مزید خبرں

دودو بار تنخواہ لینے کی کوشش 

غلط بیانی کے الزام میں سرکاری ملازم معطل 

راجوری //راجوری میں حکام نے غلط بیان کرنے کے الزام میں ایک سرکاری ملازم کو معطل کردیاہے ۔محکمہ تعلیم کی طرف سے جاری ہوئے ایک حکمنامہ کے مطابق گورنمنٹ ہائراسکینڈری سکول پنہڈ میں بطور سینئر اسسٹنٹ تعینات ایک ملازم جو چیف ایجوکیشن افسر دفتر راجوری میں کام کررہاہے ، متواتر اپنی تنخواہ سی ای او دفتر سے نکالتارہاہے تاہم اس نے تنخواہ کے حوالے سے حکام کو غلط بتایا۔محکمہ کے ایک افسر نے بتایاکہ حال ہی میں اس ملازم نے ڈائریکٹوریٹ سکول ایجوکیشن کے دفتر میں ایک درخواست پیش کی کہ وہ چیف ایجوکیشن افسر دفتر راجوری میںکام کررہاہے جس کی تنخواہ ہائراسکینڈری سکول پنہڈ سے جاری کی جائے جو اسے نہیں ملی ہے جس پر ڈائریکٹوریٹ کی طرف سے ایک سرکولرجاری کیاگیا۔اس معاملے کی تحقیقا ت کے بعد یہ پتہ چلاکہ شکایت کرنے والا ملازم مسلسل اپنی تنخواہ لیتارہاہے ۔اس حوالے سے ضلع ایجوکیشن پلاننگ افسر راجوری کی طرف سے جاری ہوئے حکمنامے کے مطابق یہ بات عیاں ہوئی ہے کہ مذکورہ ملازم اپنی تنخواہ چیف ایجوکیشن افسر دفتر راجوری سے لیتارہاہے جس نے اعلیٰ حکام کو بیوقوف بنانے کی کوشش کی جس پر اسے معطل کیاجاتاہے ۔ساتھ ہی اس ملازم کو چیف ایجوکیشن افسر دفتر راجوری سے ڈیٹیچ کرکے فوری طور پر اپنی اصل جگہ ہائراسکینڈری سکول پنہڈ جوائن ہونے کی ہدایت دی گئی ہے ۔
 

ایس ایس اے اساتذہ کو

۔7ویں تنخواہ کمیشن کو دائرہ میں لانے کی مانگ 

پونچھ//جموں و کشمیر نیشنل پنتھرز پارٹی کے ریاستی سیکریٹری زورآور سنگھ شہباز نے سرو شکشا ابھیان کے تحت تعینات اساتذہ کے مطالبات کی حمایت کرتے ہوئے انہیں ساتویں تنخواہ کمیشن کا فائدہ دینے کی مانگ کی ہے ۔پونچھ میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے شہباز نے کہا کہ یہ اساتذہ کئی طرح کی پریشانیوں سے دوچار ہیںجن کی طرف کوئی بھی توجہ نہیں دی جارہی جو افسوسناک امر ہے ۔انہوں نے اساتذہ کے تمام مطالبات کو جائز ٹھہراتے ہوئے کہاکہ پانچ سال پورے ہونے کے بعدانہیں مستقل ملازمت کے دائرے میں لایاجائے ۔ان کاکہناتھاکہ اساتذہ کی سروس بک بھی بنتی ہے اور اگر انہیں چھٹے تنخواہ کمیشن کا فائدہ ملاہے تو پھر ساتویں تنخواہ کمیشن کا فائہ کیونکر نہیں دیاجارہاہے ۔انہوں نے کہا کہ اساتذہ کے ساتھ سراسر ناانصافی اور دھوکہ دہی ہورہی ہے جس کی وہ مذمت کرتے ہیں ۔ان کاکہناتھاکہ ریاستی حکومت کی یہ ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ اساتذہ کے مطالبات پورے کرے جو کئی کئی برسوں سے ایمانداری سے اپنا کام انجام دے رہے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ اس حوالے سے ریاستی گورنر کو فوری طور پر اقدامات کرنے چاہئیں۔اس موقعہ پر سُرجیت سنگھ کوچھڑ، چندر شیکھر، قاضی محمد رزاق، محمد شریف خان، محمد رفیق خان، محبوب نواز اور عبد الحمیدبھی موجود تھے۔
 
