مزید خبرں

ناگم بڈگام میں محکمہ صحت کی ملازمہ کی خودکشی

ارشاداحمد
 
بڈگام//ناگم بڈگام میں محکمہ صحت میں تعینات ایک خاتون نے خودکشی کرکے اپنی زندگی کاخاتمہ کیا۔معلوم ہوا ہے کہ سومواراورمنگلوار کی درمیانی شب کوبڈگام کے ناگم گائوں میں ایک40 برس کی خاتون ،جو محکمہ صحت میں ملازم تھی،نے اپنے گھرمیں کوئی زہریلی شئے کھاکر خودکشی کی۔پولیس نے اس واقعہ کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ اگرچہ خاتون کو فوری طور گھروالوں نے اسپتال لیجایا لیکن وہ راستے میں ہی دم توڑ بیٹھی۔پولیس نے معاملے کو درج کرکے تحقیقات شروع کی ہے۔
 

کپوارہ کے نوجوان کی لاش چارروزبعد جہلم سے برآمد

سرینگر//دریائے جہلم میں  چھلانگ لگاکر زندگی کا خاتمہ کرنے والے کپوارہ کے نوجوان کی لاش  چاردنوں بعد برآمد کی گئی۔ کے این ایس کے مطابق 25جون کی شام17سالہ ثاقب احمد آہنگر ولد عبدالکلام ساکن کپوارہ نے نورباغ سیمنٹ کدل قمرواری سے جہلم میں چھلانگ ماری اوراس سے قبل ایک مختصر ویڈیو بھی بنایا جس میں وہ اپنے والدین سے اس حرکت پر معافی مانگ رہا ہے۔ مذکورہ نوجوان کی لاش کو تلاش کرنے کیلئے کوششیں جاری تھیں اور منگل کو دریا سے اُس کی لاش برآمد کی گئی۔ قانونی اور طبی لوازمات مکمل کرنے کے بعد پولیس نے لاش کو لواحقین کے سپرد کیا۔ 
 
 

آرمڈپولیس کے 171ہیڈکانسٹیبل ترقیاب

 سرینگر//جموں کشمیر مسلح پولیس کے ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل سیدجاویدمجتبیٰ گیلانی نے171ہیڈ کانسٹیبلوں کی اسسٹنٹ سب انسپکٹروں کے طور ترقی کو منظوری دیدی ہے۔مذکورہ ہیڈ کانسٹیبلوں کی اسسٹنٹ سب انسپکٹروں کے طور ترقی کے احکامات محکمہ جاتی ترقیاتی کمیٹی کی طرف سے منظوری کے بعد جاری کئے گئے ۔ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل پولیس آرمڈ نے نئے ترقی پانے والے اسسٹنٹ سب انسپکٹروں کو مبارکباد دیتے ہوئے انہیں مزید لگن اور تندہی سے اپنے فرائض انجام دینے کی تلقین کی۔
 
 

تیلسر چرارشریف سڑک کھنڈرات میں تبدیل

سرینگر// چرارشریف سے محض تین کلو میٹر دور تیلسرنامی گائوں اننت ناگ، شوپیان، کولگام اور پلوامہ جیسے چار اضلاع کو مختصر سڑک رابطہ کے ذریعے جوڑتا ہے ۔یہ چرارشریف سے ہوتے ہوئے سرینگر ،بڈگام اور بارہمولہ کے ساتھ ملا دیتا ہے لیکن 2014 سے یہ اہم روڈ چند محکموں کے درمیان تال میل نہ ہونے کی وجہ سے ناقابل استعمال ہوکر بیکار پڑا ہے۔کئی بار عام لوگوں نے چندہ جمع کرکے اس سڑک کی مرمت کی اورحکام نے یقین دہانی کی کہ تیلسر روڈ کی مرمت ہوگی ۔ تیلسر اور ڈھلون سے تعلق رکھنے والی دو مساجد کے زعماء کا کہنا ہے کہ صوبائی کمشنر کشمیر کے دفتر سے لیکر مشیر بصیر خان کے دفترمیں تیلسر چرارشریف سڑک کی خستہ حالی سے متعلق فائلیں موجود پڑی ہوئی ہیں۔دریں اثناء شیخ العالم فلاح وبہبود کمیٹی اور علمدار فروٹ ایسوسی ایشن کے زعمائوں نے چیف سیکریٹری ،صوبائی کمشنر اوربصیر خان سے اپیل کی ہے کہ اس سڑک کی مرمت سے متعلق کئے گئے وعدوں کو پورا کریں۔
 

