محکمہ تعمیرات عامہ کے عارضی ملازمین کا گندوہ میں احتجاج

ڈوڈہ // محکمہ تعمیرات عامہ میں کام کر رہے عارضی ملازمین نے اپنی مانگوں کو لے کر ایگزیکٹیو انجینئر پی ڈبلیو ڈی سپیشل سب ڈویژن دفتر گندوہ کے دفتر کے باہر احتجاج کرتے ہوئے محکمہ کے آفیسروں پر سوتیلے پن کا مظاہرہ کرنے کا الزام عائد کیا۔ احتجاجی مظاہرہ میں شامل دیہاڑی دار مزدوروں نے "ایگزیکٹیو انجینئر گندو کے خلاف نعرہ بازی کی۔ اس موقع پر بولتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وہ اپنی ڈیوٹی پابندی سے انجام دے رہے ہیں لیکن ان کے ساتھ دفتر میں بیٹھا عملہ سوتیلے پن کا سلوک کیا جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ متعلقہ حکام اثرو رسوخ کی بناء پر تنخواہ دیتے ہیں اور ان کو نظر انداز کیا جارہا ہے۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ متعلقہ دفتر میں تعینات عملہ نے تنخواہ کے نام پر ان سے بھاری رشوت لی ہے۔ اس دوران ڈی ڈی سی کونسلر کاہرہ معراج ملک،ڈی ڈی سی کونسلر چنگا ندیم شریف نیاز اور بی ڈی سی چیئرمین چنگا محمد عباس راتھر بھی موقع پر پہنچے اور احتجاج پر بیٹھے دیہاڑی دار مزدوروں کے ساتھ بات چیت کی۔ مظاہرین کا کہنا تھا کہ جموں کشمیر کی تمام ڈویژنوں میں محکمہ کے عارضی ملازمین کو بقایہ جات کی واگزار کی گئیں ہیں لیکن واحد سب ڈویڑن گندو میں کام کر رہیں ملازمین کے ساتھ متعلقہ محکمہ کے ایگزیکٹو انجینئر کی جانب سے ناانصافی کی جارہی ہے۔ مظاہرین کا کہنا تھا کہ ایگزیکٹو انجینئر نے سب ڈویژن کے اندر چند اثر رسوخ رکھنے والے عارضی ملازمین کے ساتھ بندر بانٹ کر کے پیسہ ہڑپ کر لیا ہے اور دیگر کیجول لیبر ملازمین کو آجکل کی بنا پر روز یقین دہانیاں کرائی جارہی ہے جبکہ کام دگنا لیا جاتا ہے۔ ملازمین کا مزید کہنا تھا کہ سب ڈویژن میں کام کرنے والے ملازمین کو تنخواہ کے بغیر جبکہ اثررسوخ رکھنے والوں کو تنخواہ دی جاتی ہے۔ اس سلسلہ میں ایس ڈی ایم گندو نے مظاہرین کو یقین دہانی کرائی کہ انہیں ان کا حق دیا جائے گا۔