مزید خبرں

لوپیڈ ایمپلائز فیڈریشن جموں کا اجلاس

 میڈیکلیم انشورنس اسکیم پر نکتہ چینی، پے کمیشن بقایہ جات کی ادائیگی کا مطالبہ 

نیوزڈیسک 
جموں//لوپیڈ ایمپلائز فیڈریشن صدر عبدالمجید خان نے ملازمین اور پنشنروں کے میڈیکل الائونس میں اضافہ کر نے کا مطالبہ کیا ہے ۔ صوبہ جموں کمیٹی ممبران کی میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مرکزی سرکار کی طرز پر طبی الائونس موجودہ 300روپے سے بڑھا کر 1000روپے ماہوار کیا جانا چاہئے تا کہ ملازمین اور پنشنروں کی طبی ضروریات کسی حد تک پوری ہو سکیں۔ انہوں نے حکومت کی طرف سے اعلان کردہ میڈیکلیم انشورنس اسکیم کی نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ یہ اسکیم مستقل ملازمین کیلئے لازمی کی گئی ہے اور اس کے لئے ہر ملازم کو 8777 روپے جب کہ پنشنروں کو   22,229روپے بطور سالانہ قسط ادا کرنے ہوں گے لیکن کم تنخواہ دار ملازم اور پنشنر اتنا بھاری بھر کم بیمہ رقم ادا کرنے کی پوزیشن میں نہیں ہیں۔ انہوں نے اس اسکیم پر نظر ثانی کئے جانے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ملازموں اور پنشنروں کے لئے یہ بوجھ غیر ضروری ہے اور اسے حقیقت پسندانہ انداز میں دیکھا جانا چاہئے ۔ راجوری کے لوپیڈ لیڈر بشارت حسین نے بھی میٹنگ سے خطاب کیا جب کہ کمیٹی کے مرکزی، صوبائی اور ضلعی و تحصیل سطح کے متعدد لیڈران بھی اس موقعہ پر موجود تھے۔ مقررین نے ملازمین اور پنشنروں کو ساتویں پے کمیشن کے بقایہ جات مرکزی سرکار کے ملازمین کی طرز پر ادا کئے جانے کی مانگ کرتے ہوئے اس کا دائرہ ایس ایس اے اور رمسا جیسی اسکیموں کے تحت لگائے گئے اساتذہ نیز دیگر ان تمام ملازمین تک وسیع کرنے کا پر زور مطالبہ کیا جنہیں ابھی تک کمیشن کے دائرہ میں نہیں لایا گیا ہے ۔ اس کے علاوہ اساتذہ کو لیو ان کیشمنٹ ، دیہاتی گارڈوں کے باقیماندہ مسائل، نمبردار، آنگن واڑی ورکروں ،ہیلپروں، درجہ چہارم ملازمین ، کلرکوں اور دیگر ملازمین کے مسائل حل کرنے کی بھی مانگ کی۔ عبدالمجید خان نے میٹنگ میں موجود فیڈریشن کارکنان سے اپیل کی کہ وہ ملازمین کے تمام شعبہ جات میں اتفاق و اتحاد پیدا کرنے کے لئے کام کریں تا کہ ایک بینر تلے جمع ہو کر مستقل و عارضی ملازمین اور پنشنروں کے حل طلب مسائل کے لئے فیصلہ کن جدو جہد کی جا سکے ۔ 
 
 

