مزید خبرں

  ڈوڈہ میں کووڈ 19 کے 73 نئے مثبت کیس

۔96 مریض شفایاب، 1 شخص فوت 

اشتیاق ملک
ڈوڈہ //ڈوڈہ سے منگل کے روز کورونا وائرس کے 73 نئے مثبت کیس سامنے آئے ہیں اور 96 مریض صحتیاب ہوئے ہیں جبکہ پچھلے چوبیس گھنٹوں میں ایک شخص فوت ہوا ہے۔اطلاعات کے مطابق منگل کو ڈوڈہ، بھدرواہ، عسر ،ٹھاٹھری و گندوہ میں ہوئی کووڈ جانچ کے دوران 73 افراد کی ٹیسٹ رپورٹ مثبت آئی ہے اور اس طرح سے ضلع میں فعال کیسوں کی تعداد 1112 رہ گئی ہے جن میں سے 1074 کو خانہ قرنطینہ و 38 مریضوں کو ہسپتال آئیسو لیشن میں رکھا گیا ہے۔اس دوران 96 مریض صحتیاب ہوئے ہیں۔ پیر کی شام جی ایم سی ڈوڈہ میں ایک 75 سالہ شہری کی موت ہوئی ہے۔ ضلع میں شفایاب ہوئے مریضوں کی مجموعی تعداد 4582 پہنچ گئی ہے اور اب تک 90 ہلاکتیں ہوئی ہیں۔
 

 ریاسی میں پہیوں پر ٹیکہ کاری کی مہم کا آغاز

ریاسی//ڈپٹی کمشنر ریاسی چرندیپ سنگھ نے کہا کہ ضلعی انتظامیہ نے کم سے کم وقت میں ضلع میں ہر عمر کے مناسب افراد کو ٹیکہ لگانے کے لئے پہیوں پر ٹیکہ کاری مہم کا آغاز کیا ہے۔چرندیپ سنگھ ضلع میں موجودہ کووڈ صورتحال کے بارے میں میڈیا افراد کو بریفنگ دے رہے تھے جس میں جانچ اور ویکسی نیشن کی حیثیت بھی شامل ہے۔ڈی سی نے مزید بتایا کہ یومیہ مثبتیت کی شرح کم ہوکر 1.16فیصدہوگئی ہے اورصحت یابی کی شرح 90فیصد تک بڑھ گئی ہے جو ضلعی انتظامیہ کے ذریعہ کئے گئے کنٹرول اور انتظامی اقدامات کے اچھے نتائج کی نشاندہی کرتی ہے۔ضلع میں کووڈ مخصوص صحت کی دیکھ بھال کی سہولیات کی تفصیلات دیتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ دیہی علاقوں میں متاثرہ مریضوں کو علاج اور تنہائی کی سہولیات کی فراہمی کے لئے 153 پنچایتی سطح پر کووڈ کیئر سنٹرز قائم کیے گئے ہیں۔انہوں نے "گھر پہ جاکر ویکسی نیشن" پہچان کے لئے گھر گھر جانے والی مہم کا بھی ذکر کیا۔ اس سلسلے میںانہوں نے جموں و کشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا کے ٹویٹ کے بارے میں بھی شیر محمد (118 عمر) کی ویکسی نیشن کی تعریف کرتے ہوئے ٹویٹ کے بارے میں ذکر کیا جس نے موبائل ویکسی نیشن مہم کے دوران ٹیکہ لگایا گیا تھا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایک ویکسی نیشن گرڈ قائم کیا گیا ہے جو 100فیصد ویکسی نیشن کوریج کو یقینی بنانے کے لئے پیشرفت کی نگرانی کے لئے گاؤں کی سطح پر کام کرے گا۔
  
 

