مزید خبرں

پونچھ اور راجوری میں ہندپاک افواج کاآمناسامنا

بھارتی فوج کی فائرنگ سے لیپاوادی میں کئی ڈھانچے تباہ:پاکستان کاالزام

سرینگر// ہندوپاک سرحدوں پر کشیدگی ختم ہونے کا نام نہیں لے رہی ہے۔ اتوار کوایک مرتبہ پھر سرحدوںپر کشیدگی کا ماحول دیکھنے کو ملا ۔سی این آئی  کے مطابق جموں و کشمیر کے ضلع پونچھ اور راجوری سیکٹروں میں لائن آف کنٹرول پر اتوار کی صبح ہندوستان اور پاکستان کی فوج کے درمیان گولہ باری اور فائرنگ کا تبادلہ ہوا، تاہم کسی بھی جانب کسی جانی یا مالی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔ذرائع نے بتایا کہ صبح قریب سوا نو بجے پاکستانی فوج نے بلا کسی اشتعال کے بھارتی چوکیوں کو نشانہ بنا کر گولہ باری اور فائرنگ شروع کر دی۔انہوں نے کہا کہ وہاں تعینات فوجی اہلکاروں نے اس حملے کا بھرپور اور موثر جواب دیا تاہم کسی جانی یا مالی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔ ادھر پاکستان نے الزام عائد کر دیا ہے کہ وادی لیپا میں بھارتی فوج کی شہری آبادی پر بلا اشتعال گولہ باری سے 3 مکانات اور ایک اسکول کو نقصان پہنچا ہے۔بھارتی فوج نے وادی لیپا کی سول آبادی پر بلا اشتعال گولہ باری و فائرنگ کی جس سے 3 مکانات اور ایک سکول کو نقصان پہنچا، لوگوں نے زیر زمین مورچوں میں پناہ لیکر جانیں بچائیں۔پاکستانی ترجمان کے مطابق علی الصبح بھارتی فوج نے نوکوٹ گاؤں اور چننیاں میں آبادی کو نشانہ بنایا ۔ اس دوران ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ دونوں جانب جدید جنگی ہتھیاروں کا استعمال کیا گیا اور سماعت شکن  دھماکوں کی وجہ سے سرحدی آبادی میں سخت خوف و دہشت پھیل گئی اور لوگ محفوظ جگہوں پر پناہ لینے پر مجبور ہوئے تاہم کسی جانی نقصان کی کوئی اطلاع موصول نہیںہوئی ہے ۔
 
 

