مزید خبرں

کووڈ ایس او پیز کی خلاف ورزی پر 56ہزار کا جرمانہ

 رام بن میں412 ٹیکے لگائے گئے ، 1542 نمونے اکٹھے کئے گئے

رام بن// ضلع رام بن میں کووڈ پروٹوکول کے نفاذ کے لئے مہم کو جاری رکھتے ہوئے انفورسمنٹ ٹیموں نے چہرے کے ماسک پہنے بغیر گھومنے اور جسمانی فاصلہ برقرار نہ رکھنے پر متعدد خلاف ورزی کرنے والوں کو جرمانہ کیا۔انفورسمنٹ ٹیموں نے اپنے اپنے دائرہ اختیارات میں معائنے کے دوران 56،300 روپے جرمانہ وصول کیا اور اس طرح  1 اپریل 2021 سے جرمانے کی کل رقم سے 13 لاکھ 32ہزار600روپے وصول ہوئی۔انفورسمنٹ افسران نے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ چہرہ ماسک پہنیں اور جسمانی فاصلہ برقرار رکھیں اس کے علاوہ وہ اپنے قریبی سی وی سی میں کوویڈ ویکسی نیشن ڈوز لیں۔ ڈسٹرکٹ امیونائزیشن آفیسر رام بن ڈاکٹر سریش نے بتایا کہ ضلع میں 18-44سال کے اندر اندر ترجیحی گروپوں کی ویکسی نیشن شروع ہوئی ہے اور پیر کو ر ام بن ضلع میں 412 افراد کو پہلی اور دوسری کوویڈ ویکسین کی دوائیاں دی گئیں۔چیف میڈیکل آفیسر رام بن ڈاکٹر محمد فرید بھٹ کی طرف سے جاری کردہ روزانہ بلیٹن کے مطابق محکمہ صحت نے 1542 نمونے جمع کیے ہیں جن میں 190 آر ٹی-پی سی آر اور 1352 آر اے ٹی نمونے شامل ہیں ، اس کے علاوہ ضلع میں وقفہ ٹیکہ لگانے والے مراکز میں 412 افراد کو کوڈ ویکسین فراہم کی گئی ہے۔
 18 سے 44 سال تک کیلئے 4 مقامات پرٹیکہ کاری شروع
 

ضلع میں پہلے روز بڑی تعداد میں نوجوانوں نے لیا حصہ

عاصف بٹ
کشتواڑ//ضلع کشتواڑ میں بھی18 سے 44 سال تک کیلئے ویکسی نیشن شروع کی گئی ۔ کشمیر عظمیٰ کو ملی تفصیلات کے مطابق کل انتظامیہ نے حکمنامہ جاری کیا تھا جس میں ضلع کے اندر 18 سے 44 سال تک کے لوگوں کیلئے ویکسی نیشن شروع کی جس دوران پہلے مرحلے کے تحت چار مقام پر ویکسی نیشن کا عمل شروع کیا گیا اور ضلع ہسپتال کشتواڑ،ٹی بی ہسپتال ،این ایچ پی سی و بھیٹھا بھاٹہ میں ویکسی نیشن شروع کی گئی جس دوران پہلے روز بڑی تعدا میں نوجوان نے ویکسی نیشن مراکز پر جاکر ویکسین لگائی۔ اگرچہ ان مقامات پر آن سپاٹ رجسٹریشن کی گئی لیکن حکام نے لوگوں سے اپیل کی ہے کہ وہ ایپ پر رجسٹریشن کرکے تاریخ لیں اور پھر ہی ویکسی نیشن مراکز آئیںتاکہ ایس او پی پر عمل کیا جاسکے۔ چیف میڈیکل افسر نے ان مراکزکا دورہ کیا۔ اس موقعہ پر بات کرتے ہوئے نوجوانوںنے کہا کہ وہ کافی خوش ہیں اور اس وبائی بیماری سے نجات کیلئے ویکسی نیشن ضروری ہے ۔انھوں نے دیگر لوگوں سے بھی اپیل کی کہ وہ اپنے نزدیکی مراکز میں جاکر ویکسین لگوائیں۔واضح رہے کہ ضلع کے دیگر بلاکوں میں بھی آنے والے چند دنوں کے اندر ویکسی نیشن شروع کی جائے گی جبکہ مڑواہ ، دچھن و واڑون، جہاں موصولاتی نظام نہیں ہے،میں آف لاین ویکسی نیشن کی جائے گی جسکے بعد ڈاٹا کو آن لاین کیا جاے گا۔قابل ذکر ہے کہ دس ہزار ویکسین کے ڈوز کشتواڑ میں مہیا رکھے گئے ہیں ۔
 
