سوموار کی صبح پولیس اور فورسز نے بڈگا م کے علاقہ ماگام میں سرینگر گلمرگ شاہراہ پر سڑک کنارے تین چاول پکانے والے ککروں کو مشتبہ حالت پایا،جس دوران فورسز نے فوری طور پر شاہراہ پر ہر قسم کے ٹریفک کو روک کرفوری طور پر بم ناکارہ بنانے والے سکارڑ کو طلب کو کیا ،تاہم تینوں ککروں کا معائنہ کرنے کے بعد بم ناکارہ بنانے والی ٹیم نے تینوں کو خالی پایاجس سے یہ محسوس ہورہا ہے کہ چوروں نے چوری کی ہوئی مذکورہ اشیا کو وہاں چھوڑ دیا تھا۔انہوں نے کہا کہ اس کے باوجود ہم ہر زاویہ پر غور کررہے ہیں ۔
 
 

یونیورسٹی کی نئی تعلیمی پالیسی کوڈی کوڈ کرنے کی پہلCT 

سرینگر//سی ٹی یونیورسٹی نے اپنی ایک انوکھی پہل میں یکم اور دوم اگست کو سرینگرمیںKAPSUN 1.0کااہتمام کیا ہے جس میں کشمیراورپنجاب خطوں کے مشترکہ پہل کے تحت طلبہ کی ترقی اورانہیں روزگار کے زیادہ سے زیادہ مواقع فراہم کرنے کیلئے ماہرین تعلیم اورانڈسٹری کو ایک ہی پلیٹ فارم پرلایاگیا۔افتتاحی تقریب پر مہمان خصوصی ناظم تعلیم کشمیر ڈاکٹر تصدق حسین میر تھے۔اس کے بعد سی ٹی یونیورسٹی کی ٹیم نے کپسن10کے بارے میں جانکاری دی اور مہمانوں کا خیرمقدم کیا۔سی ٹی یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر ہرش سدوتی نے کہا کہ کپسن کا بنیادی مقصدنئی تعلیمی پالیسی کو ڈی کوڈ کرناہے اورتعلیمی ماحول کوبہترتعلیمی کارکردگی کیلئے فروغ دینے کے اثرات پر بات کرنا ہے ۔اس کے بعد نئی تعلیمی پالیسی پرکلیدی خطبہ بھی دیا گیا۔
 
 
 

کنگن میں ٹرک اور موٹر سائیکل کی ٹکر،ایک زخمی

کنگن//غلام نبی رینہ//کنگن میں سڑک کے ایک حادثے میں ایک شخص زخمی ہوا۔سوموار شام کو کنگن پاور ہاس کے نزدیک ایک ٹرک زیر نمبرJK13B-1802اور ایک موٹر سائیکل زیر نمبر JK16A-9434 کے درمیان ٹکر ہوگئی جس کے نتیجے میں موٹر سائیکل سوار عادل احمد شاہ ولد ممتاز احمد شاہ ساکن سترینہ کنگن زخمی ہوگیا ، جسے علاج و معالجہ کے لئے ٹراما ہسپتال کنگن منتقل کیا گیا ۔
 
 

سرینگر کے 88پٹواری تبدیل

سرینگر//ڈپٹی کمشنر سرینگر نے ایک حکم کے تحت 88پٹواریوں اورپانچ دیگرحکام کی تبدیلیاں عمل میں لائی ہیں۔اس سلسلے میں سوموار کو ایک حکم جاری کیا گیا۔تمام پٹواریوں نے متعین مقامات پرکافی وقت کام کیاتھا۔کچھ تبدیل کئے گئے افسر موجودہ جگہوں پر آٹھ سے دس برسوں سے تعینات تھے۔
 
 