 اسلام امن و سلامتی ،مذہبی رواداری اور ہم آہنگی کا مذہب 

مُتحدہ مجلس علماء کے وفد کی شرومنی اکالی دل کے اراکین سے ملاقات 

سرینگر//متحدہ مجلس علماء نے میڈیا کے کچھ حصوں میں ان دعوئوں کو مسترد کیا ہے کہ دو مقامی سکھ لڑکیوں کو زبردستی شادی کے لئے اسلام قبول کرنے پر مجبور کیا گیا ہے۔اس معاملے کی حساسیت کو مدنظر رکھتے ہوئے مجلس کے سربراہ میرواعظ محمد عمر فاروق کی ہدایت پر سینئر رہنما آغا سید حسن کی سربراہی میں مولانا خورشید احمد قانونگو ، مفتی غلام رسول سامون اور مولانا ایم ایس رحمن شمس اور دیگر کئی ارکان نے مقامی سکھ برادری کے ممبروں کے علاوہ شرومنی اکالی دل کے ممبروں سے بھی ملاقات کی تاکہ اس مسئلے کی اصل حقیقت سے واقفیت حاصل کی جاسکے جو مقامی سکھ برادری کیلئے فکر و پریشانی کا باعث بنا ہوا تھا تاکہ اس مسئلہ کا باہمی افہام و تفہیم اور گفت وشنید کے ذریعے پر امن حل نکالا جاسکے۔مجلس علما نے یہ بات واضح کی کہ دین اسلام امن و سلامتی ،محبت ،مذہبی رواداری اور ہم آہنگی کا مذہب ہے اس میں عقائد اور مذہب کے معاملے میںجبرو قہر اور زور زبردستی کی قطعی کوئی گنجائش نہیں ہے بلکہ ہر عاقل ، بالغ، مرد خاتون کو اس نے آزادی مذہب کا اختیار دے رکھا ہے تاہم اگر کوئی بھی فرد بخوشی دلی رضامندی کے ساتھ جبر و قہر کے بغیر اسلام قبول کرتا ہے تو وہ اسکی اپنی مرضی ہے ۔مجلس علما کے وفد نے سکھ  برادری کے وفد کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے معاملات باہمی آپسی برادری کے ماحول میں خوشگوار طریقے سے حل ہوسکتے ہیں۔ تاہم مجلس نے مزید واضح کیا کہ ہمیں اس طرح کے معاملات میں حد درجہ محتاط رہنے کی ضرورت ہے کیونکہ کچھ بیرونی عناصر جان بوجھ کر کشمیر میں موجود صدیوں پرانی مذہبی رواداری اور ہم آہنگی کی فضا کو خراب کرنا چاہتے ہیں تاکہ یہاں بسنے  والے باشندوں کے درمیان  مذہبی منافرت  پیدا کرکے  پھوٹ  ڈالی جائے جس کی ان عناصرکو ہر گز اجازت نہیں دی جا سکتی۔مجلس نے یہ بات زور دیکر کہی ’’ ہم کشمیر کی سکھ برادری کو یقین دلاتے ہیں کہ ہم آپ کے دکھ سکھ میں برابر شامل ہیں اور اسلامی تعلیمات کے مطابق یہاں کی اکثریت ، اقلیت کی عزت و آبرو کو تحفظ فراہم کرنے کے لئے عہد بند ہیں‘‘ ۔سکھ برادری کے مقامی افراد نے مجلس علما کے اس معاملے میں بھر پور تعاون اور یقین دہانیوں کیلئے شکریہ ادا کیا۔
 
