مرکزی کابینہ کا اجلاس | ریلوے ملازمین کو 78 دنوں کی تنخواہ کے برابر بونس اور’پی ایم متر ‘ پارک کے قیام کو منظوری

نئی دہلی// تیوہاراروں کے موسم سے پہلے حکومت نے تقریبا11 لاکھ ریلوے ملازمین کو 78 دن کی تنخواہ کے برابر پیداوار پر مبنی بونس دینے کا فیصلہ کیا ہے ۔یہ فیصلہ بدھ کو یہاں وزیر اعظم نریندر مودی کی صدارت میں مرکزی کابینہ کے اجلاس میں کیا گیا۔میٹنگ کے بعد وزیر اطلاعات و نشریات انوراگ سنگھ ٹھاکر نے ایک پریس کانفرنس میں بتایا کہ وزیر اعظم مودی نے کووڈ کی وجہ سے انتہائی معاشی حالات کے باوجود ہر سال کی طرح ریلوے کے 11 لاکھ 56 ہزار نان گزٹیڈ ملازمین کو 78 دنوں کی تنخواہ کے برابر پیداوار پر مبنی بونس دینے کا فیصلہ کیا ہے ۔مسٹر ٹھاکر نے بتایا کہ اس سے سرکاری خزانے پر تقریبا 1985 کروڑ روپے کا بوجھ پڑے گا۔ حکومت نے پانچ سال کی مدت میں 4445 کروڑ روپے کے مجموعی اخراجات کے ساتھ 7 جامع انٹیگریٹڈ ٹیکسٹائل سیکٹر اور ملبوسات (پی ایم متر) پارکوں کے قیام کی منظوری دے دی ہے ۔ امرس اینڈ انڈسٹری اور ٹیکسٹائل کے وزیر پیوش گوئل نے کابینہ کی میٹنگ میں کئے گئے فیصلوں کے بارے میں اطلاع دیتے ہوئے یہاں نامہ نگاروں کو بتایا کہ پی ایم مترا وزیر اعظم کے 5 ایف وژن سے متاثر ہے ۔ '5 ایف فارمولے میں – فارم ٹو فائبر، فائبر ٹوفیکٹری ، فیکٹری ٹو فیشن غیر ملکی فیشن شامل ہیں ۔ یہ مربوط نقطہ نظر معیشت میں ٹیکسٹائل سیکٹر کی ترقی میں مزید مدد کرے گا۔ کوئی دوسرا مسابقتی ملک ہمارے جیسا مکمل ٹیکسٹائل ماحولیاتی نظام نہیں رکھتا۔ ہندوستان پانچوں ایف میں مضبوط ہے ۔جامع انٹیگریٹڈ ٹیکسٹائل سیکٹر اور ملبوسات (پی ایم مترا) مختلف دلچسپی رکھنے والی ریاستوں میں واقع گرین فیلڈ/براؤن فیلڈ سائٹس پر قائم کیے جائیں گے ۔ ایک ہزار ایکڑ کے ملحقہ اور رکاوٹ سے پاک زمین بلاکس کی دستیابی کے ساتھ ریاستی حکومتوں کی تجاویز خوش آئند ہیں۔تمام گرین فیلڈ پی ایم مترا کو 500 کروڑ روپے کی زیادہ سے زیادہ ترقیاتی سرمایہ امداد (ڈی سی ایس) فراہم کی جائے گی اور مشترکہ انفراسٹرکچر (پروجیکٹ لاگت کا 30 فیصد) کی ترقی کے لیے براؤن فیلڈ پی ایم میترا کو 200 کروڑ روپے فراہم کیے جائیں گے ۔ اس کے علاوہ پی ایم مترا میں ٹیکسٹائل مینوفیکچرنگ یونٹس کے ابتدائی قیام کے لیے ہر پی ایم متر پارک کو مسابقتی پروموشن اسسٹنس (سی آئی ایس) کے طور پر 300 کروڑ روپے بھی فراہم کیے جائیں گے ۔ ریاستی حکومت کی مدد سے عالمی معیار کی صنعتی اسٹیٹ کی ترقی کے لیے ایک ہزار ایکڑ اراضی کی فراہمی شامل ہوگی۔ایک گرین فیلڈ پی ایم متر پارک کے لیے حکومت ہند کی جانب سے ترقیاتی سرمایہ کی معاونت کل پروجیکٹ لاگت کا 30 فیصد ہوگی۔ اس کی زیادہ سے زیادہ حد 500 کروڑ روپے تک ہوگی۔ تشخیص کے بعد ، براؤن فیلڈ سائٹس کے لیے بقیہ انفراسٹرکچر اور دیگر ذیلی سہولیات کی ترقی کے لیے ترقیاتی سرمائے کی مدد کل منصوبے کا 30 فیصد ہوگی۔