 ٹنگمرگ کے کئی دیہات بنیادی سہولیات سے محروم 

 
فیاض بخاری
 
بارہمولہ // ٹنگمرگ کے متعدد دیہات میں پانی ، بجلی،سڑکیں اور طبی سہولیات کی عدم دستیابی کے نتیجے میں لوگوں کو سخت مشکلات درپیش ہیں ۔ ٹنگمرگ کے کارہامہ ، رنگا والی، چک فرست ریشی ،زنڈپال اور پارس وانی کے لوگوںنے بتایا کہ ان علاقوں میں پینے کی پانی کی شدید قلت ہے تاہم جل شکتی محکمہ کی جانب سے انہیں پینے کا صاف پانی فراہم کرنے کیلئے اقدامات نہیں کئے جارہے ہیں جس کے نتیجے میں لوگوں کو سخت مشکلات کا سامنا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ یہاں کی سڑکیں بھی کئی سالوں سے خستہ حال ہیں لیکن بدقسمتی سے آج تک ان سڑکوں کی مرمت نہیں کی گئی جس کی وجہ سے مقامی لوگوں کے ساتھ ساتھ طلاب کو بھی زبردست مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ علاقے میں بجلی کے کھمبے اور ترسیلی لائنیں کافی بوسید ہوچکی ہیں جس کے نتیجے میں لوگ بجلی کی عدم دستیابی سے بھی پریشان ہیں جبکہ ان دیہات میں طبی سہولیات کا بھی فقدان ہے جس کی وجہ سے مریضوں اور تیماداروں کو مشکلات کا سامنا ہے۔لوگوں نے گورنر انتظامیہ سے مطالبہ کیا ہے کہ علاقے میں فوری طور پر بنیادی سہولیات دستیاب رکھی جائیں تاکہ لوگوں کو درپیش مشکلات سے راحت مل سکے۔
 
 

اوگمونہ کنزر سومو سروس بند 

مقامی آبادی کو گوناگوں مشکلات کا سامنا

مشتاق الحسن
 ٹنگمرگ //اوگمونہ کنزر سومو سروس بند ہونے سے ایک وسیع علاقہ ٹرانسپورٹ سہولیات سے محروم ہوگیا ہے۔ اوگمونہ سے کنزر تک حکومت کی جانب سے 9روپئے کرایہ مقرر کیا گیاہے تاہم انتظامیہ نے کنزر مین بازار میں کراسنگ بند کرکے ٹرانسپورٹ کو گوگہامہ کراسنگ استعمال کرنے کی ہدایت دی جس پر اوگمونہ اور محلقہ علاقہ جات میں سومو گاڈیوں کے ڈرائیوروں نے مسافروں سے پندرہ روپئے کرایہ وصول کرنا شروع کیا جس پر مقامی آبادی نے اعتراض کیاجس کے بعد ٹرانسپورٹروں نے اوگمونہ روٹ پر کرایہ کے معاملے پر مفاہمت نہ ہونے پر سروس بند کی۔اس صورتحال کے بعدجھلسا دینے والی گرمی میں بچوں ،برزگوں اور بیماروں کو اوگمونہ سے کنزر تک پیدل آنا پڑتا ہے ۔مقامی لوگوں نے سومو سروس بند کرنے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اے ار ٹی او بارہمولہ مبشر جان سے مداخلت کی اپیل کی ہے۔
 
 

سنیل بھٹ پی ڈی پی مائیگرنٹ سیل کے صر نامزد

سرینگر//پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی (پی ڈی پی) نے مائیگرنٹ سیل کیلئے سنیل بھٹ کو بحیثیت صدر نامزد کیا ہے۔اس سلسلے میں پارٹی ترجمان نے ایک بیان جاری کیا۔بیان کے مطابق سنیل بھٹ مائیگرنٹ سیل کے تمام معاملات دیکھ لیں گے۔
 