کووڈ ایس او پیز کی خلاف ورزی پر جرمانہ 

۔ 103 ٹیکے لگائے گئے ، 884 نمونے اکٹھے کیے گئے

رام بن //ضلع رام بن میں کووڈ پروٹوکول کے نفاذ کے لئے مہم کو جاری رکھتے ہوئے انفورسمنٹ ٹیموں نے چہرے کے ماسک پہنے بغیر گھومنے اور جسمانی فاصلہ برقرار نہ رکھنے پر متعدد خلاف ورزی کرنے والوں کو جرمانہ کیا۔نفاذ کرنے والی ٹیموں نے اپنے اپنے دائرہ اختیار میں معائنہ کے دوران17ہزار200 روپے جرمانہ وصول کیا۔ انفورسمنٹ افسران نے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ چہرے کے ماسک پہنیں اور جسمانی فاصلہ برقرار رکھیں اس کے علاوہ وہ اپنے قریبی سی وی سی میں کوویڈ ویکسی نیشن کی خوراکیں لیں۔ ضلع امیونائزیشن آفیسر ڈاکٹرسریش نے بتایا کہ منگل کے روز ضلع رام بن میں 103 افراد کو پہلی اور دوسری کوویڈ ویکسین کی خوراکیں فراہم کی گئیں۔چیف میڈیکل آفیسر ڈاکٹر محمد فرید بھٹ کی طرف سے جاری کردہ روزانہ بلیٹن کے مطابق ، محکمہ صحت نے ضلع میں نامزدویکسی نیشن مراکز میں 103 افراد کو کوڈ ویکسین پلانے کے علاوہ 184 آر ٹی-پی سی آر اور 700 آر اے ٹی نمونے سمیت 884 نمونے اکٹھے کیے ہیں۔
 
 
 

 بنی کیلئے آکسیجن جنریشن پلانٹ منظور کرنے کا خیر مقدم

 کٹھوعہ //اپنی پارٹی یوتھ لیڈر چوہدری یاسر علی نے ضلع کٹھوعہ کے بنی علاقہ کے لئے آکسیجن جنریشن پلانٹ کو منظوری دینے پر لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا کی تعریف کی ہے۔ یاسر نے کہاکہ بنی کے لوگ حکومت کے اِس فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہیں تاہم انہوں نے کہاکہ 20پنچایتوں پر مشتمل 40ہزار آبادی کے لئے کوئی طبی سہولت دستیاب نہیں، ہم حکومت سے توقع کر رہے تھے کہ یہاں کے خستہ حال طبی نظام کی طرف توجہ دی جائے گی لیکن ایکبار پھر دیہی اور پسماندہ علاقہ جات کے لوگوں کو نظر انداز کیاگیا۔ انہوں نے حکومت سے گذارش کی ہے کہ ان پنچایتوں کے لئے اعلیحدہ سے اسپتال اور آکسیجن جنریشن پلانٹ منظور کیاجائے ۔
 
 

مفتی فیض الوحید کے انتقال پر خطہ چناب بھی غمزدہ 

متعدد، سیاسی، سماجی ،مذہبی و ادبی شخصیات کا اظہار دکھ، مرحوم کی ادبی، علمی و دینی خدمات کو خراج تحسین پیش کیا 

