محکمہ اطلاعات و رابطہ عامہ کی کارکردگی کا جائزہ

سرینگر//سیکرٹری اطلاعات سرمد حفیظ کی صدارت میں محکمہ اطلاعات کے دفترمیں ایک جائزہ میٹنگ منعقد ہوئی۔میٹنگ میں ناظم اطلاعات منیر الاسلام ، سپیشل سیکرٹرین اطلاعات نریندر سنگھ بالی ، جوائنٹ ڈائریکٹر اطلاعات ہیڈ کوارٹر ساجد یحییٰ نقاش ، ڈپٹی سیکرٹری اطلاعات سدھیر بالی،ڈپٹی ڈائریکٹر اطلاعات شیخ ظہور اور راکیش دوبے بھی موجود تھے۔ناظم اطلاعات نے محکمہ کی مجموعی کارکردگی کی تفصیلات دیتے ہوئے محکمہ کے کام کاج میں مزید بہتری لانے کے لئے کئے گئے اقدامات کے بارے میں سیکرٹری موصوف کو جانکاری دی۔میٹنگ میں بتایا گیا کہ محکمہ اطلاعات و رابطہ عامہ میں عملے کی شدید کمی ہے اور اس وقت 365اسامیاں خالی پڑی ہے جس کی وجہ سے محکمہ کے کام کا ج کو احسن طریقے سے انجام دینے میں رکاوٹیں پیش آتی ہیں۔ناظم اطلاعات نے خالی پڑی اسامیوںکے بارے میں بھی سیکرٹری موصوف کو تفصیلی جانکاری دی۔میٹنگ میں بتایا گیا کہ محکمہ میں اسسٹنٹ انفارمیشن افسروں کی 40اسامیوں کو پُر کرنے کا معاملہ التوا میں پڑا ہے کیوں کہ سال 2004 ء میں سپر یم کورٹ نے سروس سلیکشن بورڈ میں سلیکشن لسٹ کو رد کر کے نئے سرے سے بھرتی عمل کرانے کے احکامات دئیے ہیں۔اس کے علاوہ 115 نان گزیٹیڈ ملازمین کی اسامیوں کا بھرتی عمل بھی التوا میں پڑا ہے۔میٹنگ میں بتایا گیا کہ محکمہ کی ترتیب نو کا تفصیلی منصوبہ ایڈمنسٹریٹیو ڈیپارٹمنٹ کو بھیجا گیا ہے ۔ ا س موقعہ پر مزید بتایا گیا کہ انفارمیشن افسروں کی بڑھتی ضرورت کے پیش نظر محکمہ نے مزید سٹرنگر ( رِپورٹر) تعینات کرنے کے لئے حکومت سے اجازت طلب کی ہے تاکہ ریاستی ہائی کورٹ دیگر کئی کمیشنوں کی سرگرمیوں اور کام کاج کو کوریج دی جاسکے ۔محکمہ کے بنیادی ڈھانچے کو مزید مستحکم کرنے کے لئے کئے گئے اقدامات کی سراہنا کرتے ہوئے سیکرٹری موصوف نے اس میں مزید بہتری لانے کے لئے حکومت کی جانب سے مکمل تعاون کا یقین دلایا ۔انہوں نے محکمہ میں آڈیٹیوریم ، کتب خانہ اور سٹیڈیو قائم کرنے کے لئے بھی افسران کی سراہنا کی۔ میٹنگ میں ایڈمنسٹریٹیو آفیسر محمد منور خواجہ ، چیف فوٹو آفیسر محمد یاسین ، فوٹو آفیسر جاوید احمد ، اکائونٹس آفیسر کلدیپ کمار ، اسسٹنٹ ڈائریکٹر پلاننگ محمد حسین کے علاوہ دیگر افسران نے بھی شرکت کی۔