مارچ سے مئی تک مرکزی سرکار کے 900 سے زائد ملازمین کی موت واقع

 نئی دہلی //مرکز کی جانب سے اعدادوشمار ظاہر کرتے ہوئے بتایا گیا ہے کہ تقریبا ًتمام مرکزی وزارتوں میں کم از کم 20-30فیصد لوگ وبائی مرض سے متاثر ہوئے ۔ عہدیداروں نے بتایا کہ مارچ سے مئی تک 900 سے زیادہ مرکزی حکومت کے ملازمین کی موت ہوگئی ، جو گذشتہ سال اسی عرصے کے دوران 600 سے زیادہ تھیں۔ اموات دوسری کوویڈ 19 لہر سے ہوئیں۔ اپریل میں ، محکمہ پرسنل اینڈ ٹریننگ (ڈی او پی ٹی) کوویڈ 19 میں سب سے زیادہ متاثر ہوا تھا ، قریب 80 اہلکار اس بیماری میں مثبت پائے گئے تھے۔وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی میں بھی بہت سے افراد کو یہ مرض لاحق ہوگیا تھا۔عہدیداروں نے بتایا کہ وزارت زراعت کے تقریبا ً 50فیصد عملے کو کوویڈہوا تھا۔ وزارت قانون و انصاف کی وزارت قانون سازی کے سیکریٹری جی نارائن راجو بھی مئی میں کوویڈ 19 میں مرنے والوں میں شامل تھے۔ ہندوستانی انفارمیشن سروس سے آئے داونتی سریواستو ، سنجے کمار سریواستو اور پشپونت شرما بھی اس بیماری کا شکار ہوگئے۔ایک دوسرے عہدیدار کے مطابق ، مرکزی سکریٹریٹ میں کام کرنے والے 73 افراد کی کوڈ 19 سے موت ہوگئی۔ عہدیدار نے بتایا ، " وزارت کے بعض حصوں میں بہت زیادہ ہجوم ہے، اگر کسی شخص کو انفیکشن ہو جاتا ہے تو ، وہ بہت جلد دوسرے میں منتقل ہوجاتا ہے‘‘۔اس عہدیدار نے مزید کہا کہ مرکزی سیکرٹریٹ کے تقریباً  150 افسران ابھی بھی مثبت ہیں۔