مزید خبرں

اسلامی ممالک کی تنظیم کے وزائے خارجہ کااجلاس |  تنازعہ کشمیراور اسلاموفوبیا کے خلاف قراردادیں منظور

سرینگر//اسلامی ممالک کی تعاون تنظیم (او آئی سی) کے وزرائے خارجہ کونسل اجلاس میں تنازعہ جموں و کشمیر اور اسلاموفوبیا کے خلاف قراردادیں متفقہ طور پر منظور کر لی گئیں۔ کے این ٹی کے مطابق پاکستانی دفتر خارجہ سے جاری بیان کے مطابق نیامے میں او آئی سی وزرائے خارجہ کونسل کے 47ویں اجلاس میں متفقہ طور پر منظور کی گئی پہلی قرارداد میں تنازع کشمیر کی مضبوط حمایت کے عزم کا اعادہ کیا گیا ہے۔او آئی سی نے بھارت کے 5 اگست 2019 کے یکطرفہ اور غیر قانونی اقدامات کو یکسر مسترد کردیا اور قرارداد کے ذریعے بھارت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ غیر کشمیریوں کو ڈومیسائل سرٹیفکیٹ کے اجرا کے ساتھ دیگر یکطرفہ اور غیر قانونی اقدامات منسوخ کرے۔ان اقدامات میں جموں و کشمیر ری آرگنائزیشن آرڈر 2020، جموں و کشمیر گرانٹ آف ڈومیسائل سرٹیفکیٹ رولز 2020، جموں و کشمیر لینگویج بل 2020 اور زمین کی ملکیت سے متعلق قوانین میں ترامیم شامل ہیں۔دفتر خارجہ کے بیان میں کہا گیا کہ او آئی سی کے 57 ممالک نے آر ایس ایس۔بی جے پی حکومت کی پالیسیوں کو مسترد کرتے ہوئے بھارت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ متنازع خطے میں آبادی کا تناسب تبدیل کرنے کے حوالے سے کوئی بھی قدم اٹھانے سے باز رہے۔او آئی سی نے قرارداد میں بھارت کے 5 اگست 2019 کے یکطرفہ اور غیر قانونی اقدامات کو مسترد کرتے ہوئے اس سے یہ اقدامات منسوخ کرنے، غیر کشمیریوں کو جاری کیے گئے تمام ڈومیسائل سرٹیفکیٹس منسوخ کرنے کرنے کا مطالبہ کیا ۔ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ قرارداد میں بھارتی فورسز کے وادی میں انسانی حقوق کی پامالیوں، جعلی انکاؤنٹرز اور نام نہاد آپریشنز میں ماورائے عدالت قتل سمیت دیگر واقعات کی شدید مذمت کی گئی ۔انہوں نے کہا کہ قرارداد میں معصوم شہریوں کے خلاف پیلٹ گنز کے استعمال، کشمیری خواتین کو ہراساں کرنے کی بھی مذمت کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ بھارت مسلسل کورونا وائرس کے باعث پیدا ہونے والی صورتحال کو ملٹری کریک ڈاؤن بڑھانے کے لیے استعمال کر رہا ہے۔قرارداد میں بھارت پر زور دیا گیا ہے کہ وہ اقوام متحدہ کے فوجی مبصر گروپ کا کردار ایل او سی کے اطرف بڑھائے، جموں و کشمیر، سرکریک اور دریائی پانی سمیت تمام تنازعات عالمی قانون اور ماضی کے معاہدات کے مطابق طے کرے۔قرارداد میں زور دیتے ہوئے کہا گیا کہ اقوام متحدہ سمیت عالمی برادری بھارت کے زیر انتظام جموں و کشمیر میں صورتحال کی نگرانی کرے، اقوام متحدہ اور عالمی برادری پاکستان اور بھارت کے درمیان مذاکرات کی جلد بحالی کے لیے کردار ادا کرے اور سیکریٹری جنرل اقوام متحدہ خصوصی ایلچی کا تقرر کریں۔قرارداد میں کہا گیا کہ نمائندہ خصوصی کشمیر میں بے گناہ کشمیریوں کے انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی مسلسل نگرانی کریں اور سیکریٹری جنرل اقوام متحدہ کو آگاہ کریں جبکہ سیکریٹری جنرل او آئی سی، انسانی حقوق کمیشن اور جموں و کشمیر پر رابطہ گروپ معاملے پر بھارت سے بات کرے اور رپورٹ پیش کرے۔او آئی سی کے وزرائے خارجہ کونسل کے اجلاس میں دنیا کے مختلف حصوں میں اسلاموفوبیا کے واقعات کے خلاف پاکستان کی جانب سے پیش کردہ قرارداد بھی منظور کرلی گئی۔قرارداد میں بڑھتے ہوئے اسلاموفوبیا کے واقعات پر تشویش کا اظہار کیا گیا، ساتھ ہی قرآن پاک کی بیحرمتی اور گستاخانہ خاکوں کے حالیہ واقعات پر بھی تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ اس سے دنیا کے ایک ارب 80 کروڑ سے زائد مسلمانوں کے جذبات مجروح ہوئے۔قرارداد میں ہر سال 15 مارچ کو 'اسلاموفوبیا کے تدارک کے عالمی دن' کے طور پر منانے کا بھی فیصلہ کیا گیا۔
 