’ انتخابات بائیکاٹ کال پر نظر ثانی کریں ‘

حریت کانفرنس سے بھیم سنگھ کی اپیل 

جموں//نیشنل پنتھرس پارٹی کے سرپرست اعلی پروفیسر بھیم سنگھ نے حریت کانفرنس کی قیادت سے وادی کشمیر میں ہونے والے پنچایت اور میونسپل انتخابات کا بائیکاٹ کرنے کے فیصلہ پر پھر سے غور کرنے کی اپیل کی ہے۔پنتھرس سربراہ پروفیسر بھیم سنگھ نے حریت کانفرنس سے کہا کہ اسے سابقہ حکمراں سیاسی جماعتوں کو، جو تقریباًً سات دہائیوں سے ریاست کے لوگوں کو لوٹ رہی ہیں اور پنچایت اور میونسپل انتخابات کا بائیکاٹ کرنے کا نام نہاد اعلان کرکے معصوم کشمیریوں کے ساتھ چالبازی ی کررہی ہیں، بے نقاب کرنا چاہئے ۔انہوں نے حریت کانفرنس کے لیڈروں سمیت جموں وکشمیرکی  ناراض قیادت کو یا ددلایا کہ کونکہ نیشنل کانفرنس، پی ڈی پی، کانگریس اور اب بی جے پی کے خلاف جمہوری طریقہ سے سڑکوں سے سپریم کورٹ تک جہدوجہد کرتا رہا ہوں ۔ اس وجہ سے بھیم سنگھجموں وکشمیر کی تقریباًً تمام جیلوں میںکئی برس غیرقانونی طورپر قید رہا ہوں۔انہوں نے کشمیری لوگوں خاص طورپر نوجوانوں سے اپیل کی کہ وہ ان انتخابات میں عوام مخالف سیاسی جماعتوں کی عدم شمولیت کا فائدہ اٹھائیں۔ انہوں نے کہاکہ یہ جماعتیں پنچایت اور میونسپل انتخابات کا بائیکاٹ کرنے کا اس لئے ڈھول پیٹ رہی ہیں کیونکہ وہ یہ جانتی ہیں کہ نئی نسل اور لوگ انہیں اس انتخابات میں ووٹ نہیں دیں گے۔انہوں نے کہاکہ کامیاب پنچایت اور میونسپل انتخابات سے نئی نسل کے سامنے ایک نئی سیاسی قیادت ابھرکر آئے گی اسی وجہ سے جموںوکشمیر کی اہم سیاسی جماعتیں ہندستانی آئین کے آرٹیکل 35(A)کے بہانے انتخابات کی مخالفت کررہی ہیں۔پنتھرس سپریمو نے کہاکہ جموں وکشمیر کے لوگوں کو آرٹیکل 35(A)کا صحیح طریقہ سے مطالعہ کرنا چاہئے اور یہ بات سمجھنی چاہئے کہ اسے ہندستانی صدر نے 1954میں ایک آرڈی ننس جاری کرکے نافذ کیا تھا نہ کہ ہندستانی پارلیمنٹ نے۔اسے صرف اس لئے لایا گیا تھا تاکہ 1953میں شیخ محمد عبداللہ کو جموں وکشمیرکے وزیراعظم کے عہدہ سے ہٹایا جاسکے۔انہوں نے کشمیری نوجوانوں خاص طورپر جموں وکشمیر کے تمام نوجوانوں سے ایک آواز میں کہاکہ انصاف ہمارا حق ہے اور اسے حاصل کرنے کا اس وقت الیکشن ہی راستہ ہے جس میں شامل ہونے سے انہیں پوری دنیا کی حمایت ملے گی۔
 
 
 

بلدیاتی انتخابات 

ادہم پور میںملازمین کی رینڈمائزیشن 

عظمیٰ نیوز 
ادہم پور //مجوزہ بلدیاتی انتخابات کی تیاریاں زوروں پر ہیں، پولنگ سٹاف کو پہلے مرحلہ کی تربیت دینے کے لئے رینڈمائزیشن کی گئی، اس پروگرام کی صدارت ضلع الیکشن آفیسر رویندر کمار نے کی۔ الیکشن کمیشن آف انڈیا نے پولنگ سٹاف کی رینڈمائزیشن کے لئے ایک خصوصی سافٹ وئیر بنایا ہے ۔ اس سلسلہ میں 68پولنگ سٹیشنوں کی رینڈمائزیشن کی گئی جب کہ ریزرو میں بھی سٹاف کو رکھا گیا ہے ۔ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر گوریندر جیت سنگھ، ڈپٹی الیکشن آفیسر ، سپنا کوتوال آئی اے ایس پروبیشنر، سنتوش سکھدیو، ڈسٹرکٹ انفارمیشن آفسیر انجینئر سجاد بشیر سومبڑیا، چیف ایگزیکٹو آفسیر مینونسپلٹی سنتوش کوتوال، الیکشن نائب تحصیلدار محمد علی مغل بھی اس موقعہ پر موجود تھے۔ 
 