کووِڈ- 19لاک ڈائون کے دوران بُک کی گئی ٹکٹیں

فضائی کمپنیاں مکمل واپس ادائیگی کریں

ڈائریکٹر جنرل شہری ہوابازی کی عدالت عظمیٰ میں تجویزپیش

نئی دہلی//شہری ہوا بازی کے ڈائریکٹر جنرل نے عدالت عظمیٰ میں تجویزکیا ہے کہ فضائی کمپنیاں کووِڈ- 19لاک ڈائون کی مدت کے دوران بک کی گئی اندرون ملک یا بین الاقوامی سفر کی ٹکٹوں کی فوری طورواپس ادائیگی کریں گی ۔عدالت عظمیٰ میں داخل بیان حلفی میں ڈائریکٹر جنرل شہری ہوا بازی نے کہا کہ دیگر معاملوں میں فضائی کمپنیاں پندرہ روز کے اندر مسافروں سے حاصل کی گئی رقومات کو واپس اداکرنے کی کوشش کریں گی ۔ اس میں کہا گیا ہے کہ اگر پہلے لاک ڈائون کی مدت یعنی25مارچ سے14اپریل تک ٹکٹیں پہلے اور دوسرے لاک ڈائون جو25مارچ سے3مئی 2020تک تھا،کیلئے بک کی تھیں،ان سب معاملوں میں فضائی کمپنیاں ٹکٹوں کی مکمل واپس ادائیگی فوری طور کریں گی ۔شہری ہوابازی کے دائریکٹر جنرل نے کہا کہ فضائی کمپنیوں سمیت سبھی متعلقین کے درمیان تبادلہ خیال کے کئی ادوار کے بعد وہ اس قابل عمل حل پر پہنچے ہیں جس میں مسافروں اور فضائی کمپنیوں کے مفادات کاخیال رکھا گیا ہے ۔ 12جون کو ایک رضاکار تنظیم ’پرواسی لیگل سیل‘نے مفادعامہ کی ایک عرضی میں مرکز،ڈائریکٹر جنرل شہری ہوابازی اور فضائی کمپنیوں کو کووِڈ- 19لاک ڈائون کے نفاذ کے سبب منسوخ کی گئی اُڑانوں کی ٹکٹوں کی مکمل واپس ادائیگی کیلئے اقدام کرنے کی درخواست کی تھی.۔ شہری ہوابازی کے محکمہ کاکہنا تھا کہ اگر مالی بحران کی وجہ سے فضائی کمپنیاں واپس ادائیگی کی متحمل نہیں ہیں ،تو وہ قرضہ فراہم کرنے کوتیار ہے جو اندروں ملک سفر کیلئے مسافر سے ٹکٹ کی قیمت کے برابر ہوگا اور مسافر یا جس ایجنٹ سے اُس نے ٹکٹ حاصل کی ہو،اس کے نام جاری کیا جائے گا۔محکمہ نے کہاکہ قرضہ کی یہ سہولت کسی دوسرے کے نام بھی کی جاسکتی ہے اورفضائی کمپنی کو اس کااحترام کرنا ہوگا۔محکمہ شہری ہوابازی نے کہا کہ فضائی کمپنی ایسا نظام مرتب کریں گی جس سے کہ اس ٹرانسفر میں سہولیت ہو۔مارچ2021کے بعد فضائی کمپنیاں قرضہ شل رکھنے والوں کو مکمل رقم کی ادائیگی کریں گی۔ڈائریکٹر جنرل شہری ہوابازی نے کہا کہ فضائی کمپنیاں ان مسافروںکے لواحقین کے حق میں ،جو فوت ہوچکے ہوں،ٹکٹوں کی رقم مکمل واپس ادا کرے گے ۔اسی طرح بین الاقوامی سفر کیلئے جن مسافروں نے بھارتی یا غیر ملکی کمپنی سے سفر کیلئے ٹکٹیں حاصل کی ہو،ان کی مکمل واپس ادائیگی کیلئے بھی تجویز پیش کی گئی ۔شہری ہوابازی کے ریگولیٹر کاکہناتھا کہ موجودہ قانونی نظام مسافروں کے حقوق کو تسلیم کرتا ہے جواپنی ٹکٹوں کی مکمل واپس ادائیگی چاہتے ہیں ۔اس نے مزید کہا کہ لاک ڈائون کی پابندیوں کے دوران کئی مسافروں نے الزام لگایا کہ فضائی کمپنیوں نے لاک دائون کے دوران ٹکٹیں بک کیں اور وہ کرایہ واپس نہیں کرتیں ۔
 
 
 

حدمتارکہ پر جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی

پاکستان میں بھارت کے سینئر سفارتکار دفتر خارجہ طلب
سرینگر//حدمتارکہ پر بھارتی فوج کی مبینہ بلااشتعال گولہ باری کے نتیجے میں عام شہریوں کے زخمی ہونے کے بعد پاکستان نے اسلام آباد میں بھارت کے سینئرسفارت کار کو دفتر خارجہ طلب کرکے احتجاج درج کیا۔سی این آئی نے بتایا کہ پاکستان کے دفتر خارجہ کے ترجمان نے الزام لگایا کہ بھارتی فوج نے جان بوجھ کر شہری آبادی پرگولہ باری کی۔انہوں نے بھارت پرزوردیا کہ وہ جنگ بندی معاہدے کااحترام کرکے خلاف ورزیوں کی تحقیقات کرے۔پاکستانی ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق 5 ستمبر کو رکھ چکری سیکٹر پر بھارتی فائرنگ سے 19 سالہ نوجوان طارق زخمی ہوگیا تھا جب کہ رواں برس بھارتی افواج 2 ہزار 158 بارجنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزیاں کر چکی ہیں جس کے نتیجے میں اب تک  17 شہری از جا ں اور 168 زخمی ہوئے۔ 
 
 
 

