لیفٹینٹ گورنرنے ایمزجموں کی تعمیراتی کام کی پیش رفت کا جائزہ لیا | ’حکومت صحت نظام کو بہتر بنانے کیلئے کوشاں‘

جموں//لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے وِجے پور میں ایمز کے لئے نشاندہی کی گئی جگہ کا دور ہ کیا اور ا س اہم پروجیکٹ پر جاری تعمیراتی کام کی پیش رفت کامعائنہ کیا۔انہوںنے تعمیراتی ایجنسی کو پروجیکٹ کی تکمیل کے لئے مقرر کی گئی مدت پر کاربند رہنے کی ہدایت دی ۔ لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ یوٹی حکومت جموں وکشمیر کے صحت نظام کو ملک کا بہترین صحت نظام بنانے کے لئے کوشاں ہے اور ایمز جیسے بڑے پروجیکٹوں سے جموںوکشمیر میں صحت شعبے کو فروغ حاصل ہوگا۔انہوں نے کہاکہ حکومت صحت بنیادی ڈھانچے کی توسیع ، انسانی وسائل کو مستحکم بنانے ، دستیاب عملے کی تنظیم نو ، ڈاکٹر وں ، نرسوں اور دیگر صحت عملے کی خالی اَسامیوں کو پُرکرنے ، دیہی علاقوں میں ڈاکٹروں کی تعیناتی ، معقول طبی سہولیات دستیاب رکھنے اور دیگر اختراعی اقدامات اٹھانے پر کام کر رہی ہے جس سے جموں وکشمیر کے عوام کو معیاری صحت سہولیات دستیاب رہیں گی۔اُنہوں نے صحت سہولیات کی فراہمی اور مریضوں کے علاج و معالجہ کو مستحکم اور بہتر بنانے کے لئے تمام متعلقین کو کوشاں رہنے کے لئے کہا ۔لیفٹیننٹ گورنر نے اس بڑے پروجیکٹ کی تکمیل کے لئے  مقررکی گئی مدت کے بارے میں جانکاری طلب کی۔ انہوں نے متعلقہ افسروں اور تعمیراتی ایجنسیوں پر زور دیا کہ وہ کام کے اعلیٰ معیار کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے پروجیکٹ کی بروقت تکمیل یقینی بنانے کے لئے آپس میں قریبی تال رکھے۔ پروجیکٹ پر جاری کام کی پیش رفت کا جائزہ لینے کے دوران لیفٹیننٹ گورنر کو بتایا گیا کہ 30ماہ کی مدت کا پروجیکٹ 22فروری 2020 کو ایوارڈ کیا گیا تھا اور اس کی تکمیل کے لئے 21 اگست 2022 کی تاریخ مقرر کی گئی ہے ۔انہیں مزید بتایا گیا کہ مرکزی وزارتِ صحت و خاندانی بہبود نے اس سلسلے میں ایل او آئی مارچ 2019 میں جاری کیا تھا۔ جموں میں ایمز کے قیام کے لئے رقومات مرکزی وزارتِ صحت و خاندانی بہبود ، اعلیٰ تعلیم فائنانسنگ ایجنسی کے ذریعے دستیاب رکھے جائیں گے۔انہیں بتایا گیاکہ ایمز ریشی کیش جموں ایمز کے لئے سرپرست ادارہ ہے او رایمز مرحلہ اوّل کے لئے 1661کروڑ روپے منظور کئے گئے ہیں ( 1404کروڑ روپے میڈیکل کالج اور دیگر بنیادی ڈھانچہ کے لئے اور 257کروڑ روپے طبی سازو سامان فرنیچر وغیرہ کے لئے )۔ ہسپتال کا بنیادی ڈھانچہ 750بستروں ، گرائونڈ فلور اور 6 منزلوں اور ایک تہہ خانے پر مشتمل ہوگا۔ اس میں ایک او پی ڈی ، دو آئی پی ڈی ، ایک ایمرجنسی ، ایک تشخیصی ، ایک انتظامی ، ایم آر آئی ، سی ٹی ، نیوکلیئر میڈیسن ، ماڈیولیٹر اوپریشن تھیٹر ، آئی سی یو ، سپر سپیشلٹی شعبہ جات ، او پی ڈی ، ٹراما بستروں کے علاوہ تدریسی عمارت بشمول میڈیکل کالج ( فی سال 100طلاب اور نرسنگ کالج ( فی سال 60طلاب ) اور ہزار نشستوں کی صلاحیت والا آڈیٹوریم بھی پروجیکٹ میں شامل ہیں۔لیفٹیننٹ گورنر کے ہمراہ کمشنر سیکرٹری ٹرانسپورٹ  ہیردیش کمار ، صوبائی کمشنر جموں سنجیو ورما ، آئی جی پی جموں مکیش سنگھ ، ضلع ترقیاتی کمشنر سانبہ روہت کھجوریہ اور دیگر اعلی افسران موجود تھے۔