محکمہ دیہی ترقی کا وی ایل ڈبلیو رشوت لیتے ہوئے گرفتار

سری نگر// جموں و کشمیر انٹی کورپشن بیورو(اے سی بی) نے شمالی کشمیر کے قصبہ اوڑی میں محکمہ دیہی ترقی کے ایک ملازم کو بیس ہزار روپیہ رشوت لیتے ہوئے گرفتار کیا ہے۔
اے سی بی کے ایک ترجمان نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ بیورو کو بنڈی گجر بستی اوڑی کے ایک رہائشی کی طرف سے شکایت موصول ہوئی کہ محکمہ دیہی ترقی میں ولیج لیول ورکر (وی ایل ڈبلیو) کی حیثیت سے تعینات ساحل ساگر اس سے پی ایم اے وائی (جی) اسکیم کے تحت ایک کیس نمٹانے کے لئے بیس ہزار روپیے رشوت طلب کر رہا ہے۔
انہوں نے کہا کہ شکایت گذار نے اس رقم میں سے مذکورہ وی ایل ڈبلیو کو 29 مارچ کو ہی 13 ہزار روپیے ادا کئے تھے اور اب وہ باقی 7 ہزار روپیوں کا تقاضا کر رہا تھا۔
موصوف ترجمان نے کہا کہ شکایت موصول ہونے پر ایک کیس درج کیا گیا اور اس کیس کی تحقیقات کے لئےایک ٹیم تشکیل دی گئی۔
انہوں نے کہا کہ مذکورہ ٹیم نے محکمہ دیہی ترقی بلاک پرن پلن اوڑی ساحل ساگر کو رشوت کا تقاضا کرتے اور رشوت لیتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑ لیا۔
ان کا کہنا تھا کہ وہاں موجود آزاد گواہوں کی موجودگی میں مذکورہ وی ایل ڈبلیو سے رشوت کی رقم بھی بر آمد کی گئی۔
بیان میں کہا گیا کہ اس ضمن میں مزید تحققات جاری ہیں۔