پانپور میں لوٹ کی سنسنی خیزواردات

لٹیروں نے کنبے کو یرغمال بناکر زیوارت اور رقم پرہاتھ صاف کیا 

سید اعجاز
سرینگر// پانپور میں نقب زنی کی ایک سنسنی خیز واردات میں نامعلوم نقب زنوں نے مبینہ طور پر ایک کنبے کو یرغمال بناکر زیورات اور رقومات پر ہاتھ صاف کیا۔ پلوامہ پانپور قصبے کے کدلہ بل علاقے میں گزشتہ شام مبینہ طور 3 سے 4 افراد پر مشتمل نقاب پوش لٹیروں کی ایک جماعت شبیر احمد ولد غلام نبی کدلہ بل پانپور کے مکان میں داخل ہوئے اور افرد خانہ کو یہاں تلاشی لینے کے لئے کہا،جس دوران گھر میں موجود خواتین نے بتایا کہ اس دوران انہوں نے تمام کمروں کو کھلا چھوڑا اور انہوں نے سوچا کہ یہ تلاشی لیں گے اور اسکے بعد یہاں سے واپس نکلیں گے ۔انہوں نے بتایا لٹیروں نے تلاشی کے بعد تمام افراد خانہ کو ایک کمرے میں یر غمال بنا کر گھر میں موجود ایک کروڑ روپے فراہم کرنے مطالبہ کیا،بصورت دیگر انہیں مارنے کے دھمکی دی گئی ۔گھر میں موجود خواتین نے مزید بتایا اس دوران گھر میں موجود فون بھی اُن سے چھین کر انہیں بند کیا گیا ۔لٹیروں نے گھر کے مالک کا تب تک انتظار کیا جب تک نہ وہ سرینگر کے ایک اسپتال سے واپس آیا  ۔مالک مکان نے بتایا کہ وہ سرینگر میں زیر علاج ایک خاتون مریض کی مزاج پرسی کے لئے گیا تھا اورانہوں نے بتایا جب وہ شام دیر گئے واپس گھر پہنچا تو یہاں مکان کی روشنی کو گل کیا گیا تھا ۔انہوں نے بتایا اس کے بعد میں انہوں نے پہلے اہلیہ اور اس کے بعد بھائی کو فون کیا جو دونوں فون بند آ رہے تھے۔شبیر احمد نے بتایاانہوں نے گیٹ کی گھنٹی بجائی اور اس دوران کسی شخص نے مکان کا گیٹ کھولا اور اُس کی گردن پر چھری رکھ کر خاموش رہنے کے لئے کہا۔انہوں نے بتایاتین سے چار لیٹر ے جن کی شکل صورت غیر کشمیری لگ رہی تھی اور سبھی اردو زبان میں بات کر رہے تھے،جبکہ ایک کا چہرا مکمل طور ڈھکا ہوا تھا۔مالک مکان نے بتایاکہ نقب زنوںنے انہیں لاکر میں موجود ایک کروڑ روپے فوری طور ان کے حوالے کرنے کے لئے کہا ،تاہم جب ان سے کہا گیا کہ اتنی بڑی رقم انکے پاس نہیں ہے توانہوں نے کمرے میں داخل ہو کریہاں موجود بریف کیسوں کو چھریوں سے کاٹ کر میری بہن اور اہلیہ کے لاکھوں روپے کے زیورات کے علاوہ زعفران خرید نے لئے رقومات بھی اڑا لئے ۔افراد خانہ کے مطابق لاکھوں روپے مالیت اور نقدی اڑا کر وہ فرار ہوئے۔پولیس نے واقعے کے حوالے سے کیس درج کرکے تحقیقات شروع کی۔ایس ایس پی اونتی پورہ طاہر سلیم نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ اس واقعے سے متعلق متعلقہ دفعات کے تحت کیس درج کیا گیا اور تحقیقات شروع کی گئی ہے۔
 

پونچھ میں فوجی افسر دل کادورہ پڑنے سے فوت

سرینگر//پونچھ میں فوج کاایک افسر اچانک دل کادورہ پڑنے سے فوت ہوگیا۔اطلاعات کے مطابق اتوار کو صوبہ جموں کے بانڈی چیچن سیکٹر پونچھ میں تعینات 10آسام یونٹ سے وابستہ جونیئرکمیشنڈافسرکلدیپ کمار اچانک  بے ہوش ہوکر گرپڑا۔اُسے اپنے ساتھیوں نے فوری طور نزدیکی اسپتال پہنچایاجہاں ڈاکٹروں نے اُسے مردہ قراردیا۔ڈاکٹروں کے مطابق مذکورہ افسر دل کادورہ پڑنے سے فوت ہوچکا تھا۔سی این آئی کے مطابق پولیس ذرائع نے بتایا کہ فوجی افسر دل کادورہ پڑنے سے فوت ہوگیااور طبی وقانونی لوازمات پورا کیا جانے کے بعد لاش کورشتہ داروں کے حوالے کیا جائے گا۔
 
 