اشتیاق ملک
ڈوڈہ //جموں و کشمیر کی معروف علمی، روحانی شخصیت، مشہور عالم دین و مفسر قرآن مفتی فیض الوحید قاسمی صدر مفتی جامعہ مرکز المعارف بٹھنڈی جموں کے انتقال پر وادی چناب کی کئی سیاسی، سماجی، مذہبی و ادبی شخصیات نے گہرے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے لواحقین کے ساتھ تعزیت کی ہے. اپنے الگ الگ پیغامات میں انہوں نے کہا کہ مفتی فیض الوحید کی اچانک وفات سے سماج کے ہر فرد بشر کو صدمہ پہنچا ہے. اپنے الگ الگ تعزیتی پیغامات میں سابق وزراء غلام محمد سروڑی، سجاد احمد کچلو، عبدالمجید وانی ،نامور سیاسی و سماجی کارکن غلام مصطفیٰ بٹ ،امام و خطیب مرکزی جامع مسجد ڈوڈہ و سابق وزیر خالد نجیب سہروردی، وقار رسول وانی، سابق ایم ایل سی نریش کمار گپتا ،سابق ایم ایل سی محمد اقبال بٹ، شہاب الحق بٹ،ڈاکٹر شاہد مغل چیرمین بھدرواہ میونسپل کمیٹی، صدر انجمن اسلامیہ بھدرواہ پرویز احمد شیخ،عبد الحفیظ فرقان آبادی، ڈاکٹر عنائت اللہ ندوی، سیکرٹری انجمن اسلامیہ نیلی بھلیسہ مولانا محمد عرفان ندوی، سیاسی و سماجی کارکن ریاض احمد زرگر، ایڈووکیٹ حسان بابر، اشتیاق احمد دیو نے مفتی فیض الوحید کی دینی، سماجی و علمی خدمات کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ ان کی وفات سے جو خلا پیدا ہوا اس کا پر کرنا ناممکن ہے۔انہوں نے مرحوم کی ایصال ثواب کیلئے دعائے مغفرت و پسماندگان کو صبر جمیل عطا کرنے کی دعا کی۔سجادہ نشین دربار عالیہ یونسیہ نقشبندیہ زرہامہ، آوارہ کپواڑہ کشمیر الحاج پیر میاں محمد مقبول عرف باجی صاحب نے جموں و کشمیر کے معروف عالم دین، مفسر قرآن و مفکر مفتی فیض الوحید کے انتقال پر گہرے صدمہ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ قوم و ملت نے عظیم ہستی کو کھو دیا ہے ۔مہتمم مدرسہ غنیتہ العلوم اخیار پور الحاج برہان الحق غنی پوری، خطہ چناب کے دعوت و تبلیغ کے امیر مولانا حفظ الرحمن مرکز مسجد نور ڈوڈہ، کل ہند رابطہ مدارس اسلامیہ عربیہ کے ضلع صدر مفتی پرویز عالم رحیمی، مہتمم مدرسہ اسرار العلوم نیلی مولانا شوکت قاسمی نے مفتی فیض الوحید کے اچانک انتقال پر دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ان کی وفات نے ملکی و باالخصوص جموں و کشمیر کی عوام کو سکتہ میں ڈال دیا ہے۔انہوں نے اپنے الگ الگ تعزیتی پیغامات میں مفتی صاحب کی حیات و خدمات کو یاد کرتے ہوئے کہا کہ ان کی دعوتی اصلاحی، تبلیغی، تصنیفی و بے لوث دینی سرگرمیوں نے جو نقوش چھوڑے ہیں وہ ان کے معتقدین متوسلین، طلباء و عوام الناس ہی نہیں بلکہ تاریخ بھی انہیں یاد کئے بغیر نہیں رہے گی۔ انہوں نے کہا کہ حضرت مفتی صاحب کی پہچان نہ صرف ریاستی و ملکی بین الاقوامی سطح اور باالخصوص مکہ مکرمہ و مدینہ منورہ جیسی مقدس سرزمین پر بھی ان کی شخصیت نمایاں تھیں۔انہوں نے اس سانحہ کو جموں و کشمیر کے لئے ایک عظیم خسارہ قرار دیا۔اس دوران نائب صدر رابطہ مدارس حفاظ محمد رمضان، ترجمان رابطہ مدارس مفتی شاہ محمد ملک قاسمی، رکن عاملہ قاری اخلاق احمد مفتی محمد ایوب قاسمی،مفتی عادل حسین رحیمی، مفتی محمد افضل رحیمی، مولانا مبارک حسین رحیمی و دیگر تمام رابطہ مدارس عربیہ، حفاظ و قراء، علمائے کرام، مفتی عظام ضلع ڈوڈہ و دعوت و تبلیغ کے سبھی ساتھیوں نے مفتی فیض الوحید کی قومی و ملی خدمات کو خراج تحسین پیش کیا اور اپنے اپنے مقامات پر دعائیہ مجالس کا اہتمام کیا۔
 

 مکہ مسجد بٹھنڈی کی تعزیت

جموں// مکہ مسجد ٹرسٹ و انتظامیہ کمیٹی مکہ مسجد بٹھنڈی نے بھی مفتی فیض الوحید کے انتقال پر تعزیت کا اظہار کیا ہے اور مدرسہ مرکز المعارف بٹھنڈی کے تئیں ان کی شاندار خدمات کو یاد کیا۔تعزیتی اجلاس میں شرکاء نے مفتی صاحب کو شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش اور ان کی دینی و ملی خدمات کو یاد کیااور ان کیلئے دعائوں کا اہتمام کرنے کی اپیل کی ۔انہوںنے پسماندگان کے ساتھ تعزیت و ہمدردی ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ ملی یکجہتی اور وحدت امت کیلئے مرحوم کی خدمات ناقابل فراموش ہیں اور ان خدمات کو رہتی دنیا تک یاد کیاجائے گا۔
 
 

کشتواڑ میں بارشوں سے عام زندگی مفلوج

درجہ حرارت میں نمایاں کمی، لوگوں نے لی راحت کی سانس

عاصف بٹ
کشتواڑ//ضلع کشتواڑ کے بالائی و میدانی علاقوں میں سوموار شامشروع ہوا بارشوں کا سلسلہ دوسرے روز بھی جاری رہا جس دوران دن بھر بارشیں ہوتی رہیں جبکہ بادل بھی گرجے۔ اگرچہ دن بھر ہلکی ہلکی بارشیں ہوئی تاہم شام ہوتے ہی موسلادھار بارشوں کا سلسلہ شروع ہوا جو دیر گئے تک جاری تھا۔ میدانی و بالائی علاقوں میں جہاں لوگوں نے گرمی سے راحت لی وہیں درجہ حرارت میں بھی نمایاں کمی درج کی گئی۔ضلع کے دیگر علاقہ جات میں بھی بارشیں ہوئیں تاہم کسی قسم کی کوئی نقصان کی اطلاع نہیں ملی۔
 