 
 

پنچ اور سرپنچ ضمنی انتخابات کیلئے بالترتیب 64 فیصد اور 57فیصد |  رائے دہندگان نے اپنی حق رائے کا اِستعمال کیا: شرما

جموں//سٹیٹ الیکشن کمشنر کے کے شرمانے کہا کہ پنچوں اور سرپنچوں کے لئے پنچایتی ضمنی اِنتخابات 2020 ء کے پہلے مرحلے میں سنیچروار کو بالترتیب 64 فیصداور 57 فیصد رائے دہندگان نے اپنی رائے دہی کا اِستعمال کیا۔سٹیٹ الیکشن کمشنر نے کہا کہ1,43,592 رائے دہندگان میں سے85,363 رائے دہندگان نے اپنی رائے دہی کااِستعمال کیا۔جموں صوبے کے رام بن ضلع میں سب سے زیادہ رائے دہندگان یعنی 77.77فیصد نے اپنے حق رائے دہی کا استعمال کیا جبکہ ضلع ڈوڈہ 77.73 فیصد اور صوبہ کشمیر کے شوپیان میں 86.74فیصد اور بڈگام میں  72.79 فیصد رائے دہندگان نے اپنی حق رائے دہی کا اِستعمال کیا۔سرپنچوں کے لئے خالی حلقہ ہائے اِنتخاب کے لئے گاندربل میں 71.04 فیصد جبکہ جموں ضلع میں 77.24فیصد رائے دہندگان نے اپنی رائے دہی کااِستعمال کیا۔شرما نے کہا کہ ڈی ڈی سی اور پنچایتی ضمنی اِنتخابات بنیادی سطح پر ترقی میں ایک فیصلہ کن کردار اد ا کریں گے۔ اُنہوں نے متعلقین کو اِنتخاب کی کامیاب عمل آوری کے لئے اُن کی جانب سے کئی گئی انتھک کوششوں کو سراہا۔ پہلے مرحلے میں ضمنی اِنتخابات میں 1131 اُمید وار میدان میں ہیں ۔852اُمیدوار 36پنچ حلقہ ہائے انتخاب کے لئے اور 279 اُمید وار 94سرپنچ اِنتخابات کے لئے میدا ن میں ہیں۔
 
 
 

حکیم یاسین کا اُمیدواروں کوغیر معقول سیکورٹی فراہم کرنے کاالزام |  پی ڈی ایف امیدواروں کیلئے ووٹ طلب کئے

سرینگر//پیپلزڈیموکریٹک پارٹی کے چیئرمین حکیم یاسین نے الزام لگایا ہے کہ بڈگام ضلع میں ضلع ترقیاتی کونسل اورضمنی پنچایتی انتخابات میں حصہ لے رہے امیدواروں کوانتظامیہ کی طرف سے انتخابی مہم چلانے کیلئے معقول حفاظتی سہولیات بہم نہیں رکھی جارہی ہیں ۔ایک بیان کے مطابق  وترہیل خانصاحب کے پارٹی ورکروں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یہ شکایات برابر موصول ہورہی ہیں کہ امیدواروں کو سیکورٹی کے بہانے یاتو پولیس اسٹیشنوں یا پولیس کی حصار میں  ہوٹل کمروں میں بند کیا گیا ہے اوروہ اپنے متعلقہ حلقوں میں انتخابی مہم چلانے کیلئے نہیں جاپاتے۔حکیم یاسین نے الیکشن کمشنر پرزوردیا کہ وہ ان شکایات کانوٹس لیں اور غیرجانبدارانہ اور منصفانہ انتخابات کیلئے امیدواروں کی بلاخلل نقل وحرکت کویقینی بنائیں۔حکیم یاسین نے پی ڈی ایف امیدواروں کے حق میں ووٹ طلب کرتے ہوئے کہا کہ یہ انتخابات مقامی سطح پر ترقیاتی عمل کی نگرانی کرنے کیلئے لازمی ہیں اور ا ن انتخابات سے جموں کشمیر کو مذہب اور فرقہ وارانہ بنیادوں پرتقسم کرنے والی قوتوں کو شکست دی جاسکتی ہے ۔ انہوں نے لوگوں کو اس نازک مرحلے پر متحد ہونے کی تاکید کی تاکہ جموں کشمیرکے خصوصی درجے،عزت اور یکجہتی کا تحفظ کیا جائے۔اس دوران حکیم محمد یاسین نے بلاک بڈگام کے کھاگ نشست کے آزادامیدوار واحد علی خان کی غیرمشروط حمایت کرنے کابھی اعلان کیا۔انہوں نے کہا کہ واحدعلی خان ایک تعلیم یافتہ نوجوان سماجی کارکن ہیں اوروہ کافی عرصے سے علاقہ کھاگ کے لوگوں کی بہبود کیلئے کام کرتے آئے ہیں ۔
 