دریائے کشن گنگا سے برآمد جنگجوئوں کی لاشیں 

داور گریز میں لواحقین کی موجودگی میںسپردخاک

سرینگر//گریز میں دریائے کشن گنگا سے برآمد ہوئی جنگجوئوں کی لاشوں کو لواحقین کی موجودگی میں داور گریز میں سپردخاک کیاگیا۔ کے این ایس ، کے مطابق جموں و کشمیر پولیس نے جنوبی کشمیر کے پلوامہ اور کولگام سے تعلق رکھنے والے اُن دو جنگجوئوں کو اتوار کے روز داور گریز میں سپر لحد کیا جن کی لاشوں کو فورسز نے سنیچر کے روز دریا سے برآمد کیاتھا۔ایس ڈی پی او گریز پیر زادہ اعجاز نے بتایا کہ دونوں نئے دراندازی شدہ  جنگجوئوں کی لاشوں کو ان کے اہل خانہ کی موجودگی میں گریز کے داور علاقے میں دفن کیا گیا۔انہوں نے بتایادونوں جنگجوئوں کے رشتہ داروں کو جنوبی کشمیر سے اُن کی آخری رسومات میں شریک ہونے کے لئے بلایا گیا تھا۔پولیس افسر کا کہنا تھا کہ جس جگہ جنگجوئوں کی لاشیں ملی تھیں ،وہاں اتوار کے روز مزید اسلحہ اور گولہ بارود برآمد کیا گیا۔جاں بحق جنگجوئوں کی شناخت محمد عمیربٹ ولد مرحوم غلام محمدبٹ ساکن تانترے پورہ کولگام، سمیر احمد ڈار ولد محمد یوسف ساکن ڈوگری پورہ پلوامہ اونتی پورہ کے طورہوئی ہے ۔خیال رہے دونوں کی لاشوں کو پولیس اور فوج نے نالے سے گزشتہ روز برآمد کیا تھا ۔ 
 
 

گوجری اورپہاڑی سرکاری زبانوں کی فہرست میں شامل کیا جائے:اپنی پارٹی 

جموں//گوجری اورپہاڑی زبانوں کو جموں کشمیرکی سرکاری زبانوں کی فہرست میں شامل کیا جائے۔اس بات کامطالبہ اپنی پارٹی کے سینئررہنمااورسابق ممبراسمبلی گلاب گڑھ حاجی ممتازخان نے ایک بیان میں کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ سماج کے وسیع حلقہ میں بولی اور سمجھی جانے والی گوجری زبان کو حکومت نے نظراندازکیا ہے۔انہوں نے مزیدکیا کہ کشمیری ،ڈوگری اوراردوکی طرح گوجری اور پہاڑی زبانیں بھی برابراہمیت کی حامل ہیںاورجموں کشمیرمیںاکثرلوگ یہ زبانیں بولتے اور سمجھتے ہیں ۔ممتازخان نے کہا کہ پہاڑی اور گوجروں کی علیحدہ تہذیبی شناخت ہے اورحکومت کے اس فیصلے سے ان زبانوں کے بولنے والے لوگوں میں غم وغصہ پیدا ہواہے۔انہوں نے کہا حکومت کو ایک ہی یوٹی کے لوگوں کے درمیان امتیازنہیں برتناچاہیے اوران دونوں زبانوں کو سرکاری زبانوں کی فہرست میں شامل کیا جانا چاہیے ۔  بیان میں انہوں نے مزید کہا کہ پیر پنچال اور صوبہ جموں کے دیگر اضلاع کے ساتھ ساتھ کشمیر کے اُن علاقوں جہاں قبیلہ کے لوگ رہتے ہیں ، میں سخت ناراضگی پائی جارہی ہے۔ گوجر وبکروال قبائل آبادی کے لحاظ سے جموں وکشمیر میں تیسرے نمبر پر ہے اور پہاڑی زبان بولنے والی آبادی کا تناسب بھی اتنا ہی ہے۔ انہوں نے حکومت سے مزید اپیل کی کہ گوجری اور پہاڑی کوجموں و کشمیر کی سرکاری زبانوں کی فہرست میں شامل کریں۔
 
 

