لیتہ پورہ حملے کے100 گھنٹے کے اندر ہی جیش قیادت ہلاک: فوج، جو بندوق اٹھائے گا وہ مارا جائے گا

سرینگر / فوج نے منگل کو کہا کہ اُنہوں نے لیتہ پورہ حملے کے بعد ایک سو گھنٹے کے اندر ہی وادی میں جیش محمد نامی جنگجو تنظیم کی لیڈرشپ کو ہلاک کردیا۔

لیتہ پورہ حملے کی ذمہ داری جیش نے ہی قبول کی تھی اور اس میں49فورسز اہلکار ہلاک ہوگئے تھے۔

فوج نے کہا کہ مارے گئے جیش لیڈران نے ہی لیتہ پورہ حملے کا منصوبہ بنایا تھا۔

فوج کے لیفٹننٹ جنرل کے ایس ڈھلن آج پولیس اور سی آر پی ایف کے ہمراہ ایک مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران اظہار خیال کررہے تھے۔

انہوں نے کہا '' لیتہ پورہ حملہ جیش نے کیا جس کی بنیاد پاکستان میں ڈالی گئی ہے۔ اس کا سپورٹ پاکستان کی آئی ایس آئی اور پاکستان کی فوج کررہی تھی''۔

جنرل ڈھلن نے کہا'' ہم نے لیتہ پورہ حملے کے ایک سو گھنٹے کے اندر ہی وادی میں سرگرم جیش کو نشانہ بنایا جس کو پاکستان سے چلایا جارہا ہے''۔

انہوں نے عسکریت پسندوں کو کھلی وارننگ دیتے ہوئے کہا ''جو بھی بندوق اٹھائے گا وہ مارا جائے گا اگر وہ سرنڈر نہ کرے''۔