 

 ایمز، نئے میڈیکل وڈگری کالجوں کے معاملات 

گورنر انتظامیہ نے اعلیٰ سطحی کمیٹیاں تشکیل دیں 

جموں //گورنر انتظامیہ نے آج آل انڈیا انسٹی چیوٹس آف میڈیکل سائینسز اونتی پورہ اور وجے پور کے علاوہ ریاست کے پانچ نئے میڈیکل کالجوں کے قیام سے متعلق تمام معاملات کو حل کرنے کیلئے ایک اعلیٰ سطحی کمیٹی کی از سر نو تشکیل کی منظوری دی ہے ۔ جی اے ڈی کی طرف سے جاری کئے گئے ایک حکمنامے کے مطابق کمیٹی کے سربراہ صحت و طبی تعلیم محکمے کے انتظامی سیکرٹری ہوں گے جبکہ کمیٹی کے ممبران میں محکمہ داخلہ ، محکمہ خزانہ ، منصوبہ بندی ، ترقی اور نگرانی محکمے کے علاوہ جنگلات و ماحولیات کے انتظامی سیکرٹری شامل ہوں گے ۔ اس کے علاوہ پاور ڈیولپمنٹ ڈیپارٹمنٹ کے انتظامی سیکرٹری ، محکمہ مال کے انتظامی سیکرٹری ، صوبائی کمشنر کشمیر ، محکمہ تعمیراتِ عامہ کے انتظامی سیکرٹری ، صوبائی کمشنر جموں ، صحت عامہ ، آبپاشی اور فلڈ کنٹرول محکمہ کے انتظامی سیکرٹری ، این ایچ اے آئی جموں کے پروجیکٹ ڈائریکٹر اور این ایچ اے آئی سرینگر کے پروجیکٹ ڈائریکٹر اس کمیٹی کے ممبران ہوں گے ۔ کمیٹی کے ممبر سیکرٹری صحت و طبی تعلیم کے جوائینٹ ڈائریکٹر ( پی اینڈ ایس ) ہوں گے ۔ دریں اثنا جی اے ڈی کی طرف سے جاری کئے گئے ایک  دوسرے حکمنامے کے مطابق کمیٹی کی قیادت محکمہ خزانہ کے انتظامی سیکرٹری کریں گے جبکہ پلاننگ، ڈیولپمنٹ اور مونیٹرنگ محکمہ کے نتظامی سیکرٹری، اعلیٰ تعلیم کے انتظامی سیکرٹری اور سکولی تعلیم کے انتظامی سیکرٹری اس کے ممبران ہوں گے۔کمیٹی منظور شدہ کالجوں کو مرحلہ وار طریقے پر حتمی شکل دے گی اور ان کی تعمیر کے سلسلے میں نشاندہی شدہ مقامات کا قواعد و ضوابط کے تحت معائنہ کرے گی۔کمیٹی اپنی رپورٹ دو ماہ کے اند ر محکمہ اعلیٰ تعلیم کو پیش کرے گی۔یہاں یہ بات قابلِ ذکر ہے کہ ریاستی انتظامی کونسل نے محکمہ اعلیٰ تعلیم کو پہلے ہی40 نئے ڈگری کالجوں کو معرض وجود میں لانے کی ہدایت دی ہے۔
 