نجی اسکولوں کی انجمن کاسرکیولر

پرائیویٹ اسکول بچوں سے داخلہ فیس نہ لیں

 سرینگر //جموں وکشمیر پرائیوٹ سکول ایسوسی ایشن نے ایک سرکیولر میں تمام نجی سکولوں کو ہدایت دی ہے کہ وہ بچوں سے نہ ہی داخلہ فیس اور نہ ہی سکولوں میں نام جاری رکھنے کے لئے کوئی فیس وصول کریں ،تاہم سکول مالکان بچوں سے سالانہ فیس حاصل کر سکتے ہیں ۔ایسوسی ایشن نے کہا ہے کہ نجی سکولوں کیلئے یہ سال کافی مشکل رہا ہے اور ایسی صورت میں بچوں سے داخلہ فیس حاصل کرنے سے نئے تدریسی سال میں مشکلات پیدا ہو سکتے ہیں ۔ایسوسی ایشن نے کہا کہ یہ بچوں کیلئے کافی اہم ہے اور اس لئے ہم داخلہ عمل کو آسان اور تیز تر بنانے کیلئے کوششیں کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ داخلہ فیس نہ لینے سے نئے بچوں کے داخلہ میں والدین کو آسانی ہو گی ۔ایسوسی ایشن کے صدر جی این وار نے کہا ہے کہ بچوں سے سالانہ فیس وصول کیا جا سکتا ہے جو 3ہزار سے 15ہزار روپے ہے ۔انہوں نے تمام سکول مالکان پر زور دیا ہے کہ وہ قواعد ضوابط پر عمل کریں ۔
 
 

’بسنل‘ کی ناقص کارکردگی سے صارفین پریشان 

موبائل سروس میں خلل کے علاوہ انٹرنیٹ خدمات بھی سست رفتار 

سرینگر//وادی میں صارفین نے ’بی ایس این ایل‘ پر ناقص موبائل سروس کی فراہمی کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ بار بارنمبر ڈائل کرنے کی کوشش کے بعد بھی ایک دوسرے سے رابطہ نہیں ہوتا۔بھارت سنچار نگم لمٹیڈ کی جانب سے موبائل صارفین کو فراہم کردہ مواصلاتی سہولیات ناقص ہونے کی وجہ سے موبائل صارفین پریشان ہے اور دوسری کمپنیوں کے سم کارڈ استعمال کرنے پر مجبور ہورہے ہیں۔صارفین نے الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ بی ایس این ایل کا اگرچہ دعویٰ ہے کہ وہ دیگر کمپنیوں کے بہ نسبت صارفین کو بہتر سہولیات فراہم کرتے ہیں لیکن زمینی سطح پر ان کے دعوے سراب ثابت ہورہے ہیں ۔ سی این آئی کے مطابق بی ایس این ایل موبائل کا استعمال کرنے والے صارفین کا کہنا ہے کہ بی ایس این ایل نمبر پر اگر فون کرنا ہوگا تو کئی بار بھی اگر کوشش کریں گے تو فو ن نہیں لگتا ۔ ان کا کہنا تھا’’کبھی بتایا جاتا ہے کہ سمپرک(رابطہ) نہیں ہوپارہا ہے اور کئی منٹوں تک بالکل خاموشی اور کبھی کچھ اور معاملہ پیش آتا ہے ‘‘۔ صارفین نے کہا کہ وائس کالنگ کے علاوہ انٹرنیٹ بھی نہ ہونے کے برابر چل رہا ہے اگرچہ دیگر کمپنیوں کی جانب سے صارفین کو اس وقت 360kbpکی رفتار سے انٹرنیٹ سہولیات مہیار رکھی گئی ہے لیکن بی ایس ایل کی جانب سے 2Gمحض 0.24کے بی پی کے حساب سے انٹرنیٹ فراہم کیا جارہا ہے جو کہ صارفین کے ساتھ انٹرنیٹ کے نام پر مذاق کے سوا کچھ بھی نہیں ہے ۔جاوید احمد نامی ایک صارف نے کہا’’ ایک طرف کمپنی کی جانب سے صارفین کو 4جی انٹرنیٹ کے پیسے وصول کئے جاتے ہیں  اوردوسری طرف انٹرنیٹ اس قدر سست رفتار ہے کہ موبائل پر کوئی کام نہیں نکلتا۔‘‘بی ایس این ایل صارفین نے اس صورتحال پر سخت برہمی کااظہار کرتے ہوئے بھارت سنچار نگم لمیٹیڈ کے اعلیٰ حکام سے اپیل کی ہے کہ وہ صارفین کو بہتر سہولیات بہم رکھیں ۔ 
 
 

رام بن میں کمسن طالبعلم کی نعش چھت سے لٹکی پائی گئی

رام بن//ایم ایم پرویز//اتوار کی سہ پہر رام بن کے جواگ گائوں میں ایک نوعمر لڑکا کمرے کی چھت سے لٹکا ہوا ملا۔پولیس نے لڑکے کی شناخت بارہ سالہ ورون سنگھ ولد راجیش سنگھ کے طور پر کی ہے جس کی نعش گھر کے ایک کمرے میں چھت سے لٹکتے ہوئی ملی۔پولیس نے بتایا کہ کمرہ دوسری منزل پر واقع ہے۔ خاندانی ذرائع نے بتایا کہ لڑکا پانچویں جماعت میں پڑھ رہا تھا۔جب یہ اطلاع پولیس تھانہ رام بن کے پولیس چوکی راج گڑھ کو موصول ہوئی تو انہوں نے ضلع ہسپتال پہنچ کر نعش اپنی تحویل میں لی اور قانونی لوازمات انجام دیئے گئے۔پولیس نے دفعہ 174 سی ا?ر پی سی کے تحت معاملے کی تحقیقات شروع کردی ہے۔
 