 
 

کپوارہ میں کئی گاڑیوں کے روٹ پرمٹ منسوخ 

سرینگر//شمالی ضلع کپوارہ میں محکمہ ٹرانسپورٹ نے چیکنگ کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے درجنوں گاڑیوں کے روٹ پرمٹ منسوخ کئے ۔ ٹرانسپورٹ محکمہ کی سربراہی انسپکٹر عبدالحمید اور انسپکٹر خورشید احمد کررہے تھے۔انہوں نے کہا کہ چیکنگ کے دوران مختلف روٹوں پر تقریباً سات روٹ پرمٹ موقع پر ہی منسوخ کئے گئے اور تقریباً 13 گاڑیوں کے کاغذات بند کئے گئے۔ اس دوران ڈرائیوروں سے تاکید کی گئی کہ وہ سرکار کی جناب سے مقرر کردہ کرایہ ہی سواریوں سے وصول کریں اور گاڑیوں میں سماجی دوری پر من وعن کریں بصورت دیگر خلاف ورزی کرنے پر قانونی کارروائی کی جائے گی ۔ 
 
 

جرائم اور تدارک

پولیس لائنز بانڈی پورہ میں جائزہ میٹنگ

عازم جان 
بانڈی پورہ//ضلع پولیس لائنز بانڈی پورہ میں جرائم اور تدارک کے سلسلے میں ایک جائزہ میٹنگ ایس ایس پی بانڈی محمد زاہد ملک منعقد ہوئی جس میں ایڈیشنل ایس پی بانڈی پورہ عاشق حسین ٹاک ،ڈی ایس پی ہیڈکواٹر ڈاکٹر محمد ادریس ،ڈی ایس پی ڈی اے آر اشفاق عالم ،سی پی او بانڈی پورہ عبدلمجید ،ایس ڈی پی اوسمبل اور گریز کے تمام تھانوں کے ایس ایچ او اور چوکی افسران نے شرکت کی ۔میٹنگ میں ایف آئی آر جو 2020اور2021میںدرج ہوئے ،کاجائزہ لیا گیا ۔ علاوہ ازیں گھناونے جرائم ،منشیات اور سیکورٹی صورتحال پر بھی تبادلہ خیال ہوا۔ایس ایس پی محمد زاہد نے افسران کو ہدایت دی کہ تمام نوعیت کے کیسوںکی نگرانی کرکے فوری کارروائی کریں ۔انہوں نے کووڈ 19کے متعلق ایس او پی گائیڈ لائن پر بھی لگن کے ساتھ عمل کرائیں ۔
 

ہائی ڈینسٹی پلانٹیشن اسکیم

زمینی سطح پر اقدامات کرنے کی ضرورت:ڈائریکٹر جنرل ہارٹی کلچر 

 سرینگر//ڈائریکٹر جنرل ہاٹی کلچر نے ہائی ڈینسٹی پلانٹیشن اسکیم کو زمینی سطح پر عملانے کی خاطر زمینی سطح پر اقدامات کرنے پر زور دیا۔ڈائریکٹر جنرل ہاٹی کلچر اعجاز احمد بٹ کی سربراہی میں سرینگر میں ایک اعلیٰ سطحی میٹنگ منعقد ہوئی جس دوران ہائی ڈینسٹی پلانٹیشن اسکیم کو زمینی سطح پر عملانے کی خاطر اقدامات کرنے پر زور دیا گیا۔ ڈائریکٹر جنرل نے میٹنگ کے دوران افسران پر زور دیا کہ وقت مقررہ کے اندرا ندر اس اسکیم کو زمینی سطح پر عملانے کی ضرورت ہے۔ انہوںنے کہاکہ اعلیٰ معیار کے پودوں کو گائوں گائوں پہنچانے کی خاطر افسران فوری طورپر اقدامات کریں۔ انہوںنے کہاکہ ہاٹی کلچر محکمہ کی جانب سے لوگوں کو سہولیات فراہم کرنے کی خاطر مختلف اسکیموں کو منظر عام پر لایا گیا ہے اور اس سے استفادہ حاصل کرنے کی خاطر آفیسران باغ مالکان اور مختلف طبقہ ہائے فکر سے وابستہ افراد کے ساتھ قریبی تال میل بنائے رکھیں۔ انہوںنے کہا کہ اس اسکیم کا مقصد کسانوں اور باغ مالکان کی پروڈکشن کو دوگنا کرنا ہے تاکہ اْنہیں فوائد مل سکیں۔ ڈائریکٹر نے اس موقع پر بتایا کہ محکمہ کسانوں اور باغ مالکان کو راحت پہنچانے کی خاطر کام کر رہا ہے اور آنے والے دنوں کے دوران بھی مزید کئی اسکیموں کو منظر عام پر لایا جارہا ہے۔
 