 

ضلع ہسپتال کشتواڑ میں عطیہ خون کا کیمپ منعقد

عاصف بٹ
کشتواڑ //عالمی یوم بلڈ ڈونیشن ڈے کے موقع پر ضلعی ریڈ کراس سوسائٹی نے محکمہ صحت کے تعاون سے ڈسٹرکٹ ہسپتال کشتواڑ میں خون کے عطیہ کیمپ کا انعقاد کیا۔ ڈپٹی کمشنر اشوک شرما نے اس کیمپ کا افتتاح کیا۔اس کیمپ میں 22 رضاکاروں نے شرکت کی ، جن میں سے 13 نے خون کا عطیہ کیا ، جبکہ 9 رضا کار ہنگامی مقصد کے لئے مختص تھے۔اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر نے لوگوں پر زور دیا کہ وہ رضاکارانہ طور پر خون کا عطیہ کریں کیونکہ یہ انسانیت کی عظیم خدمت ہے اور قیمتی جانوں کو بچانے میں معاون ہے۔ایڈیشنل ڈسٹرکٹ ڈیولپمنٹ کمشنر کشتواڑ شام لال ، میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈسٹرکٹ ہسپتال ڈاکٹر پرویز اقبال وانی ، سکریٹری ریڈ کراس اصغرشیخ ، ڈاکٹرز ، ریڈ کراس سے رضاکاروں اور مقامی افراد نے کیمپ میں شرکت کی۔
 
 

 جی ایم سی ڈوڈہ میں بلڈ ڈونیشن کیمپ کا انعقاد 

 ڈوڈہ // گورنمنٹ میڈیکل کالج ڈوڈہ کے ایسوسی ایٹیڈہسپتال کے بلڈ بینک میں ڈسٹرکٹ ریڈ کراس سوسائٹی ڈوڈہ کے اشتراک سے 7 بٹالین ایس ایس بی کھلینی کے ذریعہ ایک خون عطیہ کیمپ کا انعقاد کیا گیا۔20 سے زائد فوجیوں اور ایس ایس بی کے عہدیداروں نے بلڈ ڈونیشن کیمپ میں لوگوں کی جان بچانے کے نیک مقصد کے لئے خون کا عطیہ کیا۔خون کے عطیہ کرنے پر ایس ایس بی اہلکاروں کے زبردست ردعمل کا طبی برادری نے خیرمقدم کیا۔افسران نے ان لوگوں کی تعریف کی جنہوں نے خون کے عطیہ اور ایک اچھے شہری کی حیثیت سے اپنی ذمہ داری نبھاتے ہوئے بڑے جوش و خروش کا مظاہرہ کیا ہے۔
 
 

محکمہ جل شکتی کے خلاف وارڈ 12 کے کونسلر کا احتجاج

عاصف بٹ
کشتواڑ//محکمہ جل شکتی کے خلاف این ایچ پی سی گیٹ کے باہر وارڈ 12 کے کونسلر و مقامی لوگوں نے زور دار احتجاج کیا۔ کونسلر فردوس میگنو نے باتے کرتے ہوئے کہا کہ فیصل آباد چوک سے فلٹر پلانٹ تک محکمہ نے پایپ لاین بچھانی تھی پہلے اس سڑک پر جے سی بی لگائی جس پر اعتراض کیا گیا اور ان سے گزارش کی کہ مزدورں کو کام پر لگایا جائے جسکے بعد انھوں نے پایپ لاین کا کام شروع کیا اور انھیں بتایا گیا کہ ساتھ ساتھ میں ہی اسے مکمل بھی کیا جاناچاہئے جبکہ پائپوں کو زمین سے نیچے بچھایاجانا چاہئے لیکن تین ماہ گزر جانے کے بعد بھی سڑک کی حالت جو کی تو ہے  جبکہ ابھی تک دو سڑک حادثات رونماہوئے ہیں لیکن باوجود اسکے حکام کوئی اقدام نہیں کررہے ہیں ،کیا محکمہ کسی بڑے حادثے کا منتظر ہے جسکے بعد کوئی کاروائی عمل میں لائی جائے گی ۔ انھوں نے کہا کہ اگر انکے مطالبات پر بر وقت کاروائی نہ کی گئی تو وہ اسکے خلاف قانونی طور کاروائی کرینگے۔
 
 

