لاپتہ اسکالر کی بازیابی ، اہل خانہ کا پھر احتجاج | سی بی آئی سے تحقیقات کا مطالبہ ، پولیس سربراہ سے مداخلت کی اپیل

سرینگر//بمنہ سرینگر کے لاپتہ اسکالر کے اہل خانہ نے ایک مرتبہ پھر سرینگر کی پریس کالونی میں احتجاج کرتے ہوئے سی بی آئی کے ذریعے تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے ۔ بمنہ سرینگر کے لاپتہ اسکالر ہلال احمد ڈار کے اہل خانہ نے ایک مرتبہ پھر پریس کالونی سرینگر میں ایک مرتبہ پھر احتجاج کیا جس دوران انہوںنے مطالبہ کیا کہ لاپتہ اسکالر کے معاملے میں سی بی آئی کے ذریعے تحقیقات کرائی جائے ۔ انہوں نے بتایا کہ ہلال گاندربل کے نارا ناگ علاقے میں ٹریکنگ پر گیا تھا  جہاں سے وہ لاپتہ ہوگیا ۔جس کے بعد اگر چہ انہیں ڈھونڈ نکالنے کی کوشش کی تاہم اُس کے حوالے سے کوئی بھی خبر موصول نہیں ہوئی ۔انہوں نے بتایا کہ پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ ہلال احمد نے عسکری صفوں میں شمولیت اختیار کی ہے ۔ افراد خانہ نے بتایا کہ ابھی تک ہلال کے حوالے سے کوئی جانکاری نہیں ملی ہے کہ وہ کہاں ہے ،اور نہ ہی انہیں اس بارے میں یقین ہے کہ ہلا ل نے عسکری صفوں میں شمولیت اختیار کی ہے ۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ معاملے کی سی بی آئی کے ذریعے تحقیقات کرائی جائے اور جموں کشمیر پولیس سربراہ سے اپیل کی ہے کہ ہلال کو ڈھونڈ نکالنے میں کارورائی تیز کر دی جائے ۔