سنٹرل یونیورسٹی کے شعبہ ریاضی کا پروفیسر عظیم کو خراج عقیدت

گاندربل //سنٹرل یونیورسٹی کشمیر کے شعبہ ریاضی نے ممتاز ریاضی دان پروفیسر عزیز العظیم کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لئے ایک تعزیتی اجلاس منعقد کیا۔اجلاس کی صدارت شعبہ ریاضیات کے سربراہ پروفیسر ولی محمد شاہ نے کی۔ شرکاء نے بطور محبوب استاد اور عالمی معیار کے ریاضی دان پروفیسر عزیز کے تعاون کو سراہا۔ پروفیسر شاہ نے بورڈ آف اسٹڈیز کے ممبر کی حیثیت سے سنٹرل یونیورسٹی کے ریاضی  محکمہ میں پروفیسر عزیز کی شراکت پر بھی روشنی ڈالی اور کہا کہ’ ہم نہ صرف ایک نامور ریاضی دان بلکہ ایک بہت اچھے انسان بھی کھو چکے ہیں ‘۔تعزیتی اجلاس میں مرحوم کے ایصال ثواب کیلئے دعا کی گئی۔
 

 قیمتوں میں اضافہ اوربے روزگاری پریشان کن:میر

ڈورو میں پارٹی اجلاس،موجودہ صورتحال پر تبادلہ خیال

سرینگر//جموں و کشمیر پردیش کانگریس کمیٹی نے منگل کو پارٹی اجلاس میں موجودہ صورتحال پر تبادلہ خیال کرنے کے علاوہ ترقیاتی امور اور پٹرول ، ڈیزل اور دیگر ضروری اشیا میں غیرمعمولی قیمتوں پر تبادلہ خیال کیا۔اجلاس میں پارٹی کے ممتاز کارکنوں ، بلاک صدور ، ڈی ڈی سی ممبران ، بی ڈی سی چیئرمین ، سرپنچوں اور پنچوں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے جے کے پی سی سی صدر غلام احمد میر نے ڈورو اور دیگر مقامات میں لوگوں سے متعلق ترقیاتی اور دیگر امور کے بارے میں فیڈ بیک حاصل کیا اور شدید تشویش کا اظہار کیا۔انہوں نے کہا کہ عام لوگوں کو درپیش مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔انہوں نے حکومت پر زور دیا کہ وہ زیر تعمیر منصوبوں کو مکمل کرنے کے لئے کام کو تیز کرے ۔انہوں نے حکومت جموں و کشمیر میں بڑھتی ہوئی بے روزگاری پر تشویش کا اظہار کرنے کے علاوہ ترقیاتی ضروریات کو حل کرنے میں حکومت کو ناکامی کا ذمہ دار قرار دیا۔میرنے پٹرول ، ڈیزل اور دیگر ضروری اشیا میں غیرمعمولی قیمتوں میں اضافے کا بھی مرکز کو ذمہ دار ٹھہرایا ۔انہوں نے کہا اور پورے ہندوستان میں قیمتوں میں غیرمعمولی اضافے کی وجہ سے صورتحال انتہائی پریشان کن ہے۔