 

رات کے دوران پولنگ بوتھ تبدیل کئے گئے:نیشنل کانفرنس

سرینگر//نیشنل کانفرنس نے الزام لگایا ہے کہ وسطی،جنوبی اور شمالی کشمیرمیں کل حکومت نے رات کے دوران پولنگ بوتھوں کوایک جگہ سے دوسری جگہ منتقل کیاجوالیکشن کمشنر کے اُس بیان کے برعکس ہے کہ انتخاب صاف ستھرے ماحول میں عمل میں لائے جائیں گے۔ایک بیان میں پارٹی کے معاون جنرل سیکریٹری ڈاکٹر مصطفی کمال اور ارکان پارلیمان حسنین مسعودی اورمحمد اکبرلون نے کہا کہ صورہ،کھنموہ،دارا،فقیرگجری،اننت ناگ،پہلگام میں بھی  پولنگ بوتھوں کورات کے دوران تبدیل کرناالیکشن قوانین کے بالکل منافی ہے ۔بیان کے مطابق یوتھ لیڈر احسان پردیسی نے اس کے خلاف احتجاج کیاتھا۔
 
 

لوگ گپکار الائنس کے ساتھ :سکینہ ایتو

سرینگر// نیشنل کانفرنس اور اس کی پوری قیادت نے جمہوریت اور آئین کی بالادستی کو مقدم ٹھہرا کر ریاست کے لوگوں کو آئینی اور جمہوری مراعات دلانے میں تاریخی رول ادا کیا ہے۔ اس بات کااظہار پارٹی کی سینئر خاتون لیڈر اور سابق وزیرسکینہ ایتو نے جنوبی کشمیر کے درجنوں چنائو جلسوں سے خطاب کے دوران کیا۔انہوں نے کہاکہ لوگ پورے عزم اور استحکام کے ساتھ گپکار الائنس کے ایجنڈا اور جمہوری اور آئینی حقوق کی جدوجہد میں کھڑے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی اور مرکز کے سخت گیر حکمرانوں کی سبھی پالیسیاں ناکام ہوچکی ہیں اور ان پالیسیوں کو ریاست کے تینوں خطوں کے لوگوں نے یکسر مسترد کردیا ہے۔ انہوں نے مرکزی سرکار سے اپیل کی کہ ریاست کے لوگوں کو تمام آئینی اور جمہوری حقوق واپس دیئے جائیں جن کی وجہ سے جموں وکشمیر کو ایک خصوصی درجہ حاصل تھا۔
 
 

کپوارہ میں دوسرے مرحلے کیلئے تیاریاں مکمل | 2 نشستو ں کے لئے6خواتین سمیت22امیدوار میدان میں 

کپوارہ//اشرف چراغ //کپوارہ میں ضلع ترقیاتی کونسل انتخابات کے دوسرے مرحلے کے لئے تمام تیاریا ں مکمل کرلی گئیںہیں اور ضلع کے دو نشستو ں کے لئے 6خواتین سمیت 22امیدوار میدان میں ہیں ۔ضلع میں ترقیاتی کونسل کے پہلے مرحلے کے چنائو کے اختتام کے ساتھ ہی دوسرے مرحلے کے لئے تیاریاں مکمل ہو گئی ہیں ۔ضلع میں دوسرے مرحلے کے تحت رامحال اور ریڈی چوکی بل نشستو ں کیلئے یکم دسمبر کو ووٹ ڈالے جارہے ہیں اور اتوار کی شام کو انتخابی مہم یہاںاختتام کو پہنچ گئی ۔رامحال نشست جو تین بلاکو ں جن میں تارت پورہ ،ویلگام اور ماگام شامل ہیں ،پر مشتمل ہے ،جبکہ ریڈی بلاک الگ طور ضلع ترقیاتی کونسل کی نشست ہے اور یہاں بھی یکم دسمبر کو وٹ ڈالے جارہے ہیں ۔دونو ں نشستو ں میں ووٹرو ں کی کل تعداد 48744 ہیںجن میں ریڈی چوکی بل میں 21348اور رامحال نشست کے لئے 27396ہے ۔رامحال میں 6خواتین امیدوار انتخابی  میدان میں ہیں ،جبکہ ریڈی چوکی بل میں 16امیدوار انتخابی دنگل میں حصہ لے رہے ہیں جن میں پیپلز لائنس کا ایک ،عام آ دمی پارٹی کا ایک،اور بی جے پی کا ایک امیدوار شامل ہے جبکہ13آ زاد امیدوار بھی اپنی قسمت آ زمائی کر رہے ہیں ۔
 