اونتی پورہ میں محکمہ صحت کے خلاف احتجاج

ہسپتال کی واپس منتقلی کا مطالبہ 

سید اعجاز 
اونتی پورہ//اونتی پورہ میں ہسپتال کی واپس منتقلی کیلئے لوگوں نے زور دار احتجاج کیا ۔احتجاج میں شامل لوگوں نے انتظامیہ اور محکمہ صحت کے اعلیٰ ضلع افسران کے خلاف ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پی ایچ سی کو واپس قصبے میں منتقل کیا جائے ۔قصبے میں سوموار کو لوگوں کی ایک بڑی تعداد نے گھروں سے باہر نکل کرانتظامیہ اور محکمہ صحت کے خلاف نعرے بلند کئے۔مظاہرین نے ہاتھوں میں بینراور پلے کارڑ اٹھا رکھے تھے جن پر پی ایچ سی کی واپس منتقلی کے حق میں نعرے درج تھے۔اس موقع پر ٹائون ویلفیئر کمیٹی اونتی پورہ کے چیئرمین نے بتایا کہ گزشتہ برس سڑک کی کشادگی کی زد میں پی ایچ سی اونتی پورہ کی عمارت بھی آ گئی جس کے بعد پرائمری ہیلتھ سنٹر کو عارضی طور جوبیارہ منتقل کیا گیا۔مظاہرین کے مطابق پی ایچ سی کیلئے گزشتہ ماہ نئی عمارت کی نشاندہی کرنے کے باوجود پرائمری ہیلتھ سنٹر کوآج تک واپس قصبے میں منتقل نہیں کیا گیا جس کی وجہ سے ہزاروں نفوس پر مشتمل آبادی کو گوناگوں مسائل کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اونتی پورہ میںنئی عمارت تیار ہونے کے باوجود محکمہ صحت کے عہدیدار پی ایچ سی کو واپس منتقل کرنے میں لیت ولعل کر رہے ہیں۔ادھر اے ڈی سی اونتی پورہ نے یقین دلایا کہ ایک ہفتے کے اندر ہیلتھ سنٹر کو واپس بستی میں منتقل کیا جائے گا جس کے بعد مظاہرین پر امن طور منتشر ہو گئے۔ 
 
 

ایس پی ہندوارہ کی سابق اہلکاروں کے ساتھ میٹنگ 

 ترجیحی بنیادوں پر مسائل حل کرنے کا یقین دلایا

ہندوارہ //ہندوارہ پولیس نے سابق اہلکاروں کے ساتھ میٹنگ منعقد کی جس کی صدارت ایس پی ہندوارہ سندیپ گپتا نے کی۔میٹنگ کے آغاز میں ریٹائرڈ پولیس افسران نے ہندوارہ پولیس کی اس طرح کے اجلاس منعقد کرنے پر سراہا کی ۔میٹنگ کے دوران مختلف مسائل اٹھائے گئے جنہیں ایس پی گپتانے غورسے سنااوریقین دلایا کہ ان کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ ہندوارہ پولیس ریٹائرڈ پولیس اہلکاروں اور ان کے اہل خانہ کی فلاح و بہبود کے لئے ہمیشہ کوشاں ہے۔میٹنگ کے اختتام پر انہوں نے ان کی شرکت پر شکریہ ادا کیا اور مزید کہا کہ جموں و کشمیر پولیس فرائض کی انجام دہی کے دوران ان کی قربانیوں کو کبھی فراموش نہیں کرے گی۔
 
 

 این ایچ ایم ایمپلائز ایسوسی ایشن کا منیر اندرابی سے اظہار تعزیت 

 سرینگر//جے کے این ایچ ایم ایمپلائز ایسوسی ایشن کشمیر صوبے نے ایسوسی ایشن کے صدر منیر اندرابی کے چچا کے انتقال پر دکھ اور افسوس کا اظہار کیا۔ایسوسی ایشن کے ترجمان اعلیٰ عبدالرؤف نے تمام اراکین کی جانب سے منیر اندرابی اور ان کے پورے خاندان کے ساتھ دلی تعزیت کا اظہار کیا اور مرحوم کی روح کیلئے مغفرت کی دعا کی ۔انہوں نے دعا کی کہ اللہ تعالیٰ سوگوار خاندان کو یہ ناقابل تلافی نقصان برداشت کرنے کی ہمت عطا کرے۔
 