 

بانڈی پورہ میںجھیل ولرسے لاش برآمد

بانڈی پورہ//عازم جان //بانڈی پورہ میں جھیل ولر سے ایک لاش برآمد ہوئی ہے ۔اطلاعات کے مطابق لہروال پورہ بانڈی پورہ میں جھیل ولر سے ایک عدم شناخت لاش پولیس نے برآمد کی جولباس کے بغیر تھی۔لاش کو پوسٹ مارٹم کیلئے ضلع اسپتال بانڈی پورہ پہنچایا گیاہے۔
 
 

اراضی کا معاوضہ ادانہ کرنے کاشاخسانہ

 
 

نامبلہ اوڑی میں مالکان زمین نے سڑ ک ہی بند کردی

اوڑی//ظفر اقبال//اوڑی میں سڑک کی تعمیر کیلئے حاصل کی گئی اراضی کا معاوضہ مالکان کو نہ اداکئے جانے کے خلاف زمین مالکان نے سڑک کوبند کیا۔اطلاعات کے مطابق اوڑی کے نامبلہ گائوں میں سال2016میں وزیراعظم دیہی سڑک اسکیم کے تحت سلپتھر گائوںتک 3کلومیٹرسڑک کی تعمیر کاکام شروع کیاگیاجوابھی تک نامکمل ہے۔مقامی لوگوں کے مطابق تاہم اس سڑک پر گاڑیاں چلتی تھیں مگراتوار کو زمین مالکان نے اس سڑک پر بڑے بڑے پتھرڈال کر سڑک کوگاڑیوں کی آمدورفت کیلئے بندکردیااور اس کی تعمیر کاکام بھی روک دیا۔مقامی لوگوں کے مطابق سڑک بند ہونے سے لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرناپڑے گا۔ادھرزمین مالکان نے کہا کہ سڑک کی تعمیر کے دوران ان کی کئی کنال اراضی کے علاوہ اخروٹ کے درخت بھی اس کی زد میں آئے،مگر چار برس کاعرصہ گزر جانے کے باوجود انہیں اراضی کا معاوضہ ابھی تک ادانہیں کیاگیا۔عرفان احمد قریشی نامی ایک زمین مالک نے کہا کہ ان کی قریب چھ کنال اراضی سڑک کی تعمیر کیلئے حاصل کی گئی جس میں 35اخروٹ کے درخت بھی تھے۔انہوں نے کہا کہ محکمہ مال کے اہلکاروں نے موقعہ پر جائزہ لیکر اس کی رپورٹ بھی تیار کی تھی مگر معاوضہ فراہم نہیں کیاگیا۔انہوں نے کہا کہ انہوں نے کئی بارڈپٹی کمشنر بارہ مولہ اور سب ڈویژنل مجسٹریٹ اوڑی کے دفاتر کے چکر لگائے مگر کوئی کارروائی نہیں ہوئی ۔ ادھر سکھدار اور جبلہ اوڑی کے لوگوں کا کہنا ہے کہ اْن کے علاقوں کی رابطہ سڑکیں خستہ حال ہے۔سکھدار کے لوگوں کا کہنا ہے کہ حالیہ بارشوں کے دوران جگہ جگہ پسیاں گر آئی ہیں، جنہیں ابھی تک محکمہ پی ایم جی ایس وائی نے صاف نہیں کیا اور سڑک پر گہرے گھڑے ہونے کی وجہ سے گاڑیاں سڑک میں پھنس جاتی ہیں مگر محکمہ سڑک کی مرمت نہیں کرتا۔جبلہ گاوں کے لوگوں نے کہا کہ اْن کے علاقے کی رابطہ سڑک محکمہ آر اینڈ بی کی عدم توجہی کی وجہ کھنڈرات میں تبدیل ہوئی ہے۔لوگوں کا کہنا ہے کہ سڑک پر ابھی تک تار کول نہیں بچھایا گیا ،نہ ہی پانی کی نکاسی کے لئے کوئی نالی تعمیر کی گئی ہے۔لوگوں نے بتایا کہ اس خستہ حال سڑک پر گاڑیوں کو بھی چلنے میں دشواریاں ہیش آرہی ہیں۔ 
 
 
 

