لاک ڈائون کا40واں دن؛ شمال و جنوب میں بندشیں بدستور عائد

سرینگر//ملک گیر لاک ڈائون کے 40ویں روز جمعرات کو وادی بھر میں بندشیں جاری رہیں تاہم سرینگر کے سیول لائنز علاقوں میں امتناعی احکامات کی عمل آوری کے دوران نرمی دیکھی جارہی ہے۔لوگ ایک جگہ سے دوسری جگہ جا سکتے ہیں، نجی ٹرانسپورٹ بلا خلل چل رہا ہے۔سڑکوں پر بچھائی گئی خار دار تاریں کئی مقامات پر ہٹائی گئیں ہیں۔پہلے پہل ناکوں پر گاڑیوں کی چیکنگ کے دوران ضلع ترقیاتی کمشنر کی جانب سے اجرا کئے گئے پاس کو دیکھا جاتا تھا لیکن اب وہ بھی نہیں کیا جارہا ہے۔اب ناکوں پر نہ پوچھ تاچھ کی جارہی ہے نہ کسی کو روکا جاتا ہے۔البتہ ماہ رمضان کی وجہ سے لوگ زیادہ تر گھروں میں رہنے کو ہی ترجیح دے رہے ہیں۔صبح کے وقت شہری علاقوں، ماسوائے ریڈزون ، میں ہر طرح کی چیزیں دستیاب رہتی ہیں لیکن کچھ گھنٹوں کے بعد سب کچھ سنسان ہوجاتا ہے۔ تاہم شہر سرینگر میں کئی سڑکوں کو تاحال بند رکھا گیا ہے لیکن جو راستے کھلے رکھے گئے ہیں ان پر پرائیویٹ ٹرانسپورٹ چلتا ہے۔تاہم بڑے بڑے دیہات، ضلع و تحاصیل صدر مقامات اور دیگر قصبوں میں صورتحال قدرے مختلف ہے۔ جہاں سکتی کیساتھ لاک ڈائون پر عمل کیا جارہا ہے۔شہر کو مختلف اضلاع سے ملانے والی شاہرائوں کے ساتھ ساتھ تمام بین ضلعی سڑکوں پر مکمل سناٹا ہے اور صرف اکا دکا گاڑیاں ہی نظر آرہی ہیں۔وادی کے ریڈ زونوں میں نقل و حرکت پر مکمل طور پر پابندی عائد ہے۔