مزاحمتی خیمہ کا ترال اور بڈگام میں مارے گئے جنگجوئوں کو خراج عقیدت

 سرینگرحریت (گ) ، پیپلز پولٹیکل فرنٹ ، پیروان ولایت، پیپلز لیگ، مسلم لیگ، مسلم خواتین مرکز نے بڈگام معرکہ میں جاں بحق2جنگجوئوں کوعقیدت بھرا خراج پیش کیا ہے۔ حریت (گ) چیئرمین سید علی گیلانے نے کہاکہ  ’’یہ سرفروش قوم کو فوجی قبضے سے آزادی کے لئے اپنی معصوم زندگیاں قربان کررہے ہیں اور ہم پر یہ بھاری ذمہ داری عائد کرتے ہیں کہ ہم ان کے اس مقدس مشن کوپایہ تکمیل تک پہنچانے کے لیے اپنی جدوجہد کو یکسوئی کے ساتھ جاری رکھیں‘۔ انہوں نے کہا کہ بھارت اپنے آپ کو بڑا جمہوری ملک ہونے کا دعوے دار ہے ، لیکن اس نے ایک مظلوم قوم کے تمام جمہوری حقوق کو اپنی اندھی فوجی طاقت کی بنیاد پر سلب کررکھے ہیں جس وجہ سے ہمیں عظیم اور بے مثال قربانیاں دینا پڑرہی ہیں اور  طاقت کی بنیاد پر ہمیں پشت بہ دیوار کرنا چاہتا ہے ۔ادھر پیپلز پولیٹیکل فرنٹ چیئرمین محمدمصدق عادل نے ترال پلوامہ اورآریزال بڑگام میں فورسز کے ساتھ ہوئی خون ریز معرکہ آرائیوں کے دوران مارئے گئے شوکت احمد خان،عثمان حیدر اور مختار احمد خان اور اسکے دوسرے ساتھی کو خراج عقیدت ادا کیا ہے۔ مصدق عادل نے کہاکہ قربانیاں ہمارے لئے سرمایہ حیات کی حیثیت رکھتے ہیں جنہیں تاریخ اور اپنی مظلوم قوم کھبی نہیں بھول سکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایک باوقار ، مہذب اور حساس قوم کی یہ نشانی ہئے کہ وہ قربانی دینے والوں کے مشن کو استقامت کے ساتھ آبیاری کرتی ہے اسلئے یہ ہماری بھی اخلاقی اور ایمانی ذمہ داری بنتی ہے کہ ان قربانیوں کی حفاظت کریں۔اس دوران پیروان کے سیکریٹری جنرل آغا سید یعسوب اور پیپلز لیگ کے سینئر وائس چیئرمین محمد یاسین عطائی ، مسلم خواتین مرکز کی چیئرپرسن یاسمین راجہ نے ترال اور آری زال بڈگام میں جاں بحق عسکریت پسندوں کو خراج عقید پیش کرتے ہوئے کہاکہ بھارت کشمیر میں بے دریغ قتل و غارتگری کرکے کشمیری نوجوانوں کی نسل کشی کررہا ہے اور اقوام عالم مجرمانہ خاموشی اختیار کئے ہوئے تماشائی بن گیا ہے۔دریں اثناء مسلم لیگ کا ایک وفد سیکریٹری جنرل محمد رفیق گنائی کی قیادت میں براسو آرِزال بڈگام گیا اورمختار احمد خان کی نماز جنازہ میں شرکت کی۔نماز جنازہ کی پیشوائی محمد رفیق گنائی نے کی نیز منظور احمد للہاری پر مشتمل ایک اور وفد نے درنگہ بل پانپور جا کر محمد امین میر کی نماز جنازہ میں شرکت کی۔ 
 