درماندہ4,03,111شہریوںکی واپسی

جموں//حکومت جموں وکشمیر نے کووِڈلاک ڈاون کے سبب ملک کے مختلف حصوں میں درماندہ جموںوکشمیر کے 4,03,111شہریوں کو براستہ لکھن پور اور کووِڈخصوصی ریل گاڑیوں اور بسوں کے ذریعے تمام رہنما خطوط اور ایس او پیز پر عمل پیرا رہ کر یوٹی واپس لایا۔حکومت نے لکھن پور کے ذریعے اَب تک بیرون ملک سے934مسافرو ں کویوٹی واپس لایا ہے ۔ اِس طرح جموںوکشمیر حکومت نے اَب تک 137کووِڈ خصوصی ریل گاڑیوں اور براستہ لکھن پور بسو ںکے کاروان میں اَب تک بیرون یوٹی درماندہ 4,03,111شہریو ں کو کووڈِ۔19 وَبا سے متعلق تمام اَحتیاطی تدابیر پر عمل کرکے واپس لایا۔تفصیلات کے مطابق 05 ستمبرسے06 ستمبر 2020ء کی صبح تک لکھن پور کے راستے سے3637   درماندہ مسافریوٹی میں داخل ہوئے جبکہ1104مسافر آج 116ویں دلّی کووِڈ خصوصی ریل گاڑی سے جموں پہنچے ۔اَب تک 116ریل گاڑیوں  میںیوٹی کے مختلف اَضلاع سے تعلق رکھنے والے104,747درماندہ مسافر جموں پہنچے جبکہ 21خصوصی ریل گاڑیوں سے 15,696مسافر اودھمپور ریلوے سٹیشن پر اُترے۔
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 

نیشنل کانفرنس کاشیخ محمد عبداللہ کو برسی پرخراج عقیدت 

سرینگر//نیشنل کانفرنس نے جموں کشمیر کے سابق وزیراعلیٰ اورپارٹی کے بانی شیخ محمد عبداللہ کو38ویں یوم برسی پر خراج عقیدت ادا کیا۔موصولہ بیان کے مطابق مرحوم عوام مقبول اور بیباک رہنما تھے، جو جموں کشمیر کی تعمیر و ترقی کیلئے ہمیشہ فکرمند رہتے تھے ۔بیان کے مطابق انہوں نے موروثی حکمرانی کے خلاف صف آرا ہوکر نہ صرف وراثتی راج کو اکھاڑ پھینکا بلکہ شخصی راج کے خلاف انتھک محنت کی۔ پارٹی کے جنرل سکریٹری علی محمد ساگر، سینئر لیڈران عبدالرحیم راتھر، ناصر اسلم وانی، محمد شفیع اوڑی، شریف الدین شارق ، چودھری محمد رمضان، میاں الطاف احمد،مبارک گل، محمد اکبر لون، دیوندر سنگھ رانا، سجاد احمد کچلو، خالد نجیب سہروردی، قمر علی آخون، عبدالغنی ملک ، آغا سید روح اللہ ،میر سیف اللہ، نذیر گریزی ، قیصر جمشید لون ،الطاف احمد کلو، عبدالمجید لارمی، شوکت حسین گنائی، ڈاکٹر بشیر احمد ویری، عرفان احمد شاہ ،آغا سید محمود، محمد سید آخون، علی محمد ڈار، جاوید احمد ڈار، کفیل الرحمان، پیر آفاق احمد، تنویر صادق، عمران نبی ڈار،آغا روح اللہ، سلمان علی ساگر، شیخ محمد رفیع ، ایڈوکیٹ رتن لعل گپتا، پیر ذادہ احمد شاہ، جگ دیش آزاد، ایم کے جوگی ، بشن لال بٹ ، ڈاکٹر سمیر کول ،محمد یوسف ٹینگ،ضلع صدور اور بلاک صدور صاحبان کے علاوہ یوتھ اور خواتین ونگ نے بھی مرحوم لیڈر کو خراج عقیدت پیش کیا۔ 
 
 
 