 

اپنی پارٹی کاسچ کی سیاست پریقین:میر

ترال//سید اعجاز //اپنی پارٹی سچ اور حقیقت کی سیاست پر یقین رکھتی ہے ۔اس بات کا اظہار  اپنی پارٹی کے سینئر لیڈر و ضلع صدر پلوامہ غلام محمد میر نے ترال کے دور افتادہ گائوں دیہات کے دورہ کے دوران کئی انتخابی ریلیوں  سے خطاب کے دوران کیا ۔ میر نے کہاکہ یہاں کے سیاسی لیڈران نے ہمیں کسی کام کا نہیں رکھا ہے اورجموں و کشمیر کے عوام کا استحصال کیا ۔انہوں نے کہا ترال کو جاں بوجھ کر آج تک تعمیر و ترقی کے لحاظ سے نظراندازکیا گیا جس کے نتیجے میں آری پل ترال میں بنیادی سہولیات کا فقدان ہے۔ میرگلستان،گلشن پورہ علاقوں میں پارٹی کے ڈی ڈی سی امیدوار آری پل عبد ل سلام ملک کے حق میں انتخابی مہم چلا رہے تھے ۔انہوں نے لوگوں کو مختلف علاقوںسے تعلق رکھنے والے آزاد امیدواروں سے ہوشیار رہنے کی تاکید کی ۔ انہوں نے لوگوںسے کہا کہ اپنی پارٹی جھوٹ اور فریبی سیاست سے پاک ہے۔ انہوں نے لوگوں کو بتایا ہم وہ ہی کہتے ہیں جو کر سکتے ہیں ۔
 
 
 

فلواورکووِڈ- 19ایک ساتھ تباہی مچاسکتے ہیں | احتیاطی تدابیر پر عملدرآمد پرحال میں جاری رکھیں:ڈاک

سرینگر//ڈاکٹرس ایسوسی ایشن کشمیر نے کہا ہے کہ لوگ اس موسم سرما میں فلواورکووِڈ- 19کاایک ساتھ شکار ہوسکتے ہیں جس کی وجہ سے اموات میں اضافہ ہوسکتا ہے۔ڈاکٹر نثارالحسن صدرڈاکٹرس ایسوسی ایشن نے ایک بیان میں کہا ،’’فلواورکووِڈ- 19ایک ساتھ ہونے سے مرنے کے ذیادہ امکانات ہیں۔انہوں نے ایک تحقیق کاحوالہ دیتے ہوئے کہا کہ برطانیہ میں اس وباء کے آغازمیں جولوگ ان دونوں وائرسوں کاایک ساتھ شکار ہوئے تھے ،ان میں 2.27فیصد مرنے کے زیادہ امکانات تھے ،بنسبت ان لوگوں کے جوصرف کوووِڈ- 19کاشکار تھے اورجن لوگوں کو کوئی انفیکشن نہیں تھا ان سے 5.92فیصد زیادہ ان میں مرنے کے امکانات تھے۔ تحقیق کرنے والے محققوں نے20000لوگوں ،جوکووِڈ- 19اور فلو کاایک ساتھ شکارتھے،کے اعدادوشمار کاجائزہ لیکر بتایاکہ ان میں سے58دونوں وائرسوں کیلئے مثبت پائے گئے اوران میں سے43فیصد جن میں دونوں انفیکشن تھے،مرگئے جبکہ جنہیں صرف کوروناوائرس تھا،ان میںصرف27فیصد کی موت ہوئی۔ ڈاکٹر نثار نے کہا کہ ایک انفیکشن سے متاثر ہونے سے آپ کو دوسرے سے بھی بیمار ہونے کاخطرہ ہے۔انہوں نے کہا کہ اگرآپ کو فلو ہوتا ہے آپ کا دفاع کمزور ہوتا ہے اورآپ کو شدیدکووِڈ- 19ہونے کاخطرہ ہے اور اس سے آپ آئی سی یو یا وینٹی لیٹر پر پہنچ سکتے ہیں۔انہوں نے بیان میں کہا کہ فلو اور کووِڈ- 19کی علامات ایک جیسی ہیں اور اس طرح دونوں میں فرق کرنا مشکل ہے ۔ڈاکٹرنثار نے کہا کہ یہ جاننے کہ آپ کو کووِڈ- 19ہے یا فلو،اس کا بہترین حل دونوں وائرسوں کی جانچ کیلئے ٹیسٹ کرنا ہے ۔انہو ں نے کہا کہ ہم فلو کے ساتھ لاپرواہی نہیں برت سکتے کیوں کہ صرف یہ ہی بہت مشکل پیدا کرسکتا ہے اور ابھی کوروناجاری ہے یہ دونوں بہت بڑی تباہی پھیلاسکتے ہیں۔انہوں نے مزیدکہاکہ اس سے اس سال فلوکاٹیکہ لینا لازمی بنتا ہے ،انفلنزاٹیکہ نہ صرف آپ کو فلو سے بچائے گابلکہ کسی حد تک کووِڈ- 19 انفیکشن سے بھی تحفظ فراہم کرتاہے۔انہوں نے کہا کہ فلو کاٹیکہ لینے میں اب بھی کوئی قباحت نہیں ہے ،اگرآپ نے ابھی تک فلوکاٹیکہ نہیں لیا ہے توآپ اب بھی اسے لے سکتے ہیں ۔فلو کے پورے سیزن،جواکتوبر میں شروع ہوکرمئی میں کتم ہوتاہے، میں ٹیکہ کاری جاری رکھنی چاہیے ۔ڈاکٹر نثار نے کہا کہ لوگوں کو کووِڈ- 19سے بچائو کیلئے احتیاطی تدابیرپرعملدرآمد کو ہرحال میں جاری رکھنا چاہیے جوانہیں فلو سے بھی بچائے گی۔
 
