محکمہ موسمیات کی جمعہ اور ہفتہ کوبرف و باراں کی پیش گوئی

 
سری نگر//وادی کشمیر میں بھاری برف باری کے بعد گرچہ موسم میں بہتری واقع ہوئی ہے تاہم محکمہ موسمیات نے اگلے 48 گھنٹوں کے دوران برف وباراں کے ایک اور مرحلے کی پیش گوئی کر دی ہے۔
 
ادھر کم روشنی کے باعث سری نگر ہوائی اڈے پر جمعرات کی صبح کئی پروازیں موخر کر دی گئیں جبکہ سری نگر – جموں قومی شاہراہ پر ٹریفک کی جزوی نقل و حمل بحال ہوئی ہے۔
 
محکمہ موسمیات کے ترجمان نے بتایا کہ جموں و کشمیر میں جمعہ اور ہفتہ کو کہیں کہیں برف باری یا بارشیں ہوسکتی ہیں۔
 
انہوں نے کہا کہ اس کے بعد ماہ رواں کے آخر تک موسم خشک رہنے کی توقع ہے اور کسی بھاری برف باری کا کوئی امکان نہیں ہے۔
 
وادی میں مطلع ابر آلود رہنے سے شبانہ درجہ حرارت میں قدرے بہتری واقع ہوئی ہے۔
 
گرمائی دارلحکومت سری نگر جہاں گذشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران 22.8 ملی میٹر بارش ریکارڈ ہوئی ہے، میں کم سے کم درجہ حرارت 0.7 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جو گذشتہ شب 0.0 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ ہوا تھا۔
 
وادی کے مشہور زمانہ سیاحتی مقام گلمرگ جہاں گذشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران 7.0 ملی میٹر بارش ریکارڈ ہوئی ہے، میں کم سے کم درجہ حرارت منفی5.2 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جو گذشتہ شب بھی یی درجہ حرارت ریکارد ہوا تھا۔
 
وادی کے دوسرے مشہور سیاحتی مقام پہلگام جہاں گذشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران 16.1 ملی میٹر بارش ریکارڈ ہوئی ہے، میں کم سے کم درجہ حرارت منفی0.6 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جو گذشتہ شب منفی0.8 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ ہوا تھا۔
 
سرحدی ضلع کپوارہ جہاں گذشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران15.8 ملی میٹر بارش ریکارڈ ہوئی ہے، میں کم سے کم درجہ حرارت 0.2 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جو گذشتہ شب 0.1 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ ہوا تھا۔
 
گیٹ وے آف کشمیر کے نام سے مشہور قصبہ قاضی گنڈ جہاں گذشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران28.2 ملی میٹر بارش ریکارڈ ہوئی ہے، میں کم سے کم درجہ حرارت0.3 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جو گذشتہ شب 0.1 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ ہوا تھا۔
 
دریں اثنا وادی میں جمعرات کے روز موسم مجموعی طور پر خشک مگر ابر آلود رہا۔
 
وادی کی شہر و گام کی سڑکوں پر پانی جمع ہے جس سے راہگیروں کا چلنا پھرنا از بس محال ہو گیا ہے۔