بڈگام میںپنجاب کے دو شہری منشیات سمیت گرفتار

سرینگر// ضلع بڈگام میں پولیس نے پیر کو دو غیر مقامی افرادکو منشیات فروشی کے الزام میں گرفتار کیا ہے اور اُن کی تحویل سے منشیات برآمد کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ پولیس نے شیخ پورہ میں ناکہ پارٹی نے دو افراد کومشکوک حالت میں دیکھ کر تلاشی لی۔ پولیس نے ان کی تحویل سے دو کلوگرام فکی بر آمد کر کرکے دونوں افراد کو گرفتار کر لیا۔گرفتار کئے گئے افرادکی شناخت لدھیانہ پنجاب کے سجن کمار اور فیروز پور پنجاب کے گرجنت سنگھ کے طور پر ہوئی ہے۔اس ضمن میں ہمہامہ تھانہ میں ایف آئی آر درج کرکے مزید تفتیش شروع کر دی ہے۔
 
 

نئے ساتھیوں کی خدمات پر فخر ہے:ایڈلین گروپ

سرینگر//ایڈلین گروپ نامی کمپنی نے کہا ہے کہ نئی آپریشنل نیٹ ورک ملازمتوں میں انڈسٹری کی معروف تنخواہ اور دن کے فوائد شامل ہیں۔ایڈلین گروپ کے ڈائریکٹر گوہر بشیرکا کہنا ہے کہ’’ہمیں نئے ساتھیوں کی خدمات حاصل کرنے پر فخر ہے۔ہماری توسیع بھی حفاظت کے لیے غیر متزلزل عزم کے ساتھ آتی ہے‘‘۔انہوں نے کہا کہ اجتماعی طور پرہماری نئی ٹیم کے ارکان پہلے ہی 1200000 گھنٹوںسے زیادہ سیفٹی ٹریننگ مکمل کر چکے ہیںاور مزید 500000 سے زیادہ گھنٹے متوقع ہیں۔کمپنی کے مطابق ان کے ملازمین اور شراکت داروں کے لیے محفوظ اور جدید ماحول فراہم کرنااورنئے کرداروں کی بھرتی جاری ہے۔
 

خواجہ حبیب اللہ نوشہریؒ  پر آن لائن سمپوزیم کا اہتمام

سرینگر// خواجہ حبیب اللہ نوشہریؒ کے عرس کی نسبت سے حقانی میموریل ٹرسٹ نے ایک آن لائن سمپوزیم کا انعقاد کیا جس میں جید علما اور سکالروں بشمول مولانا شوکت حسین کینگ ،پروفیسر شاد رمضان،مولانا خورشید احمد قانونگو، مولانا غلام محی الدین نقیب ، شہباز ہاکباری، سید عابد بخاری اور مولانا محمد اشرف نے شرکت کی ۔ ٹرسٹ  کے سرپرست اعلیٰ سید حمید اللہ حقانی نے خواجہ حبیب اللہ نوشہری کو گلہائے عقیدت پیش کرتے ہوئے انکی روحانی صفات بیان کئے ۔ مولانا شوکت حسین کینگ اور دیگرمقررین نے خواجہ حبیب اللہ نوشہری کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ عظیم صوفی ہونے کے ساتھ ساتھ وہ عربی اور فارسی زبان کے ایک بلند پایہ مصنف تھے جسکا اعتراف بر صغیر میں بہت سے نقادوں نے کیا ہے۔  انہوں نے انکی تصانیف کا حوالہ دے کر اس بات کی وضاحت کی کہ تصوف کا منبع قران و سنت ہی ہے۔انہوں نے کہا کہ اس بزرگ نے تمام اصناف میں اپنے کلام کا اظہار کیا ہے ان کے کلام کی مقبولیت کا بین ثبوت یہ ہے کہ پانچ چھ سو سال کا عرصہ گزنے کے باوجود یہ زبان زد عام ہے اور یہ اللہ تعالی کی اور رجوع کرنے کی ترغیب دیتا ہے۔