ڈوڈہ مرمت میں ڈمپر سے گر کر نوجوان جاں بحق 

اشتیاق ملک
ڈوڈہ //ڈوڈہ کے مرمت میں پیش آئے سڑک حادثہ میں ایک نوجوان ہلاک ہوا ہے۔ پولیس ذرائع کے مطابق منگل کے روز دوپہر دو بجے کے قریب بہوتہ چلوت سڑک پر کام کے دوران ایک ڈمپر زیر نمبری JK06A-6425سے اشفاق احمد ولد محمد اکرم (23)ساکنہ کاستی گڑھ گر گیا اور موقع پر ہی موت واقع ہوئی۔اس حادثہ کے فوراً بعد مقامی لوگ و پولیس کی ٹیم موقع پر پہنچی اور مہلک نوجوان کو نزدیکی ہسپتال میں داخل کرکے طبی لوازمات مکمل کی اور آخری رسومات ادا کرنے کے لئے لاش کو وارثین کے سپرد کیا گیا۔اس سلسلہ میں پولیس نے معاملہ درج کر کے مزید تحقیقات شروع کی ہے۔
 

ڈوڈہ میں دوسرے روز بھی شدید بارش 

درجہ حرارت میں نمایاں کمی، رابطہ سڑکیں زیر آب 

اشتیاق ملک 
ڈوڈہ //ڈوڈہ کے میدانی و بالائی علاقوں میں دوسرے روز بھی بارش کا سلسلہ شروع ہوا جس کے نتیجے میں درجہ حرارت میں نمایاں کمی واقع ہوئی ہے اور سردی کی شدت میں اضافہ ہوا ہے۔ اطلاعات کے مطابق پیر کی درمیانی شب ہوئی بارش کے بعد منگل کو دوپہر تک موسم خوشگوار رہا تاہم بعد دوپہر پھر سے ڈوڈہ، بھدرواہ ،ٹھاٹھری و گندوہ کے مضافات میں شدید بارش شروع ہوئی جس کے نتیجے میں رابطہ سڑکیں زیر آب ہو گئیں اور ندی و نالوں میں پانی کی سطح میں اضافہ ہوا ہے۔ ادھر ٹھاٹھری کلہوتران شاہراہ پر ملکپورہ کے نزدیک بیس میٹر لمبے پل کی مرمت کا کام تیسرے روز بھی جاری رہا جس کے نتیجے میں ٹریفک نظام معطل رہا۔اس دوران متعدد دیہات میں پانی و بجلی نظام متاثر ہوا ہے۔
 

جزوی لاک ڈائون کے باوجود مہنگائی عروج پر

ایم ایم پرویز
رام بن//کووڈ 19 کے جزوی لاک ڈاؤن کے درمیان ضلع رام بن میں دالوں ، سبزیوں اور سرسوں کے تیل سمیت متعدد ضروری اشیا کی قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے۔تاجروں کا کہناہے کہ قیمت میں اضافے کی وجہ مناسب رسد کی کمی کی وجہ سے فراہمی کی قلت ہے۔ان کا کہنا تھا کہ قیمتوں میں اضافے کے علاوہ دوسری ریاستوں سے آئٹم دستیاب نہیں ہیں ،بہت سے سامان سپلائی چین سے غائب ہوگئے ہیں۔ ہمارے لئے سپلائی حاصل کرنا بہت مشکل ہے۔برانڈڈ سامان کی قیمت میں اضافہ ہوا ہے ، اسی طرح کی دوسری چیزوں کا بھی ہے جو زیادہ تر اسٹورز اور راشن اسٹورزپر ختم ہوچکے ہیں۔لوگوں نے شکایت کی ہے کہ کووڈ 19 کا مقابلہ کرنے کے لئے ضلعی انتظامیہ کے اقدامات کے بعد جزوی طور پر لاک ڈاؤن کی وجہ سے ضلع بھر کی زندگی متاثر ہو رہی ہے جس کی وجہ سے ضلع میں پھلوں ، سبزیوں، سرسوں کے تیل کی قیمتوں میں کئی گنا اضافہ ہوا جس سے عام لوگوں پر بری طرح اثر پڑ رہا ہے۔
 