الیکٹرانک میڈیا کیلئے اشتہاری پالیسی 

رہنما خطوط کو تشکیل دینے کے سلسلے میں کمیٹی کی میٹنگ منعقد 

سرینگر //باظم اطلاعات و تعلقات عامہ طارق احمد زرگر کی صدارت میں آج یہاں الیکٹرنک میڈیا کیلئے اشتہارات کی شرح اور ڈرافٹ پالیسی گائیڈ لائینس کو حتمی شکل دینے کے سلسلے میں تشکیل دی گئی کمیٹی کی میٹنگ منعقد ہوئی ۔ یہ رہنما خطوط تیار ہونے کے بعد حکومت کو منظوری کیلئے پیش کئے جائیں گے ۔ میٹنگ میں جوائینٹ ڈائریکٹر انفارمیشن ساجد نقاش یحیٰ ، ڈپٹی ڈائریکٹر انفارمیشن پی آر جموں اتل گپتا ، ڈپٹی ڈائریکٹر انفارمیشن اے وی راکیش دوبے ، پروگرام ایگزیکٹو دور درشن این آر دامور ، پروگرام ایگزیکٹو ریڈیو کشمیر سرینگر طلحہ جہانگیر رحمانی ، اسسٹنٹ ڈائریکٹر پروگرامز ڈی ڈی کے سرینگر چندرو دودرجیا، آئی ایم ایم سی جموں کے نمائیندے انشو ماتھر ، انفارمیشن افسر اے وی مزمل زماں  اور محکمہ اطلاعات کے دیگر افسران موجود تھے ۔ میٹنگ میں بتایا گیا کہ ڈی آئی پی آر الیکٹرانک میڈیا کو سرکاری اشتہارات اور سپانسرڈ پروگراموں کے اجراء کیلئے نوڈل ایجنسی کے طور پر کام کرے گا ۔ میٹنگ میں بتایا گیا کہ پرائیویٹ کیبل اور سیٹ لائیٹ ٹی وی چینلوں کو ایم پینل منٹ کرنے کا بنیادی مقصد اشتہارات کو بڑے پیمانے پر تشہیر دینا ہے ۔ میٹنگ میں ڈرافٹ پالیسی گائیڈ لائینز اور الیکٹرانک میڈیا کیلئے ریٹ سٹریکچر پر سیر حاصل بحث ہوئی جس میں ممبران نے اپنی آراء پیش کی ۔ میٹنگ میں فیصلہ لیا گیا کہ کمیٹی کے ممبران کی صلاح اور سفارشات کی بنیاد پر حتمی سفارشات حکومت کے انتظامی محکمے کو منظوری کیلئے پیش کی جائیں گی ۔ 
 
 

جیت لال گپتا ، وجے دھر گورنر سے ملاقی

سرینگر//پسماندہ طبقوں کے کمیشن کے چئیر مین جیت لال گپتا اور وجے دھر نے آج یہاں راج بھون میں گورنر ستیہ پال ملک کے ساتھ ملاقات کر کے انہیں ریاست کا گورنر مقرر کئے جانے پر مبارکباد دی ۔ جیت لال گپتا نے کمیشن کی مجموعی کارکردگی اور ریاست میں پسماندہ طبقوں سے تعلق رکھنے والے افراد کی فلاح و بہبود کیلئے اٹھائے جا رہے اقدامات کے بارے میں تفصیلی جانکاری دی ۔ انہوں نے پسماندہ طبقوں کو درپیش مسائل کے بارے میں گورنر کو آگاہ کیا ۔ گورنر نے سماج کے پسماندہ اور پچھڑے طبقوں سے تعلق رکھنے والے لوگوں کی ترقی یقینی بنانے پر زور دیتے ہوئے اس کیلئے کوششیں جاری رکھنے کی تلقین کی ۔ اس دوران شری امر ناتھ جی شرائین بورڈ کے ممبر وجے دھر نے آج یہاں راج بھون میں گورنر ستیہ پال ملک کے ساتھ ملاقات کی ۔ گورنر اور وجے دھر نے آئندہ امر ناتھ جی یاترا کے دوران یاتریوں کو مزید سہولیات فراہم کرنے اور یاترا کو آرام دہ بنانے کے سلسلے میں اُٹھائے جانے والے اقدامات پر تبادلہ خیال کیا۔وجے دھر نے یاترا میں مزید سہولیات فراہم کرنے کے سلسلے میں اپنی آراء پیش کی۔ گورنر اور وجے دھر نے نوجوانوں کو کھیل کود سے متعلق نئی سہولیات فراہم کرنے کی اہمیت کو بھی زیر بحث لایا۔
 

