ماہ صیام میں بنیادی سہولیات کا فقدان

 سرینگر//نیشنل کانفرنس نے ماہ صیام کے دوران عوام کو بنیادی سہولیات کی فراہمی میں ناقص کارکردگی کا مظاہرہ کرنے پر انتظامیہ کو ہدف تنقیدبنایا ہے ۔علی محمد ساگر کی قیادت میں این سی لیڈران کی میٹنگ کے دوران زمینی سطح پر حاصل کی معلومات کی بنیاد پرپارٹی لیڈران نے کہاکہ انتظامیہ ماہ صیام کے دوران بھی لوگوں کو بنیادی سہولیات فراہم کرنے میں ناکام ہوگئی ہے۔بیان کے مطابق پارٹی کے زون صدور اور ضلع صدور کیساتھ رابطہ کرکے رمضان المبارک کے دوران زمینی سطح پر لوگوں درپیش مسائل و مشکلات کی جانکاری حاصل کی گئی۔ اجلاس میں اس بات پر افسوس اور تشویش کا اظہار کیا گیا کہ ایام متبرکہ کے دوران بھی لوگوں کو اُن بنیادی ضروریات سے محروم رکھا گیاہے جو ماضی میں خود بہ خود میسر رہا کرتی تھیں۔ اجلاس میں بتایا گیا رمضان المبارک میں بھی لوگوں کو بجلی اور پینے کے پانی کی عدم دستیابی کے مسائل درپیش ہیں۔ اجلاس میںیہ بھی بتایا گیا کہ اشیائے خوردونوش کی قیمتیں آسمان چھو رہی ہیں اور صارفین سے منہ مانگی قیمتیں وصول کی جارہی ہیں جبکہ انتظامیہ کی طرف سے قیمتوں کو اعتدال پر رکھنے کیلئے کوئی بھی اقدام نہیں اُٹھایا جارہا ہے۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے پارٹی جنرل سکریٹری علی محمد ساگر نے گورنر انتظامیہ سے اپیل کی کہ وہ ریاست کے تینوں خطوں میں رمضان المبارک کے دوران لوگوں کو ہر سطح پر راحت پہچانے کے لئے ٹھیس اور بروقت اقدامات کریں