 

ڈورواننت ناگ میں کنوئیں کی کھدائی کے دوران2بھائی بیہوش

عارف بلوچ
 سرینگر//نوپورہ ڈورواننت ناگ میں اتوار کودوبھائی اُس وقت بے ہوش ہوگئے جب وہ ایک کنواں کھود رہے تھے ،دونوں کو اسپتال منتقل کیاگیا جہاں ان کی حالت مستحکم ہے۔اطلاعات کے مطابق نو پورہ ڈورواننت ناگ میں 50برس کے محمدیوسف اور45برس کے محمداسحاق ولدغلام محمدگنائی اُس وقت بیہوش ہوگئے جب وہ کنوئیں کی کھدائی کررہے تھے۔مقامی لوگوں کے مطابق کنوئیں میں زہریلی گیس کے اخراج سے دونوں بے ہوش ہوگئے اور مقامی لوگوںپولیس اورفائرسروس اہلکاروں نے کافی مشقت کے بعد دونو ں بھائیوں کو کنوئیں سے باہر نکال کرسب ضلع اسپتال ڈورو پہنچایاجہاں سے ڈاکٹروں نے انہیں ضلع اسپتال اننت ناگ منتقل کیا۔ضلع اسپتال اننت ناگ میں تعینات ایک ڈاکٹر نے بتایا کہ دونوں بھائی اب خطرے سے باہر ہیں۔اس دوران میونسپل کمیٹی ڈوروکے صدرمحمداقبال آہنگر نے اسپتال جاکر مریضوں کی عیادت کی اور انہیں ہرممکن امدادفراہم کرنے کا یقین دلایا۔ 
 
 

جموں وکشمیر پولیس وار بمبئی سٹاک ایکسچینج انسٹی چیوٹ میں باہمی مفاہمت کی یاداشت پر دستخط 

