محبوبہ مفتی حمایت سکیم کا دائرہ کار وسیع کرنے کی حامی

سرینگر// وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے دیہی ترقی محکمہ سے کہا ہے کہ وہ ریاست میں حمایت سکیم کا دائیرہ  بڑے قصبوں اور اضلاع تک وسیع کریں۔ انہوں نے محکمہ کو صلاح دی کہ وہ سکیم کے تحت تربیت پانے والے نوجوانوں کی پلیسمنٹ کو یقینی بنانے کے لئے مقامی شراکت داروں کو منتخب کریں۔وزیر اعلیٰ نے ان باتوں کا اظہار یہاں ریاست میں حمایت سکیم کی عمل آوری کا ایک میٹنگ کے دوران جائیزہ لیتے ہوئے کیا۔دیہی ترقی اور پنچائتی راج کے وزیر عبدالرحمان ویری کے علاوہ دیہی ترقی کے وزیر مملکت شکتی راج پریہار نے بھی میٹنگ میں شرکت کی۔محبوبہ مفتی نے کہا کہ سکیم میں ریاست کے بے روز گار نوجوانوں کے لئے کافی وسائل موجود ہیں۔انہوں نے محکمہ کو ہدایت دی کہ وہ زیادہ سے زیادہ نوجوانوں کو2020 سے پہلے اس سکیم کے دائرے میں لائیں۔وزیر اعلیٰ نے محکمہ سے کہا کہ وہ ریاست میں تمام پلیسمنٹ مواقعوں کا جائیزہ لے کر نوجوانوں تک زیادہ سے زیادہ فائدہ پہنچائیں۔واضح رہے کہ حمایت ایک ایسا تربیت و پلیسمنٹ پروگرام ہے جسے2016 میں حکومت نے جموں وکشمیر کے اُن نوجوانوں کے لئے شروع کیا جو سکول یا کالج ادھورا چھوڑ جاتے ہیں۔ اس سکیم کے تحت نوجوانوں کو کم سے کم تین ماہ کی تربیت دی جاتی ہے اور انہیں مارکیٹ کے عین مطابق مختلف ہُنروں سے روشناس کرایا جاتا ہے۔تربیت پانے کے بعد نوجوانوں کو یقینی طور سے روز گار دیا جاتا ہے اورپلیسمنٹ کے ایک سال بعد تک ان نوجوانوں پر نظر رکھی جاتی ہے کہ وہ کیسی کارکردگی کا مظاہرہر کر ہے ہیں۔یہ سکیم پرائیویٹ ایجنسیوں کی شراکت داری سے عملائی جارہی ہے۔سکیم کی بدولت آئندہ تین برسو ںکے دوران1.25 لاکھ نوجوانوں کو تربیت اور روز گار دلانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے۔میٹنگ میں بتایا گیا کہ ریاست میں سکیم کی عمل آوری میں سرعت لانے کے لئے رواں برس کے دوران156 پروجیکٹ عمل آوری ایجنسیوں کو امپینل کیا گیا ہے جن کے ذریعے سے نوجوانوں کو تربیت اور روز گار دلایا جائے گا۔چیف سیکرٹری بی بی ویاس، وزیر اعلیٰ کے پرنسپل سیکرٹری روہت کنسل، سیکرٹری دیہی ترقی شیتل نندہ اور کئی دیگر اعلیٰ افسران بھی میٹنگ میں موجود تھے۔