لائن آف کنٹرول پر فائرنگ

مینڈھر+مظفر آباد//لائن آف کنٹرول پر بدھ کے روز آر پار فائرنگ کے نتیجے میں 16 شہری زخمی ہوگئے۔ مینڈھر کے سرحدی علاقہ بالاکوٹ اور راجوری کے منجاکوٹ سیکٹر وںمیں ہندوپاک افواج کے درمیان مسلسل پانچ گھنٹوںتک فائرنگ اور گولہ باری کا تبادلہ ہواجس کے نتیجہ میں 8 افراد زخمی ہوئے ہیں ۔اس دوران کئی مال مویشی بھی زخمی ہوئے جبکہ دو گاڑیاں اور رہائشی مکان تباہ ہواہے ۔بدھ کی صبح 6:30بجے دونوں ممالک کے درمیان فائرنگ اور گولہ باری شروع ہوئی جس کی وجہ سے بالاکوٹ میں پانچ جبکہ منجاکوٹ میں دو سالہ بچے سمیت تین افراد زخمی ہوئے۔ محمد ایاز ولد شادم خان کی حالت نازک ہے۔بالاکوٹ کے بھروٹ علاقہ میں دو ماروتی کاریں گولہ باری کی زد میں آ کر مکمل طور تباہ ہوگئی جبکہ بالاکوٹ کے لنجوٹ علاقہ میں محمد شوکت ولد محمد قاسم کا رہائشی مکان مکمل طور تباہ ہو گیا ہے اوراسی طرح سے دیگر کئی مکانات کو بھی جزوی طور پر نقصان پہنچاہے ۔ادھر پاکستان کا کہنا ہے کہ لائن آف کنٹرول  پر ہندوستانی فورسز کی بلااشتعال فائرنگ کے نتیجے میں خواتین اور بچوں سمیت 8 افراد زخمی ہوگئے۔ضلع کوٹلی کے پولیس نے بتایا کہ ہندوستانی فورسز نے صبح ساڑھے 6 بجے نکیال سیکٹر پر فائرنگ کا آغاز کیا اور سویلین آبادی کو نشانہ بنایا گیا۔جس کے نتیجے میں 8 افراد زخمی ہوئے جن میں سے کچھ کی حالت تشویش ناک ہے۔گذشتہ ہفتے 14 اکتوبر کو بھی بھارتی فوج کی لائن آف کنٹرول پر بلااشتعال اور اندھا دھند فائرنگ کے نتیجے میں 2 بچے جاں بحق اور 3 زخمی ہوگئے تھے۔ 4 اکتوبر کو بھی بھارتی فورسز کی بلا اشتعال فائرنگ کے نتیجے میں 2 پاکستانی شہری جاں بحق ہوگئے تھے۔