مزید خبرں

کھنیتر بیلہ پنچائت کی عوام کا وفد ضلع ترقیاتی کمشنرسے ملاقی

حسین محتشم 
پونچھ//کھنتر بیلہ پنچائت کی عوام کا ایک وفد محمد آزاد چوہان کی زیر قیادت ضلع ترقیاتی کمشنرپونچھ اندرجیت سے ان کے دفتر میں ملاقی ہوئے جہاں انہوں نے اپنی پنچایت کی عوام کے مشکلات اور مطالبات رکھتے ہوئے کہا کہ پنچائت بیلہ چوہانہ کی سڑک ٹانڈا سے جابہ موری گلی کالا بن کی تعمیر 2001میں شروع ہوئی تھی جوآج تک نہ تو کسی پلان میں ہے نہ تو محکمہ پی ڈبلیو ڈی نے کسی دوسرے محکمہ کو اسے پلان میں رکھنے دیا گیاہے۔ انہوں نے کہا اس سڑک کے فنڈز واگزار ہوتے رہیے ہیں لیکن زمینی سطح پر کوئی کام موجود نہ ہے۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ ٹانڈاتاکالا بن سڑک کے ٹینڈر ڈال کر سڑک تعمیر کی جائے۔ انہوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ سڑک کی تعمیر و فنڈز میں ہیرا پھیری کرنے والوں کیخلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے ۔انھوں نے انتباہ دیا کہ اگرکارروائی نہیں کی گئی تو کھنیتر بیلہ چوہانہ کی پنچائت کی عوام سڑکوں پر اتر کر احتجاج کرے گی جس کی ذمہ داری انتظامیہ پر عائد ہوگی۔ انہوں نے کہا ہم نے ایم ایل اے ،بی ڈی سی ،ڈی ڈی سی سبھی سے اپیل کر چکے ہیں لیکن کسی نے ان کی طرف توجہ نہیں دی ۔ضلع ترقیاتی کمشنر نے تمام افراد کی بات بغور سن کا یقین دلایا کہ ان کو فوری حل کریں گے۔اس موقعہ پرفوجی منیر حسین ،فوجی محمد یعقوب ،ڈاکٹر محمد شکیل،محمد قاسم کٹھانہ،محمد یونس،محمد پرویز ،محمد نیاز چوہان ،زبیر احمد کٹھانا،فرزانہ کوثر،پروین اختر ،خالدہ بی،جمیلہ بی اور پنچایت کے مختلف سکولوں میں زیرتعلیم بچے بھی موجود تھے۔
 
 
 
 

طلباء کا کالج منتظمین کیخلاف احتجاج 

رمیش کیسر 
نوشہرہ //گور نمنٹ ڈگری کالج نوشہرہ میں داخلہ نہ ملنے پر طلباء نے کالج منتظمین کیخلاف زبردست احتجاج کیا ۔بچوں نے سب ڈویژن میں سڑک بند کر کے کالج انتظامیہ کیخلاف نعرے بازی کی ۔احتجاج کررہے بچوں نے بتایا کہ ڈگری کالج میں داخلے کے سلسلہ میں آن لائن درخواستیں طلب کی گئی تھی جس کے بعد کاغذات بھی جمع کروائے گئے تھے تاہم داخلہ لینے کیلئے جب وہ کالج آئے تو منتظمین نے بتایا کہ صرف ان طلباء کو داخلہ دیا جائے گا جن کے نمبرا ت 240یا اس سے زائد ہیں جس کے بعد طلباء نے کالج کے گیٹ کے باہر سیری نوشہرہ سڑک کو بند کر رکے انتظامیہ کیخلاف احتجاج شروع کردیا ۔اس دوران کالج منتظمین نے احتجاج کررہے بچوں کو یقین دلایا کہ باقی ماندہ بچوں کے داخلے کے سلسلہ میں محکمہ اعلیٰ تعلیم کو تحریری طورپر مکتوب روانہ کیا جائے گا ۔سٹاف ممبران کی یقین دہانی کے بعد طلباء نے احتجاج ختم کردیا ۔