مجید ارجمند کی کتاب ” پیاسی جھیل” کی رونمائی

سرینگر//کشمیر بک پرموشن ٹرسٹ کے اہتمام اور میزان پبلشرز کے اشتراک سے یہاں منعقدہ ایک تقریب پر اردو افسانہ نگار مجید ارجمند کی کتاب " پیاسی جھیل" کی رونمائی انجام دی گئی۔ تقریب کی صدارت معروف نقاداور مصنف پروفیسر محمد زمان آزردہ نے کی ۔اپنی صدارتی تقریر میں پروفیسرزمان نے نوجوانوں پرزور دیا کہ وہ اردو کے ساتھ اپنا تعلق مضبوط بنایئں اور اس بات کی کوئی پرواہ نہ کریں کہ ان کا اردو لہجہ دیگر ریاستوںکے لہجہ سے میل نہیں کھاتا ہے۔ اس موقعہ پر اور لوگوں کے علاوہ ایوانِ صدارت میں براجمان نور شاہ، وحشی سید ساحل، شبنم قیوم اور شبیر احمدنے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا ۔ خطبہ استقبالیہ پیش کرتے ہوئے جاویدماٹجی نے کہا کہ یہ مجید ارجمند کی دوسری کتاب ہے اور اس سے قبل ان کا ایک اور افسانوی مجموعہ " ابابیلوں کی واپسی" منظر عام پر آچکا ہے۔ کتاب پیاسی جھیل کی اجرائی سے پہلے اس پر دو تبصرے پیش کئے گئے جو سہیل سالم اورڈاکٹر محمدافضل نے لکھے تھے۔ کتاب کے مصنف مجیدارجمند کو کشمیر بک پرموشن ٹرسٹ کی طرف سے ایک سندعطا کی گئی جو میزان پبلشرز کے ڈایکٹر شبیر احمد نے پیش کی جبکہ نگینہ انٹرنیشنل اور صوفی بشیراحمد کی طرف سے مجیدارجمند کی عزت افزائی کے لئے انہیں الگ الگ شال پیش کئے گیے۔ اس موقعہ پر اور لوگوں کے علاوہ حسرت گڑھا، ظریف احمد ظریف، رخسانہ جبین، شبیر مجاہد،ڈاکٹر نذیر مشتاق، شمشاد کرالواری، بشیرقادری، سلیم سالک، دیپک کنول، صوفی علی محمد، شہباز ہاکباری ،مشتاق کینی، شیخ بشیر احمد، رشیدراہگیر، الطاف نوشہری، عیاش عارف،صوفی بشیر وغیرہ بھی موجودتھے جبکہ زبیر قریشی نے تقریب پر نظامت کے فرائض انجام دئے۔