سرینگر// جموں وکشمیر پولیس اور بمبئی اسٹاک ایکسچینج انسٹی چیوٹ لمیٹڈ نے باہمی مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کیے جس میں’’ بی ایس ای انسٹی ٹیوٹ لمیٹڈ ‘‘جان بحق پولیس کے بچوں اور خدمات انجام دینے والی پولیس کے بچوں کو ہنرسے متعلق تربیتی کورس فراہم کرے گا۔ ڈائریکٹر جنرل پولیس دلباغ سنگھ کی موجودگی میں اس معاہدے پر دستخط ہوئے۔پولیس ’’جی او ایس میس‘‘ گلشن گراؤنڈ میں منعقدہ اس تقریب میں پولیس ووئز ویلفیئر ایسو سی ایشن( پی ڈبلیو ڈبلیو اے) کی چیئرپرسن ڈاکٹر روبندر کور،  پولیس کے اعلی افسران اور پی ڈبلیو ڈبلیو اے کے ممبران موجود تھے۔اس موقع پر جموں کشمیر پولیس کے سربراہ دلباغ سنگھ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یہ سب اس وقت شروع ہوا جب’’ بی ایس ای انسٹی ٹیوٹ لمیٹڈ‘‘ مرکزی زیر انتظام خطے کی سطحپر نوجوانوں کے روزگار کو فروغ دینے آیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بات چیت کے دوران ہمیں معلوم ہوا کہ ’’ بی ایس ای انسٹی ٹیوٹ لمیٹڈ‘‘ ملک کے مختلف حصوں میں نوجوانوں کے ہنرکی ترقی کے لئے کام کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ’’ بی ایس ای انسٹی ٹیوٹ لمیٹڈ‘‘ مہلوک پولیس اہلکاروں کے بچوںاور فی الوقت خدمات انجام دینے والے اہلکاروں کے بچوں کے لئے تربیتی پروگراموں کے خواہاں ہیں۔ انہوں نے مزید کہا ’’ یہ جان کر مجھے بہت اچھا لگا ہے کہ وہ جموں و کشمیر پولیس کنبے کے لئے الگ سے ہنر مند ترقیاتی پروگرام انجام دے رہے ہیں۔‘‘انہوں نے کہا کہ مہلوک اہلکاروں کے علاوہ سبکدوش اور فی الوقت اپنی خدمات انجام دینے والے اہلکاروں کے بچوں کے علاوہ جموں کشمیر کے 500 کے قریب وہ نوجوان شامل ہیں جنہوں نے کھیلوں کی سرگرمیوں میں حصہ لیا ۔ڈائریکٹر جنرل پولیس کا کہنا تھا’’ ہم ان نوجوانوں کی ہنر کی ترقی کے لئے بھی’’ بی ایس ای ‘‘کے ساتھ کام کرنے کے منتظر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر کے نوجوانوں کو مزید مواقع فراہم کرنے کی ضرورت ہے تاکہ وہ ملک کی ترقی میں اپنا کردار ادا کرسکیں۔سنگھ نے کہا کہ جموں و کشمیر پولیس بھی اس طرح کی کوششوں کے لئے ہر طرح کی مدد فراہم کرے گی۔ اس موقع پر بی ایس سی انسٹیچیوٹ لمیٹیڈ کے منیجنگ ڈائریکٹر و چیف ایگزیکٹو افسر امبریش دتہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جموں وکشمیر پولیس ملک کے بہادر پولیس افواج میں شامل ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ آج اکی شراکت میں انہیں اعزاز ا حاصل ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے ہنرمندی کے ترقیاتی پروگرام پائیدار ترقی اور معاشی ترقی کے بارے میں ہیں۔ دتہ نے کہا ’’ اس باہمی مفاہمت نامہ کے تحت ہم جانب حق پولیس اہلکاروں اور فی الوقت، خدمات انجام دینے  اور ریٹائرڈ پولیس اہلکاروں کے بچوں کو ہنر  سے ترقی کے کورسز مہیا کریں گے اور بہتر طور پر ان کی زندگیوں کو تبدیل کریں گے۔ ‘‘انہوں نے کہا کہ ہم پولیس پبلک اسکولوں جموں اور سری نگر کے طلباء  کے لئے خصوصی کورسز کا بھی انعقاد کر رہے ہیں ، جس میں انہیں بینکنگ اور مالی تعلیم کے بارے میں آگاہی حاصل کی جائے گی اور مزید کہا کہ اس سے مستقبل میں انھیں بہتر ملازمتیں حاصل کرنے میں مدد ملے گی۔ امبریش دتہ نے کہا کہ جموں وکشمیر پولیس کے بڑے پیمانے پر آؤٹ ریچ پروگراموں میں حصہ لینا ہمارا مقصد بھی ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ معاشرے کو متحد کرنے میں ایک ذریعہ بنائے گی۔جموں کشمیر پولیس کی جانب س اسسٹنٹ انسپکٹر جنرل ویلفیئر ش منوج کمار پنڈتھ اور بی ایس سی انسٹی چیوٹ لمیٹیڈ کی جانب سے ش امبریش دتہ نے اس مفاہمت نامے پر دستخط کیے۔مفاہمت نامہ میں لکھا گیا ہے کہ یہ معاہدہ جموں کشمیر کے مہلوک،حاضر سروس اور سبکدوش پولیس اہلکاروں کے بچوں کی، تربیت ، ڈیزائن کورسز اور معاونت کے لئے ہے،اور اس کا مقصد ان بچوں کے ہنر کو بہتر بنانا ہے۔ اس معاہدے کے تحت ، بی ایس سی انسٹی چیوٹ لمیٹیڈ کی تجویز کردہ ہدایات کے مطابق کورس تربیت ہوگی اور تربیت دہندگان کی اسناد بھی یہی ادارہ مقرہ رہنماء خطوط کے تحت تیار کرے گا۔ اس معاہدے میں نوجوانوں ، خواتین اور دیگر اہل امیدواروں کے لئے روزگار ، ہنر اور پائیدار معاش پیدا کرنے کے لئے ہنر مندی کے پروگراموں کا احاطہ کیا جائے گا۔ اس معاہدے کے تحت ادارہ جموں کشمیر کے دائرہ اختیار میں اسکولوں کو بینکنگ اور مالیاتی منڈیوں ، انشورنس کورسز کے لئے پیشہ ورانہ مہارت متعارف کروانے میں مدد فراہم کرے گا۔تقریب میں ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل اے کے چودھری ، دیپک کمار ، اے جی میر ، ٹی نمبرگھیال ، انسپکٹر جنرل مکیش سنگھ، ایم کے سنہا ، غریب داس ، آلوک کمار ، بی ایس سی انسٹیچیوٹ لمیٹیڈ کے منیجنگ ڈائریکٹر و چیف ایگزیکٹو افسر امبریش دتہ اس ادارے کے نائب صدر راہل راناڈیو ، بی ایف ایس اائی سعبہ ہنر مندی کونسل آف انڈیا کے سربراہ سومیا رنجن، ، بی ایس ای اسٹار میوچل فنڈ پلیٹ فارم کے سربراہ گنیش رام ، سمیت پولیس ہیڈ کواٹر کے کے اسسٹنٹ انسپکٹر جنرلز رئیس بٹ اورمنوج کمار پنڈتا کے علاوہ دیگر افسراں بھی موجود تھے۔
 