عسکریت پسند سرکٹوانے کو ترجیح دے رہے ہیں: جہاد کونسل 

مظفر آباد //متحدہ جہاد کونسل نے ترال اور بڈگام میں معرکہ آرائیوں کے دوران مارے گئے جنگجوئوں کو خراج عقیدت ادا کیا ہے۔ جہاد کونسل کے ترجمان سید صداقت حسین نے پریس کے نام جاری بیان میں کہا ہے کہ کشمیر کے عسکریت پسندقلیل اور کم و سائل ہونے کے باوجود دشمن کے ساتھ ہاتھ ملانے کے بجائے سر کٹوانے کو تر جیح  دے رہے ہیں ۔سید صداقت حسین نے ترال اور بڈگام کے خون ریز معرکوں میں جانوں کی قربانی دینے والے عسکریت پسندوں کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ یہ کشمیری قوم کے محسن ہیں اور یہ ان کی قربانیاں ہی ہیں جو پوری دنیا میں دیکھی جارہی ہیں۔ ترجمان نے کہاکہ ’جدید سازو سامان سے لیس بھارتی فوجی عملاََ نفسیاتی مریض بن چکے ہیں اور عام شہریوں پر ان کے غصے اور ماردھاڑ کے جنون سے یہ مرض تشخیص کرنے میں زیادہ دقت نہیں ہورہی‘‘۔ صداقت حسین نے کہاکہ ’’ جنگجو سربکف نے یہ ثابت کیا کہ وہ آزادی اور اسلام کی سربلندی کیلئے ،آ خری سانس تک مزاحمت جاری رکھیں گے،اس جدوجہدنے ثابت کیا کہ جاں بحق ہونے والے عسکریت پسندوں کے خون کے ہر قطرے سے نئے جنگجو جنم لیتے ہیں،اب خود بھارتی عسکری کمانڈران اس حقیقت کا برملا اظہار بھی کررہے ہیں ‘‘۔ترجمان نے کہاکہ ’’بھارتی حکمرانوں نے نوشتہ دیوار پر لکھا فیصلہ تو پڑھا ہے لیکن وہ اس فیصلے کو تاخیری حربوں اور کشمیری عوام پر ظلم و تشدد کے ناکام نسخوں سے تبدیل کرنے کا خواب دیکھ رہے ہیں ،لیکن تا ریخ گواہ ہے کہ جتنی تاخیر وہ کریںگے اتنا ہی وہ نقصان میں رہیں گے، افغان جنگ میں ریشیا کے تاخیری حربوں کے نتائج سامنے ہیں‘‘۔ترجمان نے مارے گئے جنگجوئوں کے بلند درجات اور لواحقین کیلئے صبر جمیل کی دعا بھی کی۔
 

قربانیاں رائیگاں نہیں ہونگی: لشکر طیبہ 

سرینگر// لشکر طیبہ چیف جموں محمودشاہ نے کہا ہے کہ فوج کے ساتھ معرکہ آرائیوں میں مارے جانے والے جنگجوئوں کے قربانیاں رائیگاں نہیں ہونگی۔ لشکر طیبہ کے ترجمان ڈاکٹر عبداللہ غزنوی کی طرف سے بھیجے گئے ایک بیان میں محمود شاہ نے جیش محمد کے مولانامسعود اظہر کے بھتیجے ماہر سنائپرعثمان ابراہیم،شوکت احمداور آری زال بڈگام میں مارے گئے لشکر طیبہ کے مختارخان ساکنہ بڈگام اور محمد امین ساکنہ پانپور کو دل کی اتھاہ گہرائیوں سے خراج عقیدت پیش کیا ہے۔ محمود شاہ نے کہاکہ عسکریت پسندوں نے جرأتمندی سے افواج کا مقابلہ کرتے ہوئے جانیں قربان کیںجس پر پوری قوم کو فخر ہے اور یہ قربانیاں رائیگاں نہیں ہونگی۔ انہوںنے بھارتی فورسز کی طرف سے گھروں کو تباہ کئے جانے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہاکہ ’’پیشہ ورافواج کبھی عوامی املاک کو نقصان نہیں پہنچاتی اور یہ باقاعدہ منصوبہ بندی کے ساتھ عوامی املاک کو بارود سے تباہ کررہی ہے تاکہ عوام اور جنگجوئوں کے درمیان قائم اعتماد کو کم کیا جاسکے لیکن یہ بھارت کی بھول ہے، جو ماں باپ اپنے لخت جگر کو افواج کا سامنا کرنے کے لئے میدان میں بھیج سکتے ہیں ،وہ اس نقصان پر بھی صبر کا راستہ اختیار لیتے ہیں ۔محمود شاہ نے کہاکہ’ ہمارے عوام کے جذبے اور حوصلے ہمالیہ سے بلند ہیں، دنیا میں شاید ہی اس عزم واستقلال اور ہمت کی کوئی مثال ملتی ہو،بھارت ان ہتھکنڈوں سے ہمیں تکلیف تو پہنچا سکتاہے لیکن کبھی توڑ نہیں سکے گا‘‘۔محمود شاہ نے انسانی حقوق کے عالمی اداروں سے مطالبہ کرتے ہوئے کہاہے کہ ہندوستان پر پابندیاں عائد کی جائیںاور کشمیر میں جاری بھارتی ظلم و ستم کے خاتمے کے لئے اپنا مثبت کردارادا کریں ۔