کشتواڑ میں ڈی ایل آر سی اجلاس میں بینکوں ، لائن ڈیپارٹمنٹس کی کارکردگی کا جائزہ 

کشتواڑ //ڈپٹی کمشنر کشتواڑ نے ڈسٹرکٹ لیول ریویو کمیٹی (ڈی ایل آر سی) کے اجلاس میں مارچ 2021 کو ختم ہونے والی سہ ماہی کے لئے بینکوں اور لائن ڈپارٹمنٹ کی کارکردگی کا جائزہ لیا۔ابتدا میں ، ترجیحی اور غیر ترجیحی شعبوں میں سالانہ کریڈٹ پلان (اے سی پی) اور دیگر انفرادی فائدہ اٹھانے والے اسکیموں پر حاصل ہونے والی کامیابیوں پرمکمل بحث کی گئی۔ کچھ ترجیحی شعبہ طبقات کے سلسلے میں مطلوبہ اہداف کے حصول کے لئے متعلقہ محکموں اور بینکروں نے اپنے خیالات شیئر کیے۔ڈی سی نے بینکوں کے سربراہوں کو ضلع میں سی ڈی تناسب بڑھانے کے لئے ضروری اقدامات کرنے کو کہا۔ انہوں نے کفالت کرنے والی ایجنسیوں سے کہا کہ وہ ضلع میں ایس ایم ای کریڈٹ بڑھانے کے لئے زیادہ سے زیادہ مقدمات کی حمایت کریں اس کے علاوہ کے سی سی کے سب سے زیادہ مقدمات کو تمام بینکوں میں سپانسر کریں۔انہوں نے بینکوں پر زور دیا کہ وہ مختلف سماجی تحفظ کی اسکیموں کے بارے میں عام لوگوں میں شعور پیدا کریں اور اس طرح کی اسکیموں کے تحت زیادہ سے زیادہ مستفید افراد کو شامل کریں۔ڈی سی نے ان سے معاشرے کے مستحق طبقات کے وسیع تر مفاد میں ضلع کے تمام حصوں میں عوام اور بے روزگار نوجوانوں کے درمیان معاشی خواندگی بڑھانے کا مطالبہ کیا۔
 

رام بن کے نجی کاروباریوں میں 22000 ٹراؤٹ فش فنگرلنگس تقسیم 

رام بن //محکمہ فشریز نے ایشیا  کے سب سے بڑے ٹراؤٹ فش فارمنگ پروجیکٹ کوکرناگ سے حاصل کی گئی 22 ہزار سے زائد ٹراؤٹ فش فنگرلنگ کو ضلع رام بن کے نجی کاروباریوں میں تقسیم کیا ہے۔اسسٹنٹ ڈائریکٹر فشریز رام بن فیاض احمد کے مطابق 2020-21 میں ضلع میں 5 نجی ٹراؤٹ یونٹ قائم کیے گئے تھے ، جو مرکزی سرپرستی میں چلنے والی پردھان منتری مٹیسہ پوریڈا یوجنا ، 27.50 لاکھ کی لاگت سے ، جس میں 12.10 روپے شامل ہیں۔ سینٹرل شیئر کے طور پر لاکھ اور بطور فائدہ دہندگان 15.40 لاکھ روپے ، ہر یونٹ کے لئے 5.50 لاکھ روپے دیئے گئے۔بتایا گیا کہ مچھلی کی پیداوار فننگلنگز کو ثقافت کے تالاب یا ریس وے میں جمع کرنے کے ساتھ شروع ہوتی ہے جو ثقافتی نظام کے دوران زیادہ سے زیادہ اور تیز رفتار نشوونما کو یقینی بناتا ہے کہ کم سے کم کاشت وقت میں ذخیرہ شدہ پرجاتیوں کی کٹائی کی اجازت دی جاسکے۔بہتر نتائج کے لئے فش فارمرز کو مچھلی کی انگلیوں کی ایک مناسب تعداد کا ذخیرہ کرنا ہوگا۔ ٹراؤٹ ٹھنڈے پانی کی غیر ملکی مچھلی ہے جس میں ٹھنڈا اور کرسٹل صاف ، اس کی ثقافت کے لئے بہتا ہوا پانی اور پنپنے کے لئے 0 سے 18 ڈگری سیلسیس کے درمیان درجہ حرارت کی ضرورت ہوتی ہے۔پرائیوٹ ریس ویز میں ٹراؤٹ اسٹاکنگ اس ضلع میں نیلے انقلاب کی شروعات کے لئے آبی ذخیرہ اندوزی ہوگی ، کیونکہ ضلع رام بن بالائی علاقوں میں ٹھنڈے پانی کی ماہی گیری کی بہت زیادہ صلاحیت رکھتا ہے ، اس کے علاوہ ، یہ لوگوں کو پائیدار معاش بھی فراہم کرے گا ، جو مچھلی کی کاشتکاری کو اپنایا ہے۔