 

سوپور میں اسٹریٹ لائٹس ناکارہ،لوگوں کو مشکلات

غلام محمد 
سوپور// سوپورقصبہ میں سٹریٹ لائٹس ٹھیک نہ ہونے کے وجہ سے لوگوںکو سخت مشکلات کا سامنا ہیں۔ مقامی لوگوں نے بتایا کہ قصبے کی سٹریٹ لائٹس پچھلے 5سال سے خراب پڑی ہیں اور انتظامیہ ان کو ٹھیک کرانے کا کوئی بھی انتظام نہیں کررہی ہے۔ مقامی لوگوں نے بتایا کہ شام ہوتے ہی پورے قصبے میں اندھیرا چھاجاتا ہے کیونکہ کئی جگہوں میں موجود سٹریٹ لائٹس ناکارہ ہوئی ہیں۔ مقامی لوگوں نے بتایا کہ اقبال مارکیٹ، مین چوک ، شاہ درگاہ چوک ، بس سٹینڈ، ڈائون ٹائون، چھانہ کھن اور مین بازا ر کی لائٹیں بے کار ہوگئی ہیں۔ اکنامک الائنس سوپور کے صدر محمد اشرف گنائی کا کہنا ہے کہ متعلقہ حکام کو اس حوالے سے کئی بار مطلع کیا گیا  اور نئی لائٹس نصب کرنے کی درخواست کی گئی لیکن وہ کبھی ٹس سے مس نہ ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ چند جگہوں پر بڑی لائٹس نصب ہیں لیکن یہ بھی کبھی کبھی ہی کام کرتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے یہ معاملہ کئی مرتبہ حکام کی نوٹس میں لایا لیکن کسی نے کوئی کاروائی نہیں کی۔ میونسپل کونسل سوپور کے ایگزیکیٹو آفیسر سمیر احمد جان  نے بتایا کہ ایک نیا ٹینڈر جاری کیا گیا ہے اور سوپور میں تمام خراب سٹریٹ لائٹس کو ٹھیک کرنے کا کام جلد شروع کیا جائے گا۔ 
 
 

