مدرسہ انوار القرآن نیل کا سالانہ جلسہ دستاربندی

بانہال// بانہال کے نیل چدوس علاقے میں قائم دینی ادارہ مدرسہ عربیہ انوار القرآن نیل کا سالانہ اجلاس و جلسہ دستار بندی تزک و احتشام کے ساتھ منعقد کیا گیا جس میں ضلع رام بن کے موقر و مشہور علماءکرام نے شرکت کی اور وہاں موجود لوگوں کو وعظ و تبلیغ اور نصائح سے فیضیاب کیا۔اس موقع پر مدرسہ انوار القرآن میں قرآن حکیم کو حفظ کرنے والی چار طالبات کی عزت افزائی کی گئی۔ اس مدرسے میں تکمیل حفظ کرنے والی طالبات میں نازیہ بانو دختر مرحوم عبد الغفار ملک صاحب نیل چدوس ، صبرینہ بانو دختر مجنون احمد ملک ، بسمہ بانو دختر طارق احمد ملک اور ادینہ فرید ملک دختر فرید احمد ملک شامل ہیں۔ اس تقریب میں بولتے ہوئے علماءکرام نے مدرسہ انوار القرآن کی کارکردگی اور اس مدرسے سے چار طالبات کے حفظ کلام اللہ پر مدرسہ انوار القرآن کی انتظامیہ اور مدرسوں کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ دینی مدارس ، دین کے سرچشمے ہوتے ہیں اور یہاں سے فراغت پانے والے بچے قوم کے اثاثے ہوتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دینی مدارس میں زیر تعلیم بچوں کی تعلیم و تربیت کیلئے ہم سبھی مسلمانوں کو ہر ممکن مدد کیلئے سامنے آنا چاہئے تاکہ یہاں زیر تعلیم بچوں کو اپنے عظیم مقاصد سے ہمکنار کرنے میں مدد مل سکے۔ اس موقع پر مدرسہ انوار القرآن چدوس نیل بانہال کے مہتمم محمد یونس قاسمی ، فاضل اسلامک یونیورسٹی آف دارالعلوم وقف دیوبند نے شرکاءکا شکریہ ادا کیا۔