اپنی پارٹی عوام کیلئے بااعتماد سیاسی متبادل

چرار شریف میں عوامی جلسہ،کئی سیاسی کارکن پارٹی میں شامل

سرینگر//جموں وکشمیر اپنی پارٹی لیڈر مشتاق احمد گنائی نے کہاکہ ایک متحرک شہری سے زیادہ کوئی بھی سیاسی جماعتوں کو جوابدہ نہیں بناسکتا۔ انہوں نے کہاکہ اپنی پارٹی جموں وکشمیر میں لوگوں کے لئے بااعتماد سیاسی متبادل کے طور اُبھر کرسامنے آئی ہے۔چرار شریف میں پارٹی ورکروں کے پہلے عوامی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے گنائی نے کہاکہ اپنی پارٹی کے بیشتر لیڈران جموں وکشمیر کے مسائل کو حل کرنے کے لئے کام کرتے وقت سیاسی میدان میں ٹھوکر کھا چکے ہیں، اسی لئے انہوں نے اب اِس پلیٹ فارم کا انتخاب کیاہے۔اس موقع پر نیشنل کانفرنس اور پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی سے وابستہ متعدد سیاسی کارکنان نے اپنی پارٹی میں شمولیت اختیار کی جن میں غلام محمد وانی، عبدالرحمن زرگر، عبدالاحد ڈار، بشیر احمد ڈار، محمد شفیع، مشتاق احمد کھانڈے، خورشید احمد، غلام قادر ڈار، شہباز نذیر، امتیاز احمد گنائی، محمد قاسم، محمد قاسم میر، عبدالحمید میر اور تنویر احمد صوفی قابل ِ ذکر ہیں۔ انہوں نے پارٹی میں شامل ہونے والوں کا خیر مقدم کرتے ہوئے اُمید ظاہر کی کہ چرار شریف میں زمینی سطح پر پارٹی مضبوط ہوگی۔ انہوں نے کہاکہ جمہوری نظام میں ایک متحرک شہری ہی سیاسی جماعتوں کو جوابدہ بناسکتا ہے ، اس کے علاوہ اور کوئی میکانزم نہیں، اپنی پارٹی دیانتدار اور شفاف انداز سے کام کرنے کا عہد کرتی ہے لیکن لوگوں پر بھی ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ زمینی سطح پر سیاسی جماعتوں کی کارکردگی پر نظر کریں۔
 
 
 
 
 

ڈاکٹر فاروق کااظہار تعزیت

سرینگر// نیشنل کانفرنس کے صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے راجوری پونچھ کی معروف سیاسی شخصیت فضل الرحمان ڈار کے انتقال پر گہرے صدمے کا اظہار کیا ہے اور اس سانحہ ارتحال پر مرحوم کے جملہ لواحقین اور پسماندگان کے ساتھ دلی تعزیت کرتے ہوئے مرحوم کی جنت نشینی اور بلند درجات کے لئے دعا کی ۔بیان کے مطابق موصوف ہمیشہ لوگوں کی فلاح و بہبود کیلئے کام کرتے رہے ۔پارٹی کے نائب صدر عمر عبداللہ نے بھی تعزیت کا اظہار کیا ہے۔ صوبہ جموں کے لیڈران دیویندر سنگھ رانا ، شیخ بشیر احمد ، نجیب خالد سہروردی اور جاوید رانا اعجاز جان نے بھی تعزیت کا اظہار کیا۔ 
 
 
 

بی یو ایم ایس امتحان قبل ازوقت نہ لینے کا مطالبہ 

سرینگر//بی یو ایم ایس کی ڈگری حا صل کرنے والے طالب علموں نے کالج انتظامیہ سے اپیل کی ہے کہ سال کے آخری سمسٹر کے امتحانات کو اپنے مقررہ وقت پر لیا جائے ۔انہوں نے کہا کہ کالج انتظامیہ قبل ازوقت یعنی دسمبر کے بجائے اکتوبر کے مہینے میں ہی امتحانات منعقد کرنے کا منصوبہ مرتب کر رہی ہے جس کے نتیجے میںمذکورہ طلباء ذہنی پریشانیوں میں مبتلا ہیں ۔کے این ایس
 
 

بانڈی پورہ کے کانگریس لیڈر فوت

پردیش کانگریس صدر کا اظہار تعزیت

بانڈی پورہ/عازم جان /کانگریس کے سرکردہ لیڈر حبیب اللہ بٹ ساکن وٹہ پورہ طویل علالت کے بعد انتقال کر گئے۔1987 میںنیشنل کانفرنس  اورکانگریس اتحاد کے دوران وہ قانون ساز کونسل کے ممبر بھی رہ چکے ہیں۔ موصوف پچھلے دو برسوں سے صاحب فراش تھے۔اس دوران جے کے پی سی سی صدر جی اے میر نے موصوف کے انتقال پر رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے مرحوم کی جنت نشینی کیلئے دعا کی اور لواحقین سے یکجہتی کا اظہار کیا۔انہوں نے کہا کہ موصوف نے پارٹی کو بنیادی سطح پر مضبوط بنانے کیلئے ہمیشہ جانفشانی سے کام کیا۔