چائلڈ پروٹیکشن پرسانبہ میں ورکشاپ 

عظمیٰ نیوز 
سانبہ //جونائل جسٹس ایکٹ کی عمل آوری کے لئے چائلڈ پروٹیکشن پر ایک ورکشاپ کا اہتمام کیا گیا جس میں 100گورنمنٹ اور سول سوسائٹی ممبران نے شمولیت کی جس کے لئے یورپین یونین نے فنڈگ کی تھی۔ مشن ڈائریکٹر جی اے صوفی اس موقعہ پر مہمان خصوصی جب کہ ایس ایس پی سانبہ ڈاکٹر کوشل کمار نے پروگرام کی صدارت کی۔ اے ڈی ڈی سی سانبہ پنکج مگوترہ، منصف شبنم شیخ مہمانان ذی وقار کے طور پر موجود تھے۔ سلیکشن کمیٹی جے جے ایکٹ راجیور کھجوریہ، چائلڈ پروٹیکشن سپیشلسٹ یونیسف ہلال بٹ اور دیگران نے بھی اس تقریب میں شرکت کی۔ مقررین نے جہا ں آئی سی پی ایس اور جے جے ایکٹ کے متعلق مثبت رائے عامہ قائم کئے جانے کی ضرورت پر زور دیا وہیں منصف شبنم شیخ نے عدلیہ کی طرف سے جونائل جسٹس بورڈ کے قیام کے لئے اٹھائے جا رہے اقدامات اور بچوں کی قانونی چارہ جوئی پر روشنی ڈالی ۔
 
 

ریہڑی پھڑی یونین ادہم پور کی صفائی مہم

عظمیٰ نیوز
ادہم پور //میونسپل کونسل ادہم پور اور ریہڑی پھڑی یونین ادہم پور کی جانب سے آدرش کالونی میں صفائی مہم کا اہتمام کیا گیا۔ ضلع ترقیاتی کمشنر ادہم پور رویندر کمار نے اس مہم میں حصہ لے کر صفائی ستھرائی کی اہمیت پر روشنی ڈالی اور لوگوں کو اپنے آس پاس صفائی قائم رکھنے کی ترغیب دی۔ انہوں نے ریہڑی پھڑی یونین کی کائوشوں کو سراہتے ہوئے انہیں اس کارخیر کو ہاتھ میں لینے کیلئے مبارک باد پیش کی۔ انہوں نے دیگر تنظیموں اور یونینوں کو بھی ریہڑی پھڑی والوں کی طرف سے دی گئی ترغیب پر عمل پیرا ہونے کئی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ ہم سب مل جل کر ہی سوچھ بھارت کے سپنے کو پورا کر سکتے ہیں جس کے لئے وزیر اعظم نریندر مودی کی طرف سے متعدد پروگرام ترتیب دئیے گئے ہیں۔ اس موقعہ پر اے ڈی ڈی سی گوریندر جیت سنگھ، آئی اے ایس پروبیشنر سنتوش سکھدیو، اے سی ڈیولپمنٹ نور عالم اے سی آر سوہنو پرگا۔ تحصیلدار وید پرکاش، ودیگران موجود تھے۔