مزاحمتی جماعتوں کا جنگجو کمانڈر عبدالقیوم نجارکو خراج عقیدت

 سرینگر//فریڈم پارٹی،مسلم لےگ،پیپلز لیگ کے دو دھڑوں،سالویشن مومنٹ،مسلم کانفرنس ،محاز آزادی ،انٹرنیشنل فورم فار جسٹس ، تحریک استقامت ، مسلم خواتین مرکز، ینگ مینز لیگ اورحریت الائنس کشمیر نے جنگجو کمانڈر عبدالقیوم نجار کو خراج عقیدت ادا کرتے ہوئے کہا ہے کہ موصوف رواں جدوجہد کے نامور پالیسی ساز کی حیثیت سے جانے جاتے تھے ۔فریڈم پارٹی نے خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ وہ رواں جدوجہد کے نامور پالیسی ساز تھے ۔موصولہ بیان میں تنظیم نے ان کے جاں بحق ہونے پر رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے ان کے لواحقین سے تعزیت اور ہمدردی کا اظہار کیا۔مسلم لےگ نے خراج عقےدت پےش کرتے ہوئے کہا کہ عبدالقےوم نجار کے جاں بحق ہونے سے اےک اےسا خلا پےدا ہوا ہے جس کا پُر ہونا بہت ہی مشکل ہے کےونکہ اےسے ہمدرد، پاک،بااےمان اور تحرےک کے تئےں دلی وابستگی رکھنے والے لوگ اےک ملت کوشاذونادر ہی ملتے ہےں جو اپنا سب کچھ لٹا کر اپنی قوم کو سربلندی کا مےنار تعمےر کرنے کاعزم اور تحرےک بخشتے ہےں۔لےگ ترجمان کے مطابق نجارنے اپنی زندگی کے بائےس سال مزاحمتی مےدان مےں گذار کر کبھی بھی اپنے موقف مےں لچک نہےں لائی۔پیپلز لیگ کے ایک دھڑے کے عبوری چیئر مین محمد مقبول صوفی اور سینئر رہنما بشیر احمد طوطا نے خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے اپنی زندگی قوم وملت کے نام وقف کر دی تھی ۔بیان کے مطابق عبدالقیوم نے اپنی جان کا نذرانہ پیش کرکے کشمیر کی مزاحمتی تاریخ میں ایک سنہرے باب کا اضافہ کیا۔ پیپلز لیگ کے ایک اور دھڑے کے محبوس چیئرمین غلام محمد خان سوپوری نے خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا ہے ” ہمارے نوجوان اسلام کی سربلندی اور جموں کشمیر کی آزادی کے لئے اپنی قیمتی جانوں کا نذرانہ پیش کر کے تحریک آزادی کو اپنے لہو سے آبیاری کرتے ہیں“۔موصولہ بیان میںخان سوپوری نے کہا کہ قوم کے یہ عظیم سپوت عوام کی عزت و آبرو اور پیدائشی حق کیلئے جو قربانیاں پیش کر رہے ان کی حفاظت کرنا ہماری ملی ذمہ داری ہے ۔انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر کے عوام کا قصور یہ ہے کہ وہ اپنا پیدائشی حق حقِ خود ارادیت کا مطالبہ کرتے ہیں ۔اس دوران لیگ سے وابستہ حاجی محمد رمضان ،نذیر احمد شاہ اور مشتاق احمد نے دیگر اراکین کے ہمراہ عبدالقیوم نجار کے گھر جاکر اہل خانہ سے تعزیت کی۔سالویشن مومنٹ چیئرمین ظفر اکبر بٹ نے خراج عقیدت ادا کرتے ہوئے کہا کہ سبھی حریت پسند رہنماﺅں کو ایک سیسہ پلائی ہوئی دیوار کی طرح ایک اتحاد کی جانب اقدام کرے تاکہ حریت کانفرنس کےلئے ایک وسیع پلیٹ فارم کی تشکیل کی جاسکے ۔اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ تحریک آزادی کا تقاضا ہے کہ ایک قائد ،ایک پرچم اور ایک منشور پیش نظر رہے ۔انہوں نے کہا کہ متحدہ مزاحمتی قیادت کسی بھی پلیٹ فارم کی نمائندگی نہیں کرتا اور نہ ہی یہ کوئی واحد فورم ہے ۔بیان کے مطابق تنظیم سے وابستہ فاروق احمد، جاوید احمد، مشتاق احمداوربشیر احمد شہباز نے شہید عبدالقیوم کے جنازے میں شرکت کی اور غمزدہ خاندان سے ہمدردی کا اظہار کیا۔مسلم کانفرنس کے ایک دھڑے کے چیئرمین شبیر احمد ڈار ،محاز آزادی کے ایک دھڑے کے صدر محمد اقبال میر،انٹرنیشنل فورم فار جسٹس کے چیئرمین محمد احسن اونتو، تحریک استقامت کے چیئرمین غلام نبی وار، مسلم خواتین مرکز کی چیئرپرسن یاسمین راجا اورینگ مینز لیگ کے چیئرمین امتیاز احمد ریشی نے اپنے مشترکہ بیان میں خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان عظیم المرتبت فرزنداں کشمیر نے ایک عظیم مقصد کیلئے قربانی دی اور انصاف کا تقاضہ ہے کہ قوم ان قربانیوں کی لاج رکھتے ہوئے اس مقصد کے ساتھ خلوص کے ساتھ جڑے رہیں تاکہ ان کی روحوں کو تسکین نصیب ہوسکے۔لبریشن فرنٹ (آر) کے سرپرست اعلیٰ بیرسٹر عبدالمجید ترمبو اور جنرل سیکریٹری وجاہت بشیر قریشی نے اپنے مشترکہ بیان میں عبدالقیوم نجار کو خراج عقیدت ادا کرتے ہوئے کہا کہ ان کے جاں بحق ہونے سے تحریک آزادی میں ایک خلاپیدا ہوا ہے ۔ انہوں نے غمزدہ خاندان سے تعزیت کا اظہار کیا۔