مرکز کی طرف سے رمضان کے دوران سیز فائرنگ کا اعلان

 حملے یا معصوموں کے جان و مال کے تحفظ کی صورت میں فورسز کو جوابی کارروائی کا مکمل اختیار ہوگا

سرینگر//مرکز نے فورسز کو جموںوکشمیر میں رمضان کے مہینے میں کوئی بھی آپریشن نہ کرنے کی ہدایت دی ہے تاہم فورسز کو حملے یا معصوموں کے جان کے تحفظ کیلئے جوابی کارروائی کرنے کا مکمل اختیار دیا گیا ہے۔ اس بات کی اطلاع مرکزی وزارتِ داخلہ نے سماجی رابطہ ویب سائٹ ٹویٹر پر دی۔ وزارتِ داخلہ نے ٹویٹ پر تحریر کیا کہ ’’مرکز نے سیکورٹی دورسز کو جموں وکشمیر میں رمضان کے مہینے کے دوران کوئی بھی آپریشن نہ کرنے کیلئے کہا ہے تاکہ امن پسند مسلمان رمضان کو مہینہ امن و امان کے ماحول میں گزاریں‘‘۔ایک دوسرے ٹویٹ میں یہ بھی تحریر کیا گیا کہ حملے یا معصوموں کے جان و مال کے تحفظ کی صورت میں فورسز کو جوابی کارروائی کرنے کا مکمل اختیار ہوگا۔یہ فیصلہ وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کی طرف سے بلائی گئی آل پارٹیز میٹنگ کے ایک ہفتے بعد آیا ہے، جس میں مرکز سے رمضان کے دوران سیز فائرنگ کرنے کا مطالبہ کیا گیا تھا۔