وائٹ نائٹ کارپس نے اپنا 49 واں یوم تاسیس منایا

جموں//جموں میں قائم وائٹ نائٹ کارپس نے منگل کے روز اپنا 49 واں یوم تاسیس منایا۔اس موقع پر جی او سی وائٹ نائٹ کارپس لیفٹیننٹ جنرل سوچندر کمار نے کارپس کے تمام افسروں کی آپریشنل و انتظامی خدمات کی انجام دہی کے دوران اعلیٰ معیارات کی حصولیابی پر سراہنا کی۔انہوں نے آشوامدھ سوریا ستھل پر پھول مالا چڑھا کر شہیدوں کو خراج عقیدت پیش کیا۔موصوف لیفٹیننٹ جنرل نے تمام افسروں سے اپنی ذمہ داریوں کو پیشہ ورانہ مہارت اور لگن سے انجام دینے کی تلقین کی۔بتا دیں کہ وائٹ نائٹ کارپس کی داغ بیل یکم جون 1972 کو ڈالی گئی تھی اور لیفٹیننٹ جنرل جے ایف آر جیکوب اس کے پہلے جی او سی تھے ۔
 
 
 

قانون کے ہاتھ لمبے ہوتے ہیں

ریاسی میں35برسوں سے روپوش ملزم بانہال میں گرفتار

ریاسی//ریاسی میں پولیس نے دھوکہ دہی کے معاملہ میں 35برسوں سے مطلوب روپوش ملزم کو گرفتار کرلیا ہے۔ 6نومبر1986میںایک شہری شیوسارن نے ریاسی پولیس تھانہ میں ایک تحریری شکایت درج کرائی کہ اُس نے محمد شفیع ساکنہ مٹلوٹ ریاسی کو بھیڑ چرانے کیلئے دئیے۔ شکایت کنندگان نے کہا کہ محمد شفیع نے اعتماد کو ٹھیس پہنچاتے ہوئے بھیڑوں کو فروخت کیا۔ اس ضمن میں پولیس تھانہ مہور میں ایف آئی آر زیر نمبر128/1986زیر دفعات406, 34رنبیر پینل کوڈ(RPC)کے تحت کیس درج کرکے ملزم کو گرفتار کرنے کی کارروائی شروع کی ۔ پولیس نے محمد شفیع کو یکم جنوری 1987کو گرفتار کر لیا تاہم وہ پولیس کی تحویل سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا جس کے بعد پولیس نے ایک اور ایف آئی آر زیر نمبر6/1987زیر دفعات 224آر پی سی درج کرکے روپوش ملزم کی تلاش شروع کی۔ پولیس کاکہنا ہے کہ مذکورہ شہری گرفتاری سے بچنے کیلئے ڈھوکاس، جو کشمیر میں جنگجوئوں سے متاثرہ تھا، میں چراگاہوں کو بدلتا رہتا تھا۔ اس دوران تحقیقاتی افسران نے تحقیقات کے دوران روپوش ملزم کیخلاف لگائے گئے الزامات کو ثابت کرلیا اور مہور عدالت میں چالان پیش کیا۔ مہور عدالت نے ملزم کیخلاف 17جولائی 1987اور 29نومبر1987کو الگ الگ 2وارنٹ جاری کئے۔ ارناس پولیس تھانہ کو ایک مصدقہ اطلاع ملی کی کہ بانہال میں ڈھوک میں روپوش ملزم چھپا ہوا ہے اور اسے 35برس بعد گرفتار کیا گیا۔ کے ا ین ا یس کے مطابق عدالت نے محمد شفیع کو 50ہزار کے مچلکے پر عبوری ضمانت پر 4دنوں کیلئے رہاکیا ہے۔ 
 

کشتواڑ ورکنگ جرنلسٹ ایسوسی ایشن کو صدمہ

 والدہ کا انتقال ،ایسو سی ایشن کی تعزیت

 کشتواڑ//عاصف بٹ //کشتواڑ ورکنگ جرنلسٹ ایسوسی ایشن نے ایسوسی ایشن کے نائب صدر کی والدہ کے انتقال پر تعزیت کا اظہار کیا۔ نذیر احمد ڈار کی والدہ کا انتقال آج صبح انکے گھر پرہوا جو کافی عرصے سے علیل تھیں۔ انکا نماز جنازہ گیارہ بجے ایس او پی کے تحت انجام دیا گیا۔ ایسوسی ایشن نے انکی موت پر گہرے دکھ کا اظہار کیا ۔ایسو سی ایشن کے صدر بلبیر جموال، نائب صدر اجے شان، مشتاق دیو ، جنرل سکریڑی راجیش چندر، عاصف نائک ، عاصف بٹ ، عاطف لون، ذوالفقار علی،عارف منشی، سمت شرما، عمران شاہ،منتصر گیری، منیشا، دیپک شرما، توصیف کریپاک، بابر، اظہر و دیگران نے نذیر ڈار و انکے اہل خانہ سے دلی ہمدردی کا اظہار کیا۔