گاندربل میں شیڈول کے مطابق بجلی فراہم کرنے کا مطالبہ

گاندربل ،//ارشاداحمد//سردیوں کا موسم شروع ہوتے ہی گاندربل ضلع کے ہرعلاقے میں بجلی کی ناقص سپلائی پرمقامی آبادی میں زبردست غصہ پایاجاتا ہے ۔حال ہی میں محکمہ بجلی نے باضابطہ کٹوتی شیڈول ترتیب دے کر برقی روفراہم کرنے کااعلان کیا،تاہم مقامی لوگوں نے الزام لگایا ہے کہ محکمہ بجلی نے اپنے ہی کٹوتی شیڈول کی دھجیاں اڑاکر رکھ دی ہیں ۔کشمیر عظمیٰ کو مقامی لوگوں نے بتایاکہ بغیر میٹر والے علاقوں میں اگرچہ چھ گھنٹے بجلی بند رکھنی ہے لیکن یہاں آٹھ گھنٹوں سے زیادہ بجلی بند رکھی جاتی ہے ۔گاندربل کے بیشتر علاقوں جن میں شالہ بگ،ڑھندنہ،کورگ،سہ پورہ،تولہ مولہ، صفاپورہ ،بارسو، کرہامہ، ینگورہ،کوندہ بل،لار،چونٹھ ولی وار،بنہ ہامہ،منیگام،ہاری پورہ،اندرون، آرہامہ، یارمقام، وسن، پرنگ،چھترگل،کنگن،اکہال،نجون ،مامر ،وانگت سمیت دیگر علاقوں میں بجلی سپلائی کی ابتر اور ناقص صورتحال پر آبادی میں غصہ اور ناراضگی پائی جارہی ہے۔اکہال کے مقامی شہری جاوید احمد شیخ نے بتایا کہ ضلع گاندربل میں تین بڑے پاور ہاوس موجود ہیں لیکن تینوں پاور ہاوسز سے اتنی بھی سپلائی فراہم نہیں ہوتی کہ ضلع گاندربل کے علاقوں کو ہی برقی رو فراہم کرتے۔انہوں نے کہا کہ ہم تو چراغ تلے اندھیرے ،میں زندگی بسر کررہے ہیں۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ ضلع میں شیڈول کے مطابق بجلی سپلائی فراہم کی جائے۔ 
 
 

بجہباڑہ میںتیزرفتار کارنے کمسن کو کچل ڈالا | اوڑی میں ذہنی طور معذورشخص کنال میں گر کر ہلاک

عارف بلوچ+ظفر اقبال
اننت ناگ+اوڑی//بجبہاڑہ میں ایک تیزرفتار کار نے تین برس کے کمسن کو کچل کر ہلاک کردیا۔ادھر بونیار اوڑی میں ایک ذہنی طور ناتواںشخص ندی میں گر کر ہلاک ہوگیا۔سرہامہ شالغم بجہباڑہ کے نزدیک تیز رفتار نامعلوم سینٹرو کارنے 3 سالہ مہران نصیر ولد نصیر احمد راتھر ساکنہ سرہامہ کو اُس وقت ٹکر مار دی، جب یہ بچہ سڑک سے گذر رہا تھا جس کے نتیجے میں بچہ شدید زخمی ہوا اور اُ سے علاج معالجہ کے لئے سب ضلع اسپتال بجبہاڑہ منتقل کیا گیا جہاں ڈاکٹروں نے اُ سے مردہ قرار دیا۔پولیس نے معاملے کی نسبت کیس درج کرکے حادثے میں ملوث ڈرائیور کی تلاش شروع کی ہے۔ادھر بونیار اوڑی میں ایک ذہنی طور ناتواںشخص ندی میں گر کر ہلاک ہوگیا۔اتوار کو بونیاراوڑی میں40سالہ جہانگیراحمد خان ولدمرحوم رحمت اللہ خان ساکن رام پور بونیار ذہنی طور معذورشخص لکڑی کی بنی نہر میں پیر پھسلنے سے جاگرااور اس کی موقعہ پرہی موت واقع ہوگئی۔پولیس نے لاش کو کنال سے برآمد کرکے قانونی لوازمات پوراکرنے کے بعد لواحقین کے سپرد کیا۔
 
 

اونتی پورہ میں دکانات کاانہدام | مسعودی کا تحقیقات کرانے کا مطالبہ 

سرینگر//نیشنل کانفرنس کے رکن پارلیمان حسنین مسعودی نے اونتی پورہ میں سرینگرجموں شاہراہ پردکانوں کو منہدم کرنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ یہ اقدام قواعد کے برعکس کیاگیا ہے اور اس سے بیسیوں دکانداروں کاروزگار متاثر ہوا۔ایک بیان کے مطابق متاثرہ دکانداروں کے وفد نے اننت ناگ کے رکن پارلیمان سے ملاقات کرکے یہ معاملہ ان کی نوٹس میں لایا۔وفدنے رکن پارلیمان کو انہیں درپیش مشکلات سے آگاہ بھی کیا۔انہوں نے کہا کہ انتظامیہ کی کارروائی سے ان کے دکانوں میں موجود لاکھوں روپے کا مال بھی تباہ ہواجس کی وجہ سے ان کے نقصان میں مزیداضافہ ہوا۔حسنین مسعودی نے وفدکی شکایات سننے کے بعدصوبائی کمشنر کو فون کیااوران پرزوردیا کہ وہ اس معاملے کی تحقیقات کرائے ۔