 
طالبہ کوحراساں کرنیکا الزام
نوجوان کیخلاف پولیس کیس درج 
راجوری //پولیس نے دسویں جماعت کی طالبہ کو حراساں کرنے کے الزام میں ایک لڑکے کے خلاف کیس درج کیاہے ۔پولیس کے مطابق لنگر نوشہرہ سے تعلق رکھنے والی طالبہ کے والد نے پولیس کے سامنے شکایت درج کروائی کہ ایک مقامی لڑکا اس کی بیٹی کو حراساں کرتاہے جس سے وہ خوف میں رہتی ہے ۔اس کا سنجیدہ نوٹس لیتے ہوئے پولیس نے ایف آئی آرزیر نمبر 179/2018کا کیس درج کرکے ملزم کی تلاش شروع کردی ہے ۔
 

نکاسی کاکام سست روی کاشکار

کھیورہ راجوری کے مکینوں کا احتجاج 

نیوز ڈیسک
 
راجوری //راجوری کے کھیورہ علاقے کے رہائشیوں نے محکمہ تعمیرات عامہ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے سڑک کنارے نکاسی کاکام بروقت مکمل نہ کرنے کا الزام عائد کیا ۔مقامی لوگ ڈگری کالج کے نزدیک سڑک پر جمع ہوئے اور انہوں نے راجوری سے چوہدری ناڑ جانے والی سڑک کو بند کرکے محکمہ تعمیرات عامہ کے خلاف نعرے بازی کی ۔مظاہرین کاکہناتھاکہ سڑک کی کشادگی کے مقصد سے محکمہ نے ان کے گھروں اوردکانوں کے سامنے سے زمین کی کٹائی کی جس کے بعد پانی کی نکاسی اور دیواروں کا کام شروع کیاگیاتاہم کئی ماہ گزر جانے کے باوجود یہ کام مکمل نہیںہوپایا۔انہوں نے الزام عائد کیاکہ کام بہت سست روی سے کیاجارہاہے جس کے نتیجہ میں ان کے گھروں اور دکانوں کو خطرہ ہے ۔ انہوں نے مانگ کی فوری طور پر کام مکمل کیاجائے ۔ اس دوران احتجاج کو دیکھتے ہوئے ایس ایچ او راجوری طاہر خان موقعہ پر پہنچے اور انہوں نے مظاہرین کو یقین دلاکر احتجاج ختم کروایا۔
 

خواس کوٹرنکہ میں این سی کااجلاس منعقد 

راجوری //کوٹرنکہ خواس کے علاقے گنڈا میں نیشنل کانفرنس کا ایک اجلاس منعقد ہواجس کی صدارت ایڈووکیٹ نسیم لیاقت نے کیا ۔اس موقعہ پر مقامی لوگوں کے مسائل اجاگر کئے گئے اور ان کو درپیش مشکلات کا جائزہ لیاگیا۔مقامی لوگوں نے بتایاکہ خستہ حال سڑکوں کی وجہ سے پریشانی کا سامناہے ۔اجلاس سے خطاب کرتے پوئے نسیم لیاقت نے کہاکہ کوٹرنکہ بدھل میں بہت سارے علاقوں میں آج بھی بنیادی سہولیات کا فقدان پایاجارہاہے جس وجہ سے لوگ پریشان حال ہیں ۔انہوں نے کہاکہ انتظامیہ کو فوری طور پر اقدامات کرکے عوامی مسائل حل کرنے چاہئیں ۔
 

مویشی سمگلنگ کے الزام میں

۔4 افراد گرفتار

رمیش کیسر
 
نوشہرہ//نوشہرہ میں پولیس نے مویشی سمگلنگ کے الزام میں چارافراد کو گرفتار کرلیاہے جبکہ 53مویشیوں کو بازیاب کروانے کا دعویٰ کیاگیاہے ۔ دھرمسال پولیس کو اطلاع موصول ہوئی تھی کہ علاقے سے بڑے پیمانے پر مویشیوں کی سمگلنگ ہورہی ہے جس پر ناکہ لگاکر گاڑیوں کی چیکنگ کی گئی اور اس دوران متھیانی کے مقام سے انسپکٹر کرن چلہوترہ کی قیادت میں کارروائی کرتے ہوئے پولیس نے ترپن مویشی بازیاب کروائے جو اس کے مطابق غیر قانونی طور پر سمگل کئے جارہے تھے ۔اس سلسلے میں پولیس نے محمد قاسم ولد محمد شفیع ساکن پنجنارہ کیری ، طالب حسین ولد عبدل ساکن نارلا ، محمد اقبال ولد محمد شفیع ساکن کھوڑبنی و محمد بشیر ولد جمال دین ساکن کھوڑ بنی خواس بدھل کو گرفتار کرکے ان کے خلاف پولیس تھانہ میں کیس درج کیاہے ۔ ایس پی نوشہرہ ماسٹر پوپسی نے بتایاکہ دھرمسال پولیس نے خصوصی ناکہ لگاکر مویشیوںکی سمگلنگ کی کوشش کو ناکام بنادیا اور ترپن مویشی بازیاب کروائے گئے ۔