مانسون اگلے چار دنوں میں کیرالہ سے ٹکرائے گا دہلی میں شدید گرمی ، ریڈ الرٹ جاری، زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت 45سے 47ڈگری سیلسیس

یواین آئی

نئی دہلی// جنوب مغربی مانسون آئندہ تین چار دنوں میں کیرالہ اور شمال مشرقی ریاستوں کے کچھ حصوں میں پہنچنے والا ہے، جس سے ملک بھر میں شدید گرمی اور لو سے پریشان لوگوں کو راحت ملنے کی امید ہے۔ہندوستان کے محکمہ موسمیات (آئی ایم ڈی) نے منگل کو کہا کہ سمندری طوفان ریمال اب مشرقی بنگلہ دیش سے شمال مشرق کی طرف بڑھ گیا ہے۔ طاقتور طوفان منگل کی شام تک مشرقی آسام اور اس سے ملحقہ علاقوں میں کم دباؤ والے علاقے میں کمزور ہو جائے گا۔جنوب مغربی مانسون کے بنگال اور بنگلہ دیش سے گزرنے کے بعد، اگلے سات دنوں تک شمال مشرقی ریاستوں میں 30-40 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے گرج چمک اور تیز ہواؤں کے ساتھ ہلکی سے درمیانی بارش متوقع ہے۔محکمہ موسمیات کے افسروں نے کہا کہ “مشرقی آسام، میگھالیہ، میزورم، تریپورہ، اروناچل پردیش، ناگالینڈ اور منی پور میں منگل کو زیادہ تر مقامات پر ہلکی سے درمیانی شدت کی بارش کے ساتھ چند مقامات پر بھاری بارش کی توقع ہے۔” شمال مغربی اور وسطی ہندوستان میں شدید گرمی کی لہر 30 مئی سے کم ہونے کا امکان ہے۔راجستھان کے بیشتر حصوں بشمول پنجاب، ہریانہ، چندی گڑھ اور دہلی اور اتر پردیش، مدھیہ پردیش کے الگ الگ حصوں میں منگل اور بدھ کو شدید گرمی کی لہر متوقع ہے۔ بعد میں یہ آہستہ آہستہ کم ہو جائے گی ۔ گجرات، اڈیشہ اور جھارکھنڈ کے کچھ حصوں میں بدھ تک گرم اور مرطوب موسم برقرار رہنے کی توقع ہے۔اس دوران محکمہ موسمیات نے قومی راجدھانی دہلی اور آس پاس کے علاقوں ( دہلی این سی آر) میں اگلے چار دنوں تک شدید گرمی کے سلسلے میں ریڈ الرٹ جاری کیا ہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق مغرب سے تیز، گرد آلود ہوائیں چلنے، گرم اور خشک ہواؤں کی آمد سے درجہ حرارت میں اضافے کا امکان ہے ۔قابل ذکر ہے کہ گزشتہ ہفتے سے قومی راجدھانی کے کچھ علاقوں میں زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت 45 سے 47 ڈگری سیلسیس اور اس سے اوپر ریکارڈ کیا جا رہا ہے۔محکمہ موسمیات کے مطابق منگل کی شام 4 بجے تک گرمی کی شدید لہر رہے گی اور درجہ حرارت 46 ڈگری سیلسئس تک پہنچ جائے گا۔