مرگن ٹا پ کشتواڑ پر نوجوان5روز سے لاپتہ

کشتواڑ// ضلع کشتواڑ کی برفیلی چٹان’مرگن ٹاپ‘سے ایک نوجوان کے گمشدہ ہونے کی خبر موصول ہوئی ہے جو کہ ضلع اننت ناگ سے لوٹ کر اپنے گاؤں واڑون جارہا تھا جبکہ اس کے ساتھ 15 مزدور بھی تھے جو ریاست ہماچل پردیش میں کافی مدت سے مزدوری کا کام کرکے اپنے رہائشی علاقہ واڑون کی طرف جا رہے تھے۔نمائندہ سے بات کرتے ہوئے علاقہ واڑون کے گاؤں آفتی کے ایک شخص محمد رجب راتھر نے بتایا کہ 28 فروری کو کافی تعداد میںمسافر پیدل سفر بذریعہ برفیلی چٹان’مرگن ٹاپ‘ سے گزررہے تھے کہ اچانک طوفانی برفباری شروع ہوئی جسکی وجہ سے تمام مسافر ایک دوسرے سے الگ ہوگئے البتہ ایک شخص کی ابھی تک کوئی جانکاری نہیں ملی ہے اور نا ہی اس کے گھروالوں کو اس کی کوئی خبر تھی۔ ذرائع کے مطابق، گمشدہ نوجوان کا تعلق علاقہ مڑوہ کے گاؤں بسمینا سے ہے جبکہ اس کا نام الطاف حسین وانی ولد غلام نبی وانی ہے جسکی عمر 20 سال بتائی جارہی ہے جو کہ پچھلے 5 روز سے برفیلے چٹان’ـ مرگن ٹاپ‘ میں پھنسا ہوا ہے۔ دریں اثنا، مقامی لوگوں نے پی ٹی پی لیڈر و سابقہ ایم ایل سی فردوس احمد ٹاک کو بتایا کہ انتظامیہ کی جانب سے گمشدہ نوجوان کو ڈھونڈنے کی کوئی کوشش نہیں کی جارہی ہے۔ ٹاک فردوس نے ضلع انتظامیہ سے گمشدہ نوجوان کو فوری طور پر ڈھونڈنے کا مطالبہ کیا ہے۔ واضح رہے کہ کشتواڑ کے’مرگن ٹاپ‘ میں اس وقت لگ بھگ 10 فٹ تک برف جمی ہوئی ہے۔